جی این این سوشل

پاکستان

سینیٹ میں شہریوں کو کوورنا ویکسین کی فراہمی سے متعلق قرارداد اکثریت رائے سے منظور

اسلام آباد : سینیٹ میں شہریوں کو کوورنا ویکسین مفت یا اصل قیمت پر فراہمی سے متعلق قرارداد اکثریت رائے سے منظور کر لی گئی ۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

سینیٹ میں شہریوں کو  کوورنا ویکسین  کی فراہمی سے متعلق قرارداد اکثریت  رائے سے منظور
سینیٹ میں شہریوں کو کوورنا ویکسین کی فراہمی سے متعلق قرارداد اکثریت رائے سے منظور

تفصیلات کے مطابق سینیٹ میں شہریوں کوکوروناویکسین کی مفت فراہمی سے متعلق قرارداد منظورکرلی گئی،قرارداد کے حق میں 43 اور مخالفت میں 31 ووٹ آئے،قرارداد سینیٹر کامران مرتضیٰ نے پیش کی۔ قرارداد کے متن میں کہا گیا ہے کہ  اکثر ممالک میں ویکسی نیشن فری لگائی جارہی ہے، پاکستان میں ویکسینیشن بہت مہنگی ہے اور  ویکسین منگوانے کیلئے پرائیوٹ کمپنی کو ٹھیکہ دیا  گیا ہے ۔  پاکستان میں ویکسینیشن 8 ہزار چارسو روپے ہے، جبکہ دیگر ممالک میں ویکسین کی قیمت پندرہ سو روپے ہے۔قرارداد کے مطابق  یہ آئین کے آرٹیکل 38 کی خلاف ورزی ہے، آرٹیکل 38 میں واضح ہے کہ ریاست اپنے شہریوں کو بنیادی حقوق فراہم کرے، عالمی منڈی1500جبکہ یہاں دو خوارکوں کی قیمت8400مقرر کی گئی۔ قرارداد میں کہا گیا کہ حکومت کو اپنے فیصلے پر نظرثانی کرنی چاہیئے۔چئیرمین سینیٹ نے کورونا سے متعلق قرارداد پر ووٹنگ کی ہدایت کردی۔ سینیٹ میں کوورنا ویکسین مفت یا اصل قیمت پر فراہمی سے متعلق قرارداد اکثریت رائے سے منظور کرلی گئی ۔

 حکومت کا کوورنا سے متعلق قرارداد کی تحریر پر اعتراض  کیا گیا ، وزیر مملکت برائے پارلیمانی امور علی محمد خان  نے کہاکہ قرادر میں الفاظ پر اعتراض ہے ، کوورنا ایک قومی مسئلہ ہے اس پر سیاست نہ کی جائے  ،حکومت رات دن اس بیماری کے خلاف اقدامات کررہی ہے  ۔ قائدایوان سینیٹر شہزادوسیم نے کہاکہ قرارداد پیش کرنے کا ایک طریقہ کارہوتا ہے، اس قرارداد میں تو حکومت کو چارج شیٹ کیا گیا ،سینیٹ میں قائد حزب اختلاف یوسف رضا گیلانی نے کہاکہ کورونا سے ملک کا وزیر اعظم بھی محفوظ نہیں ،غریب آدمی کورونا ویکسین کے اخراجات برداشت نہیں کرسکتا ۔ سینیٹر فیصل جاوید کاکہنا تھا کہ آج ایوان میں عجیب سی قرارداد منظور ہوئی،آج پوری دنیا انسداد کرونا پر عمران خان کی پالیسی کی معترف ہے، انشاء اللہ جلد تیسری لہر پر بھی قابو پالیں گے۔

 واضح رہے کہ حکومت    پاکستان نے 10 مارچ سے  60 سال سے زائد عمر کے افراد کیلئے کورونا ویکسینیشن  کا آغاز کیا گیا اور اس کے بعد 30 مارچ  سے  50 سال سے زائد عمر کے افراد کی ویکسی نیشن کا عمل جاری ہے  ۔ پاکستان میں جہاں حکومت کی جانب سے فرنٹ لائن ہیلتھ ورکرز یعنی طبی عملے اور 60 سال سے زائد عمر والے افراد کو کورونا سے بچاؤ کی مفت ویکسین لگانے کا سلسلہ جاری ہے وہیں نجی دوا ساز کمپنیوں کی جانب سے بھی فروخت کے لیے ویکسین درآمد کی جا رہی ہیں۔

پاکستان

پولیس کا سیڑھیاں لگاکر چودھری پرویز الٰہی کی رہائشگاہ کے اندر داخل ہونے کی کوشش

گجرات میں سابق وزیراعلیٰ چودھری پرویز الٰہی کی رہائشگاہ کا دوبارہ محاصرہ کرلیاگیا۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پولیس کا سیڑھیاں لگاکر  چودھری پرویز الٰہی کی رہائشگاہ کے اندر داخل ہونے کی کوشش

تفصیلات کے مطابق گجرات میں سابق وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی اور سابق رکن قومی اسمبلی مونس الٰہی کی رہائشگاہ کنجاہ ہاﺅس کو پولیس نے گھیرے میں لے لیا ہے، پولیس کی بھاری نفری رہائشگاہ کے باہر جمع ہے۔

 ڈی پی او کی قیادت میں پولیس کی بھاری نفری کنجاہ ہاﺅس پہنچی، نفری میں پولیس، ایلیٹ فورس کے 10 سے زائد تھانوں کے اہلکار شامل ہے،پولیس کی جانب سے چودھری پرویز الٰہی کی رہائشگاہ کے اندر جانے کی کوشش کی جارہی ہے، اہلکار سیڑھیاں لگا کر پرویز الٰہی کی رہائشگاہ کے اندر جانے کی کوشش کرہے ہیں۔

ذرائع کاکہناہے کہ سابق وزیراعلیٰ کی رہائشگاہ پر گیٹ کیپر اور ملازم موجود ہیں ، پرویز الٰہی کی فیملی کا کوئی فرد گھر پر موجود نہیں ہے ۔ذرائع کاکہناہے کہ سابق وزیراعلیٰ پرویز الٰہی لاہور اور مونس الٰہی بیرون ملک مقیم ہیں ۔

یاد رہے کہ چند روز بھی پولیس نے چودھری وجاہت اور ان کے بیٹے موسیٰ الٰہی کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارے تھے تاہم انہیں کوئی کامیابی نہ مل سکی۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

معیشت کوٹھیک کرنے میں وقت لگے گا: مریم نواز

مہنگائی کا اس وقت ن لیگ پر بہت بڑا بوجھ ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

معیشت کوٹھیک کرنے میں وقت لگے گا: مریم نواز

ملتان: سینئر نائب صدر و چیف آرگنائزر مسلم لیگ ن مریم نوا ز کا کہنا ہے کہ مہنگائی کا اس وقت ن لیگ پر بہت بڑا بوجھ ہے، معیشت کو چار سال خراب کیا گیا ٹھیک کرنے میں وقت لگے گا۔

انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان کوترقی کرتا پاکستان ملا تھا، یہ پچھلی حکومت کی نااہلی ہے، شہباز شریف دن رات کام کر رہے ہیں، لیکن وعدہ کر رہے ہیں کہ حالات کو بہتر کریں گے۔

  آئی ایم ایف کہتا ہے پہلے قیمتیں بڑھائیں پھر قرض ملے گا ہماری مجبوری ہے کہ آئی ایم ایف کی شرائط ماننا پڑیں گی ۔مہنگائی کے باوجود عوام کا جذبہ بلند ہے، آئی ایم ایف پروگرام کو عوامی مفاد میں چلایا لیکن تحریک انصاف نے پاکستان کو گروی رکھ دیا ہے، پی ٹی آئی فارن فنڈ صاف شفاف کیس ہے مگر ابھی تک احتساب نہیں ہو سکا، یہ نہیں ہو سکتا کہ عمران خان جرائم کریں اور ان کو چھوڑ دیا جائے ۔

مریم نواز نے عمران خان کی جیل بھرو تحریک پر بیان دیتے ہوئے کہا کہ ہم انتظار کررہے ہیں، جیل بھرو تحریک کی شروعات زمان پارک سے کریں، فرنٹ لائن پر انہوں نے خواتین کو رکھا ہوا ہے، خود سامنے آئیں، پورے جنوبی پنجاب سے ن لیگ الیکشن جیتے گی، جاوید ہاشمی ن لیگ کے اہم رہنما ہیں اور میرے لئے بہت قابل احترام ہیں۔

ہم جھوٹے وعدے نہیں کریں گے، جو وعدے کریں گے وفا کریں گے اور جھوٹی تسلیاں نہیں دیں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

1939 کے بعد سب سے تباہ کن زلزلہ ، 900 جاں بحق، 5000 زخمی، 2818 عمارتیں تباہ : ترک صدر

انقرہ : ترک صدر رجب طیب ادووان نے کہا ہے کہ ترکی میں تباہ کن زلزلے سے اموات کی تعداد 912 سے تجاوز کر چکی ہے جبکہ زلزلے میں پانچ ہزار سے زیادہ لوگ زخمی ہوئے ہیں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

1939 کے بعد سب سے تباہ کن زلزلہ ، 900 جاں بحق، 5000 زخمی، 2818 عمارتیں تباہ : ترک صدر

رجب طیب ادووان کا مزید کہنا تھا کہ ملک میں 2818 عمارتیں تباہ ہوئی ہیں اور یہ 1939 کے بعد سے سب سے تباہ کن زلزلہ ثابت ہوا ہے۔

ترک نائب صدر نے کہا ہے کہ ملک بھر کے 10 شہروں و صوبوں میں ایسے سکول ایک ہفتے تک بند رہیں گے جو زلزلے سے متاثر ہوئے ہیں۔ان شہروں اور صوبوں میں غازی عنتیپ، کہرمان مرعش، ہاتائی، عثمانیہ، آدیامان، مالطیہ، شانلی اورفہ، ادنہ، دیار بکر اور کلس شامل ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ ہاتائی صوبے سے آنے اور جانے والی پروازیں معطل کر دی گئی ہیں جبکہ کہرمان مرعش اور غازی عنتیپ کے ہوائی اڈے بھی عام پروازوں کے لیے بند ہیں۔

ترک ہلال احمر کے سربراہ نے شہریوں سے اپیل کی ہے کہ وہ فوراً خون کا عطیہ کریں تاکہ زلزلے کے متاثرین کی جانیں بچائی جاسکیں۔انہوں نے ٹوئٹر پر جاری کردہ بیان میں کہا کہ تنظیم متاثرہ علاقوں تک خون کی اضافی سپلائی بھجوا رہی ہے۔

دریں اثنا لوگوں سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ فوراً تباہ شدہ عمارتوں سے نکل جائیں اور امدادی کارکنان کے لیے سڑکوں خالی چھوڑ دیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll