جی این این سوشل

پاکستان

عمران خان کا لانگ مارچ راولپنڈی سے جوائن کرنے کا اعلان

لاہور: چیئرمین پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) عمران خان نے لانگ مارچ کو راولپنڈی سے جوائن کرنے کا اعلان کر دیا۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

عمران خان کا لانگ مارچ راولپنڈی سے جوائن کرنے کا اعلان
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

 

چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے ویڈیو لنک کے ذریعے لانگ مارچ کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے جہاں لانگ مارچ ختم کیا وہیں سے شروع کر رہے ہیں۔ وزیر آباد میں 12 سے 13 افراد کو گولیاں لگیں اور معجزانہ طور پر بچ گئے تاہم فائرنگ سے ہمارا ایک کارکن معظم جاں بحق ہوا۔

انہوں نے کہا کہ وزیر آباد کے لوگوں کا بے حد شکر گزار ہوں، یہ کوئی حادثہ نہیں بلکہ ایک قتل کی سازش تھی اور مجھے قتل کرنے کی سازش ستمبر میں ہوئی۔ 2 جلسوں میں عوام کو آگاہ کر دیا تھا کہ مجھے قتل کر دیا جائے گا اور فرانزک رپورٹ سے پتہ چل گیا کہ فائرنگ کرنے والے 2 افراد تھے جبکہ مجھ پر حملے کو مذہبی رنگ دینے کی کوشش کی گئی۔

عمران خان نے کہا کہ ہماری حقیقی آزادی کی تحریک رکے گی نہیں اور جب تک انصاف نہیں آئے گا ملک آزاد نہیں ہو گا اور اگر انصاف نہیں ہو گا تو نہ معاشرہ ترقی کرے گا نہ ہی یہ ملک۔ اعظم سواتی کے ساتھ ہونے والا سلوک افسوسناک ہے اور انہوں نے ہمارے ساتھ ایسا رویہ اختیار کیا جسے ہم دہشت گرد ہیں۔ پاکستان کا سابق وزیر اعظم ہوں مگر میری ایف آئی آر درج نہیں ہو رہی۔

انہوں نے کہا کہ اگر عمران خان کی ایف آئی آر درج نہیں ہوسکتی تو عام آدمی کو کیسے انصاف ملے گا۔ حملہ آور نے اپنے بیانات بدلے کیا وہ آپ کو کوئی دیندار انسان لگتا تھا ؟ چوروں کا دین سے کوئی تعلق نہیں ہوتا اور ماڈل ٹاون میں لوگوں کو قتل کرنے والے شخص کے خلاف مقدمہ درج نہیں کرا سکتا۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے چیف جسٹس پاکستان سے وزیرآباد واقعے کا نوٹس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ چیف جسٹس آپ معاملے کا نوٹس لیں قوم آپ کی طرف دیکھ رہی ہے اور چیف جسٹس سے اپیل ہے کہ ایف آئی آر کے معاملے کو دیکھیں جبکہ اعظم سواتی اور ارشد شریف معاملے کی بھی تحقیقات کرائیں۔

انہوں نے کہا کہ ارشد شریف پر پہلے تشدد ہوا اور پھر قتل کیا گیا۔ حکومت کی تحقیقاتی کمیشن پر کسی کو اعتبار نہیں اور پاکستان بنانا ری پبلک بننے جا رہا ہے جہاں جنگل کا قانون ہوتا ہے۔ کوئی بھی ملک اداروں کے بغیر نہیں چل سکتا ہے اور کہا جا رہا ہے کہ عمران خان سیاست چمکانے کے لیے ایسا کر رہا ہے لیکن مجھے اپنی سیاست چمکانے کے لیے کسی پر الزامات لگانے کی ضرورت نہیں۔

عمران خان نے کہا کہ یہ ملک کے مستقبل کی جنگ ہے اور یہ جنگ قوم نے جیتنی ہے۔ پاکستان کی تاریخ میں سب سے زیادہ مقبول ہونے والی پارٹی پی ٹی آئی ہے۔ وکلا بھی قانون کی بالادستی کے لیے ہمارے ساتھ ہیں اور امید کرتا ہوں کہ وکلا قانون کی بالادستی کے لیے اپنا کردار ادا کریں گے۔ آزادی کوئی پلیٹ میں نہیں دیتا بلکہ آزادی کے لیے لڑنا پڑتا ہے۔

عمران خان نے لانگ مارچ کو راولپنڈی سے جوائن کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ مارچ راولپنڈی پہنچے گا تو خود جوائن کروں گا اور پوری قوم کو لانگ مارچ میں شرکت کی دعوت دیتا ہوں۔

پاکستان

آئندہ بارہ گھنٹوں کے دوران مختلف شہروں میں موسم خشک رہے گا ، محکمہ موسمیات

تاہم مغربی بلوچستان کشمیر اوربالائی خیبرپختونخوامیں سہ پہرکے وقت تیز ہوائیں چلنے اور گرج چمک کیساتھ بارش کا امکان ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

آئندہ بارہ گھنٹوں کے دوران مختلف  شہروں میں موسم خشک رہے گا ، محکمہ موسمیات

اسلام آباد ف: محکمہ موسمیات کی پیشگوئی کے مطابق آئندہ بارہ گھنٹے کے دوران ملک کے بیشتر حصوں میں موسم زیادہ ترخشک جبکہ جنوبی علاقوں میں گرم رہے گا۔

تاہم مغربی بلوچستان کشمیر اوربالائی خیبرپختونخوامیں سہ پہرکے وقت تیز ہوائیں چلنے اور گرج چمک کیساتھ بارش کا امکان ہے۔

آج صبح ریکارڈ کیا گیا بعض شہروں کا درجہ حرارت

اسلام آباد پندرہ ڈگری سینٹی گریڈ ، لاہوراورپشاور بیس ، کراچی چھبیس ،کوئٹہ اورمری بارہ ، گلگت تیرہ ، اورمظفرآباد چودہ ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا ہے ۔ 

آج صبح ریکارڈ کیا گیا درجہ حرارت: سرینگر میں دس ڈگری سینٹی گریڈ ،جموں بیس،Leh منفی دو، پلوامہ اورانت ناگ نو ،شوپیاں آٹھ اوربارہ مولہ میں گیارہ ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا ہے ۔ 

بھارت کے غیر قانونی زیر قبضہ جموں و کشمیر میں محکمہ موسمیات کی پیشگوئی کے مطابق سرینگر، Leh، پلوامہ، اننت ناگ، شوپیاں اوربارہ مولہ میں شام اوررات کے اوقات کے دوران مطلع جزوی طورپر ابر آلود رہنے اور کہیں کہیںگرج چمک کے ساتھ بارش کاامکان ہے جبکہ جموں میں مطلع جزوی طورپرابرآلود اورخشک ہے گا۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

روس نے خلا میں جوہری ہتھیاروں سے متعلق قرارداد ویٹو کردی

یہ امریکا اور جاپان کی گھناؤ نی سازش ہے جس سے کونسل کو دھوکہ دیا جا رہا ہے، روسی سفیر

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

روس نے خلا میں جوہری ہتھیاروں سے متعلق قرارداد ویٹو کردی

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں پیش ہونیوالی خلا میں ایٹمی ہتھیاروں سے متعلق قرارداد کو روس نے ویٹو کر دیا۔ 
غیر ملکی میڈیا کے مطابق یہ قرار داد امریکا اور جاپان کی جانب سے مشترکہ طور پر پیش کی گئی تھی۔ اس قرار داد کے حق میں 13 ممالک نے ووٹ دیا جبکہ چین نے ووٹنگ میں حصہ نہیں لیا۔
ووٹنگ کے بعد اقوام متحدہ میں امریکی سفیر تھامس گرین فیلڈ نے کہا کہ روس کا قرار داد پر ووٹ نہ دینا بتاتا ہے کہ وہ کچھ چھپا رہا ہے۔
روس کے اقوام متحدہ میں سفیر ویسیلی نیبنزیا نے قرارداد کو بالکل مضحکہ خیز اور سیاست زدہ قرار دیتے ہوئے مسترد کر دیا اور کہا کہ یہ امریکا اور جاپان کی گھناؤ نی سازش ہے جس سے کونسل کو دھوکہ دیا جا رہا ہے۔ بڑے پیمانے پر تباہی پھیلانےوالے ہتھیار خلا میں لے جانے پر 1967 سے پابندی ہے۔ انہوں نے کہا کہ روس جلد ہی خلا کو پرامن رکھنےسے متعلق اپنی قرارداد پر بات کرے گا۔
واضح رہے کہ روسی صدر ولایمیرپوٹن نے اس سال کے شروع میں کہا تھا کہ روس خلا میں جوہری ہتھیاروں کی تعیناتی کے خلاف ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا موقف واضح اور شفاف ہے۔ ہم ہمیشہ سے واضح طور پر خلا میں جوہری ہتھیاروں کی تعیناتی کے خلاف رہے ہیں اور اب بھی ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

چیئرمین سینیٹ سے امریکی سفیر کی ملاقات، تعلقات مضبوط بنانے پر تبادلہ خیال 

پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان جاری تعاون کے مزید فروغ کی امید کا اظہار کیا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

چیئرمین سینیٹ  سے امریکی سفیر کی ملاقات، تعلقات مضبوط بنانے پر تبادلہ خیال 

چیئرمین سینٹ سید یوسف رضا گیلانی سے پاکستان میں امریکی سفیر ڈونلڈ بلوم نے پارلیمنٹ ہائوس میں ملاقات کی۔ دو طرفہ تعلقات کو مضبوط بنانے اور باہمی مفادات کو فروغ دینے کے حوالے سے گفتگو ہوئی۔  پائیدار دوستی کے مختلف پہلوؤں پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔
 امریکی سفیر نے سید یوسف رضا گیلانی کو چیئرمین سینٹ منتخب ہونے پر مبارکباد پیش کی اور ان کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔ امریکہ کے ساتھ دیرینہ دوستانہ تعلقات کو فروغ دینے کے لیے پاکستان کے عزم کا اظہار کرتے ہوئے چیئرمین سینٹ نے دونوں ممالک کے درمیان پارلیمانی تعلقات کو مزید فروغ دینے کی اہمیت پر زور دیا۔ 
چیئرمین سینٹ نے کہا کہ امریکہ پاکستان کا سب سے بڑا تجارتی شراکت دار ہے۔ مختلف شعبوں میں پاکستانی حکومت سے تعاون پر امریکی حکومت کا شکریہ ادا کیا اور دونوں ممالک کے مابین تجارتی روابط اور تجارتی حجم کو بڑھانے کی ضرورت پر زور دیا۔ 
ڈونلڈ بلوم نے پاکستان کی نئی اقتصادی ٹیم کو سراہتے ہوئے پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان جاری تعاون کے مزید فروغ کی امید کا اظہار کیا۔ پاکستان کی اقتصادی ٹیم کی کوششوں کی تعریف کی اور پاکستان اور امریکہ کے درمیان مزید اقتصادی تعاون کے امکانات پر روشنی ڈالی۔ 
پاکستان کے مثبت معاشی اشاریوں کی روشنی میں، بلوم نے افراط زر میں کمی کے رجحان اور ڈالر کے ذخائر میں اضافے کو مدنظر رکھتے ہوئے کہا کہ آئی ایم ایف کی جانب سے پاکستانی معیشت پر اعتماد سے سرمایہ کاروں کی حوصلہ افزائی ہوگی۔ 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll