جی این این سوشل

پاکستان

اسلام آباد کو کنٹینر سٹی بنا کر اقتدار نہیں بچایا جا سکتا : مسرت چیمہ 

مسرت چیمہ  کا کہنا تھا کہ عمران خان کاتلانہ حملے کے باوجود حقیقی آزادی مارچ کی قیادت کرنے کے لئے پر عزم ہیں ۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

اسلام آباد کو کنٹینر سٹی بنا کر اقتدار نہیں بچایا جا سکتا : مسرت چیمہ 
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

تفصیلات کے مطابق ترجمان وزیر اعلیٰ و حکومت پنجاب مسرت جمشید چیمہ نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ چئیرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان اپنے اوپر قاتلانہ حملے کے بعد بھی حقیقی آزادی مارچ کو لیڈ کرنے کے لیے پرعزم ہیں۔ ہم کسی صورت اس ملک کو چوروں کے رحم و کرم پر نہیں چھوڑ سکتے۔ حقیقی آزادی مارچ کے لیے عوام نے ہفتے کو راولپنڈی پہنچنا ہے لیکن امپورٹڈ حکومت کی پہلے ہی کانپیں ٹانگ رہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یہ چور اسلام آباد کو کنٹینر سٹی بنا کے اپنا اقتدار بچانا چاہتے ہیں لیکن عوام کی طاقت چند کنٹینرز سے کہیں طاقت ور ہوتی ہے اور جیت ہمیشہ عوام کی ہوتی ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کے سب سے بڑے چور اور بھگوڑے سے پاکستان کے اہم معاملات پر ہدایات لی جا رہی ہیں جو کہ غیر قانونی اور غیر آئینی ہے۔ عمران خان پاکستان کے سب سے مقبول لیڈر ہیں اور اگر ضرورت پڑی تو عمران خان، صدر پاکستان سے اس معاملے پر گفتگو کریں گے اور لائحہ عمل سے آگاہ کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ یہ اعتراض کیا جا رہا ہے کہ صدر پاکستان چیئرمین تحریک انصاف سے کسی آئینی تقرری پر مشورہ نہیں کر سکتے لیکن دوسری جانب وزیراعظم پاکستان سیکرٹ ایکٹ کی خلاف ورزی کرتے ہوئے مفرور مجرم نواز شریف سے مشاورت کر سکتا ہے۔
 بعد ازاں لاہور پریس کلب میں مقتول صحافی ارشد شریف کے خاندان کو صحافتی تنظیم پی ایف یو جے کے زیر اہتمام انصاف دلوانے کی دستخطی مہم میں شرکت کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسرت جمشید چیمہ نے کہا کہ ارشد شریف کے بعدمزید لاشیں اٹھانے سے بہتر ہے کہ ہم اس اقدام کے خلاف آواز اٹھائیں۔ پی ایف یو جے سے اپیل ہے کہ صحافت کے تمام عالمی اداروں کو بھی اپنے ساتھ شامل کرکے اس کیس کو منطقی انجام تک پہنچائیں۔

مسرت چیمہ نے مزید کہا کہ پاکستان میں ارشد شریف جیسے صحافی کا قتل پہلا قتل نہیں تھا، لیکن ہم اسے آخری قتل بنائیں گے۔اپنے شہید بھائی کو انصاف دلانے کیلئے ہم سب کو مل کر جدوجہد کر نی ہو گی۔ ارشد شریف کی پوسٹ مارٹم رپورٹ انکی فیملی کو دی جائے۔ قتل کے کیس میں مدعی ارشد شریف کی فیملی ہے جسے مطمئن کرنا انتہائی ضروری ہے

پاکستان

ن لیگ کا وزیراعلیٰ پنجاب کیخلاف تحریک عدم اعتماد پیش کرنے پر غور

لاہور: وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی کے خلاف تحریک عدم اعتماد پیش کی جائے یا نہیں؟ ن لیگ نے اس پہ غور و خوص کے لیے پارلیمانی پارٹی کا اجلاس طلب کر لیا ہے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ن لیگ کا وزیراعلیٰ پنجاب کیخلاف تحریک عدم اعتماد پیش  کرنے پر غور

ن لیگ کے انتہائی ذمہ دار ذرائع نے بتایا ہے کہ پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حمزہ شہباز کی زیر صدارت بلائے جانے والے اجلاس میں وزیراعلیٰ پنجاب کے حوالے سے مشاورت کی جائے گی۔

ذرائع کے مطابق اجلاس میں اس بات پہ غور کیا جائے گا کہ پہلے مرحلے میں وزیراعلیٰ چودھری پرویز الٰہی کو ایوان سے اعتماد کا ووٹ لینے کا کہا جائے اور فوری طور پر تحریک عدم اعتماد نہ لائی جائے۔

حمزہ شہباز شریف کی زیر صدارت بلائے جانے والے پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں ذرائع کے مطابق تحریک عدم اعتماد کے حوالے سے تمام آئینی و قانونی پہلوؤں کا جائزہ لیا جائے گا اور غور و خوص کے لیے صلاح و مشورہ بھی ہو گا؟

ذرائع کے مطابق اجلاس میں سپریم کورٹ میں وزیر اعلیٰ الیکشن پر نظر ثانی کی درخواست پہ از سر نو قانونی مشاورت بھی کی جائے گی۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پی ٹی آئی لانگ مارچ اسلام آباد نہ آیا لیکن سکیورٹی کے نام پر خزانے سے کروڑوں خرچ

پاکستان تحریک انصاف کے لانگ مارچ کے باعث وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں سکیورٹی اخراجات کی تفصیل سامنے آگئی۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پی ٹی آئی لانگ مارچ اسلام آباد نہ آیا لیکن سکیورٹی کے نام پر خزانے سے کروڑوں خرچ

دستاویز کے مطابق اسلام آباد میں سکیورٹی کے نام پر 25 کروڑ 63 لاکھ روپےخرچ ہوئے جبکہ وزارت داخلہ نے39 کروڑ92لاکھ روپے سے زائد کا بجٹ منظورکرایا تھا۔

رقم کینٹینرز لگانے، فورسز کے قیام وطعام اورشیلز کی خریداری کیلئے تھی۔

اسلام آباد کی مختلف شاہراہوں پر سیکڑوں کینٹینرز تقریباً ایک ماہ رکھے گئے اور اسلام آباد میں مجموعی طور 13 ہزار 800 سکیورٹی اہلکار تعینات کیے گئے جس میں اسلام آباد اور سندھ کی پولیس، رینجرز اور ایف سی اہلکار شامل تھے۔

دستاویز کے مطابق اہلکاروں نے 2442شیل بھی استعمال کیے۔

خیال رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کا لانگ مارچ راولپنڈی سے واپس ہوگیا، اسلام آباد نہیں آیا۔

پڑھنا جاری رکھیں

تفریح

عمران خان پر تنقید سے میرا 95 فیصد میوزک کا کام ختم ہو گیا، جواد احمد

لاہور: معروف گلوکار جواد احمد نے کہا ہے کہ چیئرمین پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) عمران خان پر تنقید کی وجہ سے میرا 95 فیصد میوزک کا کام ختم ہو گیا۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

عمران خان پر تنقید سے میرا 95 فیصد میوزک کا کام ختم ہو گیا، جواد احمد

 

معروف گلوکار جواد احمد نے اپنے ایک انٹرویو میں انکشاف کیا کہ سیاست میں آنے اور پھر عمران خان پر تنقید کی وجہ سے اب مجھے کوئی کنسرٹ میں نہیں بلاتا جبکہ سیاسی مؤقف کی وجہ سے میرا میوزک کا کام 95 فیصد تک ختم ہو چکا ہے۔

انہوں نے کہا کہ جب سے میں نے سیاست میں قدم رکھا اور عمران خان کی مخالفت کی ہے تو لوگ کہتے ہیں جواد احمد متنازعہ شخص ہے اسے رہنے دو۔

جواد احمد نے کہا کہ میں عمران خان سمیت دوسری سیاسی جماعتوں پر بھی تنقید کرتا ہوں اور میں پاکستان کے عام آدمی کی بات کرتا ہوں اور عام آدمی کے لیے ہی جماعت بنانا چاہتا ہوں۔

 
 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll