جی این این سوشل

پاکستان

شام 4 بجے پریس کانفرنس کروں گا: عمران خان

فواد چودھری کی گرفتاری پر عمران خان کی مذمت

پر شائع ہوا

کی طرف سے

شام 4 بجے پریس کانفرنس کروں گا:  عمران خان
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

لاہور: پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان  نے کہا کہ فواد چودھری کی گرفتاری سے ثابت ہوگیا پاکستان بنانا ریپبلک ہے۔

 

عمران خان نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر اپنے پیغام میں کہا کہ ہمیں اپنے بنیادی حقوق کیلئے کھڑا ہونا ہوگا، شام 4 بجے پریس کانفرنس کروں گا۔

پاکستان

رضاکارانہ طور پر جیل بھرو تحریک کے لیے رجسٹریشن کرائیں، پھر تاریخ دوں گا: عمران خان

لاہور: چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ رضاکارانہ طور پر جیل بھرو تحریک کے لیے رجسٹریشن کرائیں، پھر تاریخ دوں گا۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

رضاکارانہ طور پر جیل بھرو تحریک کے لیے رجسٹریشن کرائیں، پھر تاریخ دوں گا: عمران خان

سابق وزیراعظم عمران خان نے جاری کردہ اپنے ویڈیو پیغام میں کہا ہے کہ قومیں قانون کے تحت چلتی ہیں، آئین فیصلہ کرتا ہے کیا جائز ہے کیا ناجائز؟ لیکن جب سے امپورٹڈ حکومت آئی ہے، آئین کی دھجیاں اڑائی گئی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ عدالت نے اسلام آباد بلدیاتی الیکشن 48 گھنٹے میں کرانے کا حکم دیا، مہینہ ہوگیا لیکن اسلام آباد میں بلدیاتی انتخابات نہیں ہو رہے ہیں، آئین بنیادی حقوق کی حفاظت کرتا ہے مگر ہمارے لوگوں کو اٹھایا گیا، ایک ٹویٹ پر لوگوں کو اٹھا کر تشدد کیا گیا، کئی لوگوں کا تشدد کے بعد ذہنی توازن ٹھیک نہیں ہوا۔

عمران خان نے کہا کہ عدالت شیخ رشید کو ضمانت دیتی ہے توسندھ و بلوچستان میں کیسز بنائے جاتے ہیں، عدالت کہتی ہے فواد چودھری کو عدالت میں پیش کریں لیکن وہ اسلام آباد لے جاتے ہیں۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے ویڈیو پیغام میں کہا کہ 25 مئی کو پرامن احتجاج کرنے والوں پر تشدد کیا گیا، قوم کا آئین اور قانون پر سے اعتماد اٹھتا جا رہا ہے، آئین میں واضح ہے کہ 90 دن میں الیکشن ہوں گے، پنجاب اور خیبرپختونخوا میں حکومتیں آئین کے تحت تحلیل کیں، ملک بحران اور سیاسی عدم استحکام کا شکار ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے 2 حکومتوں کی قربانی دیں، 20 سے 25 دن ہوگئے لیکن الیکشن کمیشن اور گورنرز نے الیکشن کی تاریخ نہیں دی، اگر 90 دن سے آگے گئے تو آئین میں واضح ہے کہ آرٹیکل 6 لگے گا، پوری قوم عدالتوں کی طرف دیکھ رہی ہے، نظریہ ضرورت سے ملک کے نیچے جانے کا سفر شروع ہوا، اب بھی وہی وقت ہے۔

عمران خان نے کہا کہ اگر 90 دن سے الیکشن آگے گئے تو انصاف کیلئے جیل بھرو تحریک کا فیصلہ کیا، جن پر کرپشن کے مقدمات تھے، انہیں جیل میں شاہانہ انداز میں رکھا گیا، مریم کو پانامہ انکشاف کے بعد جیل میں رکھا گیا، کوئی تشدد نہیں ہوا۔

انہوں نے کہا کہ ایک راستہ یہ ہے کہ ہڑتال کریں، پہیہ جام کریں، پتھراؤ کریں لیکن ملک میں معاشی بحران ہے، اس لئے ہڑتال نہیں کر رہے ہیں، پرامن جدوجہد کے طور پر جیل بھرو تحریک کا فیصلہ کیا ہے۔

چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے اپنے ویڈیو پیغام میں کہا کہ جیل بھرو تحریک سے حقیقی آزادی اور حقیقی جمہوریت حاصل کریں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

1939 کے بعد سب سے تباہ کن زلزلہ ، 900 جاں بحق، 5000 زخمی، 2818 عمارتیں تباہ : ترک صدر

انقرہ : ترک صدر رجب طیب ادووان نے کہا ہے کہ ترکی میں تباہ کن زلزلے سے اموات کی تعداد 912 سے تجاوز کر چکی ہے جبکہ زلزلے میں پانچ ہزار سے زیادہ لوگ زخمی ہوئے ہیں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

1939 کے بعد سب سے تباہ کن زلزلہ ، 900 جاں بحق، 5000 زخمی، 2818 عمارتیں تباہ : ترک صدر

رجب طیب ادووان کا مزید کہنا تھا کہ ملک میں 2818 عمارتیں تباہ ہوئی ہیں اور یہ 1939 کے بعد سے سب سے تباہ کن زلزلہ ثابت ہوا ہے۔

ترک نائب صدر نے کہا ہے کہ ملک بھر کے 10 شہروں و صوبوں میں ایسے سکول ایک ہفتے تک بند رہیں گے جو زلزلے سے متاثر ہوئے ہیں۔ان شہروں اور صوبوں میں غازی عنتیپ، کہرمان مرعش، ہاتائی، عثمانیہ، آدیامان، مالطیہ، شانلی اورفہ، ادنہ، دیار بکر اور کلس شامل ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ ہاتائی صوبے سے آنے اور جانے والی پروازیں معطل کر دی گئی ہیں جبکہ کہرمان مرعش اور غازی عنتیپ کے ہوائی اڈے بھی عام پروازوں کے لیے بند ہیں۔

ترک ہلال احمر کے سربراہ نے شہریوں سے اپیل کی ہے کہ وہ فوراً خون کا عطیہ کریں تاکہ زلزلے کے متاثرین کی جانیں بچائی جاسکیں۔انہوں نے ٹوئٹر پر جاری کردہ بیان میں کہا کہ تنظیم متاثرہ علاقوں تک خون کی اضافی سپلائی بھجوا رہی ہے۔

دریں اثنا لوگوں سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ فوراً تباہ شدہ عمارتوں سے نکل جائیں اور امدادی کارکنان کے لیے سڑکوں خالی چھوڑ دیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

تجارت

بجلی بلوں میں فیول ایڈجسٹمنٹ چارجز غیر قانونی قرار

لاہور ہائیکورٹ کا گھریلو صارفین کو 500یونٹس تک سسبڈی دینے کا بھی حکم

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

بجلی بلوں میں فیول ایڈجسٹمنٹ چارجز غیر قانونی قرار

لاہور ہائیکورٹ نے بجلی بلوں میں فیول ایڈجسٹمنٹ چارجز غیر قانونی قرار دے دیئے۔ لاہور ہائیکورٹ نے گھریلو صارفین کو 500یونٹس تک سسبڈی دینے کا بھی حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق فیول ایڈجسٹمنٹ چارجز وصول کرنے کا اقدام مختلف شہریوں کی جانب سے ہائیکورٹ میں چیلنج کیا گیا تھا۔ جسٹس علی باقر نجفی نے اظہرصدیق سمیت دیگر کی درخواستوں پر محفوظ فیصلہ سنایا۔ 

عدالت نے گھریلو صارفین کو 500 یونٹس تک سسبڈی دینے کا حکم دے دیا جبکہ وفاقی حکومت کو متبادل ذرائع سے بجلی پیدا کرنے کی بھی ہدایت کردی۔

درخواست گزار نے مؤقف اختیار کیا تھا کہ وفاقی حکومت نے بلوں میں فیول ایڈجسٹمنٹ کی منظوری دی،بجلی بلز میں فیول ایڈجسٹمنٹ قانونی تقاضوں کے مطابق نہیں، عدالت بجلی کے بلوں میں فیول ایڈجسٹمنٹ کو کالعدم قرار دے۔ 

فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کو سمجھنے کے لیے ایکچوئل فیول کاسٹ ( ایک ماہ میں ایندھن پر آنے والی لاگت) اور ریفرنس فیول کاسٹ سمجھنا ضروری ہے۔

ہر مالی سال کے آغاز میں نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) ایک ریفرنس فیول کاسٹ دیتا ہے۔ یعنی ایک ایسا حوالہ جس سے ہر ماہ ایندھن پر آنے والی کل لاگت کا موازنہ کیا جا سکے۔

ایک مہینے میں بجلی کی پیداوار میں استعمال ہونے والے ایندھن کی کُل لاگت (باسکٹ فیول کاسٹ) دراصل ملک میں توانائی کے مختلف ذرائع میں استعمال ہونے والے ایندھن (جیسے کوئلہ، ایل این جی، فرنس آئل) پر آنے والی لاگت کے اعتبار سے نکالی جاتی ہے۔ 

یوں ہر ماہ کے اختتام پر اس ماہ کی مجموعی فیول کاسٹ کا موازنہ ریفرنس فیول کاسٹ سے کیا جاتا ہے اور اسی حساب سے یہ ’ایڈجسٹمنٹ‘ دو ماہ کے بعد بجلی کے بلوں میں لگ کر آتی ہے۔

اگر اُس ماہ مجموعی فیول کاسٹ، ریفرنس کاسٹ سے زیادہ ہو تو آپ کے بل میں ایف پی اے کی مد میں اضافہ ہو گا جبکہ اگر اس ماہ کی مجموعی فیول کاسٹ ریفرنس کاسٹ سے کم ہو تو ایف پی اے کی مد میں کمی آتی ہے۔ 

اسے ہی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کہتے ہیں۔ دوسری جانب وفاقی حکومت نے عالمی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف) کی ایک اور شرط قبول کرتے ہوئے بجلی مزید مہنگی کرنے کا فیصلہ کر لیا،

سبسڈی سو یونٹ تک دیجائیگی۔ ذرائع کے مطابق پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان توانائی کے شعبے پر مذاکرات ہوئے جس میں حکومت نے نظرِ ثانی شدہ سرکلر ڈیٹ مینجمنٹ پلان بھی آئی ایم ایف کو دے دیا۔ 

فیصلے کے تحت بجلی کی قیمت میں آئندہ ماہ 3 روپے فی یونٹ اضافہ ہوگا اور مئی میں 70 پیسے فی یونٹ مزید اضافہ کیا جائے گا جبکہ نئے مالی سال کے پہلے مہینے تک بجلی 6 روپے فی یونٹ مہنگی ہوگی۔

آئی ایم ایف نے 300 یونٹ تک سبسڈی کی تجویز ختم کرنے کا بھی مطالبہ کیا ہے اور کہا ہے کہ صرف 100یونٹ تک غریب صارفین کو سبسڈی فراہم کی جائے۔ بجلی کی قیمت میں اضافے سے 200ارب روپے ریونیو حاصل کیا جائے گا۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll