جی این این سوشل

پاکستان

الیکشن کیلئے8 اکتوبر کوئی جادوئی تاریخ ہے: چیف جسٹس

سپریم کورٹ میں انتخابات ملتوی کرنےکےخلاف پی ٹی آئی کی  درخواست  پرسماعت ہوئی۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

الیکشن کیلئے8 اکتوبر کوئی جادوئی تاریخ ہے: چیف جسٹس
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

پنجاب اور خیبرپختونخوا اسمبلیوں کے عام انتخابات کے کیس کی سپریم کورٹ میں سماعت جاری ہے، جسٹس جمال مندوخیل نے کہا کہ اپنے اختلافی نوٹ پر قائم ہوں، انتخابات سے متعلق ازخود نوٹس مسترد کردیا گیا تھا۔ الیکشن کمیشن کے وکیل نے کہا کہ ایجنسیوں نے دہشت گردی کے خدشات سے متعلق رپورٹس دی ہیں۔

چیف جسٹس نے کہا کہ دہشت گردی کا مسئلہ 20 سال سے ہے، اس کے باوجود انتخابات ہوتے رہے ہیں، جس ضلع میں زیادہ مسئلہ ہے وہاں الیکشن مؤخر ہوسکتے ہیں، 8 اکتوبر کوئی جادوئی تاریخ ہے جو اس دن سب ٹھیک ہوجائے گا، 8 اکتوبر کی جگہ 8 ستمبر یا 8 اگست کیوں نہیں ہوسکتی؟۔

چیف جسٹس سپریم کورٹ جسٹس عمر عطاء بندیال کی سربراہی میں 5 رکنی بینچ میں پنجاب اور خیبرپختونخوا اسمبلیوں کے عام انتخابات کے التواء سے متعلق کیس کی سماعت کا آغاز ہوگیا۔

الیکشن کمیشن کے وکیل سجیل سواتی  کی جانب سے سپریم  کورٹ میں دلائل پیش کئے گئے، کہا کہ الیکشن کمیشن کی 8 اکتوبر کی تاریخ عارضی نہیں ہے، کچھ علاقوں میں الیکشن  کرائیں تو ایجنسیوں کے مطابق وہاں دہشتگردی کے حملے ہو سکتے ہیں، الیکشن کمیشن کے انتخابات کرانے کی ذمہ داری سے کوئی بنیادی حقوق متاثر نہیں ہوتے، صاف شفاف انتخابات یقینی بنانے کےلیے الیکشن کمیشن کوئی بھی حکم جاری کرسکتا ہے، ورکرز پارٹی فیصلہ کے مطابق صاف شفاف انتخابات کےلیے وسیع اختیارات ہیں۔

جسٹس منیب اختر نے کہا آپ کہہ رہے ہیں اداروں سے معاونت نہیں مل رہی، الیکشن کمیشن اپنی  ذمہ داری سے کیسے بھاگ سکتا ہے؟ صاف شفاف انتخابات الیکشن کمیشن کی ذمہ داری ہے،انتخابی شیڈول پر عمل شروع ہوگیا تھا،اگر کوئی مشکل تھی تو عدالت آجاتے،الیکشن کمیشن وضاحت کرے کہ الیکشنز 6 ماہ آگے کیوں کردئیے؟  کیا ایسے الیکشن کمیشن اپنی ذمہ داری پورے کریگا، کیا انتخابات میں 6 ماہ کی تاخیر آئینی مدت کی خلاف ورزی نہیں؟

جسٹس جمال مندوخیل نے کہا کہ انتخابات کرانے کا اختیار کس دن سے شروع ہوتا ہے؟ انتخابی تاریخ مقرر ہونے سے اختیار شروع ہوتا ہے، وکیل الیکشن کمیشن نے جواب دیا کہ تاریخ مقرر ہوجائے تو اسے بڑھانے کا اختیار الیکشن کمیشن کا ہے، صرف پولنگ کا دن نہیں، پورا الیکشن پروگرام موخر کیا ہے۔

جسٹس اعجاز الحسن نے کہا کہ الیکشن کمیشن پروگرام تبدیل کرسکتا ہے تاریخ نہیں، جس پر وکیل الیکشن کمیشن نے جواب دیا کہ الیکشن کمیشن ٹھوس وجوہات پر الیکشن پروگرام واپس لے سکتا ہے۔

دنیا

یو اے ای میں شیخ حسینہ کے خلاف مظاہرہ کرنے پر 57 بنگلہ دیشی گرفتار

تین ملزمان کو گلیوں میں فسادات بھڑکانے کے جرم میں عمر قید جب کہ 53 دیگر کو 10 سال اور ایک کو 11 سال قید کی سزا سنائی گئی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

یو اے ای میں  شیخ حسینہ کے خلاف مظاہرہ کرنے پر 57 بنگلہ دیشی گرفتار

متحدہ عرب امارات کی ایک عدالت نے خلیجی ریاست میں بنگلادیشی وزیراعظم شیخ حسینہ کے خلاف مظاہرہ کرنے پر 57 بنگلہ دیشیوں کو طویل قید کی سزا سنائی ہے۔

بی بی سی کی رپورٹ میں سرکاری خبر رساں ادارے کا حوالہ دیا گیا جس کے مطابق تین نامعلوم ملزمان کو ”جمعہ کو متحدہ عرب امارات کی کئی گلیوں میں فسادات بھڑکانے“ کے جرم میں عمر قید کی سزا سنائی گئی، جب کہ 53 دیگر کو 10 سال اور ایک کو 11 سال قید کی سزا سنائی گئی۔

مقدمے کی سماعت کے دوران ملزمان کے وکیل کا حوالہ دیا کہ ان اجتماعات کا کوئی مجرمانہ ارادہ نہیں تھا۔ ایمنسٹی انٹرنیشنل متحدہ عرب امارات کے عدالتی فیصلے کی مذمت کی ہے۔

واضح رہے کہ بنگلہ دیش میں سرکاری ملازمتوں کے کوٹا سسٹم کے خلاف احتجاج اور پرتشدد مظاہروں میں فورسز کو امن و امان کی خلاف ورزی کرنے والوں کو دیکھتے ہی گولی مارنے کا حکم دیا ہے جبکہ پُرتشدد مظاہروں میں اموات کی تعداد 150 سے تجاوز کرچکی ہے اور بنگلادیشی وزیراعظم شیخ حسینہ کی حکومت بچانے کیلئے بھارتی فوج بنگلہ دیش پہنچنے کی خبریں ہیں۔ ذرائع کے مطابق بھارتی فوج کی ایک کمپنی مغربی بنگال سے بنگلہ دیش میں داخل ہوئی ہے۔

خیال رہے کہ متحدہ عرب امارات میں احتجاج مؤثر طور پر غیر قانونی ہیں، جہاں غیر ملکی آبادی کا تقریباً 90 فیصد حصہ ہیں۔ بنگلہ دیشی تارکین وطن کا تیسرا سب سے بڑا گروپ ہے۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

علاقائی

وزیر داخلہ محسن نقوی کی کیپٹل ڈیولپمنٹ اتھارٹی اسلام آباد کو اہم ہدایات جاری

محسن نقوی نے کہا کہ متعلقہ افسران اور عملہ نکاسی آب کا کام مکمل ہونے تک فیلڈ میں موجود رہیں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

وزیر داخلہ محسن نقوی کی  کیپٹل ڈیولپمنٹ اتھارٹی اسلام آباد کو اہم ہدایات جاری

وزیر داخلہ محسن نقوی نے کیپٹل ڈیولپمنٹ اتھارٹی ( سی ڈی اے )کو ہدایت کی ہے کہ وہ طوفانی بارشوں کے پیش نظر دارالحکومت کے نشیبی علاقوں میں وقفے وقفے سے پانی کی نکاسی کو یقینی بنائے۔

وزیر داخلہ نے سی ڈی اے کے چیئرمین محمد علی رندھاوا سے رابطہ کیا اور ان سے کہا کہ وہ خود نکاسی کے کام کی نگرانی کریں۔ انہوں نے کہا کہ انڈر پاسز اور دیگر مقامات پر پانی کی نکاسی کو یقینی بنایا جائے۔

محسن نقوی نے کہا کہ متعلقہ افسران اور عملہ نکاسی آب کا کام مکمل ہونے تک فیلڈ میں موجود رہیں۔

وزیر داخلہ نے دارالحکومت میں گلیوں، نالوں اور آبی گزرگاہوں کی باقاعدہ نگرانی کی ہدایات دیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پاکستان تحریک انصاف کا پارلیمنٹ کے باہر بھوک ہڑتالی کیمپ جاری

اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق نے پی ٹی آئی کو پارلیمنٹ کے اندر کیمپ لگانے کی اجازت دینے سے انکار کر دیا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پاکستان تحریک انصاف کا پارلیمنٹ کے باہر بھوک ہڑتالی کیمپ جاری

پاکستان تحریک انصاف کا پارلیمنٹ کے باہر بھوک ہڑتالی کیمپ جاری ہے جبکہ اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق نے پی ٹی آئی کو پارلیمنٹ کے اندر کیمپ لگانے کی اجازت دینے سے انکار کر دیا۔

اس سے قبل تحریک انصاف کے ارکان پارلیمنٹ نے گرفتاریوں، چھاپوں، قیادت اور کارکنوں کے خلاف مقدمات پر آج پارلیمنٹ ہاؤس کے سامنے علامتی بھوک ہڑتال کا اعلان کیا تھا۔ اس سلسلے میں پی ٹی آئی کا پارلیمنٹ کےباہربھوک ہڑتالی کیمپ جاری ہے، بھوک ہرتالی کیمپ میں چیئرمین پی ٹی آئی بیرسٹر گوہر ، اسد قیصر، علی محمد خان، فلک ناز چترالی، شیخ وقاص اور سینیٹر ہمایوں مہمند شریک ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق بھوک ہڑتالی کیمپ آج پارلیمنٹ ہاؤس کے سامنے دوپہر 3 بجے لگایا جائے گا، بھوک ہڑتالی کیمپ کی قیادت قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر عمر ایوب کریں گے، آج علامتی بھوک ہڑتال ہوگی جبکہ حکومتی انتقامی کارروائیوں کے خلاف ردعمل بھی دیا جائے گا۔ بیرسٹر گوہر، اسد قیصر سمیت تمام ارکان پارلیمنٹ بھوک ہڑتال کریں گے، سینیٹ میں اپوزیشن لیڈ شبلی فراز بھی بھوک ہڑتالی کیمپ میں شریک ہوں گے، دوپہر 3 بجے سے شام 7 بجے تک بھوک ہڑتال جاری رہے گی۔

بھوک ہڑتالی کیمپ میں ارکان پارلیمان کو پارٹی وفاداریاں نہ بدلنے پر مقدمات کی دھمکیوں کا معاملہ بھی اٹھایا جائے گا، پی ٹی آئی کے مطالبات تسلیم نہ ہونے پر بھوک ہڑتال کا دائرہ کار وسیع کردیا جائے گا۔ ارکان اسمبلی بانی پی ٹی آئی عمران خان سمیت گرفتار کارکنان کی رہائی کا مطالبہ کریں گے۔

یاد رہے کہ بانی پی ٹی آئی عمران خان خود بھی بھوک ہڑتال کرنے کا عندیہ دے چکے ہیں۔

دوسری جانب اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق سے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) وفد نے ملاقات کی ہے۔ ایاز صادق نے پی ٹی آئی کو پارلیمنٹ کے اندر کیمپ لگانے کی اجازت دینے سے انکار کر دیا۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll