جی این این سوشل

پاکستان

سیاسی رابطے تیز آصف علی زرداری کی چودھری شجاعت سے ملاقات

مستقبل میں سیاسی سیٹ اپ کے لیے کیا حکمت عملی ہونی چاہیے آصف علی ذرداری نے شجاعت حسین سے مشورہ مانگ لیا ۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

سیاسی رابطے تیز آصف علی زرداری  کی  چودھری شجاعت   سے  ملاقات
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

الیکشن کمیشن کی جانب سے انتخابات کی تاریخ کے اعلان کے بعد تمام سیاسی پارٹیوں نے سیاسی رابطے تیز کردیے ہیں ۔

سابق صدر آصف علی ذرداری اور چودھری شجاعت کے درمیان گزشتہ روز ملاقات ہوئی جس میں سیاسی صورت حال پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔

مستقبل میں سیاسی سیٹ اپ کے لیے کیا حکمت عملی ہونی چاہیے آصف علی ذرداری نے شجاعت حسین سے مشورہ مانگ لیا ۔

آصف زرداری کے تحفظات پر چودھری شجاعت نے نواز شریف سے بات کرنے کی یقین دہانی بھی کروائی ، چودھری شجاعت نے کہا کہ شہباز شریف پاکستان آئیں گے توان سے بھی بات کروں گا ۔

آصف زرداری نے شکوہ کیا کہ پیپلز پارٹی کو واقعی دیوار سے لگانے کا احساس ہو رہا ہے ۔

پاکستان

وزیر خارجہ نے بھارتی سپریم کورٹ کے فیصلے کو مسترد کر دیا

جلیل عباس جیلانی نے کہا کہ ریاست کی بحالی، ریاستی اسمبلی کے انتخابات کا انعقاد یا ایسے ہی اقدامات کشمیری عوام کو حق خودارادیت دینے کا متبادل نہیں بن سکتے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

وزیر خارجہ نے بھارتی سپریم کورٹ کے فیصلے کو مسترد کر دیا

اسلام آباد: پاکستان نے پیر کو بھارتی سپریم کورٹ کی طرف سے غیر قانونی طور پر مقبوضہ جموں و کشمیر کی حیثیت سے متعلق سنائے گئے فیصلے کو واضح طور پر مسترد کر دیا۔

جمعرات کو اسلام آباد میں ایک نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے، نگراں وزیر خارجہ جلیل عباس جیلانی نے کہا کہ 5 اگست 2019 کے بھارت کے یکطرفہ اور غیر قانونی اقدامات کی عدالتی توثیق مسخ شدہ تاریخی اور قانونی دلائل پر مبنی انصاف کا دھندا ہے۔
انہوں نے کہا کہ ہندوستان ملکی قانون سازی اور عدالتی فیصلوں کے بہانے اپنی بین الاقوامی ذمہ داریوں سے دستبردار نہیں ہو سکتا۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ بھارتی سپریم کورٹ کا فیصلہ جموں و کشمیر تنازعہ کی بین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ متنازع نوعیت کو تسلیم کرنے میں ناکام ہے۔ یہ کشمیری عوام کی امنگوں کو پورا کرنے میں مزید ناکام ہے، جو پہلے ہی 5 اگست 2019 کے بھارت کے غیر قانونی اور یکطرفہ اقدامات کو مسترد کر چکے ہیں۔


جلیل عباس جیلانی نے کہا کہ ریاست کی بحالی، ریاستی اسمبلی کے انتخابات کا انعقاد یا ایسے ہی اقدامات کشمیری عوام کو حق خودارادیت دینے کا متبادل نہیں بن سکتے۔

انہوں نے کہا کہ یہ فیصلہ عالمی برادری کی توجہ مقبوضہ کشمیرمیں انسانی حقوق کی سنگین اور منظم خلاف ورزیوں سے نہیں ہٹا سکتا۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ 5 اگست 2019 سے ہندوستان کے یکطرفہ اور غیر قانونی اقدامات کا مقصد IIOJK کے آبادیاتی ڈھانچے اور سیاسی منظر نامے کو تبدیل کرنا ہے، جو بین الاقوامی قانون اور متعلقہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں، خاص طور پر 1957 کی قرارداد 122 کی کھلی خلاف ورزی ہے۔ پاکستان کے لیے تشویشناک بات ہے کیونکہ ان کا حتمی مقصد کشمیریوں کو اپنی سرزمین میں ایک بے اختیار کمیونٹی میں تبدیل کرنا ہے۔ امن اور بات چیت کا ماحول پیدا کرنے کے لیے ان اقدامات کو منسوخ کیا جانا چاہیے۔


انہوں نے کہا کہ پاکستان مقبوضہ کشمیر کے عوام کو ان کے ناقابل تنسیخ حق خود ارادیت کے حصول کے لیے اپنی مکمل سیاسی، سفارتی اور اخلاقی حمایت جاری رکھے گا۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ جموں و کشمیر ایک بین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ تنازعہ ہے، جو سات دہائیوں سے زیادہ عرصے سے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے ایجنڈے پر موجود ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

موٹر وہیکلز رولز 1969ء میں ترامیم کی منظوری دی گئی

اجلاس کے دوران فیصلہ کیا گیا کہ موٹر سائیکل رکشہ کو تھری ویلر کے طور پر رجسٹر کیا جائے گا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

موٹر وہیکلز رولز 1969ء میں ترامیم کی منظوری دی گئی

پنجاب کی صوبائی کابینہ نے موٹر سائیکل رکشے کو تین پہیوں والے رکشے کی قانونی حیثیت دینے کیلئے موٹر وہیکلز رولز 1969 میں ترمیم کی منظوری دی ہے۔

 منظوری نگران وزیراعلیٰ پنجاب محسن نقوی  کے زیر صدارت آج کابینہ کے ایک اجلاس میں دی گئی۔

اجلاس میں پنجاب میڈیکل اینڈ ہیلتھ انسٹی ٹیوشن ایکٹ 2003 کے تحت ڈیرہ غازی خان کارڈیالوجی انسٹی ٹیوٹ کو جدید بنانے کی بھی منظوری دی گئی۔

اجلاس کے دوران فیصلہ کیا گیا کہ موٹر سائیکل رکشہ کو تھری ویلر کے طور پر رجسٹر کیا جائے گا۔

فیصلہ کیا گیا کہ موٹر سائیکل رکشہ کی عارضی رجسٹریشن کے لیے ریجنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی کو اسپیشل رجسٹریشن اتھارٹی کا درجہ دیا جائے گا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

نگران وزیراعظم کا نئے ویزا نظام کا افتتاح

نئے ویزا نظام کے تحت بزنس مینوں کو کم سے کم وقت میں ویزوں کا اجراء کیا جائے گا،

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

نگران وزیراعظم کا نئے ویزا نظام کا افتتاح

نگران وزیراعظم انوار الحق کاکڑ نے  وزارت داخلہ میں نئے ویزا نظام کا افتتاح کر دیا۔ وزارت داخلہ کے حکام نے وزیراعظم کو نئے ویزا نظام کے بارے میں آگاہ کیا۔

وزیراعظم کو بتایا گیا کہ نئے ویزا نظام کے تحت بزنس مینوں کو کم سے کم وقت میں ویزوں کا اجراء کیا جائے گا اور اس مقصد کے لئے کم سے کم دستاویزات درکار ہوں گی۔

ویزوں کے اجراء کے عمل کو آسان بنایا گیا ہے تاکہ ملک میں سرمایہ کاری اور کاروبار کو فروغ ملے۔

وزیراعظم نے وزارت داخلہ کی طرف سے نئے ویزا نظام کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس سے کاروبار اور سرمایہ کاری کو فروغ ملے گا۔

وزیراعظم نے وزارت داخلہ میں میڈیا سنٹر کا بھی افتتاح کیا۔ وزیر داخلہ نے اس موقع پر بتایا کہ نادرا کے تعاون سے وزارت داخلہ میں میڈیا سنٹر کا قیام عمل میں لایا گیا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll