جی این این سوشل

پاکستان

پی ٹی آئی کے نئے انٹرا پارٹی انتخابات کے خلاف سماعت آج ہو گی

پی ٹی آئی کے بانی رکن اکبر ایس بابر نے انٹرا پارٹی انتخابات کو الیکشن کمیشن میں چیلنج کرتے ہوئے اس سارے عمل کو مشکوک قرار دیا

پر شائع ہوا

کی طرف سے

پی ٹی آئی کے نئے انٹرا پارٹی انتخابات کے خلاف سماعت آج ہو گی
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

اسلام آباد: الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے نئے انٹرا پارٹی انتخابات کے خلاف دائر درخواستوں کی سماعت کرے گا۔

تفصیلات کے مطابق اکبر ایس بابر، طاہر نواز، نورین فاروق سمیت 11 درخواست گزاروں نے انٹرا پارٹی انتخابات کالعدم قرار دینے سے متعلق درخواستیں دائر کی تھیں۔

واضح رہے کہ الیکشن کمیشن کے حکم پر پی ٹی آئی نے 3 دسمبر کو انٹرا پارٹی انتخابات کرائے تھے جس میں بیرسٹر گوہر علی خان بلامقابلہ چیئرمین جبکہ عمر ایوب جنرل سیکرٹری منتخب ہوئے تھے۔

اس کے علاوہ یاسمین راشد پنجاب کی صدر اور علی امین گنڈا پور خیبرپختونخوا کے صدر منتخب ہوئیں۔

پی ٹی آئی کے بانی رکن اکبر ایس بابر نے انٹرا پارٹی انتخابات کو الیکشن کمیشن میں چیلنج کرتے ہوئے اس سارے عمل کو مشکوک قرار دیا۔

دوسری جانب گزشتہ روز سابق چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے الیکشن کمیشن کے انٹرا پارٹی انتخابات دوبارہ کرانے کے فیصلے کو لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا۔

پاکستان

پی ٹی آئی کا مخصوص نشستوں پر ڈاکہ عوامی مینڈیٹ لوٹنے کےحصہ قرار

عوامی مینڈیٹ پر ڈاکہ ڈالنے والے الیکشن کمیشن کی شرمناک سہوتکاری سے مخصوص نشستوں کو غیرآئینی طور پر مینڈیٹ چوروں میں بانٹنے کامنصوبہ بنا رہے ہیں، پی ٹی آئی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پی ٹی آئی کا مخصوص نشستوں پر ڈاکہ عوامی مینڈیٹ لوٹنے کےحصہ قرار

پاکستان تحریک انصاف نے خواتین اور اقلیّتوں کی مخصوص نشستوں پر ڈاکہ عوامی مینڈیٹ لوٹنے کے شرمناک ریاستی منصوبے کا حصہ قرار دے دیا۔

اپنے بیان میں پارٹی ترجمان نے کہا ہے کہ عوامی مینڈیٹ پر کھلا ڈاکہ ڈالنے والے الیکشن کمیشن کی شرمناک سہولتکاری سے مخصوص نشستوں کو غیرآئینی طور پر مینڈیٹ چوروں میں بانٹنے کے ناقابلِ قبول منصوبے بنا رہے ہیں، دستور کا آرٹیکل 51 مخصوص نشستوں کی تقسیم کے بنیادی اصولوں کو نہایت صراحت سے بیان کرتا ہے۔

ترجمان کے مطبق خواتین اور اقلیّتوں کی مخصوص نشستوں کو جنرل سیٹوں کے تناسب سے ہی تقسیم ہونا ہے، سنّی اتحاد کونسل مرکز، پنجاب اور خیبرپختونخوا میں سب سے زیادہ نشستیں رکھنے والی پارلیمانی جماعت ہے اور مخصوص نشستوں کی فراہمی میں لیت و لعل اکثریت کو غیرقانونی طور پر جبراً اقلیت میں بدلنے کے غیرآئینی اور غیرجمہوری منصوبے کا حصہ ہے۔

ترجمان تحریک انصاف اپنے بیان میں مزید کہا کہ جمہوریت کو غیرآئینی و غیرقانونی عزائم کا اسیر بنا کر عوام کے مینڈیٹ کو پامال کرنے کی اجازت ہرگز نہیں دیں گے، جعلی فارم 47 کے ذریعے چھینی گئی قومی و پنجاب اسمبلی کی نشستیں بھی واپس لیں گے اور مخصوص نشستوں کی غیرآئینی بندربانٹ کی بھی بھرپور مزاحمت کریں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

خواتین کو بائیکس دینے کی قرارداد پنجاب اسمبلی میں پیش

حکام کے مطابق موٹر سائیکلوں کی تقسیم شفاف رائے دہی کے عمل کے ذریعے کی گئی تاکہ انصاف اور رسائی کو یقینی بنایا جا سکے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

خواتین کو بائیکس دینے کی قرارداد پنجاب اسمبلی میں پیش

لاہور: پہلی قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع کرادی گئی ہے جس میں خواتین کے لیے پنک  بائیک کے پروگرام پر نظرثانی کا معاملہ ایوان سے اٹھانے کا کہا گیا ہے۔

مسلم لیگ ن کی ایم پی اے سعدیہ تمور نے قرارداد پیش کی ، مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے گزشتہ دور حکومت میں ملازمت پیشہ خواتین کو بااختیار بنانے کے لیے پروگرام متعارف کرایا۔

 قرارداد میں خواتین اور لڑکیوں کی طرف سے چلائی جانے والی سیکڑوں اور ہزاروں  بائیکس  کا حوالہ بھی دیا گیا اور کہا گیا کہ یہ سکیم سستی بائیک کی فراہمی کے لیے ایک اچھا فیصلہ ہے۔


رپورٹس کے مطابق سابق حکومت نے موٹر بائیک سبسڈی اسکیم کی بھی نقاب کشائی کی، جس کا مقصد رعایتی نرخوں پر 3000 موٹر سائیکلیں پیش کرکے خواتین کی نقل و حرکت کو فروغ دینا تھا۔

حکام کے مطابق موٹر سائیکلوں کی تقسیم شفاف رائے دہی کے عمل کے ذریعے کی گئی تاکہ انصاف اور رسائی کو یقینی بنایا جا سکے۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

سعودی عرب کی اقوام متحدہ میں غزہ تباہی پر عالمی برادری کی خاموشی پر کڑی تنقید

ہم یہاں کن حقوق کی بات کر رہے ہیں جب کہ غزہ ر اکھ اور ملبے کا ڈھیر بن چکا ہے، سعودی وزیر خارجہ

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

سعودی عرب کی اقوام متحدہ  میں غزہ  تباہی پر عالمی برادری کی خاموشی پر کڑی تنقید

سعودی عرب نے اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کی کونسل میں غزہ کی تباہی پر عالمی برادری کی خاموشی پر کڑی تنقید کرتے ہوئے فوری جنگ بندی کا مطالبہ کیا ہے۔

عرب میڈیا کے مطابق اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے 55ویں اجلاس میں سعودی وزیر خارجہ فیصل بن فرحان نے اسرائیل کی جبری بے گھر ہونے والے لاکھوں فلسطینیوں کی آخری پناہ گاہ رفح پر حملے کی دھمکیوں پر عالمی برادری کے ضمیر کو جھنجھوڑنے کی کوشش کی ہے۔

وزیر خارجہ فیصل بن فرحان نے سوال اُٹھایا کہ ہم یہاں کن حقوق کی بات کر رہے ہیں جب کہ غزہ راکھ اور ملبے کا ڈھیر بن چکا ہے۔ عالمی برادری اس پر کیسے خاموش رہ سکتی ہے جب کہ غزہ کے لوگ بے گھر اور انسانی حقوق کی بدترین خلاف ورزیوں کا شکار ہیں۔ سعودی وزیر خارجہ نے بین الاقوامی قراردادوں کے اطلاق میں دوہرے معیار اور پسند و ناپسند رویے کو مسترد کرتے ہوئے اسرائیل کے رفح پر حملے کے  تباہ کن اثرات سے خبردار کیا۔

سعودی وزیر خارجہ نے غزہ میں جنگ بندی کے لیے سنجیدہ، منصفانہ اور جامع اقدام کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے بین الاقوامی برادری سے مطالبہ کیا کہ وہ اپنی ذمہ داریاں ادا کرے تاکہ معصوم شہریوں کی حفاظت کی جا سکے۔ غزہ سے 30 ہزار ہلاکتوں کی اطلاع ملی ہے اس کے علاوہ 20 لاکھ سے زائد افراد فاقہ کشی، تحفظ، پانی، بجلی اور ادویات جیسی بنیادی ضرورتوں کے فقدان کا شکار ہیں۔

سعودی وزیر خارجہ نے سلامتی کونسل کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ان تمام مظالم کے باوجود سلامتی کونسل اپنے اجلاسوں کو بغیر کسی نتیجے کے ختم کردیتی ہے۔ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل قرارداد نمبر 2720 پر عمل درآمد کروائے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll