جی این این سوشل

پاکستان

پی ٹی آئی کارکن طیبہ راجہ جیل سے رہا

طیبہ راجہ کو جناح ہاؤس جلاؤ گھیراؤ کے مقدمے میں گرفتار کیا گیا تھا

پر شائع ہوا

کی طرف سے

پی ٹی آئی کارکن طیبہ راجہ جیل سے رہا
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

پی ٹی آئی کارکن طیبہ راجہ کو جناح ہاؤس جلاؤ گھیراؤ کے مقدمے میں جیل سے رہا کر دیا گیا ہے۔

لاہور ہائیکورٹ کی جسٹس عالیہ نیلم کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی، درخواست گزار کی جانب سے بیرسٹر خدیجہ صدیقی اور ایڈووکیٹ مراد خان مروت عدالت میں پیش ہوئے۔

درخواست ضمانت میں مؤقف اختیار کیا گیا تھاکہ طیبہ راجہ ایف آئی آر میں نامزد نہیں تھیں، ایک ٹویٹ کی بنا پر طیبہ راجہ کو کیس میں نامزد کر دیا گیا، عدالت طیبہ راجہ کو درخواست ضمانت بعد از گرفتاری منظور کرے۔

بعدازاں عدالت نے طیبہ راجہ کی ضمانت منظور کرتے ہوئے رہا کرنے کا حکم دیدیا، جس کے بعد طیبہ راجہ کوکوٹ لکھپت جیل سے رہا کردیا گیا ہے۔

پاکستان

 سی ڈی اے کی جانب سے مرکزی سیکرٹریٹ گرانے پر پی ٹی آئی عدالت پہنچ گئی

سی ڈی اے نے تجاوزات کے خلاف  آپریشن کے دوران  پی ٹی آئی سیکرٹریٹ کے  ایک حصے کو  گرا دیا تھا اور تحریک انصاف کا دفتر بھی سیل کردیا تھا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

 سی ڈی اے کی جانب سے مرکزی سیکرٹریٹ گرانے  پر پی ٹی آئی  عدالت پہنچ گئی

اسلام آباد : پی ٹی آئی  نے اسلام آباد میں  اپنے مرکزی سیکرٹریٹ کو  سیل کیے جانے  اور  سی ڈی اے کی جانب سے  آپریشن اور توڑ پھوڑ کے خلاف  اسلام آباد ہائیکورٹ  سے  رجوع کرلیا۔ 

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی نے مرکزی سیکرٹریٹ سیل کرنے کے خلاف درخواست جنرل سیکرٹری پی ٹی آئی عمر ایوب نے شعیب شاہین اور عمیربلوچ کے ذریعے دائر کی گئی ہے ۔

درخواست  میں کیپیٹل ڈیویلپمنٹ اتھارٹی (سی ڈی اے) کی جانب  سے مرکزی سیکرٹریٹ سیل کرنے کا حکم نامہ کالعدم قرار  دینےکی استدعا کی گئی، درخواست میں سیکرٹری داخلہ، چیف کمشنر، چیئرمین سی ڈی اے  اور   آئی جی اسلام آباد کو  فریق بنایا گیا۔ 

واضح رہے  کہ دو روز قبل سی ڈی اے نے تجاوزات کے خلاف  آپریشن کے دوران  پی ٹی آئی سیکرٹریٹ کے  ایک حصے کو  گرا دیا تھا اور تحریک انصاف کا دفتر بھی سیل کردیا تھا۔

واضح رہے کہ سی ڈی اے نے تحریک انصاف کے دفتر کو سیل کرنے کا حکم نامہ بھی چسپاں کیا تھا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

داسو اور چلاس میں سیف سٹی پروجیکٹ لگانے کا فیصلہ

وزیر داخلہ محسن نقوی کی زیر صدارت داسو،چلاس سیف سٹی پروجیکٹ کے قیام کا جائزہ لینے سے متعلق اجلاس

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

داسو اور چلاس میں سیف سٹی پروجیکٹ لگانے کا فیصلہ

حکومت نے داسو اور چلاس میں سیف سٹی پروجیکٹ لگانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

وزیر داخلہ محسن نقوی کی زیر صدارت داسو،چلاس سیف سٹی پروجیکٹ کے قیام کا جائزہ لینے سے متعلق اجلاس ہوا، اجلاس میں وفاقی سیکریٹری داخلہ خرم علی آغا، چیئرمین واپڈا لیفٹیننٹ جنرل (ر) سجاد غنی شریک ہوئے۔

ان کے علاوہ چیف کمشنر اسلام آباد محمد علی رندھاوا، آئی جی اسلام آباد علی ناصر رضوی نے بھی اجلاس میں شرکت کی جب کہ ایڈیشنل چیف سیکریٹر ی ہوم، ایڈیشنل آئی جی خیبر پختونخوا اور ریجنل پولیس افسر (آر پی او) ہزارہ ویڈیو لنک کے ذریعے شریک ہوئے۔

چینی و غیر ملکی شہریوں کی فول پروف سکیورٹی یقینی بنانے کے لیے داسو،چلاس میں سیف سٹی پروجیکٹ لگانے کے سلسلے میں وفاقی وزیرداخلہ محسن نقوی نے جامع پلان طلب کرتے ہوئے خصوصی کمیٹی تشکیل دی اور اسے 15 روز میں حتمی سفارشات پیش کرنے کا حکم دیا۔

محسن نقوی نے کہا کہ وزیراعظم کی ہدایت ہے کہ داس، چلاس میں سیف سٹی کا قیام عمل میں لایا جائے، داسو، چلاس میں سیف سٹی کا قیام اسلام آباد اور لاہور کی طرح جدید تقاضوں کے مطابق عمل میں لایا جائے گا

انہوں نے کہا کہ سیف سٹی کا مقصد صرف کیمرے لگانا نہیں بلکہ ایسا نظام ہے جو جدید ٹیکنالوجی اور مصنوعی ذہانت کے ٹولز سے لیس ہو۔سیف سٹی پروجیکٹ سے اس علاقے کی نگرانی اور سکیورٹی کو یقینی بنایا جا سکے گا۔

وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ اسلام آباد پولیس سیف سٹی پروجیکٹ کے سلسلے میں ہر قسم کی معاونت فراہم کرے گی، واپڈا، خیبر پختونخوا پولیس اور اسلام آباد پولیس ملکر اس سلسلے میں جامع پلان تیار کریں۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

عازمین حج کی حفاظت کیلئے گلوبل پوزیشننگ ٹریکنگ سسٹم کا استعمال کیا جائے گا ، ڈاکٹر شاہد الرحمن

عازمین حج کے حوالے سے تفصیلات بتاتے ہوئے انہوں نے کہا اب تک انیس ہزار ایک سو اٹھارہ پاکستانی عازمین حج مکہ پہنچ چکے ہیں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

عازمین حج کی حفاظت کیلئے گلوبل پوزیشننگ ٹریکنگ سسٹم کا استعمال  کیا جائے گا ، ڈاکٹر شاہد الرحمن

سعودی عرب میں پاکستانی حج مشن مدینہ منورہ اور مکہ مکرمہ کے درمیان سفر کرنے والے عازمین حج کی نقل وحرکت پرنظر رکھنے کیلئے لائیو بس گلوبل پوزیشننگ ٹریکنگ سسٹم کا استعمال کررہا ہے ۔

 مدینہ میں انچارج روانگی سیل ڈاکٹر شاہد الرحمن نے کہا کہ اس ٹریکنگ سسٹم کا مقصد عازمین حج کو سہولت فراہم کرنا ہے اور ان کی حفاظت کرنا ہے ۔ 

ڈاکٹر شاہد الرحمان  نے بتایا کہ اس اقدام کا مقصد عازمین کیلئے مدینہ سے مکہ تک سفر کو آسان بنانا اورمسافروں کو بروقت منزل تک پہنچانا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ اس وقت عازمین حج کو مدینہ منورہ سے مکہ مکرمہ لانے کیلئے پچاسی بسیں استعمال کی جارہی ہیں۔انہوں نے کہا براہ راست نگرانی کے اس نظام سے مشن میقات کے مقام ذوالحلیفہ اور نماز وتفریح کیلئے بسوں کے رکنے کی جگہوں سمیت عازمین کے سفر پر نظر رکھ سکے گا ۔

واضح رہےکہ عازمین حج کے حوالے سے تفصیلات بتاتے ہوئے انہوں نے کہا اب تک انیس ہزار ایک سو اٹھارہ پاکستانی عازمین حج مکہ پہنچ چکے ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll