جی این این سوشل

پاکستان

ایف آئی اے سائبر ونگ کا عمران خان کے ٹوئٹر( ایکس) اکاؤنٹ کی انکوائری کا فیصلہ

ایف آئی اے سائبر ونگ ٹویٹ کی  تحقیقات کے لیے بانی تحریک انصاف سمیت تین مزید پی ٹی آئی رہنماؤں  سے پوچھ گچھ کرے گی جس میں بیرسٹر گوہر ایوب، رؤف حسن  اور عمر ایوب شامل ہیں

پر شائع ہوا

کی طرف سے

ایف آئی اے سائبر ونگ کا عمران خان کے ٹوئٹر(   ایکس)  اکاؤنٹ  کی انکوائری  کا فیصلہ
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

 

ایف آئی اے سائبر ونگ نے بانی پی ٹی آئی کے ٹویٹ کا  نوٹس لیتے ہوئے ٹویٹ کے خلاف انکوائری کا فیصلہ کر لیا۔ 
ذرائع کے مطابق ایف آئی اے سائبر ونگ نے ٹویٹ کی گئی ویڈیو کو پراپوگینڈہ قرار دیتے ہوئے تحقیقات کا آغاز کر دیا۔ تحقیقات میں اس بات کا تعین کیا جائے گا کہ جب بانی پی ٹی آئی خود  اڈیالہ جیل میں قید ہیں تو پھر   یہ  ویڈیو آیا کہ خود بانی پی ٹی آئی نے ہی  اپلوڈ کی یا  پھر ان کی اجازت سے اپلوڈ کی گئی۔ مزید یہ کہ یہ پاکستان مخالف پروپیگنڈہ کس نے بنایا ۔اور آخر کس کی اشیر آبادسے یہ چلایا گیا۔ 
ذرائع کے مطابق اگر یہ حرکت اکاؤنٹ ہولڈ ر کی  طرف سے کی گئی تو ان کے خلاف قانون حرکت میں لایا جائے گا۔ اور اگر ان کی طرف سے لا علمی کا اظہار کیا گیا تو انہیں غیر قانونی طور پر استعمال ہونے کی بناء پر اپنا اکاؤنٹ   بند کرنے کے لیے تحریری درخواست دینا ہو گی۔

 
ایف آئی اے سائبر ونگ ٹویٹ کی  تحقیقات کے لیے بانی تحریک انصاف سمیت تین مزید پی ٹی آئی رہنماؤں  سے پوچھ گچھ کرے گی جس میں بیرسٹر گوہر ایوب، رؤف حسن  اور عمر ایوب شامل ہیں۔ 
یاد رہے کہ بانی پی ٹی آ ئی کے آفیشل ٹویٹر( ایکس ) اکاؤنٹ سے کچھ دن قبل  ایک ٹویٹ کیا گیا جس میں حمود الرحمنٰ کمیشن رپورٹ کے پیش نظر  بنگلہ دیش کے بانی رہنما شیخ مجیب الر حمنٰ اور پاکستانی جنرل یحییٰ کا تقابلی جائزہ کیا گیاتھا۔

پاکستان

ایم این اے زرتاج گل قومی اسمبلی میں سنی اتحاد کونسل کی پارلیمانی لیڈر مقرر

اسپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق نے زرتاج گل کو سنی اتحاد کونسل کا پارلیمانی لیڈر مقرر کرنے کی منظوری دے دی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ایم این اے زرتاج گل قومی اسمبلی میں سنی اتحاد کونسل کی پارلیمانی لیڈر مقرر

ایم این اے زرتاج گل قومی اسمبلی میں سنی اتحاد کونسل کی پارلیمانی لیڈر بن گئیں۔

اسپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق نے زرتاج گل کو سنی اتحاد کونسل کا پارلیمانی لیڈر مقرر کرنے کی منظوری دے دی ہے، جس کا قومی اسمبلی سیکرٹریٹ سے باقاعدہ نوٹیفکیشن بھی جاری ہوگیا ہے۔

سنی اتحاد کونسل نے زرتاج گل کو اپنا پارلیمانی لیڈر نامزد کیا تھا۔ قائد حزبِ اختلاف عمر ایوب نے آٹھ جون کو قومی اسمبلی میں بطور پارلیمانی لیڈر زرتاج گل کے نام کا اعلان کیا تھا۔

عمر ایوب کا کہنا تھا کہ کہ سنی اتحاد کونسل کی جانب سے زرتاج گل پارلیمانی لیڈر ہوں گی، جبکہ زین قریشی قومی اسمبلی میں ڈپٹی پارلیمانی لیڈر ہوں گے، احمد چٹھہ بھی قومی اسمبلی میں ڈپٹی پارلیمانی لیڈر ہوں گے۔

بانی پی ٹی آئی عمران خان کی جانب سے بھی زرتاج گل کی بطور پارلیمانی لیڈر تقرری کی منظوری دی گئی تھی۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

علاقائی

بین الاقوامی نتھیاگلی سمر کالج کا افتتا ح کل کیا جائےگا

واضح رہے کہ پاکستان CERN کا ایسوسی ایٹ رکن ہے جس کے ساتھ اس کا شاندار تعاون جاری ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

بین الاقوامی نتھیاگلی سمر کالج کا افتتا ح کل کیا جائےگا

پاکستان ایٹمی توانائی کمیشن نے اعلان کیا ہے کہ طبیعات اور جدید دور کے تقاضوں کے بارے میں بین الاقوامی نتھیاگلی سمر کالج کا کل افتتاح کیا جائے گا۔

منصوبہ بندی و ترقی کے وزیر احسن اقبال اس موقع پر مہمان خصوصی ہوں گے۔سمر کالج کے افتتاح کے بعد ایٹمی تحقیق کی یورپی تنظیمCERN کے قیام کے70 سال مکمل ہونے پر پاکستان اور CERN کے درمیان اشتراک کے بارے میں خصوصی اجلاس منعقد ہوگا۔

واضح رہے کہ پاکستان CERN کا ایسوسی ایٹ رکن ہے جس کے ساتھ اس کا شاندار تعاون جاری ہے۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

جرم

عدالتیں مذہبی اقلیتوں اور معاشرے کے دیگر کمزور طبقات کے تحفظ کو یقینی بنائیں، وزیر قانون

وزیر قانون اعظم نذیر تارڑ کی طرف سے پیش کی گئی قرارداد میں کہا گیا کہ یہ ایوان اس بات پر یقین رکھتا ہے کہ زندگی کا حق سب سے زیادہ عزیز حق ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

عدالتیں مذہبی اقلیتوں اور معاشرے کے دیگر کمزور طبقات کے تحفظ کو یقینی بنائیں، وزیر قانون

اسلام آباد: قومی اسمبلی نے اتوار کو ملک کے مختلف حصوں میں موب لنچنگ کے ہولناک اور المناک واقعات کی شدید مذمت کرتے ہوئے قرارداد منظور کرلی۔

وزیر قانون اعظم نذیر تارڑ کی طرف سے پیش کی گئی قرارداد میں کہا گیا کہ یہ ایوان اس بات پر یقین رکھتا ہے کہ زندگی کا حق سب سے زیادہ عزیز حق ہے جیسا کہ پاکستان کے آئین میں درج ہے۔  انہوں  نے کہا کہ ہر شخص کے ساتھ قانون کے مطابق نمٹا جائے۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ ایوان سوات اور سرگودھا میں جرائم کے الزام میں ہمارے شہریوں کی حالیہ ہجومی تشدد کا نوٹس لیتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ بات انتہائی تشویش ناک  ہے کہ حال ہی میں ملک کے مختلف حصوں میں ایسے واقعات میں اضافہ ہوا ہے جسے کسی بھی مہذب معاشرے میں برداشت نہیں کیا جا سکتا۔

 ایوان نے وفاقی اور صوبائی حکومتوں پر زور دیا کہ وہ تمام شہریوں بشمول مذہبی اقلیتوں اور معاشرے کے دیگر کمزور طبقات کے تحفظ کو یقینی بنائیں۔

ایوان نے یہ بھی مطالبہ کیا کہ خیبرپختونخوا اور پنجاب کی صوبائی حکومتیں ان واقعات میں ملوث افراد کی شناخت، تفتیش اور متعلقہ قوانین کے تحت ان کے خلاف کارروائی کو یقینی بنانے کے لیے فوری طور پر تمام ضروری اقدامات کریں۔

قرارداد میں اس توقع کا اظہار کیا گیا کہ عدالتیں ان مقدمات میں فوری اور جلد انصاف کو یقینی بنائیں گی۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll