جی این این سوشل

پاکستان

گرمی سے نجی بنک کی اے ٹی ایم مشین غیر فعال ، ہزارو ں صارفین خوار

سوشل میڈیا صارفین نے دلچسپ کمنٹس کرتے ہوئے لکھا کہ شاید مشین کو گرم موسم میں گرمی لگ گئی ہے، جس کی وجہ سے وہ اپنے غصے کا اظہار کر رہی ہے

پر شائع ہوا

کی طرف سے

گرمی سے نجی بنک کی اے ٹی ایم مشین  غیر فعال ، ہزارو ں صارفین خوار
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

 

جہاں شدت کی گرمی نے ہر ذی روح کو پریشان کیا ہوا ہے، وہاں بے جان مشینیں بھی بے حال نظر آ رہی ہیں۔ 
سوشل میڈیا پر وائرل ایک ویڈیو میں اے ٹی ایم نے ایک صارف کو پیسے دینے کی بجائےنیچے زمین پر پھینک دیے۔ 
تفصیلات کے مطابق ایک صارف نے ایک نجی بنک کی اے ٹی ایم مشین میں رقم کے حصول کے لیے کارڈ ڈالا تو  تھوڑی دیر انتظار کے بعد اے ٹی ایم مشین نے  کارڈ باہر نکال دیا۔ اس کے ساتھ ہی پیسے اے ٹی ایم مشین کے ڈیش بورڈ میں رکنے کے بجائے حیرت انگیز طور پر پریشر سے نیچے فرش پر جا گرے۔ بظاہر ایسا لگا جیسے مشین نے غصے کا اظہار کرتے ہوئے پیسے پھینک دیے ہیں۔ 

سوشل میڈیا صارفین نے دلچسپ کمنٹس کرتے ہوئے لکھا کہ شاید مشین کو گرم موسم میں گرمی لگ گئی ہے، جس کی وجہ سے وہ اپنے غصے کا اظہار کر رہی ہے۔ 

پاکستان

اسلام آباد انتظامیہ نے پی ٹی آئی کا مرکزی دفتر  ایک بار  پھر سیل کر دیا

آفس کو فائر اینڈ لائف سیفٹی انتظامات نہ ہونے کے باعث سیل کیا گیا ، میٹرو پولیٹن کارپوریشن

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

اسلام آباد انتظامیہ نے پی ٹی آئی کا مرکزی دفتر  ایک بار  پھر سیل کر دیا

اسلام آباد انتظامیہ نے پاکستان تحریک انصاف کا مرکزی دفتر  ایک بار  پھر سیل کر دیا۔ 

تحریک انصاف کے دفتر کو میٹرو پولیٹن کارپوریشن اسلام آبادکی جانب سے سیل کیا گیا ہے۔

میٹرو پولیٹن کارپوریشن حکام کی جانب سے بھیجے گئے نوٹس میں کہا گیا ہے کہ آفس میں فائر اینڈ لائف سیفٹی انتظامات نہ ہونے کے باعث سیل کیا گیا ہے۔

اسلام آباد پولیس نے کل پی ٹی آئی کے  مرکزی سیکرٹریٹ سے سیکرٹری اطلاعات رؤف حسن سمیت دیگر کارکنان کو گرفتار کیا تھا جنہیں آج ایف آئی اے نے عدالت میں پیش کرکے ان کا ریمانڈ لیا۔ 

یاد رہے کہ 2 ماہ قبل بھی سی ڈی اے نے انسداد تجاوزات آپریشن کرتے ہوئے پی ٹی آئی سیکرٹریٹ کا ایک حصہ گراکر دفتر سیل کردیا تھا مگر پھر  اسلام آباد ہائیکورٹ کے حکم  پر سیکرٹریٹ کو دوبارہ کھولنےکی اجازت دی گئی تھی۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پی ٹی آئی رہنماء رؤف حسن 2 روزہ جسمانی ریمانڈ پر ایف آئی اے کے حوالے

عدالت نے تحریک انصاف کے دیگر کارکنان کو بھی 2 روزہ جسمانی ریمارنڈ منظور کر لیا جبکہ 2 خواتین کارکنان کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا گیا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پی ٹی آئی رہنماء رؤف حسن 2 روزہ جسمانی ریمانڈ پر ایف آئی اے کے حوالے

اسلام آباد کی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن عدالت نے تحریک انصاف کےمرکزی سیکرٹری اطلاعات رؤف حسن کو 2 روزہ جسمانی ریمانڈ پر وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) کے حوالے کر دیا۔

عدالت نے تحریک انصاف کے دیگر کارکنان کو بھی 2 روزہ جسمانی ریمارنڈ منظور کر لیا جبکہ 2 خواتین کارکنان کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا گیا۔

یاد رہے کہ آج رؤف حسن و دیگر ورکرز کو جوڈیشل مجسٹریٹ عباس شاہ کی عدالت میں پیش کیا گیا تھا۔

سماعت کے آغاز پر وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) پراسیکیوٹر نے استدعا کی ہمیں سوشل میڈیا اکاؤنٹس اور ڈیوائسز کی ریکوری کرنی ہے جس کے لیے جسمانی ریمانڈ درکار ہے۔

وکیل تحریک انصاف لطیف کھوسہ نے استدعا کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ تحریک انصاف کا آفس سیل کردیا تھا، ہائی کورٹ میں کیس ہے، فل کورٹ کے 11 ججز نے کہا کہ تحریک انصاف سیاسی جماعت تھی اور رہے گی، سپریم کورٹ نے تحریک انصاف کو سیاسی جماعت کہا ہے جبکہ حکومت تحریک انصاف کو دہشتگرد قرار دے رہی ہے۔

وکیل صفائی نے بتایا کہ ماضی میں بینظیر بھٹو، ذوالفقار بھٹو، فاطمہ جناح کو بھی غدار کہا گیا، عمران خان کو غدار کہا جارہ ہے مگر کسی کو غداری کے سرٹیفکیٹ بانٹنے کا حق نہیں، حکومت تحریک انصاف پر پابندی لگانے کی کوشش کررہی ہے۔

وکیل لطیف کھوسہ نے مزید کہا کہ رؤف حسن کا میڈیا سیل سے کوئی تعلق ہی نہیں ہے، مخصوص نشستوں کی امیدوار خواتین تھیں انہیں بھی گرفتار کرلیا گیا، تحریک انصاف پر پریشر ڈالنے کی کوشش کی جارہی ہے، اب نظریں عدلیہ پر ہیں کہ کیا انصاف کے ساتھ کھڑی ہوتی ہیں؟

اس موقع پر وکیل صفائی لطیف کھوسہ نے رؤف حسن کے خلاف درج مقدمہ کی کاپی فراہم کرنے کی استدعا کردی۔

انہوں نے کہا کہ ڈیجیٹل دہشتگردی کا ایک نیا لفظ متعارف کروا دیا گیا ہے اور ڈیجیٹل دہشتگردی کا لفظ اب تحریک انصاف پر مسلّط کرنے لگے ہیں، تحریک انصاف کے لاہور اور اسلام آباد میں سینٹرل دفاتر سیل ہیں، اب رؤف حسن کو ڈیجیٹل دہشتگردی میں ملوث کرنے کی کوشش کررہے۔

انہوں نے بتایا کہ سکیورٹی اہلکار تحریک انصاف کا تمام ریکارڈ لے گئے ہیں، الیکشن کمیشن میں آج سماعت تھی مگر ہمارے امیدواروں کا ریکارڈ لے گئے ہیں۔

اس موقع پر رؤف حسن کے خلاف درج مقدمہ کی کاپی پی ٹی آئی وکلا کو فراہم کردی گئیں۔

وکیل علی بخاری نے روسٹرم پر آکر بتایا کہ مقدمے میں تحریر شدہ وقت پر وقوعہ ہوا ہی نہیں، لطیف کھوسہ نے کہا کہ ایک ملزم کے کہنے پر مقدمے میں رؤف حسن کو نامزد کیا گیا، تحریک انصاف کے گرفتار کارکنان کی ڈیوائسزز، موبائل ایف آئی اے کے پاس ہیں، واٹر چلر بھی تحریک انصاف کے دفتر سے اٹھا کر لے گئے ہیں، ایسا معلوم ہورہا ہے جیسے بھارت نے حملہ کردیا اور سب کچھ ساتھ لے گئے۔

لطیف کھوسہ کا مزید کہنا تھا کہ رہا ہونے والے تحریک انصاف کے کارکنان کو خالی ہاتھ چھوڑا گیا ہے۔

بعد ازاں ایف آئی اے نے رؤف حسن کے 10 روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کردی جبکہ وکیل صفائی نے رؤف حسن و دیگر کارکنان کو کیس سے ڈسچارج کرنے کی استدعا کی۔

وکیل لطیف کھوسہ نے کہا کہ سوشل میڈیا پر پراپیگنڈا کرنے کا کبھی کسی سیکیورٹی ایجنسی نے تحریک انصاف کے خلاف مؤقف اختیار نہیں کیا، تحریک انصاف اور عمران خان سے زیادہ محب وطن کوئی نہیں،وکیل صفائی علی بخاری نے کہا کہ رؤف حسن کا سوشل میڈیا سے کوئی تعلق ہی نہیں، تحریک انصاف کا کیا اسٹیٹس ہے؟ سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد کوئی ایسا سوال نہیں بنتا، روف حسن کو اغوا کیا گیا، قاتلانہ حملہ بھی حال ہی میں کیا گیا۔

وکیل نے بتایا کہ رؤف حسن کینسر کے مریض رہ چکے ہیں، ایک پڑھی لکھی فیملی سے تعلق رکھتے ہیں، ایف آئی اے نے گزشتہ 24 گھنٹوں میں کیا تفتیش کی؟ کچھ بھی نہیں۔

وکیل صفائی نے اپنی بات جاری رکھتے ہوئے کہا کہ جب کوئی ثبوت ہی نہیں تو 10 دن کا ریمانڈ مانگنے کی کیا ضرورت ہے؟ کیا موبائل فون استعمال کرنا جرم ہے؟ کیا رؤف حسن نے کچھ ٹویٹ کیا؟ رؤف حسن سے کوئی بم برآمد نہیں ہونا، سوشل میڈیا کی بات ہورہی، سب کو معلوم ہے کیس کی کیا حیثیت ہے، صرف ذلیل کرنا مقصد ہے۔

بعدازاں عدالت نے محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے رؤف حسن کو 2 روزہ جسمانی ریمانڈ پر ایف آئی اے کے حوالے کر دیا، دیگر تحریک انصاف کے مرد کارکنان کا بھی 2 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کر لیا گیا جبکہ 2 خواتین کارکنان کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا گیا۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز پی ٹی آئی کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات رؤف حسن کو اسلام آباد پولیس نے تحریک انصاف کے مرکزی سیکرٹریٹ سے گرفتار کیا تھا۔

پڑھنا جاری رکھیں

تجارت

 سونے کی قیمتوں میں عالمی اور مقامی سطح پر کمی

24 قیراط سونے کی قیمت فی تولہ 500 روپے کی کمی سے 250,500 روپے ہو گئی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

 سونے کی قیمتوں میں عالمی اور مقامی سطح پر کمی

کراچی: سونے کی قیمتوں میں اتار چڑھائو کا سلسلہ جاری ہے، جس میں آج بین الاقوامی اور مقامی دونوں مارکیٹوں میں کمی دیکھی گئی ہے۔ 24 قیراط سونے کی قیمت فی تولہ 500 روپے کی کمی سے 250,500 روپے ہو گئی۔

بین الاقوامی مارکیٹ میں سونے کی قیمت فی اونس 11 ڈالر کی کمی سے 2,391 ڈالر ہو گئی ہے۔

ماہرین کے مطابق معاشی سست روی کا بدترین دور ختم ہو سکتا ہے، جس سے محفوظ اثاثوں جیسے سونے کی طلب میں کمی واقع ہوئی ہے۔

بین الاقوامی مارکیٹ کے رجحانات کا اثر پاکستان کی مقامی سونے کی مارکیٹ پر بھی پڑا۔ 24 قیراط سونے کی قیمت فی تولہ 500 روپے کی کمی سے 250,500 روپے ہو گئی، جبکہ 10 گرام سونے کی قیمت 429 روپے کی کمی سے 214,763 روپے ہو گئی۔

سونے کی مارکیٹ غیر مستحکم ہے اور قیمتوں میں قلیل مدتی اتار چڑھاؤ  جاری رہنے کا امکان ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll