جی این این سوشل

پاکستان

35 پاکستانی حجاج کا انتقال، وزارت مذہبی امور نے تصدیق کر دی

18 جون سہہ پہر 4 بجے تک مشاعر میں 9 پاکستانیوں کی اموات ہوئیں، جن میں 4 منیٰ، 3 عرفات اور 2 مزدلفہ میں اموات ہوئیں، ڈی جی حج مشن

پر شائع ہوا

کی طرف سے

35 پاکستانی حجاج کا انتقال، وزارت مذہبی امور نے تصدیق کر دی
35 پاکستانی حجاج کا انتقال، وزارت مذہبی امور نے تصدیق کر دی

وزارت مذہبی امور نے 35 پاکستانی حجاج کے انتقال کی تصدیق کر دی۔

ڈی جی حج مشن عبدالوہاب سومرو کے مطابق 18 جون سہہ پہر 4 بجے تک مشاعر میں 9 پاکستانیوں کی اموات ہوئیں، جن میں 4 منیٰ، 3 عرفات اور 2 مزدلفہ میں اموات ہوئیں۔

ڈی جی حج کاکہنا ہے کہ 20 پاکستانی حجاج کی اموات مکہ میں اور 6 مدینہ میں ہوئی، درجہ حرارت 50 ڈگری ہونے کے سبب یہ ایک مشکل حج تھا، عازمین کو بے یارومددگار چھوڑنے کے سوشل میڈیا پر الزامات بے بنیاد ہیں، ہم سعودی حکومت کی مہیا کردہ معلومات پر بھروسہ کرتے اور بعد ازاں خود بھی تصدیق کرتے ہیں۔

عبدالوہاب سومرو نے کہا ہے کہ عازمین کو بے یارو مددگار چھوڑنے کے سوشل میڈیا پر الزامات بے بنیاد ہیں، ہم سعودی حکومت کی معلومات پر بھروسہ اور بعدازاں خود بھی تصدیق کرتے ہیں۔

وزارت مذہبی امور کی جانب سے کہا گیا ہے کہ کسی بھی حاجی کی وفات ہونے پر ہمیں اطلاع دی جاتی ہے، سعودی حکومت کے نظام کے تحت ورثاء سے تدفین کی اجازت مانگی جاتی ہے، بعد میں غسل دے کر حرمین میں نمازِ جنازہ ادا کر کے تدفین کی جاتی ہے یا پھر وارثین کی خواہش کے مطابق حاجی کی میت پاکستان پہنچانے کے انتظامات کیے جاتے ہیں۔

وزارت مذہبی امور کا کہنا ہے کہ سعودی حکومت ان معاملات میں ہمارے ساتھ تعاون کرتی ہے۔

پاکستان

ایف پی سی سی آئی کا آئی پی پیز کے معاہدوں کے خلاف سپریم کورٹ جانے کا فیصلہ

آئی پی پی معاہدوں کے تحت، پاکستان اربوں روپے ان کمپنیوں کو ادا کرتا ہے جو بجلی پیدا نہیں کرتیں، گوہر اعجاز

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ایف پی سی سی آئی کا آئی پی پیز کے معاہدوں کے خلاف  سپریم کورٹ  جانے کا  فیصلہ

سابق نگران وزیر تجارت ڈاکٹر گوہر اعجاز نے کہا ہے کہ ایف پی سی سی آئی نے آئی پی پیز کے معاہدوں کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

سوشل میڈیا پلیٹ فارم ایکس پر اپنے ٹویٹ میں انہوں ںے کہا ہے کہ چیمبرز آف کامرس نے آئی پی پیز کے خلاف سپریم کورٹ جانے کا فیصلہ ہے، فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری (FPCCI) پاکستان کی کاروباری برادری کی اعلیٰ نمائندہ ہے، ایف پی سی سی آئی معزز سپریم کورٹ میں باضاطہ طور پر پٹیشن دائر کرے گی کہ وہ اس ناقابل برداشت صورتحال میں مداخلت کرے جو ہر پاکستانی کے حق زندگی کو متاثر کرتی ہے۔

گوہر اعجاز نے کہا کہ آئی پی پی معاہدوں کے تحت، پاکستان اربوں روپے ان کمپنیوں کو ادا کرتا ہے جو بجلی پیدا نہیں کرتیں، مہنگی بجلی تمام پاکستانیوں کے لیے ناقابل برداشت ہو چکی ہے, بجلی کی زیادہ قیمت شہریوں کو غربت میں دھکیل رہی ہے اور کاروباروں کو دیوالیہ کر رہی ہے.

ان کا کہنا تھا کہ 2020ء میں سابقہ عبوری توانائی کے وزیر محمد علی نے ایک تفصیلی رپورٹ لکھی تھی جس میں بتایا گیا تھا کہ حکومتی نااہلی اور آئی پی پی کی غلط بیانیوں کی وجہ سے سینکڑوں اربوں کا نقصان ہو رہا ہے، وہ رپورٹ آج تک مکمل طور پر نافذ نہیں کی گئی، کیوں؟ حکومت نے اس رپورٹ میں مطالبہ کردہ فرانزک آڈٹ کا حکم کیوں نہیں دیا؟،

ان کا کہنا تھا کہ حکومت کو فیصلہ کرنا ہوگا کہ 240 ملین پاکستانیوں کی بقا زیادہ اہم ہے یا 40 خاندانوں کے لیے یقینی منافع، ہمارا ملک تمام وسائل سے مالا مال ہے ہمیں خوشحالی کے لیے صرف بدانتظامی کا خاتمہ چاہیے، بجلی پاکستان کی صنعتوں کے لیے سب سے اہم مسئلہ ہے اور یہ براہ راست 240 ملین لوگوں کی زندگیوں کو متاثر کرتی ہے۔

سابق وزیر تجارت کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان چند برس میں ایک ہی غلطیاں دوبارہ نہیں برداشت کر سکتا صرف اس لیے کہ نئے ’’سرمایہ کاروں‘‘ کا ایک گروپ کچھ نہ کرنے کے عوض پیسہ کمانا چاہتا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

اسرائیلی پارلیمنٹ میں اقوام متحدہ کی مرکزی امدادی تنظیم کو دہشتگرد قرار دینے کا بل منظور

ایجنسی کو بند کرنے کی ایک وسیع مہم کے ذریعے یہ ایک اور کوشش کی گئی ہے، ایسے اقدامات اقوام متحدہ کی تاریخ میں پہلے کبھی نہیں دیکھے گئے، ترجمان انروا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

اسرائیلی پارلیمنٹ میں اقوام متحدہ کی مرکزی امدادی تنظیم کو دہشتگرد قرار دینے کا بل منظور

اسرائیلی پارلیمنٹ نے پیر کو ایک بل کو ابتدائی منظوری دے دی جس میں فلسطینیوں کے لیے اقوام متحدہ کی مرکزی امدادی تنظیم (انروا) کو دہشت گرد تنظیم قرار دیا گیا ہے۔

فلسطینی پناہ گزینوں کے لیے اقوام متحدہ کی ریلیف اینڈ ورکس ایجنسی (UNRWA) کے خلاف ووٹنگ اس ایجنسی کے خلاف اسرائیلی دباؤ کا تازہ ترین قدم ہے، جس پر اسرائیلی رہنماؤں نے غزہ میں اسلامی تحریک حماس کے ساتھ تعاون کرنے کا الزام لگایا ہے۔

خبر ایجنسی کے مطابق پارلیمنٹ سے منظوری کے بعد بل امور خارجہ اور ڈیفنس کمیٹی کے سامنے پیش کیا جائے۔

فلسطین، لبنان، اردن اور شام کے علاقوں میں فلسطینیوں کی تعلیم اور صحت سے متعلق کام کرنے والےادارے انروا اور اسرائیلی حکومت کے درمیان تعلقات ہمیشہ تناؤ کا شکار رہے ہیں تاہم 7 اکتوبر کے بعد اسرائیل کی غزہ میں جنگ کے بعد تعلقات کی تلخی میں مزید اضافہ ہوا ہے۔

اسرائیلی پارلیمنٹ کے اقدام پر ردعمل دیتے ہوئے انروا کے ترجمان جولیٹ ٹوما کا کہنا تھا کہ ایجنسی کو بند کرنے کی ایک وسیع مہم کے ذریعے یہ ایک اور کوشش کی گئی ہے، ایسے اقدامات اقوام متحدہ کی تاریخ میں پہلے کبھی نہیں دیکھے گئے۔

حماس اور فلسطینی اتھارٹی کی جانب سے بھی انروا کو دہشتگرد تنظیم قرار دینے کے اسرائیلی پارلیمنٹ کے اقدام کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اپیل کی گئی ہے کہ عالمی برادری انروا کو بند کرنے کی سازش کے خلاف مزاحمت کرے۔

انروا غزہ، مغربی کنارے، اردن، لبنان اور شام میں لاکھوں فلسطینیوں کو تعلیم، صحت اور امداد فراہم کرتا ہے۔ اسرائیل کے ساتھ اس کے طویل عرصے سے کشیدہ تعلقات رہے ہیں لیکن غزہ میں جنگ کے آغاز کے بعد سے تعلقات تیزی سے خراب ہوئے ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

موسم

لاہور سمیت پنجاب مختلف شہروں میں کہیں ہلکی اور کہیں موسلادھار بارش

بارش کے دوران لاہور کے کئی علاقوں میں بجلی کی فراہمی بھی متاثر ہوئی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

لاہور سمیت پنجاب مختلف شہروں میں کہیں ہلکی اور کہیں موسلادھار بارش

لاہور: پنجاب کے مختلف شہروں میں گرج چمک کے ساتھ ہونے والی بارشوں نے گرمی کا زور توڑ دیا ہے۔

لاہور کے علاقے ایبٹ روڈ، لکشمی چوک، شالیمار، گڑھی شاہو، مال روڈ، کینال روڈ، ہربنس پورہ، ساندہ، اسلام پورہ اور گردو نواح میں زوروں کی بارش ہوئی۔ بارش کے دوران لاہور کے کئی علاقوں میں بجلی کی فراہمی بھی متاثر ہوئی۔

لاہور کے علاوہ اسلام آباد، راولپنڈی، مری، جہلم، مریدکے، گوجرانوالہ، اٹک، وزیر آباد سمیت پنجاب کے دیگر متعدد شہروں میں بھی ہلکی اور تیز بارش ہوئی۔ بارشوں کے بعد موسم خوشگوار ہو گیا۔ تاہم، شدید بارشوں کے باعث سڑکیں ندی نالوں کا منظر پیش کرنے لگیں۔

دوسری جانب، نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (این ڈی ایم اے) نے بارشوں کے باعث اگلے تین دنوں کے دوران پنجاب کے اضلاع نارووال اور سیالکوٹ میں ہائی لیول فلیش فلڈنگ کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔ این ڈی ایم اے کے مطابق، جموں کے بالائی علاقوں میں بارشوں کے باعث نارووال اور سیالکوٹ کے ندی نالوں میں سیلاب آ سکتا ہے۔

این ڈی ایم اے نے صوبائی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹیز اور مقامی انتظامیہ کو چوکس رہنے اور خطرے سے دوچار آبادی کی حفاظت کے لیے ضروری اقدامات کرنے کی ہدایت کی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll