جی این این سوشل

پاکستان

آرمی چیف کا  آرمی  ایئر ڈیفنس  سینٹر کراچی کا دورہ، آئی ایس پی آر

راولپنڈی : آرمی چیف نے کہاہائی ٹیک سسٹم کی شمولیت سے درپیش خطرات سے نمٹنے میں مددملے گی۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

آرمی چیف کا  آرمی  ایئر ڈیفنس  سینٹر کراچی کا دورہ، آئی ایس پی آر
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطا بق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نےآرمی  ایئر ڈیفنس  سینٹر کراچی کا دورہ کیا  اور چینی ساختہ ایچ کیو  9پی  کی   آرمی ایئر ڈیفنس سسٹم  میں شمولیت  کی تقریب میں شرکت کی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف کو کمانڈر ایئر ڈیفنس نے ویپن سسٹم سے آگاہ کیا۔

آرمی چیف نے کہاہائی ٹیک سسٹم کی شمولیت سے درپیش خطرات سے نمٹنے میں مددملے گی۔پاک فضائیہ اورآرمی ایئر ڈیفنس کے درمیان بہتر رابطہ ملکی دفاع میں اہم ہے۔  آرمی چیف نےمزید کہا کہ  پاکستان چین اسٹریٹجک شراکت داری اور دفاعی تعاون خطے میں استحکام کا ایک عنصر ہے،  اس موقع پر چین کے اعلیٰ حکام بھی موجود تھے۔

جنگی صلاحیت میں اضافہ:

آرمی چیف کی قیادت میں  پاک فوج نےروایتی جنگی صلاحیت میں اضافہ کیا ہے،جنرل قمرجاویدباجوہ نےجنگی صلاحیتوں میں اضافےپرخصوصی توجہ دی ہے،  پاکستان نےمختصرعرصےمیں اپنی روایتی حربی صلاحیتوں کومزیدمستحکم کیا۔

ایل وائی80ویپن سسٹم ہویافتح ون گائیڈملٹی لانچ راکٹ سسٹم،  وی ٹی4ٹینک ہو یااے100راکٹ پاکستان خودانحصاری کیلئےکوشاں رہا ہے۔روایتی حربی صلاحیت مضبوط دفاع کی ضمانت دشمن کیلئےخطرےکی علامت ہے۔

ایچ کیو 9 پی ویپن سسٹم : 

ایچ کیو9پی ویپن سسٹم100کلومیٹرتک اپنےاہداف کونشانہ بناسکتاتھا، ایچ کیو9پی آرمی ائیر ڈیفنس میں شامل کیاگیا ہے، جہاز،کروز میزائل اوربی وی آرہتھیاروں سمیت مختلف  ٹارگٹس کوانگیج کرتاہے۔

ایچ کیو9پی 100کلو میٹرسےزائدرینج  کوانگیج کرسکتاہے،  ایچ کیو9پی سےپاکستان کا فضائی دفاع مزیدناقابل تسخیرہوگیاہے۔

ایل وائی 80:

ایل وائی80 ریڈی ٹوفائرجنگی جہازہے ،  ایل وائی  80ویپن سسٹم12مارچ2017کوپاک فوج میں شامل کیاگیا،  ایل وائی80کروزمیزائل اوریواے ویزکونشانہ بنانےکی اہلیت رکھتاہے،  40کلومیٹررینج کاویپن سسٹم50ہزارفٹ کی بلندی پرہدف کونشانہ بناتاہے۔ایل وائی بیک وقت6ٹارگٹس کوانگیج کرنےکی صلاحیت رکھتاہے،  سسٹم میں کمانڈوہیکل،سرویلنس وہیکل،گائیڈنس وہیکل،فائرنگ وہیکلزشامل ہیں ، رجمنٹ فارمیشنزکی تمام  مینورزکومؤثرائیرڈیفنس فراہم کرتاہے۔

اے100 ایم ایل آرایس:

اے100ایم ایل آر ایس4جنوری2019کوپاک فوج کاحصہ بنایاگیا،  اے100راکٹ پاکستانی سائنسدانوں نےخودتیارکیا، 100کلومیٹررینج کایہ راکٹ دشمن کی جنگ کیلئےتیاری کوروک سکتاہے۔

فتح1 گائیڈڈملٹی لانچ راکٹ سسٹم:

فتح1 گائیڈڈملٹی لانچ راکٹ سسٹم کاکامیاب تجربہ7جنوری2021کوکیاگیا، فتح1روایتی ہتھیاروں کودشمن کےعلاقےکےبہت اندرجاکرڈیلیورکرسکتاہے،  فتح1گائیڈڈملٹی لانچ راکٹ سسٹم پاکستان کااپناتیارزبردست اورکاری ہتھیارہے۔

وی ٹی 4 ٹینک: 

وی ٹی 4ٹینک12اکتوبر2021کو پاک فوج میں کمیشن کیاگیا، وی ٹی4ٹینک کاشماردورجدیدکےبہترین ٹینکس میں ہوتاہے،  وی ٹی4ٹینک اسٹرائیک فارمیشنزکامہلک ترین ہتھیارہے،  وی ٹی4اسٹیٹ آف آرٹ ٹیکنالوجی اورایکسپشنل فائرپاورسےلیس ہے، وی ٹی4ٹینک ایڈوانس آرمرپروٹیکشن سےلیس ہے ۔ ملی میٹرگن سےلیس آٹوٹرانسمیشن سسٹم،ڈیپ واٹرفورڈنگ آپریشن کاحامل ہے،  وی ٹی4ٹینک دشمن کیلئے ہیبت کی علامت اورپاکستان کےمضبوط دفاع کی ضمانت ہے۔

علی رضا گزشتہ ڈیڑھ سال سے ویب جرنلسٹ کے طور پر کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے پنجاب یونیورسٹی سے گریجویشن کیا ہے۔ علی رضا اس سے قبل معروف نیوز آرگنائزیشنز کے لیے کام کر چکے ہیں اور اب جی این این کے ساتھ بطور سینئر کنٹینٹ رائٹر وابستہ ہیں۔

علاقائی

وہاڑی میں نصب  قائداعظم کے مجسمے سے عینک چوری 

وہاڑی :  صوبہ پنجاب کے شہر وہاڑی میں ڈپٹی کمشنر کے دفتر میں نصب بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح کے مجسمے سے عینک چوری کر لی گئی۔

پر شائع ہوا

Asma Rafi

کی طرف سے

وہاڑی میں نصب  قائداعظم کے مجسمے سے عینک چوری 

تفصیلات کے مطابق وہاڑی میں انتہائی افسوس ناک واقعہ سامنے آیا ہے جہاں  نامعلوم چوروں نے ڈپٹی کمشنرکمپلیکس میں نصب  بانی پاکستان  قائداعظم محمدعلی جناح کے مجسمے پر لگی عینک کو بھی نہ بخشا ۔ 

ضلعی انتظامیہ کے مطابق قائداعظم محمد علی جناح کا مجسمہ ڈپٹی کمشنر کمپلیکس میں نصب ہے جہاں اس پر لگائی گئی عینک نامعلوم چور لے اُڑے ہیں  پولیس کے مطابق واقعہ گزشتہ شب پیش آیا اور ڈپٹی کمشنر دفتر میں نصب کیمروں کی مدد سے چوروں کی تلاش شروع کردی ہے۔ 

وزیراعلیٰ پنجاب سردارعثمان بزدار نے بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح کے مجسمے سے عینک چوری ہونے کے واقعے کا سخت نوٹس لیتے ہوئے  کمشنر ملتان سے رپورٹ طلب کرلی ہے۔ 

وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ قائداعظم جیسی عظیم ہستی کے مجسمے سے عینک چوری کرنا انتہائی افسوس ناک فعل ہے ۔ وزیراعلیٰ نے واقعہ میں ملوث عناصر کے خلاف قانونی کارروائی کا حکم دیتے ہوئے  ہدایت کی کہ قائد اعظم کے مجسمے پر فوری طور پر عینک لگائی جائے۔

 خیال رہے کہ اس سے قبل بہاولپور میں  ہاکی  اسٹار اولیمپئن  سمیع اللہ کے  مجسمہ سے ہاکی  اور گیندچوری کا واقعہ بھی سامنے آیا تھا۔ 

 

 

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پی ڈی ایم اسٹیئرنگ کمیٹی نے لانگ مارچ اور استعفوں سے متعلق سفارشات تیار کرلیں

اسلام آباد: شاہد خاقان عباسی کی زیر صدارت پی ڈی ایم کی اسٹیئرنگ کمیٹی کا اجلاس ہوا،جس میں لانگ مارچ اور اسمبلیوں سے استعفوں کے آپشن پر غورکیا گیا ہے۔

پر شائع ہوا

Umar Nawaz

کی طرف سے

پی ڈی ایم اسٹیئرنگ کمیٹی نے لانگ مارچ اور استعفوں سے متعلق سفارشات تیار کرلیں

ذرائع کا کہنا ہے کہ اسٹیئرنگ کمیٹی نے  لانگ مارچ اور استعفوں کی حمایت میں سفارشات تیار کی ہیں،جس میں کہا گیا ہے کہ لانگ مارچ بھی ہونا چاہیئے اور استعفے بھی دینے چاہیئں،اسٹیئرنگ کمیٹی میں اس پر اتفاق ہوگیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ آج کے اجلاس میں یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ لانگ اور مارچ استعفے کب دینے چاہئیں؟اس کا وقت اور تاریخ کا تعین پی ڈی ایم سربراہی اجلاس میں ہوگا۔

اجلاس میں لانگ مارچ سے پہلے چاروں صوبوں میں کنونشن اوراحتجاجی جلسے کرنے پر اتفاق ہواہے۔

اجلاس میں یہ بھی طے ہوا ہے کہ آج کے اجلاس کی اسٹیئرنگ کمیٹی کی سفارشات کل پی ڈی ایم کے سربراہی اجلاس میں پیش کی جائیں گی۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

وطن کے دفاع میں جان دینے والے میجر شبیر شریف شہید کا 50 واں یوم شہادت 

راولپنڈی :  مادر وطن کا دفاع کرنے والے میجر محمد شبیر شریف شہید نشان حیدر کا آج 50 واں یوم شہادت ہے۔ پاک فوج نے میجر شبیر شریف شہید کو ان کی شہادت کی برسی کے موقع پر خراج عقیدت پیش کیا ہے۔

پر شائع ہوا

Asma Rafi

کی طرف سے

وطن کے دفاع میں جان دینے والے میجر شبیر شریف شہید کا 50 واں یوم شہادت 

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے میجرشبیرشریف شہید کی بہادری اور شہادت کی عظیم قربانی پر خراج عقیدت پیش کیا گیا۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ڈی جی آئی ایس پی آر نے اپنے پیغام میں کہا  کہ میجرشبیرشریف شہیدکویوم شہادت پرخراج عقیدت پیش کرتےہیں ، میجرشبیرشریف شہید پاک فوج کےانتہائی بہادرافسرتھے، میجرشبیرشریف شہید نے1965کی جنگ میں ستارہ جرأت حاصل کیا، انہوں نے1971کی جنگ میں نشان حیدرحاصل کیا۔ 

ڈی جی آئی ایس پی آر کاکہنا تھا کہ میجرشبیرشریف کوہیڈسلیمانکی سیکٹرمیں دلیرانہ ،ہیروکا کرداراداکرنےپرنشان حیدرملا، مادروطن کی حفاظت سےزیادہ کوئی بھی فریضہ مقدس نہیں اور میجرشبیرشریف شہیدکی عظیم قربانی اس کی یاددلاتی ہے۔ 

 

میجر شبیر شریف شہید نشان حیدر 28اپریل 1943 کو ضلع گجرات کے قصبے کنجاہ میں  میں پیدا ہوئے اور لاہور کے سینٹ انتھونی اسکول اور گورنمنٹ کالج سے اپنی تعلیم مکمل کی۔ میجر شبیر شریف نے 1965ء کے پاک بھارت معرکے میں ٹروٹی کے محاذ پر دوران گشت بھارتی آرٹلری بیٹری کی گن پوزیشنوں پر حملہ کرکے اس پر کنٹرول حاصل کیا اور چار فوجیوں کو جنگی قیدی بناکر دو گنز تباہ کرکے اور ایک قبضے میں لے لی ۔ ان کی اس کامیابی سے 10 انفینٹری بریگیڈ، 6 ایف ایف، 13 لانسرز اور 14 پنجاب ریجمنٹ کو نمایاں پیش رفت کا موقع ملا اور بھارتی فوجی ٹروٹی اور جوڑیاں سے بوکھلا کر میدان چھوڑ کر بھاگنے پر مجبور ہوگئے۔

اس بہادری پر انہیں ستارہ جرأت سے نوازا گیا، انہیں دسمبر 1971ء میں بطور کمپنی کمانڈر 6 ایف ایف یہ آرڈر ملا کہ وہ اپنے جوانوں پر مشتمل کمپنی کے ہمراہ سلیمانکی ہیڈ ورکس کے قریب سبونہ بند کے اہم مقام کا کنٹرول حاصل کریں ، اس مقام پر دشمن کی آسام ریجمنٹ کی کمپنی سے زائد نفری پر مشتمل ٹیم تعینات تھی ، جسے ٹینکوں کے اسکواڈرن کی سپورٹ بھی حاصل تھی ۔

میجر شبیر شریف اگلے 3 دن اور راتیں منظم کوشش اور اعلیٰ مہارت سے دشمن کے لیے چھلاوا بنے رہے۔ انہوں نے  دشمن کے 43 فوجی جہنم واصل کرتے ہوئے 4 ٹینک تباہ کرکے حریف پر کاری ضرب لگائی۔ میجر شبیر شریف اور ان کے ساتھیوں نے دشمن کی 2 بٹالین کو سخت مزاحمت دی، اس مقام پر دوران جنگ بھارتی میجر نارائن سنگھ نے میجر شبیر شریف کو للکارا جس کا جواب میجر شبیر شریف نے دشمن کے سامنے کھڑے ہوکر دیا ۔ میجر نارائن سنگھ کے پھینکے گرنیڈ سے میجر شبیر شریف کی شرٹ آگ لگنے سے جل گئی ، دونوں کے درمیان دو بدو مقابلہ ہوا، جس میں میجر شبیر شریف نے اپنے دشمن کو زمین پر گرا کر اپنا گھٹنا اس کے سینے پر رکھ کر قابو کیا اور پھر مشین گن کا پورا برسٹ اس پر خالی کردیا۔

شبیر شریف نے 4 سے 6 دسمبر تک مسلسل دشمن کے کئی حملے ناکام بنائے، میجر شبیر شریف نے 6 دسمبر کو دشمن کے فضائی تعاون اور ٹینکوں سے کیے گئے بڑے حملےکو ناکام بناتے ہوئے اپنے سینے پر وار سہا اور وطن کی راہ میں جام شہادت نوش کیا

ان کی ہمت اور بہادری کے اعتراف میں انھیں پاکستان کے اعلیٰ ترین فوجی اعزاز نشان حیدر سے نواز گیا ۔ انھیں یہ اعزاز حاصل ہے کہ وہ نشان حیدر اور ستارہ جرات حاصل کرنے والی واحد شخصیت ہیں ۔  

میجر شبیر شریف کے چھوٹے بھائی جنرل راحیل شریف پاک فوج کے سپہ سالار کے طور پر فرائض سر انجام دے چکے ہیں ۔ جبکہ ان کے قریبی عزیز میجر عزیز بھٹی نے 1965ء کی جنگ میں دلیری کی بے مثال داستان رقم کرکے نشان حیدر حاصل کیا تھا۔

میجر شبیر شریف کے یوم شہادت کے موقع پر میں ملک بھر میں تقریبات منقعد کی جائیں گی ، شہید کی قبر پر فاتحہ خوانی بھی کی جائے گی ۔ 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll