جی این این سوشل

تجارت

سونا بھی مہنگا ہوگیا

کاروباری ہفتے میں سونے کی بلند ترین قدر 1801.75 ڈالر فی اونس اور کم ترین قدر 1750.05 ڈالر فی اونس رہی ہے ۔ 

پر شائع ہوا

کی طرف سے

فائل فوٹو
فائل فوٹو

 

کراچی : عالمی صرافہ مارکیٹ میں رواں ہفتے سونے کی قیمت میں مجموعی طور پر اضافہ دیکھا گیا ہے ۔ 

ہفتہ وار رپورٹ کے مطابق عالمی صرافہ مارکیٹ میں ایک ہفتے میں سونے کی قدر میں دس اعشاریہ اسی فی اونس بڑھی ہے جس سے سونے کی فی اونس قیمت 1768.20ڈالر ہوگئی ہے ۔ 

کاروباری ہفتے میں سونے کی بلند ترین قدر 1801.75 ڈالر فی اونس اور کم ترین قدر 1750.05 ڈالر فی اونس رہی ہے ۔ 

محمد اکرم سینیئر ویب ایڈیٹر ہیں ۔ جرنلزم میں ایم فل ڈگری رکھتے ہیں۔ مختلف ٹی وی چینلز کے ویب اور سوشل میڈیا سے واسطہ رہے ہیں اب جی این این ٹی وی سے وابستہ ہیں۔ محمد اکرم بلاگز اور آرٹیکل بھی لکھتے ہیں۔

پاکستان

کوئی ان ہاؤس تبدیلی نہیں ہورہی: پرویز خٹک

پشاور: وزیردفاع پرویز خٹک کا کہنا ہے کہ کوئی ان ہاؤس تبدیلی نہیں ہو رہی، میں وزیراعظم عمران خان کے ساتھ کھڑا ہوں اور کوئی جرات نہیں کرسکتا کہ اسمبلی میں ہماری حکومت کو گرائے۔

پر شائع ہوا

Umar Nawaz

کی طرف سے

کوئی ان ہاؤس تبدیلی نہیں ہورہی: پرویز خٹک

تفصیلات کے مطابق وزیر دفاع پرویز خٹک کا کہنا تھا کہ تنقید کے باوجود بی آر ٹی بس سروس کا منصوبہ مکمل کیا ہے،پشاور سے ڈیرہ اسماعیل خان موٹروے بنائی جارہی ہے۔

پرویز خٹک کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان کے ساتھ کھڑے ہیں ،تنقید کے ساتھ اصلاح کی بھی ضرورت ہے ،ایکسپورٹ 3 گناہ بڑھ رہی ہے ،مہنگائی ایک عالمی مسئلہ ہے جبکہ تیل کی طلب و رسد میں فرق ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ کسی کے پاس تنقید کے سوا حل ہو وہ بتائیں ،سابقہ حکمرانوں نے اربوں روپے کے قرضے لئے ہیں اورحکومت کی توجہ قرضوں کی واپسی پر بھی ہے۔

وزیر دفاع کا کہنا تھا کہ سپلائی اور ڈیمانڈ برابر ہو جائے تو مہنگائی کی صورتحال بہتر ہوگی، کیا آئی ایم ایف کے پاس جانا ہمارا قصور ہے؟، سابقہ حکمرانوں نے پاکستان کو قرض دار بنایا ہے۔ 

ان کا مزید کہنا تھا کہ اپوزیشن کون ہوتی ہے مجھے نوشہرہ آنے سے روکنے والی، میں نے نہ کوئی جلسہ کیا ہے  نہ انتخابی مہم چلائی، اپوزیشن سے کہتا ہوں مقابلہ کریں۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

متحدہ عرب امارات کے اعلیٰ سکیورٹی عہدیدار آج ایران پہنچیں گئے

رواں برس اپریل میں سعودی عرب نے بھی ایران کے ساتھ  بات چیت کا آغاز کیا تھا۔

پر شائع ہوا

Muhammad Akram

کی طرف سے

متحدہ عرب امارات کے اعلیٰ سکیورٹی عہدیدار آج ایران پہنچیں گئے

متحدہ عرب امارات کے قومی سلامتی امور کے اعلیٰ سطحی مشیر شیخ طحنون بن زائد النہیان آج تہران کے دورے پر ایران پہنچیں گے۔

رپورٹ کے مطابق ایرانی سکیورٹی حکام کے ساتھ ملاقات کے دوران اعلیٰ سکیورٹی عہدیدار  دوطرفہ تعلقات کے فروغ پر بات چیت کریں گے۔ متحدہ عرب امارات کے کسی عہدیدار کا یہ 2016 کے بعد سے ایران کے ساتھ یہ پہلا دورہ ہوگا۔

روئٹرز کے مطابق شام کے وزیر خارجہ فیصل مقداد بھی دو روزہ دورے کے لیے ایران پہنچ چکے ہیں۔ ایرانی میڈیا کے مطابق شیخ طحنون کی ایرانی سپریم نیشنل سکیورٹی کونسل کے سیکریٹری جنرل علی شامخانی اور دیگر اعلیٰ سطحی اہلکاروں سے ملاقات متوقع ہے۔ شامخانی اور شیخ طحنون دوطرفہ تعلقات کو وسعت دینے پر تبادلہ خیال کریں گے۔

متحدہ عرب امارات کے صدر کے سفارتی مشیر کا گذشتہ منگل کو کہنا تھا کہ  تہران کے ساتھ تعلقات کو بہتر بنانے کے لیے ایک وفد جلد ایران بھیجا جائے گا۔
یاد رہے رواں برس اپریل میں سعودی عرب نے بھی ایران کے ساتھ  بات چیت کا آغاز کیا تھا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

اسمبلیوں کا گھیراؤ کرنا پڑا تو کریں گے: ایم کیو ایم

کراچی: ایم کیو ایم راہنماؤں کا کہنا ہے کہ بلدیاتی نظام بحال کرنے کے لیےہم احتجاج کو بڑھائیں گے، اگر اسمبلیوں کا گھیراو کرنا پڑا تو کریں گے۔

پر شائع ہوا

Umar Nawaz

کی طرف سے

اسمبلیوں کا گھیراؤ کرنا پڑا تو کریں گے: ایم کیو ایم

تفصیلات کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے وفد نے کراچی میں واقع مسلم لیگ ہاوس کارساز کا دورہ کیا، جہاں دونوں جماعتوں کی جانب سے کراچی کے حقوق کے حوالے سے بات کی گئی ہے۔

ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایم کیوم رہنما عامر خان کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کہتی ہے کہ وفاق میں اپوزیشن سے کسی بل پر مشاورت نہیں کی جاتی، صوبے میں پیپلزپارٹی اس کے برعکس کرتی ہے،کسی سے مشاورت نہیں کی اور جعلی اور کھوٹی اکثریت سے بل پاس کرادیا۔ 

ان کا کہنا تھا کہ مئیر کے پاس جو بچے کچے سروسز ٹیکس، تعلیمی اداروں یا اسپتال کے اختیارات تھے، وہ بھی چھین لیے، اب کے ایم سی نام کا کے ایم سی رہ گیا ہے، یہ جھوٹ بولتے ہیں کہ مشرف دور کا بلدیاتی نظام بحال کررہے ہیں، ہم احتجاج کررہے ہیں، ہم اس احتجاج کو بڑھائیں گے، اگر اسمبلیوں کا گھیراو کرنا پڑا تو کریں گے۔

ایم کیو ایم رہنما وسیم اختر نے کہا کہ ایڈمنسٹریٹر کو چاہیے وہ آئیں بائیں شائیں نہ کریں، یہ باتیں پرانی ہوگئیں، مرتضی وہاب کو چاہیے کہ کے ایم سی کو اختیارات واپس دلوائیں، وہ جہاں بیٹھے ہیں ان کے پاس طاقت ہے، مراد علی شاہ کے خاص ہیں وہ یہ ڈرامے نہ کریں، اس شہر کے لیے کچھ کریں۔

سابق گورنر سندھ محمد زبیر کا کہنا تھا کہ فنڈز کی تقسیم این ایف سی کی بنیاد پر ہونا چاہیے، لیکن نیت صاف ہونی چاہیے، ن لیگ کے دور حکومت میں فیڈرل ٹیکس ریونیو ڈبل ہوا تو صوبے کو زیادہ پیسہ ملا، اندرون سندھ میں پیسہ کہاں لگ رہا ہے؟ اگر کراچی کے ساتھ زیادتی ہورہی ہے تو کہیں تو پیسہ لگے۔

ن لیگی رہنما مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کا وفاق اور صوبے میں الگ الگ چہرہ ہے، وفاق میں یہ فیڈریشن کی بات کرتے ہیں صوبے میں یہ حقوق سلب کرتے ہیں۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll