جی این این سوشل

پاکستان

پیٹرولیم ڈیلرز کی ہڑتال ، آئل ٹینکرز ایسوسی ایشن کا لاتعلقی کا اعلان

لاہور: صدر میر شمس شہوانی کا کہنا ہے کہ ہزار آئل ٹینکرز ملک بھر میں سپلائی جاری رکھیں گے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

پیٹرولیم ڈیلرز کی ہڑتال ، آئل ٹینکرز ایسوسی ایشن کا لاتعلقی کا اعلان
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

تفصیلات کے مطابق پیٹرولیم ڈیلرز کی ہڑتال کے اعلان پر آئل ٹینکرز ایسوسی ایشن نے لاتعلقی کا اظہار کردیا۔صدر میر شمس شہوانی کا کہنا ہے کہ  26 ہزار آئل ٹینکرز ملک بھر میں سپلائی جاری رکھیں گے۔ سب سے بڑا نیٹ ورک پی ایس او کا ہے 10ہزار سے زاہد ٹینکرز سپلائی جاری رکھیں گا۔ پی ایس او کے پٹرول اسٹیشنز پر پٹرولیم مصنوعات کی بلا تعطل فراہمی جاری رہے گی۔

قبل ازیں پٹرولیم ڈیلرز ایسوسی نے کل صبح 6 بجے سے ملک بھر میں پٹرول سپلائی بند کرنے کا اعلان کردیا ہے۔

پٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن کے عہدیداران نے پریس کانفرنس کی جس میں انہوں نے کہا کہ  مطالبات کی منظوری تک ہڑتال جاری رہے گی،  پٹرول پر کمیشن کی موجودہ شرح پر کام کرنا ممکن نہیں رہا، حکومت پٹرول پر کمیشن کی شرح 6 فیصد کرے۔ وزیر توانائی حماد اظہر نے مطالبات تسلیم کئے لیکن عملی اقدام سامنے نہیں آیا،  وعدے کے مطابق کمیشن کی شرح بڑھانے کی سمری تیار نہیں کی گئی۔

خیال رہے کہ پٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشننے مارجن 6 فیصد بڑھوانے کیلئے 25 نومبر سے ہڑتال کا اعلان کررکھا ہے۔ ترجمان کا کہنا تھاکہ 25 نومبر کو کشمیر، گلگت بلتستان سمیت ملک بھر میں تمام پیٹرول پمپس بند رہیں گے۔

علی رضا گزشتہ ڈیڑھ سال سے ویب جرنلسٹ کے طور پر کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے پنجاب یونیورسٹی سے گریجویشن کیا ہے۔ علی رضا اس سے قبل معروف نیوز آرگنائزیشنز کے لیے کام کر چکے ہیں اور اب جی این این کے ساتھ بطور سینئر کنٹینٹ رائٹر وابستہ ہیں۔

پاکستان

صدارتی نظام کیخلاف مسلم لیگ ن کی قرارداد جمع

صدارتی نظام کے خلاف قومی اسمبلی سیکریٹریٹ میں جمع کروائی قرارداد میں کہا گیا ہے کہ وفاقی پارلیمانی نظام سیاسی نظام کی اساس ہے۔

پر شائع ہوا

Shehroz Azhar

کی طرف سے

صدارتی نظام کیخلاف مسلم لیگ ن کی قرارداد جمع

پاکستان مسلم لیگ ن نے ملک میں صدارتی نظام کے خلاف قومی اسمبلی سیکریٹریٹ میں قرارداد جمع کروا دی۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وزیرداخلہ احسن اقبال کی جانب سے صدارتی نظام کے خلاف قومی اسمبلی سیکریٹریٹ میں جمع کروائی قرارداد میں کہا گیا ہے کہ وفاقی پارلیمانی نظام سیاسی نظام کی اساس ہے۔

وفاق پاکستان کی سالمیت اور مضبوطی کا انحصار پارلیمانی نظام کی مضبوطی میں ہے،  تمام جمہوری قوتیں مسائل کا حل آئین پاکستان کی سربلندی اور حکمرانی اور عمل درآمد پر سمجھتی ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

تجارت

افغانستان سے چلغوزے کی درآمد پر عائد 45 فیصد ریگولیٹری ڈیوٹی ختم کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد: ای سی سی اجلاس میں افغانستان سے چلغوزے کی درآمد پر عائد 45 فیصد ریگولیٹری ڈیوٹی ختم کرنے کا فیصلہ کرلیا۔

پر شائع ہوا

Ali Raza

کی طرف سے

افغانستان سے چلغوزے کی درآمد پر عائد 45 فیصد ریگولیٹری ڈیوٹی ختم کرنے کا فیصلہ

تفصیلات کے مطابق  وزیر خزانہ شوکت ترین کی زیر صدارت اقتصادی رابطہ کمیٹی کا ورچوئلی اجلاس ہوا،  ای سی سی نے افغانستان کو مخصوص مصنوعات کی برآمد کی اجازت دیدی ہے۔

ای سی سی کا  افغانستان سے چلغوزے کی درآمد پر عائد 45 فیصد ریگولیٹری ڈیوٹی ختم کرنے کا فیصلہ، کامیاب پاکستان پروگرام کی مانیٹرنگ کیلئے تھرڈ پارٹی کی خدمات لینے کی منظوری دیدی،  داسو ہائیڈرو منصوبے پر ہلاک ہونے والے چینی شہریوں کی فیملیز کیلئے معاوضے کی منظوری دیدی،لواحقین کو سرکاری طور پر 11.6 ملین ڈالر بطور خیرسگالی معاوضہ ادا کیا جائیگا۔

ای سی سی اعلامیہ  کے مطابق ربی سیزن کیلئے یوریا کھاد کی ضروریات کا بھی جائزہ لیا گیا، ایس این جی پی ایل سے وابستہ فاطمہ فرٹیلائزر اور ایگری ٹیک کو مارچ تک گیس کی فراہمی کی منظوری دیدی ، اس عرصے کے دوران پلانٹس کو 839 روپے فی ایم ایم بی ٹی یو پر گیس ملے گی۔ ای سی سی نے 5 جی سپیکٹرم کیلئے مشاورتی کمیٹی قائم کرنے کی بھی منظوری دیدی ہے۔

ای سی سی نے پاکستان موبائل کمیونیکیشن لمیٹڈ کے سیلولر لائسنس کی رینیوئل کی بھی منظوری دیدی، ای سی سی اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ  نئی مردم و خانہ شماری کیلئے 5 ارب روپے کی گرانٹ کی منظوری دیدی ، ایف بی آر کیلئے 4 ارب روپے کے فنڈز کی منظوری بھی دیدی۔اسلام آباد انتظامیہ کے منضوبوں کیلئے 7.85 کروڑ کی منظوری، ایف سی بلوچستان کے ہیلی کاپٹر کی مرمت کیلئے 6 کروڑ کی منظوری، ایف سی ہیڈکوارٹرز نارتھ کے ہیلی کاپٹر کے پرزہ جات کیلئے 30 لاکھ کی منظوری بھی دیدی گئی۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

کورونا کی ذیادہ شرح والے تعلیمی اداروں کو ایک ہفتے کیلئے بند کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد: این سی او سی نے کورونا کی ذیادہ شرح والے تعلیمی اداروں کو ایک ہفتے کیلئے بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

پر شائع ہوا

Ali Raza

کی طرف سے

کورونا کی ذیادہ شرح والے تعلیمی اداروں کو ایک ہفتے کیلئے بند کرنے کا فیصلہ

تفصیلات کے مطا بق نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی ) نے کورونا کی ذیادہ شرح والے تعلیمی اداروں کو ایک ہفتے کیلئے بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔صوبائی تعلیم اور صحت کے محکمے تعلیمی ادارے بند کرنے کا فیصلہ کریں گے۔ صوبائی تعلیم اور صحت کے محکمے تعلیمی ادارے بند کرنے کے لیے کیسز کی شرح کا تعین کریں گے۔12 سال سے زائد عمر کے طلبا کو کورونا ویکسین لگانے کیلئے خصوصی مہم چلائی جائے گی۔

این سی او سی کا کہنا ہے کہ تعلیمی اداروں میں آئندہ دو ہفتوں کیئے بڑے پیمانے پر کورونا ٹیسٹنگ کی جائے گی۔ ڈیٹا سے ویکسینیشن لیول اور انفیکشن ریٹ کا تعلق سامنے آئے گا۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll