جی این این سوشل

کھیل

کامن ویلتھ گیمز میں قومی ہاکی ٹیم کو آسٹریلیا کے ہاتھوں شکست

برمنگھم : کامن ویلتھ گیمز کے ہاکی ایونٹ میں پاکستان ہاکی ٹیم میڈلز کی دوڑ سے آؤٹ ہوگئی۔ پاکستان کو آخری گروپ میچ میں آسٹریلیا نے بدترین  شکست  سے دوچار کیا ۔ 

پر شائع ہوا

کی طرف سے

کامن ویلتھ گیمز میں قومی ہاکی ٹیم کو آسٹریلیا کے ہاتھوں شکست
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

یونیورسٹی آف برمنگھم ہاکی سینٹر میں کھیلے گئے میچ کے آغاز میں قومی کھلاڑی کافی جارح مزاج نظر آئے لیکن بعد میں آسٹریلوی کھلاڑی گول پر گول کرتے رہے۔

 پاکستان ہاکی ٹیم  کو کینگروز کے ہاتھوں میچ میں 0-7 سے شکست کا سامنا کرنا پڑا ۔ آسٹریلیا کے ہاتھوں شکست کے بعد قومی ہاکی ٹیم گروپ میں چوتھے نمبر پر رہی۔ 

ٹورنامنٹ میں اب ساتویں پوزیشن کیلئے کینیڈا سے مقابلہ ہوگا۔

پاکستان

اگلے یوم آزادی تک ہم حقیقی آزادی لے چکے ہونگے، عمران خان

چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ میں امریکا مخالف نہیں ہوں، امریکا سے دوستی چاہتا ہوں غلامی نہیں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

اگلے یوم آزادی تک ہم حقیقی آزادی لے چکے ہونگے، عمران خان

چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے ملک بھر میں جلسوں کا اعلان کردیا۔ انہوں نے کہا میں نے عوام میں نکلنے کا فیصلہ کیا ہے، عدلیہ کو تقسیم کرنے اور ملک کی سب سے بڑی جماعت اور فوج کو آمنے سامنے کھڑا کرنے کی سازش کی جارہی ہے۔

لاہور کے ہاکی اسٹیڈیم میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا حقیقی آزادی کی جنگ فیصلہ کن مرحلے میں ہے، پارٹی کے تمام عہدیداروں کو پیغام پہنچادیا ہے کہ تیاری کریں، نوجوانوں کی ٹائیگر فورس بنارہا ہوں جس میں خواتین بھی ہوں گی۔

عمران خان نے کہا راولپنڈی، کراچی، اسلام آباد، سکھر، حیدرآباد، مردان اٹک، ایبٹ آباد، ملتان بہاولپور، سرگودھا، جہلم ، گجرات، فیصل آباد، گجرانوالہ اور کوئٹہ میں جلسے کرینگے۔

انہوں نے کہا مجھے نکالنے والوں کا خیال تھا کہ لوگ مٹھائیاں بانٹیں گے لیکن قوم میرے حق میں سڑکوں پر نکل آئی ہے، اگلے یوم آزادی تک ہم اپنی حقیقی آزادی لے چکے ہونگے، عمران خان نے کہا میں قوم کو اب ہونے والی سازش کا بتاؤں گا اور یہ بھی بتاؤں گا کہ اس سازش کو کیسے بے نقاب کرنا ہے۔

انہوں نے کہا جو سازش کررہے ہیں سن لیں کہ عمران خان کوئی ڈیل نہیں کرے گا، ان کا پلان ہے کہ کسی طرح عمران خان کو نا اہل کرو، بددیانت الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ نے انکی پوری مدد کی، انہوں نے میرے خلاف کیسز بنانے کا پلان بنایا ہے۔

انہوں نے کہا مجھے ڈس کو الیفائی کرکے نواز شریف کو ستمبر کے آخر میں واپس لانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ نوازشریف فکر نہ کرو میں تمہارا ایسا استقبال کروں گا کہ تم یاد رکھو گے۔

انہوں نے کہا ایک اور خطرناک گیم چل رہی ہے کہ کسی طرح تحریک انصاف اور فوج کے بیچ میں لڑائی کرائی جائے۔ ملک کی سب سے بڑی جماعت کا فوج سے آمنا سامنا کرانے کا نقصان ملک کو ہوتا ہے۔

انہوں نے کہا یہ کیسے ہوسکتا ہے کہ میں چاہوں گا کہ میرے ملک کی فوج کمزور ہو۔ یہاں اتنی بیرونی سازشیں ہیں، دشمن ہمارے تین ٹکڑے کرنا چاہتا ہے اس لیے میں کبھی نہیں چاہوں گا کہ فوج کمزور ہو۔

انہوں نے کہا 25 مئی کو انہوں نے لوگوں کو گھروں میں گھس گھس کر ڈرایا اور سمجھے قوم سہم گئی ہے لیکن جب پنجاب کا ضمنی الیکشن آیا تو قوم نے انکی پھینٹی لگائی۔ کبھی ضمنی الیکشن میں قوم اس طرح نہیں نکلی۔

عمران خان نے کہا آزادی آسانی سے نہیں ملتی، اسکے لیے قربانیاں دینی پڑتی ہیں، مجھے پتا ہے میری قوم قربانیاں دینے کیلئے تیار ہے۔

انہوں نے کہا جب تک اس امپورٹڈ حکومت کو فارغ اور الیکشن نہیں کراتے ہم اپنی جدوجہد جاری رکھیں گے، اپنی قوم کو اکٹھا کروں گا، ہم ملکر اس ملک کے قرضے اتاریں گے۔

انہوں نے کہا میں امریکا مخالف نہیں ہوں، امریکا سے دوستی چاہتا ہوں غلامی نہیں، میں اپنے لوگوں کے فائدے کیلئے روس گیا تھا، یہ ہوتے کون ہیں پوچھنے والے کہ میں روس کیوں گیا؟ کیا میں انکا غلام ہوں، میں چاہتا تھا ہم روس سے سستا تیل اور 20 لاکھ ٹن گندم خریدیں، امپورٹڈ حکومت جب آئی ہم روس سے سستا تیل خریدنے کی بات کرچکے تھے۔

انہوں نے کہا ہمارے حکمران امریکا کی ٹانگوں میں لیٹے ہوئے ہیں۔ ان میں اتنی جرات نہیں تھی کہ کہتے یہ ہمارے عوام کی ضرورت ہے۔

عمران خان نے کہا قائداعظم نے کہا تھا مسلمان ہمیشہ آزادی کیلئے جدوجہد کرتا ہے، قائداعظم نے کہا انگریزکی غلامی سے نکل کر ہندوؤں کی غلامی میں نہیں جانا چاہتے، قائد اعظم نے ہمیں غلامی سے آزادی دلوائی۔

عمران خان نے کہا آج آپ لوگوں کو حقیقی آزادی کا روڈ میپ دینا ہے، وہ ملک خوش قسمت ہے جس میں جنونی باشعور نوجوان ہوتے ہیں اور جس کی مائیں، بہنیں آزادی کا جذبہ رکھتی ہیں۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا 26 سال سے میری کردار کشی کی جارہی ہے، اللہ کی شان دیکھیں آج بڑی تعداد میں لوگ آئے اور حوصلہ افزائی کررہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ قائد اعطم محمد علی جناح نے ہمیں غلامی سے آزادی دلوائی، جو قوم غلام ہوتی ہے کبھی اسکی پرواز اوپر نہیں ہوتی، خوف بھی ایک غلامی ہوتی ہے، انسان خوف کی وجہ سے اپنے ضمیر کا سودا کرتا ہے۔

عمران خان نے کہا خوف کا بت انسان کو غلام بنادیتا ہے، کبھی بھی ایک غلام قوم اوپر نہیں آسکتی، ہم ہاتھ پھیلا کر دنیا کے سامنے کیوں پھرتے ہیں؟۔

عمران خان نے کہا جو قوم غلام ہوتی ہے کبھی اس کی پرواز اوپر نہیں ہوتی، انسان جب گرتا ہے تو جانوروں سے بھی نیچے چلا جاتا ہے، مجھے بدنام کرنے کیلئے ہرقسم کے حربے استعمال کیے گئے۔

انہوں نے کہا 26 سال سے یہ لوگ میری کردار کشی کر رہے ہیں، پڑھے لکھے اور ایماندار لوگ کہتے تھے سیاست بڑی گندی ہے، میں انصاف اور خودداری کیلئے سیاست میں آیا۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا تلوار سے انقلاب نہیں آیا تھا، فکری انقلاب ذہنوں سے آیا تھا، ہمارے لوگوں کو غلط فہمی ہے کہ تلوار سے اسلام پھیلا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

شمالی وزیرستان: سڑک کنارے نصب بم دھماکے میں 3 موٹر سائیکل سوار جاں بحق

جس میں 3 موٹر سائیکل سوار جاں بحق ہوگئے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

شمالی وزیرستان: سڑک کنارے نصب بم دھماکے میں 3 موٹر سائیکل سوار جاں بحق

شمالی وزیرستان میں سڑک کنارے نصب بم دھماکے میں 3 موٹر سائیکل سوار جاں بحق ہوگئے۔

ضلعی انتظامیہ کے مطابق یہ واقعہ میر علی میں پیش آیا جس میں 3 موٹر سائیکل سوار جاں بحق ہوگئے، واقعے میں 5 افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔

دھماکے کے بعد سکیورٹی فورسز  نے علاقےکا گھیراؤ کرلیا ہے اور واقعےکی تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

تجارت

آئی ایم ایف قرض کی قسط رواں ماہ کے آخر میں ملنے کا امکان

 پاکستان کو اگست کے آخر میں  آئی ایم ایف قرض پروگرام کی قسط ملنے کا امکان ہے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

آئی ایم ایف قرض کی قسط رواں ماہ کے آخر میں ملنے کا امکان

 

پاکستان کو قرض پروگرام کی قسط جاری کرنےکیلئے آئی ایم ایف ایگزیکٹو بورڈ اجلاس 29 اگست کوطلب کر لیا گیا۔ اکتیس اگست کودفتری اوقات کارختم ہونے سےپہلے رقم پاکستان کےاکاؤنٹ میں منتقل ہونے کاامکان ہے۔

وزیرخزانہ مفتاح اسماعیل کہتے ہیں کہ اظہارآمادگی کالیٹر جلد دستخط کرکے آئی ایم ایف کو بھیج دیں گے۔ ان کا کہنا ہے کہ گزشتہ ماہ دستخط کیے گئے اسٹاف لیول معاہدے اور اقتصادی اور مالیاتی پالیسیوں کی میمورینڈم کے تحت پروگرام کی بحالی کے لیے آئی ایم ایف کی جانب سے اظہارِ آمادگی کا خط موصول ہو گیا ہے۔ یہ اقدام 4 دوست ممالک کی جانب سے 4 بلین ڈالر کی  مالی اعانت کی تکمیل کے بعد کیا گیا ہے۔ 

یاد رہے کہ آئی ایم ایف نے پاکستان کو ایک ارب 17کروڑ ڈالر  کی قسط ادا کرنی ہے جس کے لیے پاکستان عالمی مالیاتی فنڈ کی پیشگی شرائط بھی پوری کر چکا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll