جی این این سوشل

پاکستان

حکومت اقلیتوں کے حقوق کے تحفظ ، فلاح و بہبود کیلئے  تمام تر کوششیں کرے گی: صدرمملکت

اسلام آباد: صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے پاکستان کی ترقی میں اقلیتوں کی گرانقدر خدمات کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت ان کے حقوق کے تحفظ اور فلاح و بہبود کے لیے تمام تر کوششیں کرے گی۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

حکومت اقلیتوں کے حقوق کے تحفظ ، فلاح و بہبود کیلئے  تمام تر کوششیں کرے گی: صدرمملکت
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

 اقلیتوں کے دن کے موقع پر اپنے پیغام میں صدر مملکت عارف علوی  نے کہا کہ 11 اگست پاکستان میں اقلیتوں کے دن کے طور پر منایا جاتا ہے تاکہ پاکستان کی ترقی میں ہماری اقلیتوں کی گرانقدر شراکت کا اعتراف کیا جا سکے اور بطور قوم ان کے حقوق کے تحفظ کے لیے ہمارے عزم کا اعادہ کیا جا سکے۔ 

انہوں نے کہا کہ یہ دن ہمیں بابائے قوم قائداعظم محمد علی جناح کے 1948 میں کیے گئے اس وعدے کی یاد دلاتا ہے کہ اس عظیم قوم کے ہر فرد کو اس کے مذہبی عقیدے سے قطع نظر مساوی حقوق اور آزادی حاصل ہوگی۔

ان کاکہنا تھا کہ یہ دیکھ کر خوشی ہوتی ہے کہ پاکستان میں اقلیتیں زندگی کے تمام شعبوں میں فعال کردار ادا کر رہی ہیں اور پاکستان میں ان کے اپنے مذہب پر عمل کرنے کے حق کا تحفظ کیا گیا ہے۔ ان کے حقوق ہمارے آئین میں درج ہیں۔ اسلام اقلیتوں کے حقوق کے تحفظ پر بھی زور دیتا ہے۔ 

صدر مملکت نے کہا کہ حکومت پاکستان ملک میں اقلیتوں کی سہولت کے لیے مسلسل کوششیں کر رہی ہے۔ وفاقی اور صوبائی اسمبلیوں میں ان کی نمائندگی ہے۔اس کے علاوہ انہیں تمام سرکاری خدمات میں ملازمت کا کوٹہ بھی مختص کیا گیا ہے۔ اسی طرح یہ حکومت کے لیے ایک سمت متعین کرتی ہے کہ وہ اپنی پالیسیوں کو ہمہ جہت سماجی و اقتصادی ترقی کے مقصد کے حصول اور قوم کی تمام برادریوں کے لیے برابری کا میدان فراہم کرنے کے لیے ترتیب دے۔

 صدر مملکت نے خاص طور پر تعلیم، صحت اور سماجی بہبود کے شعبوں میں اقلیتوں کے کردار کو سراہتے ہوئے کہا کہ پاکستان بنیادی حقوق اور پالیسی کے اصولوں کے ذریعے آئین میں درج اپنی ذمہ داریوں پر قائم ہے۔

انہوں نے کہا کہ درحقیقت پاکستان میں اقلیتیں ہمارے سماجی و قومی ڈھانچے کا ایک اٹوٹ حصہ ہیں اور اس دن میں تمام اقلیتی برادریوں کو یقین دلاتا ہوں کہ حکومت ان کے حقوق کے تحفظ اور ان کی فلاح و بہبود کے لیے تمام تر کوششیں کرے گی۔

 صدر مملکت نے کہا کہ مضبوط اور خوشحال پاکستان کے لیے آپس میں محبت، بھائی چارے اور اتحاد کے جذبے کو فروغ دینا ہماری مشترکہ ذمہ داری ہے۔ 

جرم

اسلام آباد : ڈائریکٹر سیف سٹی کی پھندا لگی لاش برآمد ، آئی جی کا نوٹس 

اسلام آباد : اسلام آباد پولیس میں گریڈ 19 کے افسر اور ڈائریکٹر سیف سٹی عبدالقدیر کی پھندا لگی لاش ملنے کا آئی جی نے نوٹس لیا ہے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

اسلام آباد : ڈائریکٹر سیف سٹی کی پھندا لگی لاش برآمد ، آئی جی کا نوٹس 

جی این این کے مطابق اسلام آباد پولیس کی جانب سے جاری کیے گئے بیان کے مطابق تھانہ کھنہ کے علاقہ میں ڈائریکٹر سسٹم سیف سٹی کی پھندا لگی لاش برآمد کی گئی ،  عبدالقدیر این ٹی سی  کے  ملازم تھے اورڈیپوٹیشن پر اسلام آباد پولیس میں خدمات سرانجام دے رہے تھے، مزید جو بھی حقائق سامنے آئیں گے وہ شیئر کیے جائیں گے۔ 

اسلام آباد پولیس کے سربراہ نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے ڈی آئی جی آپریشنز کو کیس کی ہر پہلو سے شفاف تحقیقات کرنے کے احکامات جاری کیے ہیں۔

 

اسلام آباد پولیس نے بیان میں لواحقین سے  ہمدردی کا اظہار کیا ہے ۔ پولیس کی جانب سے  واقعے کی تحقیقات کی جا رہی ہے۔ ابتدائی بیان میں کہا گیا کہ واقعہ خودکشی کا لگتا ہے  ۔  سینیئر پولیس افسران اور فرانزک ٹیموں نے موقع پر پہنچ کر شواہد اکٹھے کیے اور لاش کو پوسٹ مارٹم کے لیے ہسپتال منتقل کردیا گیاہے ۔ 

واضح  رہے کہ اسلام آباد میں سیف سٹی سسٹم کے تحت سینکڑوں کیمرے شہر کی سڑکوں اور پرہجوم جہگوں پر نصب ہیں جن سے مانیٹرنگ کی جاتی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

وزیراعظم کی ملالہ یوسفزئی سے ملاقات، تعلیم نسواں پر تبادلہ خیال

نیویارک : وزیراعظم محمد شہباز شریف سے نوبل انعام یافتہ ملالہ فنڈ کی شریک بانی ملالہ یوسفزئی نے ملاقات کی۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

وزیراعظم  کی   ملالہ یوسفزئی سے ملاقات، تعلیم نسواں  پر تبادلہ خیال

وزیر اعظم آفس سے جاری بیان کے مطابق وزیر اعظم محمد شہباز شریف سے ملالہ فنڈ کی شریک بانی ملالہ یوسفزئی کی ملاقات اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 77ویں اجلاس کے موقع پر ہوئی۔

 اس موقع پر وزیر اعظم شہباز شریف نے ملالہ یوسفزئی کی جانب سے سماجی مسائل بالخصوص بچیوں کی تعلیم پر بین الاقوامی سطح پر وکالت کو سراہا۔ 

وزیراعظم نے حالیہ موسمیاتی سیلاب سے ہونے والے نقصانات اور تباہی پر روشنی ڈالی جس سے بڑے پیمانے پر جانی و مالی نقصان ہوا۔ وزیراعظم نے سیلاب سے تعلیمی انفراسٹرکچر پر مرتب ہونے والے اثرات پر اپنی تشویش کا اظہار کیا۔

ملالہ یوسفزئی کی ہمت اور لگن کو سراہتے ہوئے وزیراعظم نے تعلیم، صنفی مساوات اور پاکستان میں مرد و خواتین دونوں کیلئے سیکھنے کے مواقع میں اضافہ کیلئے حکومت کی کوششوں پر روشنی ڈالی۔ 

وزیر اعظم نے پاکستان میں بچیوں کی تعلیم کو ترجیح دینے اور اس کی ترغیب دینے کیلئے حکومت کے منصوبوں اور سکیموں سے بھی آگاہ کیا اور ملالہ فنڈ کی وزارت تعلیم کے ساتھ شراکت داری کی تعریف کی ۔ 

ملالہ نے اس موقع پر تمام بچیوں کیلئے تعلیم کے حق کو فروغ دینے کے اپنے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ پاکستان میں حالیہ سیلاب سے بہت سے سکول تباہ ہوگئے۔ انہوں نے پسماندہ بچوں بالخصوص بچیوں کی مدد کیلئے اپنے عزم کا اظہار کیا۔

ملالہ نے تباہ کن سیلاب کے اثرات سے نمٹنے بالخصوص بچیوں کی تعلیم تک رسائی کیلئے پاکستان کی کوششوں کیلئے ملالہ فنڈ کی معاونت کا یقین دلایا۔

واضح رہے کہ ملالہ یوسفزئی مسلسل تین برس تک بااثر عالمی شخصیات کی فہرست کا حصہ رہی ہیں۔ انہیں عالمی سطح پر مختلف نوعیت کے 40 سے زائد اعزازات سے نوازا گیا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

ہم امریکا سے مضبوط تعلقات چاہتے ہیں: وزیراعظم

وزیراعظم شہباز شریف کا کہنا ہےکہ عمران خان کے امریکا مخالف بیانات سے دوطرفہ تعلقات کو نقصان پہنچا، عمران خان کی سوچ عام پاکستانی کی سوچ نہیں ہے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ہم امریکا سے مضبوط تعلقات چاہتے ہیں: وزیراعظم

امریکی خبر رساں ایجنسی کو انٹرویو دیتے ہوئے شہباز شریف کا کہنا تھا کہ پاکستان کے امریکا کے ساتھ تعلقات اتار چڑھاؤ کا شکار رہے ہیں، عمران خان کے امریکا مخالف بیانات سے دوطرفہ تعلقات کو نقصان پہنچا، عمران خان کی سوچ عام پاکستانی کی سوچ نہیں ہے، پچھلی حکومت نے جوکچھ کیا وہ پاکستان کے مفادات کے لیے نقصان دہ ہے، ہماری حکومت امریکا کے ساتھ مضبوط تعلقات کی خواہاں ہے۔

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ  موسمی تغیرات کے باعث پاکستان کو سیلاب کا سامنا ہے، پاکستان میں سیلاب سے 3 کروڑ 30 لاکھ افراد براہ راست متاثر ہوئے ہیں۔  روس، یوکرین جنگ کے باعث دنیا کو تیل اور  اناج کے بحران کا سامناکرنا پڑا، سیلاب کی وجہ سے پاکستان کو لاکھوں ٹن گندم درآمد کرنی پڑسکتی ہے،  ابتدائی تخمینے کے مطابق پاکستان کو سیلاب سے 30 ارب ڈالرکا نقصان ہوا، سیلاب سے پاکستان کا ایک تہائی حصہ متاثر ہوا، سیلاب سے 40 لاکھ ایکڑ سے زائد رقبے پرکھڑی فصلیں تباہ ہوئیں، بچوں سمیت 1600افراد جاں بحق ہوئے، ہزاروں کلومیٹر سمیت انفرا اسٹرکچر شدید متاثر ہوا۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ عالمی برادری ہماری مدد کرے تاکہ سیلاب متاثرین کی بحالی یقینی بنائی جاسکے، یواین سیکرٹری جنرل نے ڈونرز کانفرنس فوری بلانےکی میری تجویز سے اتفاق کیا ہے، پاکستان کو سیلاب متاثرین کے ذریعہ معاش کے لیے فنڈز کی ضرورت ہے، پاکستان کا گلوبل وارمنگ میں حصہ ایک فیصد سے بھی کم ہے، پاکستان کو دوسرے ملکوں کی وجہ سے موسمیاتی تبدیلیوں کا سامنا ہے، موسمیاتی تبدیلیوں سے نہ نمٹا گیا تو کل کسی اور ملک کوبھی آفت کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے، پاکستان کوبھی دیگر ملکوں کی طرح مشکلات درپیش ہیں، سیلاب نے مسائل بڑھادیے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ بھارت پڑوسی ملک ہے اورپاکستان پرُ امن پڑوسی ملک کے طور پر رہنا چاہتا ہے، دنیا پر واضح کیا ہےکہ پاکستان بھارت کے ساتھ پر امن تعلقات کا خواہاں ہے، تاہم بھارت کو 2019 کے بعدکے اقدامات کو تبدیل کرنا ہوگا۔

افغانستان کے حوالے سے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ طالبان کو خواتین کے حقوق کی پاسداری یقینی بنانی ہوگی، افغانستان کے منجمد اثاثوں کو فوری بحال کیا جانا چاہیے، افغانستان میں پر امن حالات پاکستان میں بھی امن کی ضمانت ہیں، خواتین کو تعلیم اور ملازمت کے یکساں مواقع ہونے  چاہئیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll