جی این این سوشل

پاکستان

ٹرانس جینڈر کو حقوق دینا حکومت کی ذمہ داری ہے،اعظم نذیر تاڑر

وزیرقانون اعظم نذیر تاڑر نے کہا ہے کہ خواجہ سرا بھی انسان ہیں،ان کے بھی بنیادی حقوق ہیں، کسی کے ساتھ اس کے جنس پر امتیازی سلوک نہیں ہوگا ، ایسی خاکہ کشی کی گئی کہ ٹرانسجینڈر قانون مکمل طور پر غلط ہے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

ٹرانس جینڈر کو حقوق دینا حکومت کی ذمہ داری ہے،اعظم نذیر تاڑر
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

 

اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ 2018 میں پارلیمنٹ میں پرائیویٹ ممبربل کے ذریعے یہ معاملہ سامنے آیا، پارلیمان میں بل پاس ہونے کے 2 سال بعد کچھ شکایات سامنے آئیں جس میں کہا گیا کہ اس بل کا غلط استعمال ہو سکتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس معاملے میں چیئرمین اسلامی نظریاتی کونسل کی رائے اس سارے عمل میں شامل رہی ہے،ہر قانون جو پاس ہوتا ہے اس میں کوئی نہ کوئی سقم ہوسکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ٹرانس جینڈرکو حقوق دینا حکومت کی ذمہ داری ہے، خواجہ سراوں کیلئے روزگار میں کوٹہ رکھا گیا ہے۔

اس موقع پر پیپلز پارٹی کے رہنما قمر زمان کائرہ نے کہا کہ سوشل میڈیا پر غلط خبریں پھیلائی گئیں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ٹرانسجینڈر قانون میں ترمیم کی حوصلہ افزائی کی جائےگی ، خواجہ سراؤں کو خود سے الگ نہیں کیا جاسکتا۔

پاکستان

سپریم کورٹ سائفر کی تحقیق نہیں کرے گا تو حالات گھمبیر ہوسکتے ہیں؛ شیخ رشید

اگرعمران خان کی کال پر فیصلہ چوک اور چوارہے میں ہونا ہے تو جھاڑو پھر جائے گا۔ سربراہ عوامی مسلم لیگ کا بیان

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

سپریم کورٹ سائفر کی تحقیق نہیں کرے گا تو حالات گھمبیر ہوسکتے ہیں؛ شیخ رشید

عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ سائفر کی تحقیق نہیں کرے گا تو حالات گھمبیر ہوسکتے ہیں، اکتوبر اہم ہے 15 نومبر تک اہم سیاسی فیصلے ہوجائیں گے۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ کم عقل حکمران ہر قدم اپنے خلاف اٹھاتے ہیں، اسلام آباد کی پولیس تھک چکی ہے،

عمران خان کی نااہلی اور گرفتاری سے حکمرانوں کو کچھ نہیں ملے گا اور سپریم کورٹ سائیفر کی تحقیق نہیں کرے گا تو حالات گھمبیر ہو سکتے ہیں۔ 

سابق وزیر داخلہ نے کہا کہ 2 ہفتوں سے بلاول بھٹو امریکہ میں مزے کررہا ہے اُسے سندھ کے سیلاب زدگان کی کوئی فکر نہیں، پاکستان کے سیاسی مستقبل کا فیصلہ اب اعلیٰ عدالتوں سے منسلک ہے،

4 اکتوبر کو نیب ترامیم کیس کی سماعت بھی اہم ہے، اگر عمران خان کی کال پر فیصلہ چوک اور چوارہے میں ہونا ہے تو جھاڑو پھر جائے گا، عوام کے مسائل سے ڈیل کی ضرورت ہے چوروں سےنہیں، اکتوبر اہم ہے 15 نومبر تک اہم سیاسی فیصلے ہوجائیں گے۔

ادھر پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے سفارتی سائفر سے متعلق اہم اعلان کر دیا، انہوں نے کہا کہ سائفر موجود ہے جس میں سب کچھ لکھا ہوا ہے

اور وہ چیف جسٹس کے پاس بھی ہے، چیف جسٹس کہہ دیں سائفر غلط ہے، ہم اگلے دن اسمبلی واپس چلے جائیں گے، سائفر کی ایک کاپی میرے پاس تھی، پتا نہیں وہ کہاں غائب ہو گئی ہے۔ 

چئیرمین تحریک انصاف نے کہا کہ ڈی مارش کرنےسے پہلے ہماری جانب سے کسی ملک کا نام نہیں لیا گیا تھا، سائفر معاملے کو قومی سیکیورٹی کمیٹی کے سامنے رکھنے کے بعد ہم نے پبلک کیا،

قومی سیکیورٹی کمیٹی میں فیصلہ کرچکے تھے کہ سائفر کو ڈی مارش کیا جائے، ڈی مارش کرنےسے پہلے ہماری جانب سے کسی ملک کا نام نہیں لیا گیا،

جو بھی باتیں آڈیو لیک میں سائفر کے حوالے سے کیں وہ سب تو میں جلسوں میں کر چکا ہوں، عام لوگ سائفر کو نہیں سمجھتے، ان کی زبان میں انہیں سمجھانے کے لیے لیٹر کا لفظ استعمال کیا، پاکستانی سفیر نے سائفر کے آخر میں لکھا تھا کہ ہمیں اسے ڈیمارچ کرنا چاہیے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

نصیر آباد میں مبینہ پولیس مقابلہ، 4 دہشت گرد ہلاک

کوئٹہ: بلوچستان کے علاقے نصیر آباد میں مبینہ پولیس مقابلے کے دوران 4 دہشت گرد مارے گئے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

نصیر آباد میں مبینہ پولیس مقابلہ، 4 دہشت گرد ہلاک

 

پولیس کے مطابق مبینہ پولیس مقابلہ نصیر آباد کے علاقے نوتال میں پیش آیا۔ ملزمان کی جانب سے سی ٹی ڈی کی گاڑی پر فائرنگ کی گئی تھی جس کے بعد فائرنگ کے تبادلے میں 4 دپشت گرد ہلاک اور 2 اہلکار زخمی ہو گئے۔

مارے جانے والے دہشت گردوں کے قبضے سے 3 دستی بم، ریموٹ کنٹرول ڈیوائس، کلاشنکوف اور بارودی مواد بھی برآمد ہوا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

300 اہلکار بنی گالہ بھیجنے کی خبروں میں کوئی صداقت نہیں، اسلام آباد پولیس

 اسلام آباد پولیس نے بنی گالہ میں 300 اہلکار بھیجنے کی خبروں کی تردید کر دی۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

300 اہلکار بنی گالہ بھیجنے کی خبروں میں کوئی صداقت نہیں، اسلام آباد پولیس

ٹوئٹر سے جاری پیغام میں اسلام آباد پولیس کا کہنا ہے کہ افواہیں پھیلائی جارہی ہیں کہ پولیس کے 300اہلکار بنی گالہ بھیجے گئے ہیں۔ ان خبروں میں کوئی صداقت نہیں اور بے بنیاد ہیں۔

ٹوئٹ میں کہا گیا ہے کہ بنی گالہ معمول کی ڈیوٹی بھیجی گئی ہے۔ شہریوں سے گزارش ہے کہ پراپیگنڈہ پر کان نہ دھریں۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll