جی این این سوشل

پاکستان

پی ٹی آئی ارکان کے استعفے سیاسی تنازعہ، حل کے لیے پارلیمنٹ موجود ہے، چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ

اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیئے ہیں کہ پی ٹی آئی ارکان کے استعفے سیاسی تنازعہ ہے اور ان کے حل کیلئے پارلیمنٹ موجود ہے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

پی ٹی آئی ارکان کے استعفے سیاسی تنازعہ، حل کے لیے پارلیمنٹ موجود ہے، چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

 

اسلام آباد ہائی کورٹ میں پی ٹی آئی کی استعفوں کی منظوری کے خلاف درخواست پر سماعت ہوئی، چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیئے کہ استعفوں کی منظوری میں طریقہ کار پر عمل نہیں کیا گیا،

یہ عدالت پارلیمنٹ کا احترام کرتی ہے، درخواست گزاروں کو پہلے اپنی نیک نیتی ثابت کرنی ہو گی۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے استفسار کیا کہ کیا یہ درخواست گزار پارٹی پالیسی کے خلاف جائیں گے؟ اس عدالت کو معلوم تو ہو کہ کیا یہ پارٹی کی پالیسی ہے؟درخواست گزاروں کو ثابت کرنا ہو گا کہ وہ پارلیمنٹ کا سیشن اٹینڈ کرتے رہے ہیں۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ حلقے کے عوام نے اعتماد کر کے ان لوگوں کو پارلیمنٹ میں بھیجا، یہ سیاسی تنازعے ہیں اور انکے حل کیلئے پارلیمنٹ موجود ہے۔

درخواست گزاروں کے وکیل علی ظفر نے موقف اختیار کیا کہ اراکین پارٹی پالیسی کے خلاف نہیں ہیں، اس پر چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیئے پھر تو درخواست قابل سماعت نہیں ، پارٹی تو کہتی ہے کہ ہم نے استعفے دیئے ہیں۔

اگر یہ پارٹی پالیسی کے ساتھ ہیں پھر تو تضاد آ جاتا ہے، یہ عدالت اسپیکر کو ڈائریکشن تو نہیں دے سکتی۔

پاکستان

ایف آئی اے سائبر ونگ کا عمران خان کے ٹوئٹر( ایکس) اکاؤنٹ کی انکوائری کا فیصلہ

ایف آئی اے سائبر ونگ ٹویٹ کی  تحقیقات کے لیے بانی تحریک انصاف سمیت تین مزید پی ٹی آئی رہنماؤں  سے پوچھ گچھ کرے گی جس میں بیرسٹر گوہر ایوب، رؤف حسن  اور عمر ایوب شامل ہیں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ایف آئی اے سائبر ونگ کا عمران خان کے ٹوئٹر(   ایکس)  اکاؤنٹ  کی انکوائری  کا فیصلہ

 

ایف آئی اے سائبر ونگ نے بانی پی ٹی آئی کے ٹویٹ کا  نوٹس لیتے ہوئے ٹویٹ کے خلاف انکوائری کا فیصلہ کر لیا۔ 
ذرائع کے مطابق ایف آئی اے سائبر ونگ نے ٹویٹ کی گئی ویڈیو کو پراپوگینڈہ قرار دیتے ہوئے تحقیقات کا آغاز کر دیا۔ تحقیقات میں اس بات کا تعین کیا جائے گا کہ جب بانی پی ٹی آئی خود  اڈیالہ جیل میں قید ہیں تو پھر   یہ  ویڈیو آیا کہ خود بانی پی ٹی آئی نے ہی  اپلوڈ کی یا  پھر ان کی اجازت سے اپلوڈ کی گئی۔ مزید یہ کہ یہ پاکستان مخالف پروپیگنڈہ کس نے بنایا ۔اور آخر کس کی اشیر آبادسے یہ چلایا گیا۔ 
ذرائع کے مطابق اگر یہ حرکت اکاؤنٹ ہولڈ ر کی  طرف سے کی گئی تو ان کے خلاف قانون حرکت میں لایا جائے گا۔ اور اگر ان کی طرف سے لا علمی کا اظہار کیا گیا تو انہیں غیر قانونی طور پر استعمال ہونے کی بناء پر اپنا اکاؤنٹ   بند کرنے کے لیے تحریری درخواست دینا ہو گی۔

 
ایف آئی اے سائبر ونگ ٹویٹ کی  تحقیقات کے لیے بانی تحریک انصاف سمیت تین مزید پی ٹی آئی رہنماؤں  سے پوچھ گچھ کرے گی جس میں بیرسٹر گوہر ایوب، رؤف حسن  اور عمر ایوب شامل ہیں۔ 
یاد رہے کہ بانی پی ٹی آ ئی کے آفیشل ٹویٹر( ایکس ) اکاؤنٹ سے کچھ دن قبل  ایک ٹویٹ کیا گیا جس میں حمود الرحمنٰ کمیشن رپورٹ کے پیش نظر  بنگلہ دیش کے بانی رہنما شیخ مجیب الر حمنٰ اور پاکستانی جنرل یحییٰ کا تقابلی جائزہ کیا گیاتھا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پاکستان نے دوسرا جدید مواصلاتی سیٹلائٹ خلا میں بھیج دیا

توقع کی جاتی ہے کہ یہ سیٹلائٹ ملک کے طول و عرض میں ایک جدید ترین مواصلاتی نیٹ ورک کے قیام میں اپنا حصہ ڈالے گا اور ٹیلی کام سیکٹر کی بڑھتی ہوئی ضروریات کو پورا کرنے میں مدد دے گا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پاکستان نے دوسرا  جدید مواصلاتی سیٹلائٹ خلا میں بھیج دیا

 

پاکستان نے جمعرات کو چین کے تعاون سے اپنا دوسرا جدید مواصلاتی سیٹلائٹ خلا میں بھیج دیا۔ 

پاکستان نے اپنا پاک سیٹ ایم ایم ون نامی سیٹلائٹ خلا میں بھیج کر ایک عظیم سنگ میل عبور کر لیا۔    
تفصیلات کے مطابق اسپیس اینڈ اپرایٹموسفیئر ریسرچ کمیشن (سپارکو) نے کہا کہ یہ اسیٹلائٹ دور دراز علاقوں میں انٹرنیٹ فراہم کرکے پاکستان کو ڈیجیٹل دور میں داخل کرنے میں مدد کرے گا۔ 5 ٹن وزن کی حامل یہ اسیٹلائٹ جدید ترین مواصلاتی آلات سے لیس ہے، جسے چین کےشی چینگ  سینٹر سے خلا میں بھیجا گیا ۔ 
وزیراعظم شہباز شریف نے سیٹلائٹ کی لانچنگ پر قوم کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ پوری قوم کو اپنے سائنسدانوں پر فخر ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ اس سے ملک بھر میں تیز ترین انٹرنیٹ کی سہولت فراہم کرنے میں مدد ملے گی۔
سپارکو ذرائع کے مطابق سیٹلائٹ ملک کی مواصلاتی ضروریات کو مد نظر رکھتے ہوئے بنایا گیا ہے۔  سیٹلائٹ کو خلا میں پہنچنے میں لگ بھگ 3 سے 4 دن لگیں گے، جبکہ یہ جیو سٹیشنری سیٹلائٹ زمین کے مدار میں زمین سے لگ بھگ  35000 کلومیٹر کی بلندی پر ہو گا۔ سیٹلائٹ کی موئثر کام کرنے کی مدت تقریبا 15 سال ہے۔
توقع کی جاتی ہے کہ یہ سیٹلائٹ ملک کے طول و عرض میں ایک جدید ترین مواصلاتی نیٹ ورک کے قیام میں اپنا حصہ ڈالے گا اور ٹیلی کام سیکٹر کی بڑھتی ہوئی ضروریات کو پورا کرنے میں مدد دے گا، اور اس کی جدید صلاحیتیں تیز رفتار انٹرنیٹ کی بڑھتی ہوئی مانگ کو پورا کرے گی۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

نوجوانوں کو نفرت کے بجائے محبت اور امن کا درس دینا ہو گا،رانا مشہود

حکومت با صلاحیت نوجوانوں کے بہتر مستقبل کیلئے پر عزم ہے، چیئرمین وزیراعظم یوتھ پروگرام

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

نوجوانوں کو نفرت کے بجائے محبت اور امن کا درس دینا ہو گا،رانا مشہود

وزیراعظم یوتھ پروگرام کے چیئرمین رانا مشہود احمدنے کہا ہےکہ سٹریٹ چلڈرن کے ٹیلنٹ کو مزید نکھارنے کی ضرورت ہے،نوجوانوں کو نفرت کے بجائے محبت اور امن کا درس دینا ہو گا،حکومت با صلاحیت نوجوانوں کے بہتر مستقبل کیلئے پر عزم ہے۔

ان خیالات کا اظہارانہوں نے نیشنل سٹریٹ چلڈرن کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ رانامشہور احمد نے کہا کہ پاکستان میں ٹیلنٹ کی کمی نہیں ہے۔ سٹریٹ چلڈرن کے ٹیلنٹ کو مزید نکھارنے کی ضرورت ہے ۔ نوجوانوں کو گیمز اور دیگر سر گر میوں کیلئے مواقع فراہم کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہاکہ نوجوانوں کو نفرت کے بجائے محبت اور امن کا درس دینا ہو گا، ہمارے ملک کی 60 فیصد آبادی نوجوانوں پر مشتمل ہے، حکومت با صلاحیت نوجوانوں کے بہتر مستقبل کیلئے پر عزم ہے، ہمارے ملک کے جو ان بے پناہ صلاحیتوں کے مالک ہیں ۔ نوجوان ہمارے ملک کا قیمتی مستقبل ہیں ۔

رانا مشہود احمد نےکہا کہ معاشرے کو سدھارنےکے لئے تمام اسٹیک ہولڈرز نے اپنا مثبت کردار ادا کرنا ہے۔ پاکستان میں ہر شعبے میں بےپناہ ٹیلنٹ موجود ہے ۔حکومت نوجوانوں کے بہتر مستقبل کے لئےہر ممکن سہولیات دےگی۔ مسلم ہینڈز تعلیم ، کھیل سمیت دیگر شعبوں میں مثبت کام کر رہا ہے۔ مہذب معاشرے میں سپورٹس ایک انڈسٹری بن چکی ہے ۔

چیئرمین وزیراعظم پروگرام نے کہا کہ حکومت کا کام ہر باصلاحیت بچے کو پلیٹ فارم فراہم کرنا ہے ، آج 2 کروڑ 60 لاکھ بچوں کا سکولوں سے باہر ہونا تشویشناک ہے ۔وزیراعظم نے ایجوکیشن ایمرجنسی لگائی ہے،یوتھ کے معاملات وزیراعظم کی ترجیحات میں شامل ہے،سٹریٹ چائلڈ ٹیم کی وزیراعظم نے ہمیشہ حوصلہ افزائی کی ۔

انہوں نے کہا کہ ہاکی ٹیم سیاست کا شکار تھی، حکومت نے ہاکی سے سیاست ختم کی،میرٹ پر ٹیم کی سلیکشن کی جس کا نتیجہ اذلان شاہ کپ میں نظر آیا۔ انہوں نے کہاکہ ہم پاکستان ایجوکیشن اینڈ سپورٹس اینڈومنٹ فنڈز بنانے جا رہے ہیں ، انشا اللہ جلد پاکستان کی تقدیر بدلے گی،حکومت والینٹئیر کور بھی جلد تشکیل دے گی، سب کو پاکستان کی خوشحالی میں اپنا حصہ ڈالنا ہوگا۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll