جی این این سوشل

پاکستان

لاہور ہائی کورٹ کا1990 سے 2001  تک کا توشہ خانہ ریکارڈ پبلک کرنےکا حکم

جس دوست ملک نے تحائف دیئے وہ بھی بتایا جائے،لاہور ہائی کورٹ

پر شائع ہوا

کی طرف سے

لاہور ہائی کورٹ کا1990 سے 2001  تک کا توشہ خانہ ریکارڈ پبلک کرنےکا حکم
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

لاہور ہائی کورٹ نے 1990 سے 2001  تک کا توشہ خانہ ریکارڈ پبلک کرنےکا حکم دے دیا۔لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس عاصم حفیظ نے شہری منیر احمد کی درخواست  نمٹا دی، درخواست گزار نے قیام پاکستان سے اب تک توشہ خانہ سے لیے گئے تحائف کی تفصیلات  فراہم کرنے کی درخواست کی تھی۔

عدالت نے 1990سے 2001 تک کا توشہ خانہ ریکارڈ پبلک کرنےکا حکم دیتے ہوئےکہا ہےکہ  جس دوست ملک نے تحائف دیئے وہ بھی بتایا جائے، کوئی چیز چھپائی نہیں جاسکتی، سارا ریکارڈ پبلک کیا جائے۔

وفاقی حکومت کی جانب سے تحائف کے ذرائع بتانےکی ہدایت پر اعتراض کیا گیا، وکیل وفاقی حکومت کا کہنا تھا کہ ہم نے اس کے خلاف اپیل فائل کرنا ہے۔جسٹس عاصم حفیظ نےکہا کہ  اپیل آپ کا حق ہے، بغیر ادائیگی کےکوئی تحفہ نہیں رکھ سکتا۔

گزشتہ روز کی سماعت میں  وکیل وفاقی حکومت کا کہنا تھا کہ توشہ خانے کا سال 2000 سے پہلے کا ریکارڈ منظم شکل میں نہیں ہے۔

اس سے قبل کی سماعت پر عدالت نے توشہ خانےکا 1990 سے 2001 تک کا ریکارڈ پیش کرنے کی ہدایت کی تھی، جسٹس عاصم حفیظ کا کہنا تھا کہ توقع نہیں ہےکہ کسی کو بھی مقدس گائے سمجھا جائےگا، وفاقی حکومت کے وکیل توشہ خانہ کی 2002 کے بعد کی تفصیلات کی مصدقہ کاپی ریکارڈ پر لائیں۔

 

جرم

وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ کا جرائم کی روک تھام کیلئے بڑا اقدام

مراد علی شاہ نے کہا کہ اس حوالے سے پنجاب اور بلوچستان کی حکومتوں کے تعاون سے ایک مشترکہ کارروائی کا آغاز کیا جائے گا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ کا جرائم کی روک تھام کیلئے بڑا اقدام

کراچی : سندھ کے نو  منتخب وزیر اعلیٰ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ عوام کے جان و مال کا تحفظ  حکومت کی اولین ترجیح ہے۔

 وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ نے آج کراچی میں عہدہ سنبھالنے کے بعد امن و امان کے بارے میں ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے سکھر اور لاڑکانہ کے اضلاع سے ڈاکوؤں اور کرائم کے خاتمے پر زور دیا ۔ 

 انہوں نے کہا کہ اس حوالے سے پنجاب اور بلوچستان کی حکومتوں کے تعاون سے ایک مشترکہ کارروائی کا آغاز کیا جائے گا۔

مراد علی شاہ نے کہا کہ انہیں صوبے میں سٹریٹ کرائم کی صورتحال پر تشویش ہے ۔انہوں نے متعلقہ افسران کو ایسے جرائم کی روک تھام کےلئے سخت کارروائی کرنے اور امن عامہ بہتر بنانے کی ہدایت کی۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

سعودی عرب کی اقوام متحدہ میں غزہ تباہی پر عالمی برادری کی خاموشی پر کڑی تنقید

ہم یہاں کن حقوق کی بات کر رہے ہیں جب کہ غزہ ر اکھ اور ملبے کا ڈھیر بن چکا ہے، سعودی وزیر خارجہ

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

سعودی عرب کی اقوام متحدہ  میں غزہ  تباہی پر عالمی برادری کی خاموشی پر کڑی تنقید

سعودی عرب نے اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کی کونسل میں غزہ کی تباہی پر عالمی برادری کی خاموشی پر کڑی تنقید کرتے ہوئے فوری جنگ بندی کا مطالبہ کیا ہے۔

عرب میڈیا کے مطابق اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے 55ویں اجلاس میں سعودی وزیر خارجہ فیصل بن فرحان نے اسرائیل کی جبری بے گھر ہونے والے لاکھوں فلسطینیوں کی آخری پناہ گاہ رفح پر حملے کی دھمکیوں پر عالمی برادری کے ضمیر کو جھنجھوڑنے کی کوشش کی ہے۔

وزیر خارجہ فیصل بن فرحان نے سوال اُٹھایا کہ ہم یہاں کن حقوق کی بات کر رہے ہیں جب کہ غزہ راکھ اور ملبے کا ڈھیر بن چکا ہے۔ عالمی برادری اس پر کیسے خاموش رہ سکتی ہے جب کہ غزہ کے لوگ بے گھر اور انسانی حقوق کی بدترین خلاف ورزیوں کا شکار ہیں۔ سعودی وزیر خارجہ نے بین الاقوامی قراردادوں کے اطلاق میں دوہرے معیار اور پسند و ناپسند رویے کو مسترد کرتے ہوئے اسرائیل کے رفح پر حملے کے  تباہ کن اثرات سے خبردار کیا۔

سعودی وزیر خارجہ نے غزہ میں جنگ بندی کے لیے سنجیدہ، منصفانہ اور جامع اقدام کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے بین الاقوامی برادری سے مطالبہ کیا کہ وہ اپنی ذمہ داریاں ادا کرے تاکہ معصوم شہریوں کی حفاظت کی جا سکے۔ غزہ سے 30 ہزار ہلاکتوں کی اطلاع ملی ہے اس کے علاوہ 20 لاکھ سے زائد افراد فاقہ کشی، تحفظ، پانی، بجلی اور ادویات جیسی بنیادی ضرورتوں کے فقدان کا شکار ہیں۔

سعودی وزیر خارجہ نے سلامتی کونسل کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ان تمام مظالم کے باوجود سلامتی کونسل اپنے اجلاسوں کو بغیر کسی نتیجے کے ختم کردیتی ہے۔ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل قرارداد نمبر 2720 پر عمل درآمد کروائے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

ملک کے مختلف شہروں میں شدید بارشوں کی پیشگوئی

جمعرات کے روز بلوچستان، خیبر پختونخوا ، کشمیر اورگلگت بلتستان میں اکثر مقامات پر آندھی جھکڑ چلنےاور گرج چمک کے ساتھ بارش اور پہاڑوں پر برف باری کا امکان ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ملک کے مختلف شہروں میں شدید بارشوں کی پیشگوئی

آئندہ تین روز کے دوران ملک کے مختلف علاقوں میں موسلا دھار بارشوں کے امکان کے پیش نظر برساتی و مقامی ندی نالوں میں طغیانی اور پہاڑی علاقوں میں لینڈ سلائیڈنگ کے ساتھ ساتھ کمزور انفراسٹرکچر کو نقصان پہنچنے کا خطرہ ظاہر کیا گیا ہے، اس دوران شدید بارش برف باری سے رابطہ سڑکیں بند ہونے کا خدشہ ہے۔

یکم اور2 مارچ کو مری، گلیات، ناران، کاغان، دیر، سوات، کوہستان، مانسہرہ، ایبٹ آباد، شانگلہ، استور، ہنزہ، سکردو، وادی نیلم، باغ، پونچھ اور حویلی میں شدید بارش / برفباری سے رابطہ سڑکیں بند ہونے کا خدشہ ہے ۔اس دوران بالائی خیبر پختونخوا، مری، گلیات، کشمیر اور گلگت بلتستان میں لینڈسلائیڈنگ کا بھی خدشہ ہے۔آندھی/جھکڑ / گرج چمک اور تیز بار ش کے باعث کمزور انفرا سٹرکچر ( بجلی کے کھمبے،گاڑیوں سولر پینل وغیرہ)کو نقصان پہنچنے کا اندیشہ ہے۔

محکمہ موسمیات کے مطابق 29 فروری اور یکم مارچ کو موسلا دھار بارشوں کے باعث گوادر، کیچ، تربت، پنجگور، آواران، بارکھان، کوہلو، سبی، نصیر آباد، دالبندین، خضدار اور ڈیرہ غازی خان جبکہ یکم اور2 مارچ کو خیبرپختونخوا، کشمیر، مری، گلیات اور اسلام آباد/راولپنڈی کے برساتی/مقامی ندی نالوں میں طغیانی کا خدشہ ہے ۔

جمعرات کے روز بلوچستان، خیبر پختونخوا ، کشمیر اورگلگت بلتستان میں اکثر مقامات پر آندھی جھکڑ چلنےاور گرج چمک کے ساتھ بارش اور پہاڑوں پر برف باری کا امکان ہے۔

 

 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll