جی این این سوشل

پاکستان

حکومت رمضان المبارک میں عوام کی مشکلات کم کرنے کیلئے ہر ممکن اقدامات کررہی ہے:وزیراعظم

رجسٹریشن کے لئے آٹا تقسیم کرنے کے پوائنٹس پر کاؤنٹرز قائم کریں

پر شائع ہوا

کی طرف سے

حکومت رمضان المبارک میں عوام کی مشکلات کم کرنے کیلئے ہر ممکن اقدامات کررہی ہے:وزیراعظم
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

اسلام آباد: وزیراعظم شہبازشریف نے حکومت کی جانب سے فراہم کیا جانیوالا مفت آٹا حاصل کرنے کیلئے ان مستحق افراد کا فوری اندراج یقینی بنانے کی ہدایت کی ہے جو تا حال بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کے ساتھ رجسٹرڈ نہیں ہوسکے۔

رمضان پیکج کے حوالے سے لاہور میں جائزہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے وزیراعظم نے نادرا اور بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کو ہدایت کی کہ وہ رجسٹریشن کے لئے آٹا تقسیم کرنے کے پوائنٹس پر کاؤنٹرز قائم کریں۔

وزیراعظم نے کہا کہ حکومت رمضان المبارک کے دوران غریب عوام کی مشکلات کم کرنے کیلئے ہرممکن اقدامات کررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مفت آٹے کی تقسیم پچیس رمضان المبارک تک جاری رہے گی۔

اجلاس کو بتایا گیا کہ مفت آٹے کی فراہمی کی سکیم پنجاب، خیبرپختونخوا اور وفاقی دارالحکومت اسلام آبادمیں جاری ہے۔

اجلاس کو بتایا گیا کہ پنجاب میں شادی ہالز میں تقسیم پوائنٹس قائم کئے گئے جہاں لوگوں کو اپنی باری کاانتظار کرتے ہوئے مفت آٹے کے حصول میں کسی پریشانی کاسامنانہیں کرناپڑے گا۔

وزیراعظم نے لاہوراورقصورمیں تقسیم پوائنٹس کے اچانک دورے بھی کئے اورانتظامات پر اپنے اطمینان کااظہارکیا۔انہوں نے اس پروگرام کے لئے پنجاب اورخیبرپختونخواکی حکومتوں سمیت اسلام آباد انتظامیہ کی کوششوں کی تعریف کی۔

اجلاس میں وفاقی وزراء شازیہ مری اورمریم اورنگزیب ،وزیراعظم کے مشیراحدچیمہ، پنجاب کے وزیراعلیٰ سیدمحسن نقوی اوردوسرے اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔
 

کھیل

پاکستان کرکٹ بورڈ کے زیر اہتمام لیول ٹو امپائرنگ کورسز کا آغاز

لیول ٹو کورس میں شریک امپائرز کی عمر کی حد  45 سال مقرر کی گئی ہے،پی سی بی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پاکستان کرکٹ بورڈ کے زیر اہتمام لیول ٹو امپائرنگ کورسز کا آغاز

پاکستان کرکٹ بورڈ کے زیر اہتمام لیول ٹو امپائرنگ کورسز کا آغاز کل بروز منگل سےشروع ہو جائےگا۔ پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے جاری اعلامیہ کے مطابق قذافی اسٹیڈیم  میں ہونے والا امپائرنگ کورسز چار روز جاری رہے گا، لیول ٹو امپائرنگ کورسز میں 65 امیدوار شرکت کریں گے، جس کا مقصد پی سی بی کے امپائرز پول کومزید مستحکم کرنا ہے۔

 ترجمان پی سی بی کے مطابق  کورس میں کامیاب ہونے والے امپائرز کو پی سی بی ڈیویلپمینٹ پینل آف امپائرز میں شامل کیا جائے گا۔ کامیاب امپائر ڈسٹرکٹ کرکٹ ایسوسی ایشن کے میچوں میں امپائرنگ کرسکیں گے. 

کورس میں شریک امیدواروں کو پہلے تین روز  ٹریننگ کے مرحلے سے گزرنا ہوگا، جبکہ آخری روز امیدواروں کے انٹرویوز اور تحریری امتحان ہوں گے.

آئی سی سی ایلیٹ پینل میں شامل امپائر احسن رضا، آئی سی سی اور پی سی بی کےانٹرنیشینل امپائرز پینل میں شامل آصف یعقوب اور پی سی بی کے ایلیٹ پینل آف امپائرز میں شامل ناصر حسین کو ٹرینر مقرر کیا گیا ہے۔لیول ٹو کورس میں شریک امپائرز کی عمر کی حد  45 سال مقرر کی گئی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

صحت

ملک بھر میں 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے8کیس رپورٹ ہوئے ہیں، این آئی ایچ

7 مریضوں کی حالت تشویش ناک ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ملک بھر میں 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے8کیس رپورٹ ہوئے ہیں، این آئی ایچ

اسلام آباد: قومی ادارہ صحت(این آئی ایچ) نے کہا ہے کہ ملک بھر میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے 8 کیس رپورٹ ہوئے اور7 مریضوں کی حالت تشویش ناک ہے۔

پیر کو این آئی ایچ کے جاری اعدادوشمار کے مطابق ملک بھر میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے ایک ہزار 650 ٹیسٹ کیے گئے جن میں سے 8 افراد کے ٹیسٹ مثبت آئے۔

اس طرح مثبت کیسز کی شرح 0.48 فیصد رہی اور اس دوران کورونا وائرس سے کوئی مریض جاں بحق نہیں ہوا، تاہم 7 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

سپریم کورٹ ریویوآف ججمنٹس اینڈ آرڈر ایکٹ 2023 سے فائدہ نواز شریف اور جہانگیرترین نہیں اٹھا سکتے: وزیر قانون

وفاقی وزیر قانون اعظم نذیر تارڑ نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ ریویو آف آرڈرز اینڈ ججمنٹ ایکٹ سے نوازشریف یا جہانگیر ترین کو فائدہ نہیں پہنچ سکتا۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

سپریم کورٹ ریویوآف ججمنٹس اینڈ آرڈر ایکٹ 2023 سے فائدہ نواز شریف اور جہانگیرترین  نہیں اٹھا سکتے: وزیر قانون

تفصیلات کے مطابق اپنی گفتگو میں اعظم نذیر تارڑ کا کہنا تھا کہ نوازشریف اور جہانگیرترین اپنی سزاؤں کےخلاف نظرثانی کاحق استعمال کرچکے ہیں لہٰذا ان کو فائدہ نہیں پہنچ سکتا۔

انہوں نے کہا کہ آرٹیکل 184 تھری میں عدالت کا فیصلہ پہلا اور آخری تصور ہوتا تھا، دوسری بار نظرثانی یاکیوریٹیوریویو کی ہمارےقانون میں گنجائش ہی نہیں ہے، نئے قانون کے تحت آرٹیکل 184 تھری کی اپیل کےتحت ریلیف عام آدمی کو ملے گا۔

وفاقی وزیرقانون کا کہنا تھاکہ سپریم کورٹ ریویو آف آرڈرز اینڈ ججمنٹ ایکٹ 2023 پر قومی اسمبلی،سینیٹ میں باقاعدہ بحث ہوئی تھی، ایکٹ قومی اسمبلی اور سینیٹ میں پیش کیاتواس پربحث براہ راست نشربھی ہوئی۔

ان کا کہنا تھاکہ صدر مملکت جو ہر بل واپس بھجوا دیتے تھے، انہوں نے نظرثانی کے قانون کی منظوری دی ہے۔

اعظم نذیرتارڑ کا کہنا تھاکہ سپریم کورٹ ریویو آف آرڈرز اینڈ ججمنٹ ایکٹ کے تحت ماضی کے کسی بھی مقدمے میں نظرثانی دائر کی جاسکتی ہے۔

خیال رہے کہ سپریم کورٹ ریویوآف ججمنٹس اینڈ آرڈر ایکٹ 2023 کے نفاذ کا گزٹ نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا ہے۔

نئے قانون کے تحت 184/3کے تحت فیصلوں پر 60 دن میں نظر ثانی اپیلیں داخل کی جاسکیں گی، نئے قانون کے مطابق اپیل فیصلہ دینے والے بینچ سے بڑا بینچ سنےگا۔

نئے قانون کے تحت نظر ثانی کی درخواست کا دائرہ کار اب اپیل جیسا ہی ہو گا، ماضی میں فیصلے پر نظرثانی کی درخواست وہی بینچ سنتا تھا جس نے وہ فیصلہ دیا ہوتا تھا۔ 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll