جی این این سوشل

تجارت

اسٹاک مارکیٹ میں ریکارڈ تیزی ،66ہزار کی حد عبور

نگران وزیراعظم انوارالحق کاکڑ نے کہا کہ  ملک کی معیشت میں اسٹاک ایکسچینج کا اہم کردار ہے

پر شائع ہوا

کی طرف سے

اسٹاک مارکیٹ میں ریکارڈ تیزی ،66ہزار کی حد عبور
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

پاکستان سٹاک ایکس چینج میں آج کاروباری ہفتے کے اختتام پر کاروباری سرگرمیوں میں زبردست اضافہ ہوا اور 100 انڈیکس پندرہ سو سے زائد پوائنٹس اضافے کے بعد چھیاسٹھ ہنزار کی نفسیاتی حد عبور کرگیا۔

نگران وزیراعظم انوارالحق کاکڑ نے کہا کہ  ملک کی معیشت میں اسٹاک ایکسچینج کا اہم کردار ہے اور معاشی بہتری سے اسٹاک مارکیٹ ستمبر سے 40 فیصد بڑھی ہے جبکہ ڈالر کا بھاؤ ستمبر میں 307 روپے تھا جو آج 284 کے لگ بھگ ہے۔

 

پاکستان

ایف پی سی سی آئی کا آئی پی پیز کے معاہدوں کے خلاف سپریم کورٹ جانے کا فیصلہ

آئی پی پی معاہدوں کے تحت، پاکستان اربوں روپے ان کمپنیوں کو ادا کرتا ہے جو بجلی پیدا نہیں کرتیں، گوہر اعجاز

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ایف پی سی سی آئی کا آئی پی پیز کے معاہدوں کے خلاف  سپریم کورٹ  جانے کا  فیصلہ

سابق نگران وزیر تجارت ڈاکٹر گوہر اعجاز نے کہا ہے کہ ایف پی سی سی آئی نے آئی پی پیز کے معاہدوں کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

سوشل میڈیا پلیٹ فارم ایکس پر اپنے ٹویٹ میں انہوں ںے کہا ہے کہ چیمبرز آف کامرس نے آئی پی پیز کے خلاف سپریم کورٹ جانے کا فیصلہ ہے، فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری (FPCCI) پاکستان کی کاروباری برادری کی اعلیٰ نمائندہ ہے، ایف پی سی سی آئی معزز سپریم کورٹ میں باضاطہ طور پر پٹیشن دائر کرے گی کہ وہ اس ناقابل برداشت صورتحال میں مداخلت کرے جو ہر پاکستانی کے حق زندگی کو متاثر کرتی ہے۔

گوہر اعجاز نے کہا کہ آئی پی پی معاہدوں کے تحت، پاکستان اربوں روپے ان کمپنیوں کو ادا کرتا ہے جو بجلی پیدا نہیں کرتیں، مہنگی بجلی تمام پاکستانیوں کے لیے ناقابل برداشت ہو چکی ہے, بجلی کی زیادہ قیمت شہریوں کو غربت میں دھکیل رہی ہے اور کاروباروں کو دیوالیہ کر رہی ہے.

ان کا کہنا تھا کہ 2020ء میں سابقہ عبوری توانائی کے وزیر محمد علی نے ایک تفصیلی رپورٹ لکھی تھی جس میں بتایا گیا تھا کہ حکومتی نااہلی اور آئی پی پی کی غلط بیانیوں کی وجہ سے سینکڑوں اربوں کا نقصان ہو رہا ہے، وہ رپورٹ آج تک مکمل طور پر نافذ نہیں کی گئی، کیوں؟ حکومت نے اس رپورٹ میں مطالبہ کردہ فرانزک آڈٹ کا حکم کیوں نہیں دیا؟،

ان کا کہنا تھا کہ حکومت کو فیصلہ کرنا ہوگا کہ 240 ملین پاکستانیوں کی بقا زیادہ اہم ہے یا 40 خاندانوں کے لیے یقینی منافع، ہمارا ملک تمام وسائل سے مالا مال ہے ہمیں خوشحالی کے لیے صرف بدانتظامی کا خاتمہ چاہیے، بجلی پاکستان کی صنعتوں کے لیے سب سے اہم مسئلہ ہے اور یہ براہ راست 240 ملین لوگوں کی زندگیوں کو متاثر کرتی ہے۔

سابق وزیر تجارت کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان چند برس میں ایک ہی غلطیاں دوبارہ نہیں برداشت کر سکتا صرف اس لیے کہ نئے ’’سرمایہ کاروں‘‘ کا ایک گروپ کچھ نہ کرنے کے عوض پیسہ کمانا چاہتا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پی ٹی آئی پر پابندی لگانا حکومت کی خواہشات ہو سکتی ہے مگر یہ ان کے بس کی بات نہیں، اسد قیصر

ہمارے ایم این ایز کو ڈرایا جا رہا ہے، دھمکیاں مل رہی ہیں، آفرز مل رہی ہیں، رہنما پی ٹی آئی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پی ٹی آئی پر پابندی لگانا حکومت کی خواہشات ہو سکتی ہے مگر یہ ان کے بس کی بات نہیں، اسد قیصر

پی ٹی آئی کے سینئر رہنما اور سابق سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا کہ پی ٹی آئی پر پابندی لگانا حکومت کی خواہشات ہو سکتی ہے مگر یہ ان کے بس کی بات نہیں۔

پی ٹی آئی کے سینئر رہنما اور سابق سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا کہ ہمارے ایم این ایز کو ڈرایا جا رہا ہے، دھمکیاں مل رہی ہیں، آفرز مل رہی ہیں، 2024ء کے الیکشن میں مسلم لیگ ن بری طرح ہار گئی، مسلم لیگ ن نے اس الیکشن میں ٹوٹل 17 سیٹیں لی تھی۔

سابق سپیکر نے مزید کہا کہ پارلیمنٹ کی باتوں کو کوئی سنجیدگی سے لیتا ہی نہیں ہے، پارلیمنٹ بے توقیر ہو گئی ہے، آئین بنانا پارلیمنٹ کا کام ہے، اگر آپ پارلیمنٹ کے اختیارات بھی ہم سے چھین رہے ہیں تو ملک کو کس طرف لے جا رہے ہیں۔ہمارے ایم این ایز کے خلاف پورا کریک ڈاؤن شروع کیا گیا ہے، ، ملک میں اس وقت انارکی ہی انارکی ہے، پارلیمنٹ ہمارا ڈیبیٹنگ کلب بن گیا ہے، پارلیمنٹ میں صرف باتیں ہی باتیں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ نوازشریف کہتا تھا ووٹ کو عزت دو، جتنا نوازشریف نے ووٹ کو بے عزت کیا یہ تاریخ کا حصہ ہے، مسلم لیگ ن کی پارٹی کا نام لینے والا کوئی نہیں ہو گا، بہت برا حال کر دیا ہے اس ملک کا، مسلم لیگ ن چاہتی ہے کہ پی ٹی آئی پر پابندی لگے لیکن اصل میں عوام نے ان پر پابندی لگا دی ہے۔ پی ٹی آئی کے بانی کو اللہ نے عزت دی ہے، پوری دنیا ان کے ساتھ کھڑی ہے، عوام ان کے ساتھ ہے، میں گارنٹی سے کہتا ہوں کہ آئندہ مسلم لیگ ن کا ٹکٹ لینے والا کوئی نہیں ہو گا اور نہ کوئی نام لینے والا ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ جلسے ہم پورے ملک میں کریں گے لیکن این او سی کے بغیر نہیں کریں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پاکستان کی ترکمانستان کی کمپنیوں کو ملک میں سرمایہ کاری کی دعوت

دونوں ممالک کے عوام ایک دوسرے سے مضبوط تعلقات چاہتے ہیں ، وزیر خارجہ اسحاق ڈار

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پاکستان کی ترکمانستان کی کمپنیوں کو ملک  میں سرمایہ کاری کی دعوت

نائب وزیر اعظم اور وزیر خارجہ اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ ترکمانستان کی کمپنیوں کو پاکستان میں سرمایہ کاری کی دعوت دیتے ہیں۔

پاکستان اور ترکمانستان کے وزرائے خارجہ کی مشترکہ پریس کانفرنس نے خطاب کرتے ہوئے نائب وزیر اعظم اسحاق ڈار کا کہنا تھا کہ پاکستان اور ترکمانستان کے درمیان تاریخی تعلقات ہیں ، ہم نے اعلیٰ سطح کے مذاکرات اور تبادلوں کے فروغ پر اتفاق کیا ہے۔ خوشی ہے کہ پاکستان اور ترکمانستان کے تعلقات مثبت سمت کی طرف بڑھ رہے ہیں ، ملاقات میں ہم نے دوطرفہ ایجنڈے کے ساتھ علاقائی و عالمی پیشرفت کا احاطہ بھی کیا، دونوں ممالک کے عوام ایک دوسرے سے مضبوط تعلقات چاہتے ہیں ۔

اسحاق ڈار کا کہنا تھا کہ توانائی اور ٹیکنالوجی کے شعبوں میں روابط کو مزید مضبوط بنانے پر غور کیا جائے گا ، ترکمانستان کے قومی رہنما گربان گلی بردی محمدؤف کے دورہ پاکستان کے منتظر ہیں، گربان گلی بردی محمدؤف کا متوقع دورہ دوستانہ تعلقات کو مزید تقویت دےگا۔ وزیرخارجہ ترکمانستان کو سرمایہ کاری کے لیے ایس آئی ایف سی کے اہم کردار سے آگاہ کیا، جب کہ تجارت، سرمایہ کاری، توانائی، آئی ٹی کے ترجیحی شعبوں میں روابط بڑھانے پرغورکیا گیا، ہم نے سیاست، معیشت، دفاع اور دیگر شعبوں میں دوطرفہ تعاون کو وسعت دینے پراتفاق کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم ترکمانستان کی کمپنیوں کو پاکستان میں سرمایہ کاری کی دعوت دیتے ہیں، ترکمانستان کی کمپنیاں گوادر اور کراچی کی بندرگاہوں سے فائدہ اٹھائیں، پاکستانی بندرگاہیں دونوں ممالک کی کاروباری برادری کے لیے پرکشش موقع فراہم کرتی ہیں۔

ترکمانستان کے وزیر خارجہ راشد میردوو نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مہمان نوازی پر پاکستان کا شکریہ ادا کرتا ہوں ،ہماری آج کی ملاقات میں توانائی ،سرمایہ کاری اور ٹیکنالوجی کے شعبوں کے مختلف امور پر گفتگو ہوئی ہے۔ پاکستان ہمارا دوست اور بردار ملک ہے، نائب وزیر اعظم اور وزیر خارجہ اسحاق ڈار سے دو طرفہ تعلقات کے تمام پہلوؤں کا جائزہ لیا، جس میں دونوں ممالک کے مختلف شعبوں میں بھر پور تعاون کی یقین دہائی کرائی گئی ہے۔

قبل ازیں ترکمانستان کے وزیر خارجہ راشد میردوو دفتر خارجہ پہنچ گئے جہاں پاکستان کے نائب وزیراعظم اور وزیر خارجہ اسحا ق ڈار نے ان کا استقبال کیا۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll