جی این این سوشل

کھیل

نیوزی لینڈ ویمنز نے تیسرے اور آخری ٹی 20 میچ میں پاکستان ویمنز کو 6 رنز سے شکست دیدی

گرین شرٹس نیوزی لینڈ میں ٹی 20 سیریز جیتنے والی پہلی ایشیائی ٹیم ہونے کا منفرد اعزاز حاصل کیا

پر شائع ہوا

کی طرف سے

نیوزی لینڈ ویمنز نے تیسرے اور آخری ٹی 20 میچ میں پاکستان ویمنز کو 6 رنز سے شکست دیدی
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

کوئنز ٹاؤن: نیوزی لینڈ ویمنز نے تیسرے اور آخری ٹی 20 میچ میں پاکستان ویمنز کو 6 رنز سے شکست دے دی۔

خراب موسم کے باعث میچ کا فیصلہ ڈک ورتھ لوئس قانون کے تحت ہوا ۔ پاکستان ویمنز نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے 5 وکٹوں پر 137 رنز بنائے، نیوزی لینڈ ویمنز نے 15 اوورز میں 2 وکٹوں پر 101 رنز بنائے تھے کہ بارش شروع ہو گئی اور میچ ختم کر دیا گیا۔

اس طرح تین ٹی 20 انٹرنیشنل میچوں کی یہ سیریز پاکستان ویمنز نے 1-2 سے اپنے نام کی ہے ۔ گرین شرٹس نے پہلا میچ 7 وکٹوں اور دوسرا میچ 10 رنز سے جیت کر نیوزی لینڈ میں ٹی 20 سیریز جیتنے والی پہلی ایشیائی ٹیم ہونے کا منفرد اعزاز حاصل کیا۔

گزشتہ روز جان ڈیوس اوول میں کھیلے گئے تیسرے ٹی 20 انٹرنیشنل میں نیوزی لینڈ ویمنز نے ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ کیا ، پاکستان ویمنز چار تبدیلیوں کے ساتھ میدان میں اتری ، شوال ذوالفقار، بسمہ معروف، ڈیانا بیگ اور نجیہہ علوی کی جگہ سدرہ امین، صدف شمس، وحیدہ اختر اور نتالیہ پرویز کو ٹیم میں شامل کیا گیا۔

کپتان ندا ڈار کا یہ 141واں ٹی 20 انٹرنیشنل میچ تھا ، اس طرح وہ پاکستان کی طرف سے سب سے زیادہ ٹی 20 انٹرنیشنل کھیلنے والی کھلاڑی بن گئیں، پاکستان ویمنز نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے مقررہ 20 اوورز میں 5 وکٹوں کے نقصان پر 137 رنز بنائے ، منیبہ علی اور سدرہ امین نے 64 رنز کا آغاز فراہم کیا، سدرہ امین نے چار چوکوں کی مدد سے 43 اور منیبہ علی نے دو چوکوں کی مدد سے 27 رنز اسکور کیے تاہم ان دونوں کے بعد دیگر بیٹرز مجموعی سکور میں 73 رنز کا اضافہ کر پائیں، ندا ڈار نے دو چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 25 اور فاطمہ ثناء نے دو چوکوں کی مدد سے 17 رنز بنائے۔

تجارت

حکومت کا پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کی ذمہ داری سے نکلنے کا فیصلہ

حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں مقرر کرنے کا اختیار آئل مارکیٹنگ کمپنیوں کو منتقل کرنے کا فیصلہ کر لیا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

حکومت کا پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کی ذمہ داری سے نکلنے کا فیصلہ

حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں مقرر کرنے کا اختیار آئل مارکیٹنگ کمپنیوں کو منتقل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کی ذمہ داری سے نکلنے کا فیصلہ کیا ہے،وزیراعظم شہبازشریف نےقیمتیں مقرر کرنے کا حکومتی اختیارختم کرنے کی ہدایت کردی۔

ذرائع کے مطابق قیمتیں بڑھانے کےنتیجے میں حکومت کو شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑتا ہے،قیمتیں کم ہونے کی صورت میں حکومت کو مطلوبہ عوامی ستائش نہیں ملتی۔جس پر آئل مارکیٹنگ کمپنیوں کو مرحلہ وار قیمتیں مقرر کرنے کا اختیار دینے کی تیاری کرلی گئی ہے۔

وزیراعظم کی ہدایت پر وزیر پیٹرولیم نے اہم اجلاس کل طلب کرلیا۔چئیرمین اوگرا کو قیمتیں ڈی ریگولیٹ کرنے کے اثرات اور لائحہ عمل تیار کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں ڈی ریگولیٹ کرنے کا حتمی فریم ورک وزیراعظم کو پیش کیا جائے گا۔

پیٹرولیم ڈیلرز نے آئل مارکیٹنگ کمپنیوں کو قمتیں مقرر کرنے کااختیار دینے کی مخالفت کی تھی۔ ان کاکہناہے کہ کھلا اختیار ملنے پر آئل مارکیٹنگ کمپنیوں کی جانب ناجائز منافع خوری کا خدشہ ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

وفاقی کابینہ کی جانب سے آن لائن ویزہ درخواستوں کے نظام کے نفاذ کی منظوری

اس سلسلے میں وزارت داخلہ میں ایک ڈیش بورڈ قائم کیاجائے گا تاکہ آن لائن ویزے کے نظام کی نگرانی کی جاسکے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

وفاقی کابینہ کی جانب سے  آن لائن ویزہ درخواستوں کے نظام کے نفاذ کی منظوری

وفاقی کابینہ نے آن لائن ویزہ درخواستوں کے نظام کے نفاذ کی منظوری دے دی ۔

جس کے تحت 126 ملکوں کے شہری 24 گھنٹے کے اندر کاروباری اورسیاحتی ویزے حاصل کرسکیں گے ان 125 ملکوں کے شہریوں کو ویزہ فیس سے استثنی حاصل ہوگا۔

کابینہ نے جس کا اجلاس وزیراعظم شہبازشریف کے زیر صدارت آج(بدھ) کو اسلام آباد میں ہوا ویزہ آن ارائیول  کی ایک ذیلی کیٹگری کی بھی منظوری دی جس کا مقصد تیسرے ملک کے پاسپورٹ رکھنے والے سکھ یاتریوں کوسہولت فراہم کرنا ہے۔

اس سلسلے میں وزارت داخلہ میں ایک ڈیش بورڈ قائم کیاجائے گا تاکہ آن لائن ویزے کے نظام کی نگرانی کی جاسکے۔

کابینہ نے ملک کے مختلف شہروں میں خصوصی اور بینکنگ عدالتوں کے نوٹی فیکیشن کی منظوری دی یہ عدالت سیکورٹی اینڈ ایکس چینج کمیشن آف پاکستان کے تحت کام کریں گی۔

کابینہ نے پاکستان اور ڈنمارک کے درمیان لاجسٹکس ، ٹرانسپورٹ، سرسبز اور پائیدار ترقی واٹر WASTE مینجمنٹ ، شہری علاقوں میں ماحول دوست منصوبوں کی ترقی ، قابل تجدید توانائی اور سرکاری ونجی شراکت کے تحت بنیادی ڈھانچے کی تعمیر سمیت مختلف شعبوں میں تعاون کو فروغ دینے کیلئے ایک مفاہمتی یادداشت پردستخط کرنے کی بھی منظوری دی۔

وفاقی کابینہ نے ایک قرارداد بھی منظور کی ہے جس میں اسرائیل کی مذمت اور فلسطینیوں کی حمایت کی گئی ہے اور جنگی جرائم کے ارتکاب پر اسرائیل کے خلاف مقدمہ چلانے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

اجلاس میں کہا گیا کہ اسرائیلی فورسز کی بلاامتیاز بمباری سے شہری آبادی، ہسپتال، سکول، اقوام متحدہ کے دفاتر اور صحافی کچھ بھی محفوظ نہیں ہے۔

اجلاس میں کہا گیا کہ مقبوضہ فلسطینی علاقے قبرستان اور ملبے کا ڈھیر بن چکے ہیں۔

اجلاس میں مزیدکہا گیا کہ عالمی عدالت انصاف فلسطینی علاقوں میں اسرائیلی اقدامات کو پہلے ہی غیر قانونی اور بین الاقوامی قانون کی خلاف ورزی قرار دے چکی ہے۔

اجلاس میں اس مسئلے سے موثر طور پر نمٹنے کے لئے تمام بین الاقوامی فورمز پر اسلامی ممالک کی جانب سے متحدہ حکمت عملی کی ضرورت پر بھی زور دیا گیا۔

وفاقی کابینہ نے مسئلہ فلسطین پر شنگھائی تعاون تنظیم کے موقف کو بھی سراہا اور عالمی برادری پر زور دیا کہ غزہ میں اسرائیل کے مذموم جنگی جرائم کے خلاف کارروائی کرے۔

اجلاس میں اس تنازع کے حل کے لئے1967 سے پہلے کی سرحدوں اور دارالحکومت القدس الشریف کے ساتھ فلسطینی ریاست کے قیام پر مبنی دو ریاستی حل کے حوالے سے پاکستان کے دیرینہ موقف کا اعادہ کیا گیا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پاکستانی لڑکے سے شادی کرنے پر بھارتی مسلم خاتون گرفتار

دوسری جانب خاتون کی والدہ کا کہنا ہے کہ 2015 میں میری بیٹی نے شوہر سے علیحدگی کے بعد اپنا اور اپنے بچوں کا نام تبدیل کرلیا تھا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پاکستانی لڑکے سے  شادی کرنے پر بھارتی مسلم  خاتون گرفتار

نئی دہلی: بھارتی پولیس نے مہاراشٹر کی رہائشی خاتون کے خلاف جعلی نام اور جعلی آدھار کارڈ بنوا کر پاکستانی ویزہ حاصل کرنے کے الزام میں تحقیقات کا آغاز کردیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست مہاراشٹرا کی خاتون نغمہ کی فیس بک پر ایبٹ آباد کے رہائشی بابر بشیر احمد سے 2021 میں دوستی ہوئی تھی اور پھر دونوں نے فروری 2024 میں آن لائن شادی کرلی تھی۔

بھارتی خاتون نغمہ نے پاکستانی ویزہ نہ ملنے پر آن لائن شادی کی اور پھر ویزے کے لیے اپلائی کیا اور دستاویز میں اپنا نام صنم لکھوایا۔ بعد ازاں وہ پاکستان گئیں اور 17 جولائی کو واپس بھارت پہنچی تھیں۔
پولیس نے شک ہونے پر خاتون کو شہر سے باہر نہ جانے کی ہدایت کرتے ہوئے تحقیقات کا آغاز کردیا۔

دوسری جانب خاتون کی والدہ کا کہنا ہے کہ 2015 میں میری بیٹی نے شوہر سے علیحدگی کے بعد اپنا اور اپنے بچوں کا نام تبدیل کرلیا تھا۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll