جی این این سوشل

دنیا

اقوام متحدہ کے سربراہ کا آرمینیا-آذربائیجان معاہدے کا خیرمقدم

دوطرفہ تعلقات کو معمول پر لانے کے اپنے عزم کا اعادہ کیا گیا ہے

پر شائع ہوا

کی طرف سے

اقوام متحدہ کے سربراہ کا آرمینیا-آذربائیجان معاہدے کا خیرمقدم
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

اقوام متحدہ: اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس نے آرمینیا اور آذربائیجان کے درمیان تعلقات کو بہتر بنانے کے معاہدے کا خیر مقدم کیا ہے۔

چینی خبررساں ادارے کے مطابق اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کے ترجمان سٹیفن دوجارک نے میڈیا کوبتایا کہ سیکرٹری جنرل آرمینیا اور آذربائیجان کی طرف سے جاری کردہ مشترکہ بیان کا خیرمقدم کرتے ہیں جس میں اعتماد سازی کے کئی اقدامات کا اعلان کیا گیا ہے اور دوطرفہ تعلقات کو معمول پر لانے کے اپنے عزم کا اعادہ کیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ فریقین کی حوصلہ افزائی کرتا ہے کہ وہ باہمی اعتماد کو آگے بڑھانے اور طویل مدتی امن کو اپنی آبادیوں اور خطے کے فائدے کے لیے اس معاہدے پر قائم کریں۔دریں اثنا آرمینیا اور آذربائیجان نے ایک مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ ہ وہ جنگی قیدیوں کی رہائی کے ذریعے اعتماد سازی کے اقدامات کرنے کے حوالے سے ایک معاہدے پر پہنچ گئے ہیں جس کے بعد ان کی پہلی براہ راست بات چیت کے بعد کوئی ثالث شامل نہیں ہے۔

واضح رہے کہ آرمینیا اور آذربائیجان متنازعہ علاقے ناگورنو کاراباخ پر 1988 سے تنازعات کا شکار ہیں۔

پاکستان

آرمی چیف جنرل سید عاصم منیر سے اے ایس پی شہر بانو نقوی کی ملاقات

آرمی چیف کی شہربانو کی بے لوث لگن اور ایک غیر مستحکم صورتحال کو دور کرنے میں پیشہ ورانہ مہارت کی تعریف

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

آرمی چیف جنرل سید عاصم منیر سے اے ایس پی شہر بانو نقوی کی ملاقات

آرمی چیف جنرل سید عاصم منیر سے اے ایس پی شہر بانو نقوی کی ملاقات، آرمی چیف کی شہربانو کی بے لوث لگن اور ایک غیر مستحکم صورتحال کو دور کرنے میں پیشہ ورانہ مہارت کی تعریف کی، نڈر افسر نے 26 فروری 2024 کو لاہور کے اچھرہ بازار کے مشکل ماحول سے ایک خاتون کو نکالا۔

آرمی چیف نے اسلام کے حسن سلوک اور احسان کے ابدی پیغام پر بھی روشنی ڈالی۔انہوں نے کہا کہ تحفظات اور شکایات کے حل کےلئے قانونی راستے میسر ہوتے ہوئے قانون کو ہاتھ میں نہیں لینا چاہیے۔ بدعت کی بنیاد پر من مانی کارروائیاں معاشرے کے نقطہ نظر کو کمزور کرتی ہیں۔

آرمی چیف جنرل عاصم منیر نے کہا کہ پاکستانی خواتین زندگی کے تمام شعبوں میں اہم کردار ادا کر رہی ہیں۔ آزادی کے بعد سے، پاکستانی خواتین نے اپنی قابلیت، استقامت اور عزم کی وجہ سے اندرون اور بیرون ملک خود کو ممتاز کیا ہے۔ انہوں نے اس بات پر روشنی ڈالی کہ خواتین پاکستان کے معاشرے کا ایک انمول حصہ ہیں اور ان کا احترام ہمارے مذہب کے ساتھ ساتھ ہمارے معاشرتی اقدار میں بھی شامل ہے۔

جنرل عاصم منیر نے سماجی ہم آہنگی کی اہمیت اور عدم برداشت کو روکنے کے لیے ملک گیر اتفاق رائے کی ضرورت پر بھی زور دیا۔ انہوں نے قانون کی حکمرانی پر زور دیا اور تحفظات اور شکایات کے حل کے لیے قانونی راستے دستیاب ہونے پر قانون کو ہاتھ میں نہ لینے کا مشورہ دیا۔ یہ نوٹ کرتے ہوئے کہ بدعت کی بنیاد پر من مانی کارروائیاں معاشرے کے نقطہ نظر کو کمزور کرتی ہیں

آرمی چیف جنرل عاصم منیر نے پاکستان کے شہریوں کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لیے قانون نافذ کرنے والے اداروں کی قربانیوں کو سراہا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

خواتین کو بائیکس دینے کی قرارداد پنجاب اسمبلی میں پیش

حکام کے مطابق موٹر سائیکلوں کی تقسیم شفاف رائے دہی کے عمل کے ذریعے کی گئی تاکہ انصاف اور رسائی کو یقینی بنایا جا سکے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

خواتین کو بائیکس دینے کی قرارداد پنجاب اسمبلی میں پیش

لاہور: پہلی قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع کرادی گئی ہے جس میں خواتین کے لیے پنک  بائیک کے پروگرام پر نظرثانی کا معاملہ ایوان سے اٹھانے کا کہا گیا ہے۔

مسلم لیگ ن کی ایم پی اے سعدیہ تمور نے قرارداد پیش کی ، مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے گزشتہ دور حکومت میں ملازمت پیشہ خواتین کو بااختیار بنانے کے لیے پروگرام متعارف کرایا۔

 قرارداد میں خواتین اور لڑکیوں کی طرف سے چلائی جانے والی سیکڑوں اور ہزاروں  بائیکس  کا حوالہ بھی دیا گیا اور کہا گیا کہ یہ سکیم سستی بائیک کی فراہمی کے لیے ایک اچھا فیصلہ ہے۔


رپورٹس کے مطابق سابق حکومت نے موٹر بائیک سبسڈی اسکیم کی بھی نقاب کشائی کی، جس کا مقصد رعایتی نرخوں پر 3000 موٹر سائیکلیں پیش کرکے خواتین کی نقل و حرکت کو فروغ دینا تھا۔

حکام کے مطابق موٹر سائیکلوں کی تقسیم شفاف رائے دہی کے عمل کے ذریعے کی گئی تاکہ انصاف اور رسائی کو یقینی بنایا جا سکے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پی ٹی آئی کا مخصوص نشستوں پر ڈاکہ عوامی مینڈیٹ لوٹنے کےحصہ قرار

عوامی مینڈیٹ پر ڈاکہ ڈالنے والے الیکشن کمیشن کی شرمناک سہوتکاری سے مخصوص نشستوں کو غیرآئینی طور پر مینڈیٹ چوروں میں بانٹنے کامنصوبہ بنا رہے ہیں، پی ٹی آئی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پی ٹی آئی کا مخصوص نشستوں پر ڈاکہ عوامی مینڈیٹ لوٹنے کےحصہ قرار

پاکستان تحریک انصاف نے خواتین اور اقلیّتوں کی مخصوص نشستوں پر ڈاکہ عوامی مینڈیٹ لوٹنے کے شرمناک ریاستی منصوبے کا حصہ قرار دے دیا۔

اپنے بیان میں پارٹی ترجمان نے کہا ہے کہ عوامی مینڈیٹ پر کھلا ڈاکہ ڈالنے والے الیکشن کمیشن کی شرمناک سہولتکاری سے مخصوص نشستوں کو غیرآئینی طور پر مینڈیٹ چوروں میں بانٹنے کے ناقابلِ قبول منصوبے بنا رہے ہیں، دستور کا آرٹیکل 51 مخصوص نشستوں کی تقسیم کے بنیادی اصولوں کو نہایت صراحت سے بیان کرتا ہے۔

ترجمان کے مطبق خواتین اور اقلیّتوں کی مخصوص نشستوں کو جنرل سیٹوں کے تناسب سے ہی تقسیم ہونا ہے، سنّی اتحاد کونسل مرکز، پنجاب اور خیبرپختونخوا میں سب سے زیادہ نشستیں رکھنے والی پارلیمانی جماعت ہے اور مخصوص نشستوں کی فراہمی میں لیت و لعل اکثریت کو غیرقانونی طور پر جبراً اقلیت میں بدلنے کے غیرآئینی اور غیرجمہوری منصوبے کا حصہ ہے۔

ترجمان تحریک انصاف اپنے بیان میں مزید کہا کہ جمہوریت کو غیرآئینی و غیرقانونی عزائم کا اسیر بنا کر عوام کے مینڈیٹ کو پامال کرنے کی اجازت ہرگز نہیں دیں گے، جعلی فارم 47 کے ذریعے چھینی گئی قومی و پنجاب اسمبلی کی نشستیں بھی واپس لیں گے اور مخصوص نشستوں کی غیرآئینی بندربانٹ کی بھی بھرپور مزاحمت کریں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll