جی این این سوشل

تجارت

ایشیائی ترقیاتی بینک کی رپورٹ حکومت کی مضبوط معاشی پالیسیوں کی توثیق ہے، احد چیمہ

وزیراعظم شہباز شریف کی قیادت میں مستحکم اور پائیدار معیشت کے لیے کام شروع ہو چکا ہے، وفاقی وزیر اقتصادی امور

پر شائع ہوا

کی طرف سے

ایشیائی ترقیاتی بینک کی  رپورٹ حکومت کی مضبوط معاشی پالیسیوں کی توثیق ہے، احد چیمہ
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

وفاقی وزیر اقتصادی امور احد چیمہ نے ایشیائی ترقیاتی بینک (اے ڈی بی) کی ایشین ڈویلپمنٹ آوٹ لْک رپورٹ اپریل 2024 کو حکومت کی درست اقتصادی پالیسیوں کی توثیق قرار دیتے ہوئے کہا کہ ملک میں مہنگائی کم ہو رہی ہے، اس کی تصدیق عالمی مالیاتی ادارے بھی کر رہے ہیں۔

وفاقی وزیر برائے اقتصادی امور احد چیمہ نے کہا کہ ایشیائی ترقیاتی بینک (اے ڈی بی) کی آؤٹ لک رپورٹ حکومت کی مضبوط معاشی پالیسیوں کی توثیق ہے۔اے ڈی بی کی رپورٹ میں پاکستان کی معیشت کے بارے میں مثبت امکانات کا اظہار کیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم شہباز شریف کی قیادت میں مستحکم اور پائیدار معیشت کے لیے کام شروع ہو چکا ہے۔ اس کی تصدیق بین الاقوامی مالیاتی اداروں نے بھی کی ہے کہ ملک میں مہنگائی کم ہو رہی ہے۔ مالیاتی نظم و ضبط کو بہتر بنانے اور سرمایہ کاری کے فروغ کے لیے کام کر رہے ہیں۔

احد چیمہ نے کہا کہ پاکستان کا زرعی شعبہ مضبوط ہے اور اس میں اضافی ترقی کی صلاحیت موجود ہے، حکومت ایشیائی ترقیاتی بینک کی سفارشات پر عمل کرنے کے لئے پرعزم ہے۔ ہم ایک ایسی معیشت بنانے کے لئے کام جاری رکھیں گے جس میں تمام پاکستانیوں کے لئے مواقع دستیاب ہوں۔

واضح رہے کہ ایشیائی ترقیاتی بینک نے ایشین ڈویلپمنٹ آوٹ لْک رپورٹ اپریل 2024ء جاری کی ہے، ایشیائی ترقیاتی بینک نے پاکستان کے لئے اقتصادی اصلاحات کو اہم قرار دیا ہے اور رواں مالی سال کے دوران پاکستان کی شرح نمو 1.9 فیصد رہنے کی توقع کا اظہار کیا ہے۔

آئوٹ لک رپورٹ میں پاکستان کی آئندہ مالی سال کے لئے شرح نمو 2.8 فیصد ہونے کا تخمینہ  لگایا  گیا  ہے۔ رپورٹ کے مطابق پاکستان میں آئندہ مالی سال کے دوران مہنگائی میں مزید کمی آنے کی امید ہے جبکہ مہنگائی کی شرح 15 فیصد تک آ جائے گی۔

پاکستان

حکومت نے کھاد کارخانوں کیلئے گیس پر سبسڈی ختم کرنے کی منظوری دیدی

کھاد کارخانوں کو سبسڈی دینے سے کسانوں کو کوئی فائدہ نہیں پہنچ رہا، حکومت

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

حکومت نے کھاد کارخانوں کیلئے گیس پر سبسڈی ختم کرنے کی منظوری دیدی

وفاقی حکومت نے کھاد کے کارخانوں کے لیے گیس پر سبسڈی ختم کرنے کی منظوری دے دی۔

ذرائع کے مطابق وفاقی کابینہ نے اتفاق رائے سے کھاد فیکٹریوں کوملنے والی سبسڈی مکمل طور پر ختم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

کھاد کے کارخانوں کو اس وقت 217 روپے فی ایم ایم بی ٹی یو سبسڈی مل رہی ہے ، کارخانوں کو 1597 روپے فی ایم ایم بی ٹی یو قیمت پر گیس سپلائی کی جارہی ہے۔

حکومت کا کہنا ہے کہ کھاد کارخانوں کو سبسڈی دینے سے کسانوں کو کوئی فائدہ نہیں پہنچ رہا۔

کابینہ کے فیصلے پر عملدرآمد کے بعد کارخانوں کو فراہم کی جانے والی گیس کی قیمت 1814 روپے فی ایم ایم بی ٹی یو ہو جائے گی ، حکومت کسانوں کو برائے راست سبسڈی فراہم کرنے کا ارداہ رکھتی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

تجارت

ہفتہ وار مہنگائی کی شرح میں مزید کمی

رپورٹ کے مطابق  رواں ہفتے میں 18 اشیاء سستی اور12 اشیائے ضروریہ مہنگی ہوئیں جبکہ 21 اشیائے ضروریہ کی قیمتیں مستحکم رہیں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ہفتہ وار مہنگائی کی شرح میں  مزید   کمی

ادارہ شماریات کے مطابق ملک میں ہفتہ وار مہنگائی کی شرح مزید 0.34  فیصد کم ہوگئی ہے۔

رپورٹ کے مطابق  رواں ہفتے میں 18 اشیاء سستی اور12 اشیائے ضروریہ مہنگی ہوئیں جبکہ 21 اشیائے ضروریہ کی قیمتیں مستحکم رہیں۔

ادارہ شماریات نے مہنگائی سے متعلق ہفتہ وار رپورٹ جاری کردی ہے جس کے مطابق ملک میں مہنگائی کی مجموعی سالانہ شرح 21.31 فیصد پر آگئی ہے ، اس ہفتے میں لہسن 7.87، چکن 5.92، آٹا 4.66، پیاز 1.99 اور انڈوں کی قیمت میں 1.22 فیصد کی کمی واقع ہوئی ہے، اسی طرح  ایل پی جی 3.23 اور جلانے والی لکڑی کی قیمت میں بھی 0.04 فیصد کی کمی ہوئی ہے۔

اس کے علاوہ اسی ہفتے کچھ اشیاء ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ بھی دیکھا گیا ہے جن میں بیف 0.49 اور چنے کی دال 0.42 فیصد مہنگی ہوئی، جبکہ  چائے، مٹن، گڑ، دہی، دودھ اور سگریٹس بھی مہنگے ہوئے ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

علاقائی

کار سرکارمداخلت پر جمشید دستی کے خلاف مقدمہ درج

جمشید دستی نے پرائس کنٹرول مجسٹریٹ کو ہراساں کرنے اور کار سرکارمیں مداخلت کی ہے، ایف آئی آر کا متن

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

کار سرکارمداخلت پر جمشید دستی کے خلاف مقدمہ درج

پرائس کنٹرول مجسٹریٹ کو ہراساں کرنے اور کار سرکار میں مداخلت پر جمشید دستی کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا۔

پولیس ذرائع کے مطابق جمشید دستی نے ساتھیوں کے ہمراہ گراں فروشوں پر عائد جرمانوں کی رسیدیں پھاڑ دیں،جس پر پولیس نے مقدمہ درج کر لیا۔

درج کی گئی ایف آر کے متن کے مطابق جمشید دستی نے پرائس کنٹرول مجسٹریٹ کو ہراساں کرنے اور کار سرکارمیں مداخلت کی ہے۔انہوں نے لوگوں کو افسران کے خلاف احتجاج پر اُکسایا ہے۔

ذرائع کے مطابق جمشید دستی کی تاحال گرفتاری عمل میں نہیں لائی گئی۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll