جی این این سوشل

تجارت

وزیراعظم سے چیمبرز آف کامرس اور مختلف صنعتی و کاروباری ایسوسی ایشنز کے نمائندگان کی ملاقات

وزیر اعظم نے کہا کہ معیشت بحالی کی پٹڑی پر گامزن ہے ،  مزید معاشی استحکام کے لئے کام کر رہے ہیں ، معیشت کو مکمل طور پر ڈیجیٹائز کیا جا رہا ہے

پر شائع ہوا

کی طرف سے

وزیراعظم سے  چیمبرز آف کامرس اور مختلف صنعتی و کاروباری ایسوسی ایشنز کے نمائندگان کی ملاقات
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

وزیراعظم محمد شہباز شریف سے ملک بھر کے چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری اور مختلف صنعتی و کاروباری ایسوسی ایشنز کے نمائندگان کی ملاقات ہوئی ۔ 

وزیراعظم نے کاروباری نمائندگان کی موجودگی میں  ویئر ہاؤس اور لاجسٹکس کو انڈسٹری کا درجہ دینے کا اعلان کردیا ، 

وزیر اعظم نے کہا کہ معیشت بحالی کی پٹڑی پر گامزن ہے ،  مزید معاشی استحکام کے لئے کام کر رہے ہیں ، معیشت کو مکمل طور پر ڈیجیٹائز کیا جا رہا ہے ۔ 

 

فیڈرل بورڈ آف ریونیو کی ڈیجیٹائزیشن پر کام کا آغاز کیا جا چکا ہے ، پاکستان میں مقامی سرمایہ کاری بڑھے گی تب ہی بیرونی سرمایہ کاری میں اضافہ ہو گا ۔ 

انہوں نے مزید کہا کہ میں اپنے آنے والے دورہء چین کے دوران چینی انڈسٹری کو پاکستان میں صنعتیں لگانے کی دعوت دوں گا ، حکومت کاروبار دوست ماحول فراہم کرنے کے حوالے سے بھرپور اقدامات اٹھا رہی ہے

حکومتی پالیسیوں سے افراط زر میں کمی واقع ہوئی ہے ، بجلی کی قیمتوں میں کمی لانے کے لئے متبادل توانائی بالخصوص شمسی توانائی کے نئے منصوبوں کی حوصلہ افزائی کریں گے ۔ 

تین بڑے ائیرپورٹس کی آؤٹ سورسنگ پر کام کا آغاز ہو چکا ہے ، قومی خزانے کو اربوں روپے کے نقصان سے بچانے کے لئے ماسواۓ چند اسٹریٹیجک ریاستی ملکیتی اداروں کے بقیہ تمام ایس او ایز کی نجکاری کر رہے ہیں ۔  
آئی ٹی انڈسٹری کی بہتر شرح نمو خوش آئند ہے ، بیرون ملک تعیناتی ٹریڈ اینڈ انویسٹمنٹ افسران کی کارکردگی جانچنے کے لئے تھرڈ پارٹی ویلیڈیشن کروائی جا رہی ہے ۔ 

وزیراعظم نے وفد کو ان کے تمام جائز مطالبات اور مسائل کے حل کی یقین دہانی بھی کروائی ، وزیراعظم نے وفاقی وزراء کو تمام صنعتی شعبوں کے ساتھ تفصیلی بات چیت کے لئے ٹاسک دے دیا 

کاروباری برادری معیشت کی بہتری اور ٹیکس نیٹ میں اضافے کے حوالے سے حکومت کا بھرپور ساتھ دے گی ۔

ملاقات میں وفاقی وزیر تجارت جام کمال خان ، وفاقی وزیر خزانہ و محصولات محمد اورنگزیب ، وفاقی وزیر صنعت و پیداوار رانا تنویر حسین ، وزیر مملکت علی پرویز ملک ، وزیراعظم کے کوآرڈینیٹر رانا احسان افضل ، چیئر مین فیڈرل بورڈ آف ریونیو اور دیگر اعلیٰ سرکاری افسران نے شرکت کی ۔

جرم

پشاور میں جائیداد کے تنازع پر فائرنگ سے ایک ہی گھر سے 8 افراد جاں بحق

فائرنگ سے گھر میں موجود چار خواتین اور چار بچے موقع پر جاں بحق ہوگئے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پشاور میں جائیداد کے تنازع پر فائرنگ سے ایک ہی گھر سے 8 افراد جاں بحق

پشاور کے نواحی علاقہ بڈھ بیر میں ملزمان کی گھر میں گھس کر فائرنگ سے بچوں اور خواتین سمیت ایک ہی خاندان کے آٹھ افراد جاں بحق جبکہ دو زخمی ہوگئے۔

ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر بڈھ بیر کے مطابق فائرنگ کا واقعہ جائیداد کے تنازعہ کے باعث پیش آیا جس میں مخالف فریق نے گھر میں گھس کر فائرنگ کر دی۔ پولیس کا کہنا ہے کہ فائرنگ سے گھر میں موجود چار خواتین اور چار بچے موقع پر جاں بحق ہوگئے جبکہ دو افراد فائرنگ کی وجہ سے زخمی ہوئے ہیں۔

ڈی ایس پی بڈھ بیر کا کہنا ہے کہ واقعہ کے بعد پولیس نفری جائے وقوعہ پہنچ گئی ہے اور جاں بحق افراد کو پوسٹ مارٹم اور زخمیوں کو علاج کے لئے ہسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

دوسری جانب متاثرہ خاندان کے رشتہ دار صحافی خالد الرحمان نے واقعہ کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ یہ سانحہ پولیس کی غفلت کے باعث پیش آیا کیونکہ ان بقول وہ واقعہ کے دوران مسلسل ایک گھنٹہ پولیس کو کال کرتا رہا لیکن پولیس کی جانب سے کوئی جواب نہیں مل جس کی وجہ قیمتی جانوں کا ضیاع ہوگیا۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

روس کے آرمی چیف اور سابق وزیر دفاع کی وارنٹ گرفتاری جاری

عالمی عدالت انصاف نے وارنٹ یوکرین پر حملوں کی پاداش میں جاری کئے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

روس کے آرمی چیف اور سابق وزیر دفاع کی وارنٹ گرفتاری جاری

عالمی عدالت انصاف نے روس کے آرمی چیف اور سابق وزیر دفاع کی گرفتاری کے وارنٹ جاری کر دیئے،وارنٹ یوکرین پر حملوں کی پاداش میں جاری کئے گئے،جو مبینہ جنگی جرائم کے مرتکب ہیں۔

آئی سی سی کے وارنٹ یوکرین جنگ کے حوالے سے عدالت کی کارروائیوں کے سلسلے میں تازہ ترین ہیں، جن میں روسی صدر ولادیمیر پوتن کی گرفتاری کا وارنٹ بھی شامل ہے۔یہ وارنٹ پیر کو جاری کیے گئے لیکن منگل کو عام کیے گئے۔

آئی سی سی نے ایک بیان میں کہا کہ ان دونوں افراد پر شہریوں پر حملوں کی ہدایت دینے اور ضرورت سے زیادہ حادثاتی نقصان پہنچانے کے ساتھ ساتھ یوکرین میں انسانیت کے خلاف جرم کے "غیر انسانی کارروائیوں" کا الزام ہے۔

آئی سی سی کے ججوں نے کہا کہ "اس بات پر یقین کرنے کے لیے شواہد موجود ہیں کہ یہ دونوں مشتبہ افراد روسی مسلح افواج کی طرف سے یوکرین کے انفراسٹرکچر کے خلاف 10 اکتوبر 2022 سے 9 مارچ 2023 تک کیے گئے میزائل حملوں کی ذمہ داری قبول کرتے ہیں۔"

یوکرین نے اس اہم فیصلے کا خیرمقدم کرتے ہوئے ایوان صدر کے چیف آف اسٹاف اینڈری یرمک نے کہا کہ ہر ایک کو اپنے کئے کا جوابدہ ٹھہرایا جائے گا۔

واضح رہے کہ آئی سی سی کے پاس گرفتاری کے وارنٹ کو نافذ کرنے کے لیے اپنی پولیس فورس نہیں ہے۔ یہ اپنے 124 ممبران کے انصاف کے نظام پر انحصار کرتا ہے۔اصولی طور پر، وارنٹ کے تحت کسی کو بھی گرفتاری کے خوف سے آئی سی سی کے رکن ملک کا سفر کرنے سے روک دیا جاتا ہے۔

پوٹن خود بیرون ملک سفر کر چکے ہیں، خاص طور پر کرغزستان، سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات، جو کہ آئی سی سی کے رکن ممالک نہیں ہیں۔

تاہم، انہوں نے جنوبی افریقہ میں برکس (برازیل، روس، بھارت، چین، جنوبی افریقہ) کی میٹنگ کو نظر انداز کیا، جس سے وارنٹ پر عمل درآمد کی توقع کی جا سکتی تھی۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

یہ ملک کسی آپریشن کا متحمل نہیں ہوسکتا، بیرسٹر گوہر

جب انصاف وقت پر نہ ہو اور دیر سے ملے تو یہ بھی ناانصافی ہے، چیئرمین پی ٹی آئی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

یہ ملک کسی آپریشن کا متحمل نہیں ہوسکتا، بیرسٹر گوہر

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین بیرسٹر گوہر نے کہا کہ استحکام کیلئے یہ ملک کسی آپریشن کا متحمل نہیں ہوسکتا، استحکام کیلئے پارلیمان میں اُن لوگوں کو ہونا چاہئے جو اسکے حق دار ہیں۔

الیکشن کمیشن کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بیرسٹر گوہر جب انصاف وقت پر نہ ہو اور دیر سے ملے تو یہ بھی ناانصافی ہے، ریحانہ ڈار کی جگہ فارم 47 والوں کو بٹھا دیا گیا، عمران خان کی رہائی کا فی الفور مطالبہ کرتے ہیں، رہا ہونے کے بعد ہماری خواتین کو دوبارہ گرفتار کرنا انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔ آج بجٹ کے اسپیشل سیشن میں پارلیمنٹ سے لے کر الیکشن کمیشن تک واک کی، خان صاحب اور بشریٰ بی بی سمیت ہماری بہنوں کی رہائی کے لیے واک کی گئی، ہماری بہنوں کو ایک بار رہائی کے بعد دوبارہ سے گرفتار کرنا انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے، احتجاج تب تک جاری رہے گا جب تک ہمارے لوگوں کو رہائی نہیں ملتی۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کے عوام پر کسی بھی قسم کا آپریشن نامنظور ہے، ہم نے بہت قربانیاں دی ہیں سارا کا سارا نزلہ خیبرپختونخوا اور بلوچستان کے عوام پر گرانے کی کوشش ہے، شہباز شریف کہتا ہے ہمیں سرمایہ کاری کے لیے آپریشن چاہیے بتائیں خیبرپختونخوا میں کتنی صنعتیں ہیں؟ سرمایہ کاری اس لیے نہیں آرہی کیونکہ ملک میں قانون کی حکمرانی نہیں ہے۔

بیرسٹر گوہر نے مزید کہا کہ یہ صرف 180 پارلیمنٹرینز کی واک نہیں 3 کروڑ ووٹرز کی واک ہے، عوام کے حقوق کا تحفظ کرتے ہوئے ہم نے فوجی آپریشن کی مخالفت کی، کوئی بھی فیصلہ ہو اس مسئلے کو ایوان میں لایا جائے، حکومت ہچکچاہٹ کا شکار ہے یہ ملک استحکام کے لیے آپریشن کا متحمل نہیں ہوسکتا، استحکام کے لیے اس ایوان میں ان لوگوں کو ہونا چاہیے جن کا حق ہے۔

اپوزیشن لیڈر عمر ایوب نے کہا کہ واحد پارٹی پی ٹی آئی ہے جس میں ڈیڑھ سال میں تین بار انٹرا پارٹی الیکشن ہوئے، عوامی نیشنل پارٹی کا الیکشن ہی نہیں ہوا اس کو 20 ہزار جرمانہ کیا گیا،ایک ملک میں دو قوانین نہیں چلنے دیں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll