جی این این سوشل

پاکستان

کورکمانڈر بلوچستان کا کوئٹہ میں سکھ گوردوارا کا دورہ

انہوں نے کہاکہ ہمیں ایک دوسرے کے مذہبی عقائد کا احترام کرنا چاہیے اور سماجی رواداری کو فروغ دینا چاہیے

پر شائع ہوا

کی طرف سے

کورکمانڈر بلوچستان کا  کوئٹہ میں سکھ گوردوارا کا دورہ
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

کورکمانڈر بلوچستان لیفٹیننٹ جنرل راحت نسیم احمد خان نے کوئٹہ میں سکھ گوردوار کا دورہ کیا ۔

سکھ برادری نے انہیں اپنی روایتی چادر سروپہ پیش کی ۔

کورکمانڈر نے اپنے خطاب میں کہاکہ ملک کی ترقی وخوشحالی کیلئے بین المذاہب ہم آہنگی ، رواداری اور بھائی چارہ انتہائی اہمیت کے حامل ہیں۔

انہوں نے کہاکہ ہمیں ایک دوسرے کے مذہبی عقائد کا احترام کرنا چاہیے اور سماجی رواداری کو فروغ دینا چاہیے ۔

علاقائی

ناران :  2 سیاح فوٹو بنواتے ہوئے گلیشیئر گرنے سے جاں بحق

مقامی افراد نے لاشوں کو نکال کر ناران بی ایچ یو پہنچا دیا، جہاں سے لاشوں کو ایمبولینس کے ذریعے راجن پور روانہ کر دیا گیا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ناران :  2 سیاح فوٹو بنواتے ہوئے گلیشیئر گرنے سے جاں بحق

مانسہرہ: مانسہرہ کے تفریحی مقام ناران میں آج ایک گلیشیئر کا ٹکڑا گرنے سے دو سیاح جاں بحق اور ایک زخمی ہو گیا۔

پولیس کے مطابق راجن پور سے تعلق رکھنے والی ایک فیملی ناران میں جھیل روڈ پر گھوم رہی تھی۔ 22 سالہ مہران اور اس کی 13 سالہ بھتیجی گلیشیئر کے نیچے تصاویر بنوا رہے تھے کہ اچانک گلیشیئر کا ایک وزنی ٹکڑا ٹوٹ کر ان کے اوپر آ گیا۔

مہران اور اس کی بھتیجی موقع پر ہی جاں بحق ہوگئے، جبکہ ان کے ساتھ موجود ایک اور رکن خاندان زخمی ہو گیا۔ زخمی شخص کو ناران کے مقامی ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔

مقامی افراد نے لاشوں کو نکال کر ناران بی ایچ یو پہنچا دیا، جہاں سے لاشوں کو ایمبولینس کے ذریعے راجن پور روانہ کر دیا گیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ جائے حادثہ پر سیاحوں کو گلیشیئر سے دور رہنے کی ہدایات کا بورڈ بھی لگا دیا گیا تھا، لیکن سیاحوں نے ہدایات پر عمل نہیں کیا۔

یاد رہے کہ گزشتہ سال ناران میں اس طرح کا ایک واقعہ پیش آیا تھا جس میں برف کا ایک ٹکڑا گرنے سے کراچی کی دو خواتین جاں بحق ہو گئی تھیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

موسم

لاہور سمیت پنجاب مختلف شہروں میں کہیں ہلکی اور کہیں موسلادھار بارش

بارش کے دوران لاہور کے کئی علاقوں میں بجلی کی فراہمی بھی متاثر ہوئی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

لاہور سمیت پنجاب مختلف شہروں میں کہیں ہلکی اور کہیں موسلادھار بارش

لاہور: پنجاب کے مختلف شہروں میں گرج چمک کے ساتھ ہونے والی بارشوں نے گرمی کا زور توڑ دیا ہے۔

لاہور کے علاقے ایبٹ روڈ، لکشمی چوک، شالیمار، گڑھی شاہو، مال روڈ، کینال روڈ، ہربنس پورہ، ساندہ، اسلام پورہ اور گردو نواح میں زوروں کی بارش ہوئی۔ بارش کے دوران لاہور کے کئی علاقوں میں بجلی کی فراہمی بھی متاثر ہوئی۔

لاہور کے علاوہ اسلام آباد، راولپنڈی، مری، جہلم، مریدکے، گوجرانوالہ، اٹک، وزیر آباد سمیت پنجاب کے دیگر متعدد شہروں میں بھی ہلکی اور تیز بارش ہوئی۔ بارشوں کے بعد موسم خوشگوار ہو گیا۔ تاہم، شدید بارشوں کے باعث سڑکیں ندی نالوں کا منظر پیش کرنے لگیں۔

دوسری جانب، نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (این ڈی ایم اے) نے بارشوں کے باعث اگلے تین دنوں کے دوران پنجاب کے اضلاع نارووال اور سیالکوٹ میں ہائی لیول فلیش فلڈنگ کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔ این ڈی ایم اے کے مطابق، جموں کے بالائی علاقوں میں بارشوں کے باعث نارووال اور سیالکوٹ کے ندی نالوں میں سیلاب آ سکتا ہے۔

این ڈی ایم اے نے صوبائی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹیز اور مقامی انتظامیہ کو چوکس رہنے اور خطرے سے دوچار آبادی کی حفاظت کے لیے ضروری اقدامات کرنے کی ہدایت کی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

علاقائی

این ٹی ڈی سی کا 12 گھنٹے کی طویل لوڈشیڈنگ پر وضاحتی بیان

حیسکو ریجن میں 12گھنٹے تک کی لوڈشیڈنگ کی وجہ صرف این ٹی ڈی سی کو قرار دینا درست نہیں:ترجمان 

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

این ٹی ڈی سی کا 12 گھنٹے کی طویل لوڈشیڈنگ پر وضاحتی بیان

لاہور:نیشنل ٹرانسمیشن اینڈ ڈسپیچ کمپنی (این ٹی ڈی سی) کے ترجمان نے 22 جولائی کو حیدرآباد الیکٹرک سپلائی کمپنی (حیسکو) کے علاقوں میں بجلی کی حالیہ طویل بندش کے بارے میں وضاحت کی ہے۔

ترجمان این ٹی ڈی سی کے مطابق حیسکو ریجن میں اضافی لوڈ مینجمنٹ کے اقدامات نیپرا گرڈ کوڈ 2023 کے مطابق کیے گئے۔ یہ اقدامات 21 جولائی بروز ہفتہ اور 22 جولائی بروز اتوار کی درمیانی شب پیدا ہونے والی ہنگامی صورتحال کے پیش نظر کیے گئے۔

ترجمان این ٹی ڈی سی نے زور دے کر کہا کہ 12 گھنٹے تک کی لوڈ شیڈنگ کوصرف این ٹی ڈی سی سے منسوب کرنے کا دعویٰ مبالغہ آرائی پر مبنی تھا اور یہ صورتحال کی درست وضاحت نہیں تھی۔

ترجمان نے کہا کہ ان اقدامات کی بنیادی وجہ گھارو اور جھمپیر ونڈ کلسٹرز میں واقع 36 ونڈ فارمز سے بجلی کی پیداوار میں نمایاں کمی تھی۔ یہ ونڈ فارمز 1,845 میگاواٹ کی مشترکہ پیداواری استعداد کے ساتھ این ٹی ڈی سی کے 500 کے وی جامشورو گرڈ سٹیشن کو بجلی فراہم کرتے ہیں۔ ہوا کی غیر معمولی طور پر کم رفتار کے نتیجے میں ونڈ فارمز سے بجلی کی پیداوار میں نمایاں کمی واقع ہوئی جس کے نتیجے میں جامشورو گرڈ سٹیشن کے ٹرانسفارمرز پر بہت زیادہ بوجھ پڑا۔

اہم آلات کی حفاظت کی کوشش میں این ٹی ڈی سی نے اضافی لوڈ شیڈنگ کیلئے حیسکو حکام کے ساتھ رابطہ کیا تاہم اتوار کی صبح تک ہوا کی رفتار معمول پر آ گئی جس کے بعد بجلی کی پیداوار بڑھنے پر حیسکو کے علاقوںمیں اضافی لوڈ شیڈنگ کی ضرورت نہیں رہی۔

یہاں یہ واضح کرنا ضروری ہے کہ لوڈ شیڈنگ کا اصل دورانیہ 12 گھنٹے کے مقابلے میں نمایاں طور پر کم تھا۔ترجمان این ٹی ڈی سی کے مطابق 4 گھنٹے تک تقریباً 75 میگاواٹ اور 6 گھنٹے تک 142 میگاواٹ کا شارٹ فال رہا جس کے نتیجے میں حیسکو کی جانب سے مختلف 11 کے وی فیڈرز پر اوسطاً ایک گھنٹہ لوڈشیڈنگ کی گئی۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll