جی این این سوشل

پاکستان

’کورونا کے نئے ویرینٹ کا علم نہیں، تعلیمی سرگرمیاں جاری رکھنا چاہتے ہیں‘

جنوبی افریقا سے سر اٹھانے والا وائرس برطانیہ، جرمنی، بیلجیئم، اٹلی اور چیک ری پبلک کے بعد آسٹریلیا پہنچ گیا ہے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

’کورونا کے نئے ویرینٹ کا علم نہیں، تعلیمی سرگرمیاں جاری رکھنا چاہتے ہیں‘
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

لاہور: وفاقی  وزیر تعلیم  شفقت محمود  نے کورونا کے نئے ویرینٹ کی اطلاعات پر کہا ہے کہ حکومت تعلیمی سرگرمیاں جاری رکھنا چاہتی ہے۔

لاہور میں میڈیا سےگفتگو کرتے ہوئے شفقت محمود نے کہا کہ کورونا وائرس کے نئے ویرینٹ کے  بارے میں تفصیلی علم نہیں لیکن تعلیمی سرگرمیاں جاری رکھنا چاہتےہیں۔

انہوں نے کہا کہ  امتحانات مقررہ وقت پر اور مکمل نصاب کےساتھ ہوں گے۔ دوسری جا نب وفاقی وزیر تعلیم نے  پنجاب میں  اسموگ کے پیش نظر تعلیمی اداروں میں  دی جانے والی چھٹیوں سے متعلق بھی بات کی۔

ان کا کہنا تھا کہ تعلیمی اداروں میں 3 دن کی چھٹیوں سے اسموگ میں کمی آئےگی، چھٹیوں سے ہمیشہ اسموگ کم ہوا ہے۔خیال رہے کہ  کورونا کی نئی قسم اومی کرون نے دنیا میں پنجے گاڑنا شروع کردیے ہیں ، ڈیلٹا ویرینٹ سے دُگنی رفتار سے پھیلنے والے اس وائرس نے کئی ملکوں کو خوف زدہ کردیا ہے۔

جنوبی افریقا سے سر اٹھانے والا وائرس برطانیہ، جرمنی، بیلجیئم، اٹلی اور چیک ری پبلک کے بعد آسٹریلیا پہنچ گیا ہے۔

محمد اکرم سینیئر ویب ایڈیٹر ہیں ۔ جرنلزم میں ایم فل ڈگری رکھتے ہیں۔ مختلف ٹی وی چینلز کے ویب اور سوشل میڈیا سے واسطہ رہے ہیں اب جی این این ٹی وی سے وابستہ ہیں۔ محمد اکرم بلاگز اور آرٹیکل بھی لکھتے ہیں۔

پاکستان

اثاثوں کی تفصیل جمع نہ کرانے پر متعدد ارکان پالیمنٹ کی رکنیت معطل

اسلام آباد: اثاثوں کی تفصیل جمع نہ کرانے پر متعدد ارکان پارلیمنٹ کی رکنیت معطل کردی گئی۔

پر شائع ہوا

Umar Nawaz

کی طرف سے

اثاثوں کی تفصیل جمع نہ کرانے پر متعدد ارکان پالیمنٹ کی رکنیت معطل

تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن آف پاکستان کی جانب سے جاری بیان کے مطابق سینیٹ کے تین ارکان کی رکنیت معطل کردی گئی جن میں مصدق ملک، سکندر مینڈھرو اور پرنس احمد عمر احمد زئی شامل ہیں۔ 

اس کے علاوہ اثاثوں کے گوشوارے جمع  نہ کرانے والے قومی اور صوبائی اسمبلی کے ارکان کی بھی رکنیت معطل کی گئی ہے۔

الیکشن کمیشن کے مطابق قومی اسمبلی کے 36 ارکان کی رکنیت معطل کردی گئی ہے جن میں وفاقی وزراء نور الحق قادری، شفقت محمود، فہمیدہ مرزا، وزیر مملکت فرخ حبیب و دیگر شامل ہیں۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

سرکاری اور نجی دفاتر کو ہفتے میں 4 دن کھولنے کا فیصلہ

اب ملازمین ہفتے میں 5 یا 6 دن کے بجائے پیر سے جمعرات یعنی صرف 4 دن کام کریں گے۔

پر شائع ہوا

Shehroz Azhar

کی طرف سے

سرکاری اور نجی دفاتر کو ہفتے میں 4 دن کھولنے کا فیصلہ

برطانیہ میں سرکاری اور نجی دفاتر کو  ہفتے میں 6 کے بجائے 4 دن  کھولنے پر غور کیا جارہا ہے، اب ملازمین ہفتے میں صرف چار دن آئیں گے اور دو دن چھٹیاں ہوں گی۔

آئندہ ہفتے سے برطانیہ کی کیمرہ ساز کمپنی ’’کینن‘‘ میں اب ملازمین ہفتے میں 5 یا 6 دن کے بجائے پیر سے جمعرات یعنی صرف 4 دن کام کریں گے۔

کیمرہ بنانے والی کمپنی نے یہ اقدام آکسفورڈ اور کیمبرج یونیورسٹی کے ٹرائل کا حصہ بننے کے لیے اُٹھایا ہے۔ یہ ٹرائل 6 مہینے جاری رہیں گے جبکہ ہفتے میں 4 دن کام کے ٹرائل کا مقصد ملازمین میں اوقات کار کی کمی سے پیدا ہونے مثبت تبدیلیوں اور پیداواری صلاحیتوں میں اضافے کا جائزہ لینا ہے۔ 
ہفتے میں 4 روز کام کی مہم ایک سماجی تنظیم نے چلائی تھی جس کے بعد آکسفورڈ، کیمبرج، بوسٹن اور تھنک ٹینک بھی اس مہم میں شامل ہوگئے۔

قبل ازیں متحدہ عرب امارات میں بھی ساڑھے چار دن کام کا فارمولا نافذ کردیا گیا ہے۔ پیر سے جمعرات فل ڈے جب کہ جمعہ کو ہاف ڈے دیا جاتا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

سعودی عرب نے پاکستان سمیت غیر ممالک سے آنیوالے افراد کیلئے قرنطینہ لازم قرار دیدیا

ریاض : نوٹیفکیشن کے مطابق  جو بھی غیر ملکی سعودی عرب آئے گا اسکو قرنطینہ کی لازمی بکنگ دکھانا ہوگی ۔

پر شائع ہوا

Ali Raza

کی طرف سے

سعودی عرب نے پاکستان سمیت غیر ممالک سے آنیوالے افراد کیلئے قرنطینہ لازم قرار دیدیا

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق  کورونا کی نئی قسم  امیکرون کی  بڑھتے کیسز کے باعث  سعودی عرب نے غیر ملکی شہریوں کیلئے مزید سخت اقدامات شروع کردئیے ہیں ۔ پاکستان سمیت غیر ممالک سے آنے والے افراد کیلئے قرنطینہ لازم قرار دیدیا گیا ہے، سعودی جنرل اتھارٹی آف سول ایوی ایشن نے ہدایت نامہ جاری کردیا۔سعودی عرب آمد سے قبل قرنطینہ میں مسافر کی بکنگ لازم قرار دی گئی ہے۔

نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ   جو بھی غیر ملکی سعودی عرب آئے اسکو قرنطینہ کی لازمی بکنگ دکھانا ہوگی ،  قرنطینہ بکنگ کے بغیر مسافر سعودی عرب لانے پر ائیرلائن کو جرمانہ ہوگا ، مسافروں پر سعودی حکومت سے منظور شدہ لیبارٹریز سے کورونا ٹیسٹ کرانا بھی لازم ہوگا ۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll