جی این این سوشل

صحت

بیرون ملک سے آنے والے مسافروں میں منکی پاکس کی موجودگی کا خدشہ

کراچی: بیرون ملک سے آنے والے مسافروں میں منکی پاکس کی موجودگی کے خدشات کے پیش نظر اسکریننگ کا آغاز  کر دیا گیا۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

بیرون ملک سے آنے والے مسافروں میں منکی پاکس کی موجودگی کا خدشہ
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

تفصیلات کے مطابق بیرون ملک سے پاکستان آنے والے مسافروں میں منکی پاکس کی ممکنہ موجودگی کے خدشے کے باعث اسکریننگ کا آغاز کا آغاز کر دیا گیا ہے،کراچی سمیت تمام بین الاقوامی ایئرپورٹس پر گزشتہ رات 12 بجے سے ہائی الرٹ جاری ہے،یورپ اور امریکہ سمیت منکی پاکس کی موجودگی کے حامل ممالک سے آنے والے مسافروں کی اسکریننگ  کا عمل جاری ہے۔

میڈیا ذرائع کے مطابق اسکریننگ کے لیے کراچی ایئرپورٹ پر بھی کورونا وبا کی طرز پر خصوصی کاؤنٹرز قائم کیے گئے ہیں،کاؤنٹرز پر تھرمل گن کے ذریعے مسافروں میں تیز بخار کی موجودگی چیک کی جا رہی ہے،کاؤنٹرز کا عملہ مکمل حفاظتی اقدامات کے ساتھ اسکریننگ کے عمل میں مصروف ہے۔

اس حوالے سے ڈاکٹر ظفر مہدی کا کہنا ہے کہ بیماری کی علامات ظاہر ہونے والے مریضوں کو ایئرپورٹ کی حدود میں وفاقی ہیلتھ اسٹبلشمنٹ کے اسپتال منتقل کیا جائے گا،گزشتہ رات سے اب تک کسی مسافر میں منکی پاکس کی موجودگی ثابت نہیں ہوئی،16بیڈز پر مشتمل اسپتال میں منکی پاکس کے علاج و معالجے کے لئے تمام انتظامات موجود ہیں جبکہ صوبائی محکمہ ہیلتھ کی جانب سے سرکاری اسپتال منتقلی کے انتظامات بھی کئے جا رہے ہیں۔

پاکستان

ملک بھر میں کہیں بھی ذی الحج کا چاند نظر نہیں آیا،مرکزی رویت ہلال کمیٹی

کراچی: مرکزی رویت ہلال کمیٹی نے اعلان کیا ہےکہ ملک بھر میں کہیں بھی ڈی الحج کا چاند نظر نہیں آیا، عید الاضحی 10 جولائی کو ہوگی۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ملک بھر میں کہیں بھی ذی الحج کا چاند نظر نہیں آیا،مرکزی رویت ہلال کمیٹی

تفصیلات کے مطابق ذی الحج کا چاند دیکھنے کے لیے مرکزی رویت ہلال کمیٹی کا اجلاس محکمہ موسمیات کے دفتر کراچی میں ہوا۔

چیئرمین مولانا عبدالخبیر آزاد کے زیر صدارت اجلاس میں مرکزی اور زونل رویت ہلال کمیٹی کے اراکین، محکمہ موسمیات سمیت متعلقہ اداروں کے حکام بھی شریک تھے۔

اجلاس میں کمیٹی کی جانب سے باضابطہ اعلان کیا گیا کہ ملک بھر میں کہیں سے بھی ذوالحجہ کا چاند نظر نہیں آیا لہٰذا عیدالاضحیٰ 10 جولائی بروز اتوار کو ہوگی۔

اس سے قبل زونل کمیٹی لاہور نے بھی اعلان کیا تھا کہ ذی الحج کا چاند نظر نہیں آیا، عیدالاضحٰی 10 جولائی بروز اتوار کو ہو گی، تاہم اس حوالے سے حتمی اعلان مرکزی رویت ہلال کمیٹی نے کرنا تھا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پی ٹی آئی رکن اسمبلی سعید آفریدی نے استعفیٰ دے دیا

کراچی: تحریک انصاف کے رہنما سعید آفریدی نے سندھ اسمبلی کی نشست سے استعفیٰ دے دیا۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پی ٹی آئی رکن اسمبلی  سعید آفریدی نے استعفیٰ دے دیا

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی رہنما سعید آفریدی نے اپنا استعفیٰ چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان اور اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کو بھجوا دیا۔

 

 

سعید آفریدی کا کہنا تھا کہ ذاتی مصروفیات کے باعث سندھ اسمبلی کی نشست سے استعفیٰ دے رہا ہوں۔

ایم پی اے سعید آفریدی کے استعفے پر عمران خان زندہ باد بھی لکھا ہوا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

علاقائی

پنجاب ریونیو اتھارٹی نے مالی سال 2021-22 کا نظر ثانی شدہ ہدف عبور کرلیا

لاہور:رواں مالی سال کے آغاز میں پنجاب ریونیو اتھارٹی 150 ارب روپے کی نفسیاتی حد کو عبور کرنے والی ملک کی پہلی صوبائی ریونیو ایجنسی بن گئی ہے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پنجاب ریونیو اتھارٹی نے مالی سال 2021-22 کا نظر ثانی شدہ ہدف عبور کرلیا

ادارے کی جانب سے جاری پریس ریلیز کے مطابق 28 جون 2022ء تک 168 ارب کے ٹیکس وصول کیے گئے جو کہ اصل ٹیکس ہدف یعنی 155.9 ارب کا 108 فیصد جبکہ نظر ثانی شدہ ٹیکس ہدف کا 101.5 فیصد بنتا ہے، اتھارٹی کو مالی سال کے آخری دو دنوں میں خاطر خواہ ریونیو کی توقع جبکہ سال کے اختتام پرتقریباََ 170 ارب روپے کے ہدف کے قریب پہنچنے کی امید ظاہر کی گئی ہے۔

بتایا گیا ہے کہ رواں مالی سال کے آغاز میں پنجاب ریونیو اتھارٹی 150 ارب روپے کی نفسیاتی حد کو عبور کرنے والی ملک کی پہلی صوبائی ریونیو ایجنسی بن گئی ہے اور جون میں ہونے والی ٹیکس وصولی نےپی آر اے کو ملک میں صف اول کی صوبائی ریونیو ایجنسی بنادیا، لگاتار تیسرے سال پی آر اے نے اپنے ٹیکس ہدف کو عبور کیا ہے، اس سے قبل اتھارٹی نے مالی سال 2019-20 اور 2020-21 میں بالترتیب 105 ارب روپے اور 125 ارب روپے کے مقررہ اہداف سے زائد ٹیکس اکٹھا کیا۔  

ترجمان پی آر اے نے مزید وضاحت کی کہ یہ کامیابی کاروبار کو سیل کیے، بینک اکاؤنٹس کو منسلک کرنے یا پیشگی ادائیگیوں جیسےسخت اقدامات کے بغیر حاصل کی گئی ہے۔ پنجاب ریونیو اتھارٹی نے مکمل طور پر تمام اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ تعاون اور ٹیکس دہندگان کی سہولت اور آگہی پر انحصار ہے جس میں مالی سال کے دوران 200 سے زائد آگاہی ورکشاپس کا انعقاد کیا گی، ان ورکشاپس میں 2000 سے زائد شرکاء نے شرکت کی۔

اتھارٹی کی جانب سے توقع ظاہر کی گئی ہے کہ ترقی کا یہ رجحان آنے والے سالوں میں بھی جاری رہے گا کیونکہ اس کی انتظامیہ اور تمام افرادی قوت کسی بھی سخت اقدام کا سہارا لیے اپنے فرائض پر عملدرآمد کے لیے پرعزم ہے تاکہ کاروبار میں آسانی پر برے اثرات مرتب نہ ہوں۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll