جی این این سوشل

ٹیکنالوجی

خبردار : گوگل پر کبھی یہ سرچ نہ کرنا ، ورنہ زندگی بھر افسوس ہوگا

گوگل پر اپنا نام تلاش کرنے سے گریز کریں، کیونکہ آپ کی پرانی تصاویر اور معلومات گوگل کے ڈیٹا بیس میں ظاہر ہوں گی، جو آپ کے لیے زیادہ خوشگوار نہیں ہوسکتی ہیں۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

خبردار : گوگل پر کبھی یہ سرچ نہ کرنا ، ورنہ زندگی بھر افسوس ہوگا
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

انٹرنیٹ آج کے دور میں اتنا مقبول ہو گیا ہے کہ چھوٹی سے چھوٹی بات چاہے وہ کسی بھی فیلڈ سے ہو وہ آرام سے فری میں سیکھی جا سکتی ہے۔

بلاشبہ ہم سب لوگ ہی گوگل استعمال کرتے ہیں۔اور اس وقت گوگل دنیا کا سب سے بڑا سرچ انجن بن چکا ہے جہاں شاید ہی کوئی ایسی چیز یا مواد ہو جو سرچ کرنے کے بعد سامنے نہ آئے۔ لیکن بعض اوقات ہم نہ چاہتے ہوئے ایسا مواد سرچ کر لیتے ہیں جو نادانستہ طور پر ہمارے لیے بے حد نقصان کا سبب بنتا ہے ۔
ویسےکوئی ایک نہیں بلکہ بہت ساری چیزیں ایسی ہیں جن کی تلاش سے ہمیں اجتناب کرنا چاہیے، لیکن یہاں ہم ٹاپ پانچ چیزوں کے بارے میں بتائیں گے جن سے جس حد تک ہوسکے بچنا چاہیے ۔

بیماری کی علامات: اگر آپ خود کو بیمارمحسوس کر رہے ہیں تو علامات کو بالکل گوگل نہ کریں اگر کر بھی لی ہیں تو ان پر آنکھیں بند کرکے یقین نہ کریں، گوگل بہت دفعہ ایسا ہوچکا ہے کہ آپ کی بیماری کی نوعیت کو ٹھیک سے نہیں سمجھ پائے گا ، اور جب آپ کی تشخیص غلط ہوگی تو آپ دوا کا غلط استعمال بھی کریں گے اور ہر حال میں یہ فائدہ مند نہیں ہے۔اور بعض اوقات جان لیوا بھی ہو سکتا ہے، لہذا اگر آپ بیمار ہیں تو گوگل سے رہنمائی کے بعد کسی ڈاکٹر سے ضرور کنسلٹ کرلیں
کینسر: فرض کریں کہ آپ کو ہلکا بخار، کھانسی یا جسم پر کچھ دانے ہیں، آپ کو سمجھ نہیں آتی کہ اس کی وجہ کیا ہے اور آپ علامات کے لیے گوگل سرچ کرتے ہیں۔ آپ یہ جان کر حیران رہ جائیں گے کہ گوگل ان علامات کو کینسر سے یکدم جوڑ کر آپ کو پریشان کردے گا

خطرناک جانوروں کی معلومات: بلاشبہ دنیا بھر میں بہت سے خطرناک اور نایاب جانور پائے جاتے ہیں جن میں سے کچھ آپ کے علاقے میں بھی موجود ہوں گے۔ ان جانوروں کے بارے میں جاننے کے لیے گوگل پر بھروسہ نہ کریں، کیونکہ ان کا خوف آپ کو اپنے ملک میں سفر کرنے سے خوفزدہ کر دے گا اور آپ کی زندگی کے حوالے سےمعمول کی سرگرمیاں متاثر ہوں گی۔
آپ کا نام: گوگل پر اپنا نام تلاش کرنے سے گریز کریں، کیونکہ آپ کی پرانی تصاویر اور معلومات گوگل کے ڈیٹا بیس میں ظاہر ہوں گی، جو آپ کے لیے زیادہ خوشگوار نہیں ہوسکتی ہیں۔

پاکستان

وزیرداخلہ رانا ثنا اللہ عمرہ کی ادائیگی کیلئے سعودی عرب روانہ

وزیرداخلہ رانا ثنا اللہ فیملی کے ہمراہ عمرہ ادائیگی کیلئے 5 روزہ دورہ پرسعودی عرب روانہ ہو گئے ہیں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

وزیرداخلہ رانا ثنا اللہ عمرہ کی ادائیگی کیلئے سعودی عرب روانہ

 

رپورٹ کے مطابق وزیر داخلہ رانا ثنااللہ سعودی ہم منصب اور دیگراعلیٰ حکام سے ملاقاتیں کریں گے، راناثنااللہ پاکستان سعودی دوطرفہ تعلقات کی مضبوطی پرسعودی حکام سے بات چیت کرینگے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پاکستان کے یوم آزادی کی ڈائمنڈ جوبلی منانے کیلئے تیاریاں جاری

لاہور : ملک بھر میں یوم آزادی کے 75 برس مکمل ہونے کے دن کو منانے کیلئے تیاریاں  عروج پر پہنچ گئیں ۔ 

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پاکستان کے یوم آزادی کی ڈائمنڈ جوبلی منانے کیلئے تیاریاں  جاری

گلگت بلتستان اورآزادجموں وکشمیر سمیت ملک بھر میں 14اگست کو یوم آزادی کی ڈائمنڈ جوبلی تقریبات منانے کی تیاریاں تیزی سے جاری ہیں۔

اس حوالے سے عمارتوں کوقومی پرچموں ، جھنڈیوں ، برقی قمقموں اورروشنیوں سے سجایاجارہا ہے، لوگ اپنی گاڑیوں اور چھتوں پرقومی پرچم لہرا رہے ہیں۔

آزادی کی تیاریوں میں اہم سڑکوں پرسٹالز لگائے گئے ہیں جن میں پرچم ، ٹوپیاں، سفید اور سبزملبوسات اوردیگر اشیاء موجود ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

اسلام امن اور رواداری کا مذہب ہے ، اقلیتوں کے قومی دن پر وزیراعظم کا پیغام 

اسلام آباد: وزیر اعظم اسلامی جمہوریہ پاکستان محمد شہباز شریف کی طرف سے اقلیتوں کے قومی دن کے مو قع پرخصوصی  پیغام    جاری کیا گیا ہے ۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

اسلام امن اور رواداری کا مذہب ہے ، اقلیتوں کے قومی دن پر وزیراعظم کا پیغام 

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ اسلام امن اور رواداری کا مذہب ہے، دین کے معاملے میں کوئی جبر نہیں ہے ، ہمارے آئین میں مذہب کی آزادی اور ہماری اقلیتوں کی جان ومال اور املاک کی تکریم کو باقاعدہ قانونی شکل دی گئی ہے ، پاکستان بلا کسی ذات پات، رنگ و نسل اور مذہب کی تفریق کے ہم سب کا ہے اور ہم سب نے مل کر ہی اسکی ترقی و خوشحالی کیلئے اپنی جدوجہد جاری رکھنی ہے۔

اقلیتوں کے قومی دن کے مو قع پر وزیر اعظم اسلامی جمہوریہ پاکستان محمد شہباز شریف نے اپنے پیغام میں ہر سال پاکستان کی تعمیر و ترقی میں اقلیتوں کے کلیدی کردار کو خراجِ تحسین پیش کرنے ، انکے ہماری عظیم قوم کا لازم حصہ ہونے اور مذہبی اقلیتوں کے احترام کے عزم کا اعادہ کرنے کیلئے 11 اگست کو “قومی اقلیتی دن” کے طور پر منایا جاتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے آئین میں مذہب کی آزادی اور ہماری اقلیتوں کے افراد اور املاک کی تکریم کو باقاعدہ قانونی شکل دی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو نہ صرف ان ذمہ داریوں کا بخوبی ادراک ہے بلکہ ان مقاصد کے حصول کے لیے اپنے عزم کی مستقل یاد دہانی کے طور پر حکومت نے 11 اگست کو سرکاری سطح پر شاندار طریقے سے قومی اقلیتی دن کے طور پر منانے فیصلہ کیا ہے ۔ ان اسباب کا خاتمہ اور خامیوں کی اصلاح کرنا جو سماجی و مذہبی استحصال کا باعث بن سکتی ہیں، ہماری حکومت کی پالیسیوں کا بنیادی ستون ہے۔

وزیراعظم شہباز شریف نے کہاکہ سماجی و اقتصادی خلیج کو پورا کرنے اور ہماری اقلیتوں کے لیے تعلیمی اداروں اورنمایاں خدمات کے لیے نمائندہ فورمز پر خصوصی کوٹہ مختص کرنے جیسے اقدامات سے قومی سطح پر ہر کسی کو یکساں تعلیم و ترقی کے مواقع کی فراہمی یقینی بنانے کی کوشش کی گئی ہے ۔  اس کے علاوہ اقلیتوں کے معاشی طور پر کمزور طبقات کے حقوق کے یقینی تحفظ اور ترقی کے لیے وقف مالی امداد بھی ان اقدامات کا حصہ ہے۔

شہبازشریف  نے کہا کہ میں اقلیتوں کی بہتری اور ہماری قومی ترقی کی کوششوں اور جدوجہد میں ان کی مکمل شمولیت کے لیے اپنی کوششوں کو جاری رکھنے، وسائل کو بروئے کار لانے اور انہیں مزید وسعت دینے کے حکومت کے عزم کا اعادہ کرتا ہوں۔

وزیر اعظم نے کہاکہ میں اس موقع پر تمام اقلیتی برادریوں کے اپنے بھائیوں سے بھی اپیل کروں گا کہ وہ رواداری اور باہمی اتفاق کی فضا کو فروغ دینے کے لیے اپنا کردار ادا کرتے رہیں کیونکہ ہمارے معاشرے میں یہی واحد راستہ ہے جو بین المذاہب ہم آہنگی اور امن کو فروغ دینے کے ہمارے مشترکہ مقصد کے حصول کا باعث بنے گا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان بلا کسی ذات پات، رنگ و نسل اور مذہب کی تفریق کے ہم سب کا ہے اور ہم سب نے مل کر ہی اسکی ترقی و خوشحالی کیلئے اپنی جدوجہد جاری رکھنی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll