جی این این سوشل

علاقائی

سندھ بلدیاتی انتخابات : پہلے مرحلے کی پولنگ کل ہوگی

کراچی : سندھ میں بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں  14 اضلاع میں  کل ووٹ ڈالے جائیں گے۔ 

پر شائع ہوا

کی طرف سے

سندھ بلدیاتی انتخابات : پہلے مرحلے کی پولنگ کل ہوگی
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

تفصیلات کے مطابق  سندھ میں  بلدیاتی انتخابات  کے پہلے مرحلے میں ووٹنگ  کل ہورہی ہے ،  انتخابی مہم کا وقت جمعے کی رات 12 بجے ختم ہوگیا تھا۔ 

سندھ کے 14 اضلاع میں ووٹرز کی مجموعی تعداد 1 کروڑ 14 لاکھ 74ہزار 88  ہے ، مجموعی طور پر 1383 نشستوں پر 4 ہزار 847 امیدوار مدمقابل ہوں گے ۔

بلدیاتی انتخابات کے لیے پولنگ کےسامان کی ترسیل آج شروع ہوگی، سکھر ڈویژن کے تینوں اضلاع  خیرپور،سکھر،گھوٹکی میں پولنگ ہوگی۔

خیرپور، سکھر،گھوٹکی کی 1631نشستوں پر 149امیدوار بلامقابلہ منتخب ہوئے جن میں سے بیشتر کا تعلق پیپلز پارٹی سے ہے جبکہ جی ڈی اے،جمعیت علمائے اسلام ف،آزاد امیدوار بھی بلامقابلہ کامیاب ہوئے۔

سکھر ڈویژن میں 1482نشستوں پر 6 ہزار سے زائد امیدوار مدمقابل ہوں گے، شہید بےنظیر آباد ڈویژن، سانگھڑ،نوشہرو فیروز میں بھی پولنگ ہوگی۔

شہید بےنظیر آباد ڈویژن کی 1465نشستوں پر 255 امیدوار بلامقابلہ منتخب ہوچکے ہیں جن میں سے اکثریت کا تعلق پیپلز پارٹی سے ہے۔

لاڑکانہ ڈویژن کے 5 اضلاع میں بھی ووٹ ڈالے جائیں گے، لاڑکانہ، قمبر شہداد کوٹ، جیکب آباد، شکارپور، کشمور، کندھ کوٹ میں بھی پولنگ ہوگی۔

لاڑکانہ ڈویژن سےپیپلز پارٹی کے 437 امیدوار بلامقابلہ منتخب ہوچکے ہیں جبکہ میرپور خاص ڈویژن کے 3 اضلاع میرپور خاص، عمرکوٹ، تھر پارکر میں بھی پولنگ ہوگی ۔

میرپورخاص ڈویژن میں مجموعی طور پر 160 امیدوار بلامقابلہ کامیاب ہوچکے ہیں، بلامقابلہ کامیاب بیشتر امیدوار پیپلز پارٹی کے ہیں۔

میرپورخاص ڈویژن سے بعض آزاد امیدوار بھی بلامقابلہ کامیاب ہوئے ہیں۔

پاکستان

کورونا وائرس : ملک میں  مزید 2 اموات ،578 کیسزرپورٹ 

اسلام آباد: ملک میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس  کے مثبت کیسز کی شرح میں ایک بار پھر اضافہ دیکھنے میں آیا ہے ۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

کورونا وائرس : ملک میں  مزید 2 اموات ،578 کیسزرپورٹ 

قومی ادارہ صحت  کے مطابق ملک میں  کورونا وائرس ایک بار پھر سر اٹھانے لگا ، ملک میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس سے 2 افراد انتقال کر گئے جبکہ 578 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں ۔ 

ملک میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں کورونا کے  22 ہزار679  ٹیسٹ کیے گئے ہیں ۔ 

قومی ادارہ صحت کے مطابق ملک میں کورونا کےمثبت کیسزکی شرح 2.55 فیصد رہی جبکہ کورونا کے159 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے ۔ 

 

پاکستان میں کورونا وبا کے کیسز میں ایک بار پھر اضافہ ہونے کے سبب ہوائی سفر، پبلک ٹرانسپورٹ میں  ماسک لگانے کی پابندی دوبارہ عائد کی گئی ہے ۔

یاد رہے کہ پاکستان میں گزشتہ چند ماہ میں کووڈ کیسز کی شرح انتہائی کم رہی، جس کی وجہ سے کورونا وبا کے دوران لگائی گئی تمام پابندیاں بھی ہٹا دی گئی تھیں۔

ملک  میں ایک بار پھر کورونا کیسز کی شرح میں اضافے کے بعد قومی ادارۂ صحت (این آئی ایچ) نے شہریوں کو ماسک کا استعمال کرنے کی ہدایت کی ہے ۔

پاکستان میں ایک ماہ پہلے کورونا   سے متاثرہ افراد کی تعداد 79 تھی اور اس دوران کوئی اموات بھی رپورٹ نہیں ہوئی تھیں۔

 قومی ادارہ صحت  کے مطابق ملک میں ویکسینیشن کے اہل عوام  کو کووڈ 19 کے خلاف مکمل ویکسین بھی لگا دی گئی ہے ۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشنز کے مطابق 2020ء میں اس وبائی مرض کے پھیلاؤ کے بعد سے رواں سال مارچ میں کیسز کی تعداد کم  ترین سطح پر تھی لیکن اب ان کیسز میں اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے۔

 واضح رہے کہ پاکستان میں کورونا وائرس کا پہلا کیس 26 فروری 2020 کو ملک کے سب سے بڑے شہر کراچی میں سامنے آیا تھا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

کراچی سے حیدر آباد جانے والی کار ملیر ندی میں ڈوب گئی،7 افراد لا پتہ

 کراچی میں نیشنل ہائی وے لنک رو ڈ پر ندی میں ڈوب کر لاپتہ ہونے والی گاڑی کو نکال لیا گیا۔ کار میں سوار7 افراد تاحال لاپتہ ہیں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

کراچی سے حیدر آباد جانے والی کار ملیر ندی میں ڈوب گئی،7 افراد لا پتہ

 

سیلابی ریلہ کراچی سے حیدر آباد جانے والی کار کو بہا کر ملیر ندی میں لے گیا۔ کراچی پولیس کو  گزشتہ شام فیملی سمیت کار ڈوبنے کی اطلاع ملی۔ پانی کی سطح بہت زیادہ ہونے کے باعث ریسکیو آپریشن ممکن نہ ہوسکا۔

رات گئے رکنے والا آپریشن صبح دوبارہ شروع کیا گیا تو  ملیر ندی میں ڈوبنے والی کار  تو مل گئی لیکن کار سوار 7 افراد کا کچھ پتہ نہ چل سکا۔

جائے حادثہ پر پہنچنے والے کار سوار افراد کے اہل خانہ نے بتایا کہ کار میں فیملی کے7 افراد سوار  تھے۔ کار میں خواتین اور بچے بھی موجود  تھے۔ تمام افراد کا گزشتہ روز سے رابطہ منقطع ہے۔

ریسکیو حکام کا کہنا ہے کہ گاڑی کو تباہ حالت میں نکال لیا گیا ہے اور لاپتا افراد کی تلاش جاری ہے۔

ملیر ندی لنک روڈ کے اطراف گوٹھوں میں برساتی پانی داخل ہو گیا۔  سیلابی ریلے میں دبئی گوٹھ،سمو گوٹھ شفع محمد گوٹھ میں ڈوب گیا۔ درجن سے زائد افراد کو ریسکیو کر کے محفوظ مقام پر منتقل کر لیا گیا۔

پڑھنا جاری رکھیں

علاقائی

سندھ بھر میں تیز بارشوں کی پیش گوئی ،  تعلیمی ادارے آج  بند 

کراچی : محکمہ موسمیات نے آج بھی سندھ بھر میں تیز بارشوں کی پیش گوئی کی ہے۔سندھ حکومت نے آج تمام  تعلیمی اداروں میں چھٹی کا اعلان کررکھا ہے ۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

سندھ بھر میں تیز بارشوں کی پیش گوئی ،  تعلیمی ادارے آج  بند 

تفصیلات کے مطابق  کراچی، حیدرآباد اور ٹنڈوالہ یار سمیت سندھ کے مختلف  شہروں میں وقفے وقفے سے بارش کا سلسلہ جاری ہے ۔ شدید بارش کا سلسلہ19 اگست تک  جاری رہنے کاامکان ہے۔

بارش کے باعث کراچی کی ملیر ندی کے سیلابی پانی میں بہنے والی گاڑی ندی سے ملی گئی، تاہم گاڑی میں سوار 7 افراد کا فی الحال پتہ نہیں چل سکا۔

ایم نائن لنک روڈ پر کار سیلابی ریلے میں بہنے کی بھی اطلاعات ہیں، کے پی ٹی گراؤنڈ کے قریب دو منزلہ عمارت گرگئی جہاں خوش قسمتی سے کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

شہر قائد میں بارشوں کے بعد کورنگی کاز وے روڈ ٹریفک کے لیے تاحال بند ہے، میمن گوٹھ کے قریب ملیر ندی پر بنے ریزروائر کی دیوار سے کئی فُٹ اوپر سے پانی گزر رہا ہے۔

دوسری جانب صوبے میں مزید تیز بارشوں کی پیش گوئی کے پیش نظر سندھ حکومت نے آج تمام تعلیمی اداروں اور جامعات  میں چھٹی کا اعلان کیا گیا ہے ۔ 

وزیر تعلیم سندھ کاکہنا ہے  کہ وزیراعلیٰ کی ہدایت پر کراچی میں آج جمعرات کو تمام تعلیمی ادارے بند رہیں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll