جی این این سوشل

تجارت

سابق حکومت نےعالمی منڈی میں سستی گیس کافائدہ نہیں اٹھایا: وزیراعظم 

اسلام آباد: وزیراعظم شہباز شریف نےموسم سرما میں گیس کی متوقع طلب کے پیشِ نظر فوری لائحہ عمل مرتب کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ سابق حکومت نے کورونا کے دنوں میں عالمی منڈی میں سستی گیس کا فائدہ نہیں اٹھایا، گزشتہ حکومت کے بروقت فیصلے نہ کرنے کا خمیازہ آج پورا ملک اور غریب آدمی بھگت رہا ہے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

سابق حکومت نےعالمی منڈی میں سستی گیس کافائدہ نہیں اٹھایا: وزیراعظم 
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

وزیراعظم کی  زیرصدارت موسمِ سرما میں گیس کی صورتحال پر پیشگی لائحہ عمل مرتب کرنے کیلئے ہنگامی اجلاس ہوا ،  اجلاس کو موسمِ سرما میں متوقع طلب اور رسد پر تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ اجلاس کو حکومت کی موجودہ حکمتِ عملی اور آئندہ مہینوں میں گیس کی فراہمی کیلئے مرتب کئے پلان پر بھی بریفنگ دی گئی۔

وزیراعظم نے کہا کہ سابق حکومت نے کورونا کے دنوں میں عالمی منڈی میں سستی گیس کا فائدہ نہیں اٹھایا، بروقت گیس نہ خرید کر اس قوم کے ساتھ بہت بڑا ظلم کیا۔ گزشتہ حکومت کے بروقت فیصلے نہ کرنے کا خمیازہ آج پورا ملک اور غریب آدمی بھگت رہا ہے

وزیراعظم شہبازشریف  نے کہا کہ میں گزشتہ حکومت کی طرح کسی بھی قسم کی بد انتظامی اور مجرمانہ غفلت برداشت نہیں کرونگا ۔ معیشت میں بارودی سرنگوں بچھانے والوں نے ملک کے ہر شعبے پر خود کُش حملے کرکے غریب کی کمر توڑ دی۔

گھریلو صارفین کو کھانا پکانے کے اوقات میں گیس کی بلاتعطل فراہمی یقینی بنائی جائے۔ موجودہ حکومت اعدادو شمار اور خالی باتوں کی بجائے عملی و سنجیدہ اقدامات پر یقین رکھتی ہے۔

وزیرِ اعظم نے متعلقہ حکام کو پیش کردہ پلان کو مزید بہتر کرنے اور قلیل و وسط مدتی لائحہ عمل کو ترجیح دینے کی ہدایات جاری کیں ۔ اجلاس میں سابق وزیرِ اعظم شاہد خاقان عباسی، وفاقی وزیرِ خزانہ اسحاق ڈار، وزیرِ مملکت برائے پیٹرولیم مصدق ملک، مشیر احد چیمہ اور متعلقہ اعلی حکام نےشرکت کی ۔ اجلاس میں وزیرِ اعظم شہباز شریف نے موسم سرما میں گیس کی متوقع طلب کے پیشِ نظر فوری لائحہ عمل مرتب کرنے کی ہدایات جاری کردیں۔

پاکستان

مخلوط حکومت کسی صورت ملک نہیں چلاسکے گی ،فیصل واوڈا

سابق وزیرفیصل واوڈا  نے کہا کہ پیپلزپارٹی اس قت وِِن ون پوزیشن میں ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

مخلوط حکومت کسی صورت ملک نہیں چلاسکے گی ،فیصل واوڈا

فیصل واوڈا  نے کہا کہ اس کی بہت سی وجوہات ہیں کہ جس کے باعث مخلوط حکومت سے ملک نہیں چل سکتا ، انہوں نے کہا کہ ملک پاکستان نے آئی ایم ایف کو 24 ارب ڈالر ادا کرنے ہیں، پاکستان  کے پاس 2 ارب ڈالر کا ذخیرہ ہے، معاملہ کیسے چلے گا، خزانے میں کوئی خاص طاقت نہیں صرف بے چینی ہے۔

فیصل واوڈا نے کہا کہ کے پی پی ٹی آئی، بلوچستان اور سندھ پیپلزپارٹی کو اور پنجاب (ن) لیگ کوملا، سب کا زور اپنے صوبوں پر ہے، جو ایکسپائرڈ اور نااہل لیڈرہیں وہ ہمارے پاس موجود ہیں، پاکستان کو برباد کر کے آباد کرنے کا نعرہ لگا کر آرہے ہیں، وہ ابھی احمقوں کی جنت میں سوچتے ہیں کہیں اگر کوئی بحران آیا تو وفاقی حکومت گر جائے گی۔


سابق وزیرفیصل واوڈا  نے کہا کہ پیپلزپارٹی اس قت وِِن ون پوزیشن میں ہے، پی ٹی آئی کو سمجھایا تھا کہ آپ اقتدار کے اندر آجائیں، جمہوری ڈھانچے کے اندر آجائیں جبکہ عمرایوب وہاں سے ٹاٹا اور بائی بائی کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ 16 ماہ پہلے جو کر کے گئے ہیں وہ آج کیسے ٹھیک ہوگا؟ اتحادی حکومت میں میں بندر بانٹ ہوتی ہے، آپ کا ڈی سی میرا ایس پی، آپ کا ایس پی میرا ڈی سی، یہ سب چیزیں اسٹریم لائن ہو رہی ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پشاور ہائی کورٹ نے اسد قیصر کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دے دیا

جسٹس شکیل احمد اور جسٹس صاحبزادہ اسد اللہ نے کیس کی سماعت کی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پشاور ہائی کورٹ نے اسد قیصر کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دے دیا

پشاور: پشاور ہائی کورٹ نے سابق اسپیکر قومی اسمبلی اور پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما اسد قیصر کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) سے نکالنے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق جسٹس شکیل احمد اور جسٹس صاحبزادہ اسد اللہ نے کیس کی سماعت کی، عدالت نے قیصر کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کا 23 جون کو دیا گیا حکم نامہ غیر آئینی قرار دیا۔

اسد کے وکیل معظم بٹ نے بتایا کہ قیصر قومی اسمبلی کے سابق سپیکر تھے اور وہ عمرہ کی ادائیگی کے لیے سعودی عرب جارہے تھے لیکن حکام نے انہیں روک دیا۔

جسٹس اسد اللہ نے استفسار کیا کہ اسد کا نام ای سی ایل میں کس تاریخ کو ڈالا گیا؟ معظم بٹ نے جواب دیا کہ 23 جون کو قیصر کا نام ای سی ایل میں ڈالا تھا۔

جسٹس شکیل احمد نے استفسار کیا کہ کیا اب رکن قومی اسمبلی مقرر ہو گئے ہیں؟ اسد کے وکیل نے جواب دیا کہ ہاں وہ رکن قومی اسمبلی ہیں اور سینئر سیاستدان بھی ہیں۔

تاہم پی ایچ سی نے اسد کا نام فوری طور پر ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دے دیا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

منتخب ارکان اسمبلی کیلئے سہولت مزکز قائم

اس سہولت مرکز کا مقصد ان کے سرکاری کارڈ کیلئے تصاویر اور ضروری دستاویزات مکمل کرنے سمیت مختلف خدمات فراہم کرنا ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

منتخب ارکان اسمبلی کیلئے سہولت مزکز قائم

قومی اسمبلی سیکرٹریٹ نے قومی اسمبلی کے نو  منتخب ارکان کی سہولت کیلئے ایک ہی چھت کے نیچے  تمام معلومات کی فراہمی کا سہولت مرکز قائم کر دیا ہے ۔

یہ مرکز پارلیمنٹ ہاؤس اسلام آباد میں کل دن دس بجے سے تیسرے پہر 3 بجے کام کرے گا ۔

اس سہولت مرکز کا مقصد ان کے سرکاری کارڈ کیلئے تصاویر اور ضروری دستاویزات مکمل کرنے سمیت مختلف خدمات فراہم کرنا ہے ۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll