جی این این سوشل

تجارت

ٹیلی کام مشینری کی درآمدات میں سالانہ بنیادوں پر 68 فیصد کی کمی

شینری کی درآمدات کا حجم 779 ملین ڈالر ریکارڈ کیا گیا جو گزشتہ مالی سال کی اسی مدت کےمقابلہ میں 68 فیصد کم ہے،ادارہ شماریات

پر شائع ہوا

کی طرف سے

ٹیلی کام مشینری کی درآمدات میں سالانہ بنیادوں پر 68 فیصد کی کمی
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

ٹیلی کام مشینری کی درآمدات میں جاری مالی سال کے پہلے 10 ماہ میں سالانہ بنیادوں پر 68 فیصد کی کمی ریکارڈ کی گئی ہے۔

ادارہ شماریات کی طرف سے جاری اعدادوشمار کےمطابق جولائی سے اپریل تک کی مدت میں ٹیلی کام مشینری کی درآمدات کا حجم 779 ملین ڈالر ریکارڈ کیا گیا جو گزشتہ مالی سال کی اسی مدت کےمقابلہ میں 68 فیصد کم ہے۔ گزشتہ مالی سال کی اسی مدت میں ٹیلی کام مشینری کی درآمدات پر 2.41 ارب ڈالر کازرمبادلہ صرف ہوا تھا۔ اپریل میں 35 ملین ڈالر مالیت کی ٹیلی کام مشینری درآمد کی گئی جو گزشتہ سال اپریل کے مقابلہ میں 88 فیصد کم ہے۔

گزشتہ سال اپریل میں ٹیلی کام مشینری کی درآمدات کاحجم 277 ملین ڈالر ریکارڈ کیاگیا تھا۔ مارچ میں ٹیلی کام مشینری کی درآمدات 36 ملین ڈالر ریکارڈ کی گئی جو اپریل میں 4 فیصد کم ہو کر 35 ملین ڈالر ہو گئی۔ واضح رہے کہ جاری مالی سال کے ابتدائی 10 ماہ میں مشینری گروپ کی درآمدات میں مجموعی طورپر 49 فیصد کی کمی ریکارڈ کی گئی ہے

تجارت

پاکستان اور آذربائیجان میں کاروباری تعلقات بڑھانے پر اتفاق

اسحاق ڈار نے کہاکہ دونوں ملک پارلیمانی وفود کے تبادلوں، ثقافتی تعاون اور عوامی روابط کوبھی بڑھائیں گے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پاکستان اور آذربائیجان میں کاروباری تعلقات بڑھانے  پر اتفاق

پاکستان اور آذربائیجان نے تجارت، سرمایہ کاری، روابط، توانائی اور دفاع کے شعبوں میں کثیر جہتی تعاون کو فروغ دینے پر اتفاق کیا ہے۔

 روابط کا اتفاق اسلام آباد میں دونوں ملکوں کے درمیان وفود کی سطح پر مذاکرات کے دوران کیا گیا۔ نائب وزیراعظم اور وزیرخارجہ اسحق ڈار نے پاکستانی وفد کی قیادت کی جبکہ آذربائیجان کے وزیر خارجہ جیہن بیرومونے اپنے ملک کے وفد کی قیادت کی۔

اس کے بعد وزیر خارجہ اسحاق ڈار نے ایک مشترکہ نیوز کانفرنس سے خطاب میں کہا کہ دونوں ملک دوطرفہ سرمایہ کاری خصوصاً توانائی کے شعبے میں سرمایہ کاری بڑھانے کے لئے اقدامات کررہے ہیں، انہوں نے کہا کہ اس شعبے میں تعاون کے فروغ کے لئے توانائی کا مشترکہ ورکنگ گروپ کلیدی کردار ادا کرے گا۔

اسحاق ڈار نے کہاکہ دونوں ملک پارلیمانی وفود کے تبادلوں، ثقافتی تعاون اور عوامی روابط کوبھی بڑھائیں گے۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان نے آذربائیجان کی خود مختاری اور علاقائی سا لمیت کی ہمیشہ حمایت کی ہے۔ انہوں نے جموں و کشمیر کے تنازعے پر آذربائیجان کی جانب سے غیر متزلزل حمایت کو بھی سراہا۔

انہوں نے پاکستان کے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں غیر مستقل رکنیت کے لئے آذربائیجان کی جانب سے حمایت کی بھی تعریف کی۔آذربائیجان کے وزیر خارجہ نے اپنے تاثرات میں کہا کہ تنازعہ جموں و کشمیر پر ان کا موقف دوٹوک ہے اور آذربائیجان اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی متعلقہ قرارد ادوں کے مطابق تنازعے کے پر امن حل کی حمایت کرتا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پاکستان نے دوسرا جدید مواصلاتی سیٹلائٹ خلا میں بھیج دیا

توقع کی جاتی ہے کہ یہ سیٹلائٹ ملک کے طول و عرض میں ایک جدید ترین مواصلاتی نیٹ ورک کے قیام میں اپنا حصہ ڈالے گا اور ٹیلی کام سیکٹر کی بڑھتی ہوئی ضروریات کو پورا کرنے میں مدد دے گا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پاکستان نے دوسرا  جدید مواصلاتی سیٹلائٹ خلا میں بھیج دیا

 

پاکستان نے جمعرات کو چین کے تعاون سے اپنا دوسرا جدید مواصلاتی سیٹلائٹ خلا میں بھیج دیا۔ 

پاکستان نے اپنا پاک سیٹ ایم ایم ون نامی سیٹلائٹ خلا میں بھیج کر ایک عظیم سنگ میل عبور کر لیا۔    
تفصیلات کے مطابق اسپیس اینڈ اپرایٹموسفیئر ریسرچ کمیشن (سپارکو) نے کہا کہ یہ اسیٹلائٹ دور دراز علاقوں میں انٹرنیٹ فراہم کرکے پاکستان کو ڈیجیٹل دور میں داخل کرنے میں مدد کرے گا۔ 5 ٹن وزن کی حامل یہ اسیٹلائٹ جدید ترین مواصلاتی آلات سے لیس ہے، جسے چین کےشی چینگ  سینٹر سے خلا میں بھیجا گیا ۔ 
وزیراعظم شہباز شریف نے سیٹلائٹ کی لانچنگ پر قوم کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ پوری قوم کو اپنے سائنسدانوں پر فخر ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ اس سے ملک بھر میں تیز ترین انٹرنیٹ کی سہولت فراہم کرنے میں مدد ملے گی۔
سپارکو ذرائع کے مطابق سیٹلائٹ ملک کی مواصلاتی ضروریات کو مد نظر رکھتے ہوئے بنایا گیا ہے۔  سیٹلائٹ کو خلا میں پہنچنے میں لگ بھگ 3 سے 4 دن لگیں گے، جبکہ یہ جیو سٹیشنری سیٹلائٹ زمین کے مدار میں زمین سے لگ بھگ  35000 کلومیٹر کی بلندی پر ہو گا۔ سیٹلائٹ کی موئثر کام کرنے کی مدت تقریبا 15 سال ہے۔
توقع کی جاتی ہے کہ یہ سیٹلائٹ ملک کے طول و عرض میں ایک جدید ترین مواصلاتی نیٹ ورک کے قیام میں اپنا حصہ ڈالے گا اور ٹیلی کام سیکٹر کی بڑھتی ہوئی ضروریات کو پورا کرنے میں مدد دے گا، اور اس کی جدید صلاحیتیں تیز رفتار انٹرنیٹ کی بڑھتی ہوئی مانگ کو پورا کرے گی۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

جدید مواصلاتی سیٹلائٹ کی روانگی پر قائم مقام صدر اور وزیر اعظم کی قوم کو مبارکباد

پاک سیٹ ایم ایم ون کی چین کے زی چینگ خلائی مرکز سے روانگی دونوں ممالک کے درمیان مضبوط تعاون اور اشتراک عمل کا ثبوت ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

جدید مواصلاتی سیٹلائٹ کی روانگی پر  قائم مقام صدر اور وزیر اعظم کی قوم کو مبارکباد

وزیراعظم شہبازشریف نے پاکستان کے دوسرے مواصلاتی سیارے پاک سیٹ ایم ایم ون کی خلا میں روانگی کے تاریخی موقع پر قوم کو مبارکباد دی ہے۔

انہوں نے آج ایک بیان میں کہا کہ یہ شاندار کامیابی ہماری خلائی اور مواصلاتی صلاحیتوں میں ایک نمایاں پیش رفت ہے۔

پاک سیٹ ایم ایم ون کی چین کے زی چینگ خلائی مرکز سے روانگی دونوں ممالک کے درمیان مضبوط تعاون اور اشتراک عمل کا ثبوت ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ پاک سیٹ ایم ایم ون کے پورے پاکستان میں انٹرنیٹ کے رابطوں پر اثرات کی مجھے خاص طور پر خوشی ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ یہ کامیابی خلاء اور بالائی فضا کے تحقیقی مرکز کے باصلاحیت کارکنوں اور اس مشن میں شامل افراد کی لگن اور انتھک محنت کے بغیر ممکن نہیں تھی۔انہوں نے اس مشن میں شامل تمام افراد کے پختہ عزم و ارادے کا دلی شکریہ ادا کیا۔قائم مقام صدر سید یوسف رضا گیلانی نے بھی پاکستان کے دوسرے مواصلاتی سیارے پاک سیٹ ایم ایم ون کی خلا میں روانگی پرقوم کو مبارکباد دی ہے۔

انہوں نے آج ایک بیان میں پاک سیٹ ایم ایم ون خلاء میں بھیجنے پر سائنسدانوں اور انجینئرز کی کوششوں کوسراہا۔قائم مقام صدر نے امیدظاہر کی کہ ہمارے خلائی سفر کی کامیابیاں جاری رہیں گی۔وزیر منصوبہ بندی احسن اقبال نے جو چین میں سیارے کی روانگی کے موقع پر موجود تھے کہا کہ اس سیارے سے پاکستان کو مدار سے رابطے کی اہم سہولت حاصل ہو جائے گی۔انہوں نے کہا کہ وہ دن دور نہیں جب ہم اپنے راکٹوں کے ذریعے اپنے سیارے خلاء میں بھیجیںگے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll