جی این این سوشل

پاکستان

کسانوں کا استحصال کرنے والوں کو معاف نہیں کیا جائے گا، نگران وزیر اعظم

کسانوں کو یوریا کھاد کی حکومتی رعایتی نرخوں پر بلاتعطل فراہمی کو یقینی بنایا جائے ، انوار الحق کاکڑ

پر شائع ہوا

کی طرف سے

کسانوں کا استحصال کرنے والوں کو معاف نہیں کیا جائے گا، نگران وزیر اعظم
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

نگراں وزیرِ اعظم انوار الحق کاکڑ نے کسانوں کو یوریا کھاد کی حکومتی رعایتی نرخوں پر بلاتعطل فراہمی کو یقینی بنانے اور ضلعی انتظامیہ کو کھاد کے ذخیرہ اندوزوں کے خلاف فوری کارروائی کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ کھاد کی ذخیرہ اندوزی سے کسانوں کا استحصال کرنے والوں کو معاف نہیں کیا جائے گا۔

نگراں وزیرِ اعظم انوار الحق کاکڑ کی زیرِ صدارت ملک میں یوریا کھاد کی طلب و رسد اور قیمت پر ہنگامی جائزہ اجلاس ہوا،جلاس کو ملک میں یوریا کھاد کی حالیہ پیداوار، طلب اور کسانوں کو فراہمی پر تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ ملک میں یوریا کی پیداواراور سٹاک گندم کی حالیہ فصل کے لیے کافی ہے جبکہ بفر اسٹاک کے لیے 2 لاکھ 20 ہزار میٹرک ٹن یوریا درآمد کی جا رہی ہے جس کی پہلی کھیپ آئندہ ہفتے تک پاکستان پہنچ جائے گی۔

اجلاس میں چاروں صوبوں کے چیف سیکرٹریز نے ضلعی انتظامیہ کی جانب سے کسانوں کو حکومتی رعایتی قیمتوں پر کھاد کی فراہمی یقینی بنانے کیلئے اقدامات پر بھی بریفنگ دی۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ صوبوں کی جانب سے سبسڈی فراہم کرنے کے لیے تمام صوبوں کی کابینہ میں سمریاں جلد منظوری کے لیے پیش کی جائیں گی۔

اس موقع پر نگراں وزیرِ اعظم انوار الحق کاکڑ نے کہا کہ کسانوں کو یوریا کھاد کی حکومتی رعایتی نرخوں پر بلاتعطل فراہمی یقینی بنائی جائے، ضلعی انتظامیہ کھاد کے ذخیرہ اندوزوں کے خلاف فوری کارروائی کرے، کھاد کی ذخیرہ اندوزی سے کسانوں کا استحصال کرنے والوں کو معاف نہیں کیا جائے گا، یوریا کھاد پر حکومتی سبسڈی کسانوں، جو اس کے صحیح مستحق ہیں تک پہنچائی جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ ترجیحی بنیادوں پر یوریا کی بلا تعطل فراہمی کے لیے لائحہ عمل بنا کر فوری طور پر پیش کیا جائے، وزارت صنعت اور وزارت غذائی تحفظ صوبائی حکومتوں کو یوریا کھاد کی پیداوار اور رسد کے اعدادوشمار فراہم کرکے کھاد کی ذخیرہ اندوزی کو روکنے کے لیے کارروائیوں میں معاونت یقینی بنائے، صوبائی سرحدوں پر کھاد کی نقل وحمل کی نگرانی کی جائے اور وہ کھاد جو صوبائی ضرورت کو پوری کرنے کے لیے ہو، اس میں کسی قسم کی رکاوٹ نہ ڈالی جائے۔

نگراں وزیراعظم نے مزید کہا کہ یوریا کھاد پر سبسڈی کا بوجھ تمام صوبے اپنی اپنی کھپت کے تناسب سے اٹھائیں، فصل کی بوائی کے دوران یوریا کھاد کی بلا تعطل فراہمی کو یقینی بنانے کے لیے صوبوں اور متعلقہ صنعت سے مشاورت سے ایک جامع فریم ورک مرتب کرکے پیش کیا جائے۔

نگراں وزیر اعظم نے تمام متعلقہ اداروں کو کھاد کی رعایتی قیمت پر فراہمی یقینی بنا کر رپورٹ کل تک پیش کرنے کی بھی ہدایت کی ہے۔

 

پاکستان

ن لیگ اور پیپلزپا رٹی میں حکومت بنانے پر اتفاق

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ شہباز شریف وزیراعظم اور آصف علی زرداری صدر کیلئے ہمارے مشترکہ امیدوار ہوں گے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ن لیگ اور پیپلزپا رٹی میں حکومت بنانے پر اتفاق

پاکستان مسلم لیگ(ن) اور پاکستان پیپلز پارٹی نے وفاق میں حکومت بنانے پر اتفاق رائے کرلیا ہے۔اسلام آباد میں دونوں جماعتوں کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ دونوں سیای پارٹیاں مل کر حکومت بنائیں گیں ۔

اجلاس کے بعد نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری ، شریک چیئرمین آصف علی زرداری اور مسلم لیگ نون کے صدر شہباز شریف نے کہا کہ ہمارے پاس حکومت بنانے کیلئے مطلوبہ تعداد موجود ہے۔

 اس موقع پر شہباز شریف نے دونوں جماعتوں کے کامیاب مذاکرات پر اطمینان کا اظہار کیا اور کہا کہ دونوں جماعتوں نے مثبت انداز میں مذاکرات کے کئی دور کئے۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ شہباز شریف وزیراعظم اور آصف علی زرداری صدر کیلئے ہمارے مشترکہ امیدوار ہوں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

انتخابی نتائج کے خلاف الیکشن کمیشن میں سماعت جا ری

 الیکشن کمیشن نے شکایت کے اندراج کے لئے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں اپنی عمارت میں ایک سیل قائم کردیاہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

انتخابی نتائج کے خلاف الیکشن کمیشن  میں سماعت جا ری

 الیکشن کمیشن آف پاکستان میں قومی اسمبلی اور چاروں صوبائی اسمبلیوں کے نتائج کے خلاف درخواستوں پر سماعت جاری ہے۔

 تفصیلات کے مطابق الیکشن نتائج کےخلاف 88 امیدواروں نے درخواستیں دائر کی تھیں ، الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ کسی بھی درخواست کے خلاف انتقامی کا رروائی نہیں کی جائے گی ۔ 

 الیکشن کمیشن نے شکایت کے اندراج کے لئے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں اپنی عمارت میں ایک سیل قائم کردیاہے۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پاکستان غیرملکی کمپنیوں کےساتھ فائدہ مند کاروباری شراکت داری چاہتاہے، صدر مملکت

پاکستان اپنی معاشی صورتحال بہتر بنانے کیلئے برآمدات بڑھانے پر توجہ مرکوز کر رہا ہے، ڈاکٹر عارف علوی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پاکستان غیرملکی کمپنیوں کےساتھ فائدہ مند کاروباری شراکت داری چاہتاہے، صدر مملکت

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ پاکستان اپنی معاشی صورتحال بہتر بنانے کیلئے برآمدات بڑھانے پر توجہ مرکوز کر رہا ہے ،پاکستان غیرملکی کمپنیوں کےساتھ باہمی طور پر فائدہ مند کاروباری شراکت داری چاہتاہے۔

صدر مملکت سے نمک اور معدنیات کے شعبے کی امریکی کمپنی کے وفد کی ملاقات، وفد نے صدر مملکت کو نمک کی کان کنی ، پراسیسنگ اور مارکیٹنگ میں کمپنی کے کردار کے بارے میں بریفنگ دی ۔

صدرمملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ پاکستان مختلف شعبوں میں بیرونی سرمایہ کاری اور جوائنٹ وینچرز کے فروغ کا خواہاں ہے ، پاکستانی نمک کی بہتر پراسیسنگ، پیکجنگ اور مارکیٹنگ سے قدر میں اضافہ کیا جا سکتا ہے، پاکستانی نمک اعلی ٰ معیار اور انتہائی کم سرمایہ کاری سے حاصل کیا جا سکتا ہے، حکومت سرمایہ کاروں کو سہولیات پہنچانے کیلئے پرعزم ہے، عالمی سطح پر پاکستانی نمک کی مانگ میں اضافے کیلئے اعلیٰ معیار کے نمک کی فراہمی کو یقینی بنانا ہوگا۔

صدر مملکت نے مریکل سالٹ ورکس کمپنی کو پاکستان میں سرمایہ کاری کرنے پر سراہا۔صدر مملکت نے مریکل سالٹ ورکس اور پاکستان منرل ڈویلپمنٹ کارپوریشن کے درمیان معاہدے پر دستخط کو بھی خوش آئند قرار دیا۔وفد نےصدر مملکت کو زر مبادلہ کمانے میں پاکستانی نمک کی کانوں کی صلاحیت کے بارے میں بتایاکہ معیاری اور منرلز سے بھرپور راک سالٹ دنیا میں صرف پاکستان میں پایا جاتا ہے، پاکستانی نمک کم قیمت اور اعلی ٰ معیار کا حامل ہے۔

وفد نے بتایا کہ پاکستان دنیا میں نمک کی بڑی مارکیٹ سے استفادہ کر سکتاہے ، معدنیاتی اجزاء کے لحاظ سے پاکستانی نمک کا معیار دنیا میں سب سے بہترین ہے ، ذمہ دارانہ کان کنی، بہتر پراسیسنگ اور مارکیٹنگ سے پاکستانی نمک کی قدر میں اضافہ کیا جاسکتا ہے۔

وفد نے بتایا کہ مریکل سالٹ ورکس کلیکٹو پاکستان میں نمک کے شعبے میں سرمایہ کرے گی ،کمپنی پاکستانی نمک کی اعلیٰ معیار کی ٹیکنالوجی کی مدد سے کان کنی اور پراسیسنگ کرے گی ، اعلی ٰ معیار کی ٹیکنالوجی کی بدولت کان کنی اور پراسیسنگ کے دوران نمک کے ضیاع کو کم کیا جا سکے گا۔ملاقات میں صدر مملکت نے ماحول دوست اور ذمہ دار کان کنی کے فروغ کی ضرورت پر بھی زور دیا۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll