جی این این سوشل

جرم

گوجرانوالہ میں معمولی جھگڑے پر فائرنگ، دو بھائیوں سمیت چچا جاں بحق

واقعہ گوجرانوالہ کے علاقے منڈیالہ میر شکاراں میں  پیش آیا، پولیس

پر شائع ہوا

کی طرف سے

گوجرانوالہ میں معمولی جھگڑے پر فائرنگ، دو بھائیوں سمیت  چچا جاں بحق
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

گوجرانوالہ میں معمولی جھگڑے پر فائرنگ، دو بھائی اور چچا جاں بحق ہو گئے

پولیس کے مطابق فائرنگ کا واقعہ گوجرانوالہ کے علاقے منڈیالہ میرشکاراں میں  پیش آیا جہاں 2 مسلح افراد نےچوک میں کھڑے افراد پرفائرنگ کی جس کے نتیجے میں 3 افراد جاں بحق اور 7 زخمی ہوگئے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ جاں بحق افراد میں 2 بھائی اور چچا شامل ہیں جب کہ فائرنگ سے زخمی ہونے والوں میں 2 راہگیر بھی شامل ہیں۔

پولیس کے مطابق فریقین محلے دار ہیں اور ان کا گزشتہ رات معمولی بات پر جھگڑا ہوا تھا،  متاثرہ فریق عید کی نماز کے بعد چوک میں کھڑے تھے کہ اس دوران ملزمان نےفائرنگ کی اور فرار ہوگئے۔

پولیس کا کہنا ہےکہ زخمیوں کو طبی امداد کے لیے اسپتال منتقل کردیا گیا اور ملزمان کی تلاش جاری ہے۔

پاکستان

ایف پی سی سی آئی کا آئی پی پیز کے معاہدوں کے خلاف سپریم کورٹ جانے کا فیصلہ

آئی پی پی معاہدوں کے تحت، پاکستان اربوں روپے ان کمپنیوں کو ادا کرتا ہے جو بجلی پیدا نہیں کرتیں، گوہر اعجاز

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ایف پی سی سی آئی کا آئی پی پیز کے معاہدوں کے خلاف  سپریم کورٹ  جانے کا  فیصلہ

سابق نگران وزیر تجارت ڈاکٹر گوہر اعجاز نے کہا ہے کہ ایف پی سی سی آئی نے آئی پی پیز کے معاہدوں کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

سوشل میڈیا پلیٹ فارم ایکس پر اپنے ٹویٹ میں انہوں ںے کہا ہے کہ چیمبرز آف کامرس نے آئی پی پیز کے خلاف سپریم کورٹ جانے کا فیصلہ ہے، فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری (FPCCI) پاکستان کی کاروباری برادری کی اعلیٰ نمائندہ ہے، ایف پی سی سی آئی معزز سپریم کورٹ میں باضاطہ طور پر پٹیشن دائر کرے گی کہ وہ اس ناقابل برداشت صورتحال میں مداخلت کرے جو ہر پاکستانی کے حق زندگی کو متاثر کرتی ہے۔

گوہر اعجاز نے کہا کہ آئی پی پی معاہدوں کے تحت، پاکستان اربوں روپے ان کمپنیوں کو ادا کرتا ہے جو بجلی پیدا نہیں کرتیں، مہنگی بجلی تمام پاکستانیوں کے لیے ناقابل برداشت ہو چکی ہے, بجلی کی زیادہ قیمت شہریوں کو غربت میں دھکیل رہی ہے اور کاروباروں کو دیوالیہ کر رہی ہے.

ان کا کہنا تھا کہ 2020ء میں سابقہ عبوری توانائی کے وزیر محمد علی نے ایک تفصیلی رپورٹ لکھی تھی جس میں بتایا گیا تھا کہ حکومتی نااہلی اور آئی پی پی کی غلط بیانیوں کی وجہ سے سینکڑوں اربوں کا نقصان ہو رہا ہے، وہ رپورٹ آج تک مکمل طور پر نافذ نہیں کی گئی، کیوں؟ حکومت نے اس رپورٹ میں مطالبہ کردہ فرانزک آڈٹ کا حکم کیوں نہیں دیا؟،

ان کا کہنا تھا کہ حکومت کو فیصلہ کرنا ہوگا کہ 240 ملین پاکستانیوں کی بقا زیادہ اہم ہے یا 40 خاندانوں کے لیے یقینی منافع، ہمارا ملک تمام وسائل سے مالا مال ہے ہمیں خوشحالی کے لیے صرف بدانتظامی کا خاتمہ چاہیے، بجلی پاکستان کی صنعتوں کے لیے سب سے اہم مسئلہ ہے اور یہ براہ راست 240 ملین لوگوں کی زندگیوں کو متاثر کرتی ہے۔

سابق وزیر تجارت کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان چند برس میں ایک ہی غلطیاں دوبارہ نہیں برداشت کر سکتا صرف اس لیے کہ نئے ’’سرمایہ کاروں‘‘ کا ایک گروپ کچھ نہ کرنے کے عوض پیسہ کمانا چاہتا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

بشریٰ بی بی کی مقدمات کی تفصیلات فراہمی کیلئے درخواست پر اعتراض ختم، سماعت کیلئے مقرر

درخواست گزار نے عدالت عالیہ سے استدعا کی کہ تمام مقدمات اور انکوائریوں کی تفصیلات فراہم کرنے کا حکم دیا جائے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

بشریٰ بی بی کی مقدمات کی تفصیلات فراہمی کیلئے درخواست پر اعتراض ختم، سماعت کیلئے مقرر

لاہور ہائیکورٹ نے بانی پاکستان تحریک انصاف عمران خان کی اہلیہ بشریٰ بی بی کی مقدمات اور انکوائریز کی تفصیلات فراہمی کیلئے دائر درخواست پر رجسٹرار آفس کا اعتراض ختم کر تے ہوئے اپیل کو کل سماعت کے لیے مقرر کرنے کی ہدایت کر دی۔

لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس طارق سلیم نے بشریٰ بی بی کی درخواست پر بطور اعتراض سماعت کی۔

بشریٰ بی بی کی جانب سے دائر درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا کہ بانی پی ٹی آئی کو وزیر اعظم کے عہدے سے ہٹانے کے بعد مقدمات درج کیے جا رہے ہیں، میرے خلاف درج مقدمات اور انکوائریز کی تفصیلات فراہم نہیں کی جا رہیں۔

درخواست گزار نے عدالت عالیہ سے استدعا کی کہ تمام مقدمات اور انکوائریوں کی تفصیلات فراہم کرنے کا حکم دیا جائے۔

درخواست پر رجسٹرار آفس لاہور ہائیکورٹ نے بشریٰ بی بی کی دستاویزات پر انگوٹھے کے نشان نہ ہونے کا اعتراض عائد کیا۔

لاہور ہائیکورٹ نے بشری بی بی کیخلاف درج مقدمات اور انکوائریز کی تفصیلات فراہمی کیلئے درخواست پر رجسٹرار آفس کا اعتراض ختم کرتے ہوئے درخواست کو کل سماعت کے لیے لگانے کی ہدایت کر دی۔

پڑھنا جاری رکھیں

تجارت

پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں تیزی، 100 انڈیکس 79 ہزار کی سطح پر واپس

بینچ مارک کے ایس ای-100 انڈیکس میں 917 پوائنٹس کا اضافہ ہوا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں تیزی، 100 انڈیکس 79 ہزار کی سطح پر واپس

کراچی: پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں مسلسل دو روز کی شدید مندی کے بعد آج زبردست تیزی کا رجحان دیکھا گیا اور بینچ مارک کے ایس ای-100 انڈیکس میں 917 پوائنٹس کا اضافہ ہوا۔

پی ایس ایکس ویب سائٹ کے مطابق آج کے ایس ای-100 انڈیکس 917 پوائنٹس یا 1.17 فیصد بڑھ کر 79 ہزار 456 پر پہنچ گیا۔ کاروبار کے آغاز میں ہی انڈیکس 344 پوائنٹس بڑھ کر 79 ہزار 340 پر چلا گیا تھا۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز بینچ مارک کے ایس ای-100 انڈیکس 1578 پوائنٹس کی غیر معمولی کمی کے بعد 78 ہزار 538 پر بند ہوا تھا، جو 28 مئی 2024 کے بعد کی سب سے کم سطح تھی۔

آج کی تیزی میں حبیب بینک، اور یونی لیور پاکستان شامل ہیں، ان کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں بالترتیب4.97 فیصد، اور 4.95 فیصد اضافہ ہوا۔

مارکیٹ کے ماہرین کا کہنا ہے کہ آج کی تیزی کی وجہ گزشتہ روز کی شدید کمی کے بعد منافع خوری اور بین الاقوامی مارکیٹوں میں مثبت رجحان ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ آنے والے دنوں میں مارکیٹ میں یہ مثبت رجحان برقرار رہے گا۔

آج کے کاروبار میں 444 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اتار چڑھاؤ آیا۔ ان میں سے 194 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ، 234 کی قیمتوں میں کمی، اور 16 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی۔

مجموعی طور پر 47 کروڑ 47 لاکھ شیئرز 25 ارب 23 کروڑ روپے میں ٹریڈ ہوئے۔ مارکیٹ کی کیپٹلائزیشن 10 ہزار 834 ارب روپے سے بڑھ کر 10 ہزار 881 ارب روپے ہو گئی۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll