جی این این سوشل

دنیا

سعودی حکومت نے چند ممالک کے لیے خصوصی ڈیجیٹل سروس کا آغازکردیا

بندر بن عبداللہ نے کہا کہ اسمارٹ فونز کے ذریعے ویزا درخواست گزار کا ڈیٹا جمع کرنے کی سہولت سے ویزا حاصل کرنے والوں کو کافی آسانی ہوگی، وہ گھر بیٹے یہ مراحل طے کرسکتے ہیں۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

فائل فوٹو
فائل فوٹو

 

ریاض: سعودی حکومت نے چند ممالک کے لیے خصوصی ڈیجیٹل سروس کا آغاز کیا ہے جس کے ذریعے مملکت کے ویزے کے حصول میں آسانی ہوگی۔

سعودی معاون وزیرداخلہ برائے تکنیکی امور شہزادہ بندر بن عبداللہ کا کہنا ہے کہ سعودی عرب کے ویزے کیلئے فنگر پرنٹس، آئی اسکیننگ اور چہرے کی شناخت کا عمل اسمارٹ فونز کے ذریعے کیے جانے کی سہولت کا آغاز کیا گیا ہے، یہ اقدام ابتدائی طور پر چند ممالک کے لیے ہے، غیرملکیوں کو ویزے کے حصول میں پریشانیاں پیش نہیں آئیں گی۔

سعودی وزیر نے بتایا کہ آئندہ ماہ نئی ڈیجیٹل سروسز کا بھی آغاز کیا جارہا ہے جس کے ذریعے مائیکرو چیپ والے سعودی پاسپورٹ بنائے جائیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ نئے سعودی پاسپورٹس میں لگی چپ میں پاسپورٹ ہولڈر کا مکمل ڈیٹا فیڈ ہوگا جسے ایئرپورٹ پر موجود الیکٹرانک سکرینز کے ذریعے ریڈ کیا جاسکے گا، وزارت داخلہ خدمات کو بہتر بنانے کے لیے کوشاں ہے۔

بندر بن عبداللہ نے کہا کہ اسمارٹ فونز کے ذریعے ویزا درخواست گزار کا ڈیٹا جمع کرنے کی سہولت سے ویزا حاصل کرنے والوں کو کافی آسانی ہوگی، وہ گھر بیٹے یہ مراحل طے کرسکتے ہیں۔

قبل ازیں درخواست گزار کو مقررہ دفتر میں جا کرڈیٹا فیڈ کرانا ہوتا تھا۔ ابتدائی طور پر یہ سروس چند ممالک کے لیے تجرباتی بنیادوں پرجاری کی گئی ہے بعد ازاں مرحلہ وار تمام ممالک کے لیے شروع کی جائے گی۔ اس سروس کے ذریعے عمرہ ، حج ، وزٹ یا ورک ویزے بھی حاصل کیے جاسکتے ہیں۔

محمد اکرم سینیئر ویب ایڈیٹر ہیں ۔ جرنلزم میں ایم فل ڈگری رکھتے ہیں۔ مختلف ٹی وی چینلز کے ویب اور سوشل میڈیا سے واسطہ رہے ہیں اب جی این این ٹی وی سے وابستہ ہیں۔ محمد اکرم بلاگز اور آرٹیکل بھی لکھتے ہیں۔

ٹیکنالوجی

سال 2021 کی ٹاپ 10 ایموجیز کی فہرست جاری

یونی کوڈ کنسورشیم نے 2021 میں 10 سب سے زیادہ استعمال ہونے والے ایموجیز کی فہرست جاری کی ہے۔

پر شائع ہوا

Ali Raza

کی طرف سے

سال 2021 کی ٹاپ 10 ایموجیز کی فہرست جاری

سوشل میڈیا پر گفتگو کرتے ہوئے ہم الفاظ کیساتھ ایموجیز کا استعمال بھی کرتے ہیں جو تاثرات کی ترجمانی کرتے ہیں جن میں سے کچھ بہت زیادہ استعمال ہوتے ہیں۔

یونی کوڈ کنسورشیم نے 2021 میں 10 سب سے زیادہ استعمال ہونے والے ایموجیز کی فہرست جاری کی ہے۔

نئی فہرست میں میں زیادہ تر 2019 کے ایموجیز ہی ہیں۔کمپنی نے  2020 میں دنیا میں سب سے زیادہ استعمال ہونے والے ایموجیز کی فہرست جاری نہیں کی تھی۔

رپورٹ کے مطابق اس سال بھی فہرست میں سب سے اوپر وہی ایموجی ہے جو کافی عرصے سے سب کو پیچھے چھوڑے ہوئے ہے، ٹیئر آف جوائے یعنی وہ ایموجی جو ہنسی کے ساتھ آنسوؤں کو دکھاتا ہے۔

دوسرے نمبر پر  دل یا ریڈ ہارٹ ایموجی ہے۔  تیسرے نمبر پر رولنگ آف دی فلور لافنگ پھر تھمب اپ سائن چوتھے نمبر پر ہے۔جبکہ پانچویں نمبر پر   رونے والے چہرے کا ایموجی لاؤڈلی کرائنگ فیس ہے۔

فہرست میں بندھے ہوئے ہاتھ  والا ایموجی چھٹے نمبر پر ہے، فیس بلوئنگ کا ساتواں نمبر ہے۔ تین دلوں کے ساتھ مسکراتے چہرے والے ایموجی کے حصے میں 8 واں نمبر آیا، مسکراتے چہرے اور دل والی آنکھوں کا ایموجی 9 ویں نمبر پر رہا۔

ہنستے چہرے اور ہنستی آنکھوں والا ایموجی کا فہرست میں 10 واں نمبر ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

ملک میں کورونا وائرس سے مزید10 افراد جاں بحق

اسلام آباد:  پاکستان میں کورونا وبا سے اموات اور کیسز کی شرح میں   بتدریج کمی آرہی ہے،   گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا کے مثبت کیسز کی  شرح 0.78 فیصدر رہی ۔ 

پر شائع ہوا

Asma Rafi

کی طرف سے

ملک میں کورونا وائرس سے مزید10 افراد جاں بحق

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی جانب سے جاری کیے گئے تازہ اعداد و شمارکے مطابق ملک میں کورونا وائرس کی  چوتھی  لہر کے دوران  مزید10 افراد  انتقال  کرگئے جبکہ 336 نئے کیسز رپورٹ ہوئے ۔ پاکستان  میں کورونا سے  اموات کی تعداد 28ہزار 777 ہوگئی ہے اور مجموعی کیسز 12 لاکھ 87ہزار 161تک جاپہنچے ہیں۔  

این سی اوسی  کے مطابق ملک بھر میں  چوبیس گھنٹے کے دوران  42 ہزار 944فراد کے ٹیسٹ کئےگئے ہیں ۔ 

ملک میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید 858فراد کورونا وائرس سے صحتیاب ہوئے ہیں ۔اب تک  95.9 فیصد مریض کوویڈ سے صحت یاب ہوئے  ، اب تک  مجموعی طور پر 12 لاکھ 46 ہزار 464مریض اب تک اس بیماری سے شفایاب ہو چکے ہیں۔

واضح رہے کہ  پاکستان  کورونا مریضوں کے حوالے سے مرتب کی گئی فہرست میں 33 ویں نمبر پر ہے ۔ پاکستان میں کورونا وائرس کا پہلا کیس 26 فروری 2020 کو ملک کے سب سے بڑے شہر کراچی میں سامنے آیا تھا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

اسمبلیوں کا گھیراؤ کرنا پڑا تو کریں گے: ایم کیو ایم

کراچی: ایم کیو ایم راہنماؤں کا کہنا ہے کہ بلدیاتی نظام بحال کرنے کے لیےہم احتجاج کو بڑھائیں گے، اگر اسمبلیوں کا گھیراو کرنا پڑا تو کریں گے۔

پر شائع ہوا

Umar Nawaz

کی طرف سے

اسمبلیوں کا گھیراؤ کرنا پڑا تو کریں گے: ایم کیو ایم

تفصیلات کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے وفد نے کراچی میں واقع مسلم لیگ ہاوس کارساز کا دورہ کیا، جہاں دونوں جماعتوں کی جانب سے کراچی کے حقوق کے حوالے سے بات کی گئی ہے۔

ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایم کیوم رہنما عامر خان کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کہتی ہے کہ وفاق میں اپوزیشن سے کسی بل پر مشاورت نہیں کی جاتی، صوبے میں پیپلزپارٹی اس کے برعکس کرتی ہے،کسی سے مشاورت نہیں کی اور جعلی اور کھوٹی اکثریت سے بل پاس کرادیا۔ 

ان کا کہنا تھا کہ مئیر کے پاس جو بچے کچے سروسز ٹیکس، تعلیمی اداروں یا اسپتال کے اختیارات تھے، وہ بھی چھین لیے، اب کے ایم سی نام کا کے ایم سی رہ گیا ہے، یہ جھوٹ بولتے ہیں کہ مشرف دور کا بلدیاتی نظام بحال کررہے ہیں، ہم احتجاج کررہے ہیں، ہم اس احتجاج کو بڑھائیں گے، اگر اسمبلیوں کا گھیراو کرنا پڑا تو کریں گے۔

ایم کیو ایم رہنما وسیم اختر نے کہا کہ ایڈمنسٹریٹر کو چاہیے وہ آئیں بائیں شائیں نہ کریں، یہ باتیں پرانی ہوگئیں، مرتضی وہاب کو چاہیے کہ کے ایم سی کو اختیارات واپس دلوائیں، وہ جہاں بیٹھے ہیں ان کے پاس طاقت ہے، مراد علی شاہ کے خاص ہیں وہ یہ ڈرامے نہ کریں، اس شہر کے لیے کچھ کریں۔

سابق گورنر سندھ محمد زبیر کا کہنا تھا کہ فنڈز کی تقسیم این ایف سی کی بنیاد پر ہونا چاہیے، لیکن نیت صاف ہونی چاہیے، ن لیگ کے دور حکومت میں فیڈرل ٹیکس ریونیو ڈبل ہوا تو صوبے کو زیادہ پیسہ ملا، اندرون سندھ میں پیسہ کہاں لگ رہا ہے؟ اگر کراچی کے ساتھ زیادتی ہورہی ہے تو کہیں تو پیسہ لگے۔

ن لیگی رہنما مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کا وفاق اور صوبے میں الگ الگ چہرہ ہے، وفاق میں یہ فیڈریشن کی بات کرتے ہیں صوبے میں یہ حقوق سلب کرتے ہیں۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll