جی این این سوشل

تجارت

سعودی عرب سے ادھارتیل خریداری معاہد ے کی منظوری

معاہدہ ابتدائی طور پر ایک سال کے لیے ہے جسے بعد میں بڑھایا بھی جا سکتا ہے۔ وزارت خزانہ، اسٹیٹ بینک اور ایف بی آر نے پاک سعودی معاہدے کے ڈرافٹ پر اتفاق کیا تھا۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

سعودی عرب سے ادھارتیل خریداری معاہد ے کی منظوری
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

اسلام آباد: وفاقی کابینہ نے سعودی عرب سے ڈیفرڈ پے منٹ پر تیل خریداری معاہد ے کی منظوری دے دی۔

وفاقی کابینہ نے سعودی عرب سے ادھار پر تیل خریداری معاہدے کی منظوری سرکولیشن سمری کے ذریعے دی۔ سرکولیشن سمری اکنامک ڈویژن کی جانب سے وفاقی کابینہ کو بھجوائی گئی تھی۔

معاہدے کے تحت سعودی عرب پاکستان کو ماہانہ 100 ملین ڈالرز کا ادھارتیل  فراہم کرے گا۔ معاہدے کے تحت پاکستان کو فیول کی ادائیگی کے ساتھ 3 اعشاریہ 80 فیصد مارجن بھی دینا ہو گا۔

معاہدہ ابتدائی طور پر ایک سال کے لیے ہے جسے بعد میں بڑھایا بھی جا سکتا ہے۔ وزارت خزانہ، اسٹیٹ بینک اور ایف بی آر نے پاک سعودی معاہدے کے ڈرافٹ پر اتفاق کیا تھا۔

یاد رہے کہ ڈیفرڈ پے منٹ پر فیول دینے کا وعدہ وزیراعظم کے دورہ سعودی عرب کے دوران ہوا تھا۔ سعودی ولی عہد نے ایک سال تک پاکستان کو ڈیفرڈ پے منٹ پر فیول دینے کا وعدہ کیا۔

پاکستان

عمران خان، اسد عمر اور شاہ محمود کیخلاف 16 مقدمات درج

چیئرمین تحریک انصاف عمران خان، وائس چیئرمین شاہ محمود قریشی اور جنرل سیکرٹری اسد عمر سمیت پی ٹی آئی رہنماؤں کے خلاف اسلام آباد میں 16 مقدمات درج کر لیے گئے۔

پر شائع ہوا

Raja Sheroz Azhar

کی طرف سے

عمران خان، اسد عمر اور شاہ محمود کیخلاف 16 مقدمات درج

وفاقی دارالحکومت کے تھانہ کراچی کمپنی میں درج مقدمے میں شاہ محمود قریشی، شیریں مزاری، زرتاج گل، علی امین گنڈا پور اور خرم نواز کے نام بھی شامل ہیں۔ 
 
پی ٹی آئی رہنماؤں کے خلاف درج مقدمے میں راستوں کی بندش، کار سرکار میں مداخلت، پولیس پر حملہ اور املاک کو نقصان پہنچانے کی دفعات شامل کی گئی ہیں۔

پی ٹی آئی رہنماؤں اور کارکنوں کے خلاف مقدمات تھانہ آبپارہ، تھانہ ترنول، کوہسار، بہارہ کہو، رمنا، سیکرٹریٹ اور تھانہ لوہی بھیر میں درج کیے گئے ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

عمران خان سے منسوب باتوں کا حقیقت سے کوئی لینا دینا نہیں، شہباز گل

عمران خان سے متعلق ملک ریاض اور آصف زرداری کی مبینہ آڈیو کی پاکستان تحریک انصاف نے تردید کردی۔

پر شائع ہوا

Raja Sheroz Azhar

کی طرف سے

عمران خان سے منسوب باتوں کا حقیقت سے کوئی لینا دینا نہیں، شہباز گل

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما شہباز گل کا کہنا ہے کہ کاروباری شخص اور عمران خان کے مخالف سیاستدان آپس میں بات چیت کر رہے ہیں۔

شہباز گل نے کہا کہ بات چیت میں عمران خان سے منسوب باتوں کاحقیقت سے کوئی لینا دینا نہیں ہے۔

رہنما پی ٹی آئی نے کہا کہ عمران خان کو کسی این آر او کی ضرورت نہیں، یہ تمام لوگ خان سے این آر او مانگتے رہے تھے جو انہیں نہیں ملا۔

واضح رہے کہ ملک ریاض کی سابق صدر آصف علی زرداری کے ساتھ گفتگو کی مبینہ آڈیو سامنے آئی ہے، جس میں وہ عمران خان سے متعلق گفتگو کررہے ہیں۔

ملک ریاض آڈیو میں یہ کہتے سنائی دے رہے ہیں کہ ’خان کے پیغامات آرہے ہیں کہ مصالحت کروادیں‘۔

مبینہ آڈیو میں ملک ریاض کے ’اسلام علیکم سر‘ اور آصف زرداری کے ’وعلیکم اسلام، خیریت ‘ سے گفتگو کا آغاز ہوا۔

ملک ریاض نے بات کو آگے بڑھاتے ہوئے کہا کہ سر بس بتانا تھا، میں نے پہلے بھی آپ کو بتایا تھا، باتیں آپ سے کرنی ہیں، آپ نے کہا تھا بات نہیں کریں گے۔

پراپرٹی ٹائیکون نے آصف علی زرداری سے گفتگو کے دوران مزید کہا کہ ’آپ کو انفارمیشن دینی تھی، خان کے پیغامات آرہے ہیں کہ مصالحت کروادیں‘۔

ملک ریاض نے یہ بھی کہا کہ ’آج تو اُس نے مجھے بہت ہی مسیجز کیے ہیں کہ پیچ اپ کروادیں‘۔

پی پی کے شریک چیئرمین نے جواب دیا کہ اب امپاسیبل ہے نہ۔

اس پر ملک ریاض نے آخری جملہ یہ کہتے سنائی دے رہے ہیں کہ ’ نہیں ٹھیک ہے، بس آپ کے سامنے بات رکھ دی‘۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

اب پوری تیاری کے ساتھ اسلام آباد آؤں گا : عمران خان

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین اور سابق وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ میں دوبارہ آؤں گا اور اب کی بار پوری تیاری کے ساتھ اسلام آباد آؤں گا۔

پر شائع ہوا

Raja Sheroz Azhar

کی طرف سے

اب پوری تیاری کے ساتھ اسلام آباد آؤں گا : عمران خان

پشاور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے کہا کہ میں اپنی جان قربان کردوں گا لیکن ان چوروں کو کو قبول نہیں کروں گا، ضمانت  پر رہا باپ بیٹے سمجھتے ہیں کہ ان کو قبول کرلیں گے، میں اپنی جان دے دوں گا الیکن ان کو قبول نہیں کروں گا۔

عمران خان نے کہا کہ حکومت کو 6 دن کا ٹائم دیا تھا، اب کی بار تیاری کر کے آئیں گے، ان لوگوں نے ہم سب پر مقدمے بنا دیے، ان چوروں کا یہی کام ہے، اس مافیا کا کام ایسا ہے یا بلیک میل کرتے ہیں یا خریدتے ہیں، ابھی سے اپنے اپنے حلقوں میں جائیں اور تیاری کریں۔

سابق وزیر اعظم نے کہا کہ جنہوں نے درختوں کو آگ لگائی وہ ہمارے لوگ نہیں تھے، املاک کو آگ پولیس اور ان کے لوگ لگا رہے تھے، میں نے تو احتجاج میں فیملیز کو بھی بلایا تھا، میں فیمیلیز کو احتجاج میں آنے کا کہہ رہا تھا کیا ہم انتشار کے لیے آ رہے تھے۔

انہوں نے کہا کہ سی سی پی او لاہور اور ڈی جی آپریشنز کےخلاف عدالت جانا ہے، مقدمہ درج کرانا ہے، ڈی آئی جی آپریشنز کے خلاف بھی درخواست دیں گے، آئی جی اسلام کو سزا ہونے والی تھی اسلام آباد میں لے آئے، جن حکام نے کیا ان کے خلاف مقدمے درج کرائیں گے، ان سب کے چہرے سوشل میڈیا پر ڈالیں گے۔

عمران خان نے کہا کہ کیا ہم بھیڑ بکریاں ہیں جو امریکا کے غلاموں کو قبول کرلیں گے، یہ پاکستان کی جمہوریت کا امتحان ہے، پاکستان میں پرامن احتجاج کا راستہ روکا جا رہا ہے، عدلیہ سے بڑے ادب سے کہتا ہوں کہ امتحان آپ کا بھی ہے، انہوں  نے خواتین اور وکلا سے بدسلو کی اور انہیں پکڑ کر مارا۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll