جی این این سوشل

دنیا

عیدالاضحیٰ 2022: متحدہ عرب امارات نے پبلک سیکٹر کے لیے 4 دن کی تعطیلات کا اعلان کردیا

فیڈرل اتھارٹی فار گورنمنٹ ہیومن ریسورسز (FAHR) کے مطابق چھٹی 8 جولائی بروز جمعہ سے پیر جولائی تک ہو گی۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

عیدالاضحیٰ 2022: متحدہ عرب امارات نے پبلک سیکٹر کے لیے 4 دن کی تعطیلات کا اعلان کردیا
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

متحدہ عرب امارات میں حکام نے وفاقی سرکاری ملازمین کے لیے عید الاضحیٰ کی سرکاری تعطیلات کا اعلان کر دیا ہے۔

فیڈرل اتھارٹی فار گورنمنٹ ہیومن ریسورسز (FAHR) کے مطابق چھٹی 8 جولائی بروز جمعہ سے پیر جولائی تک ہو گی۔

وفاقی حکومت کے محکموں میں کام منگل 12 جولائی سے دوبارہ شروع ہو جائے گا۔
 متحدہ عرب امارات میں مقیم پاکستانیوں سمیت  پبلک سیکٹر میں کام کرنے و الے غیر ملکیوں  پر بھی چھٹیوں کا اطلاق ہوگا ۔



علاقائی

شہر قائدمیں آج کتنی بارش ہوئی ؟ اعدادوشمار جاری 

کراچی : محکمہ موسمیات کی جانب سے صوبائی دارالحکومت   کراچی میں آج ہونے والی بارش کے تازہ اعداد و شمار جاری کردئیے گئے ۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

شہر قائدمیں آج کتنی بارش ہوئی ؟ اعدادوشمار جاری 

تفصیلات کے مطابق محکمۂ موسمیات کے ریکارڈ کے مطابق شہر قائد میں آج  سب سے زیادہ 32 ملی میٹر بارش قائد آباد میں ریکارڈ کی گئی۔

ریکارڈ کے مطابق دوپہر 2 بجے تک پی اے ایف فیصل بیس شارع فیصل اور سرجانی ٹاؤن میں 26 ، جناح ٹرمینل پر 25 اعشاریہ 9 ، ناظم آباد میں 22، یونیورسٹی روڈ پر 19 اعشاریہ 5، ایئر پورٹ کے اولڈ ایریا میں 18 اعشاریہ 22 ملی میٹر بارش ریکارڈ ہوئی ہے۔

محکمۂ موسمیات کے اعداد و شمار کے مطابق سعدی ٹاؤن میں 18، ڈیفنس میں 17 اعشاریہ 8، پی اے ایف مسرور بیس پر 11، گلشنِ معمار میں 9 اور کیماڑی میں 6 اعشاریہ 4 ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی۔

واضح رہے کہ محکمہ موسمیات  کی جانب سے اسلام آباد ، پنجاب ، خیبر پختون خوا اور بلوچستان میں بھی آج سے 13 اگست تک تیز ہواؤں اور گرج چمک کے ساتھ  بارشوں کی پیش گوئی کی ہے ۔ 

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

شہباز گل کی گرفتاری غیر قانونی ہے،فوج کیخلاف بات کرنے والوں کی مذمت کرتے ہیں، اسد قیصر

سابق اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کا کہنا ہے کہ شہباز گل کی گرفتاری غیر قانونی ہے۔فوج کیخلاف جو بھی بات کرے اس کی مذمت کرتے ہیں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

شہباز گل کی گرفتاری غیر قانونی ہے،فوج کیخلاف بات کرنے والوں کی مذمت کرتے ہیں، اسد قیصر

 

پی ٹی آئی رہنما اسد قیصر کا کہنا ہے کہ  فوج کےخلاف  مسلم لیگ ن، مولانا فضل الرحمان نے جو لہجہ استعمال کیا ان کے خلاف بھی پرچے ہونے چاہیے، قانون سے کوئی بھی بالا تر نہیں، فوج کے خلاف جو بھی بات کرے ان کی مذمت کرتے ہیں۔

انہوں  نے کہا کہ شہباز گل کی گرفتاری غیر قانونی ہے، ان کے خلاف ثبوت ہے توعدالت میں پیش کیا جائے،عدالت میں اس کا فیصلہ ہو۔

سابق اسپیکر قومی اسمبلی ممنوعہ  فنڈنگ کیس میں ایف آئی اے کی جانب سے طلبی کے نوٹس کو پشاور ہائیکورٹ میں چیلنج کرنے پہنچے تو میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ  ضمانت قبل از گرفتاری نہیں کرانے آیا، یہ اکاونٹ ہم نے صرف سہولت کے لئے کھولا تھا یہ غیر قانونی نہیں ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ ملازمین کی تنخواہوں اور دفتر کے اخراجات کے لئے کھولا تھا۔ اکاؤنٹ سے رقم جمع اور نکالنے کے تمام امور بذریعہ چیک ہوئے ہیں، اکاؤنٹ سے 6 سال میں صرف 21 لاکھ روپےکی ٹرانزیکشن ہوئی۔عمران خان انشااللہ پھر وزیر اعظم بنیں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

ڈاکٹررتھ فاؤ کو بچھڑے 5  برس بیت گئے

پاکستان میں جذام کے مریضوں کے لیے مسیحا ڈاکٹر رتھ فاؤ کی آج   پانچویں   برسی منائی جارہی ہے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ڈاکٹررتھ فاؤ کو بچھڑے 5  برس بیت گئے

 جرمنی میں پیدا ہونے والی یہ عظیم خاتون 57 سال پاکستان میں مقیم رہیں اورجذام کا مرض مملکت خداد سے ختم کرنے میں سب سے کلیدی کردار ادا کیا ۔ ڈاکٹر رتھ فاؤ 9ستمبر1929 کو جرمنی کے شہر لیپ زگ میں پیدا ہوئی تھیں ، ڈاکٹر رتھ فاؤ1960 میں پاکستان آئیں اور پھر جذام کے مریضوں کے لیے اپنی ساری زندگی وقف کردی تھی ،  وہ جذام کے مریضوں کو مفت علاج کی سہولیات فراہم کرتی تھیں۔

جرمنی کی سماجی تنظیم ’ڈاٹرز آف ہارٹ آف میری‘ کی جانب سے جب انہوں نے پہلی مرتبہ کراچی کا دورہ کیا تو جذام کے مریضوں کو دیکھ کر انہوں نے فیصلہ کیا کہ وہ پاکستان میں رہ کراس مرض کے خاتمے کے لیے کوشش کریں گی۔

ڈاکٹر رتھ فاؤ نے 1963 میں آئی آئی چندریگر روڈ (پرانا میکلوروڈ) سے ملحقہ جذام کے مریضوں کی بستی میں مفت کلینک کا آغاز کیا تو اس وقت پاکستان میں ہزاروں مریض تھے۔ اس زمانے میں لوگوں کا عمومی رویہ تھا کہ ایسے مریضوں سے میل جول سے اجتناب برتتے تھے۔

عالمی ادارہ صحت کی جانب سے سنہ1996 میں پاکستان کو کوڑھ کے مرض پر قابو پالینے والے ممالک میں شامل کرلیا گیا اور پاکستان کو یہ اعزاز دلانے میں ڈاکٹررتھ فاؤ نے سب سے اہم کردار اداکیا ۔

ڈاکٹر رتھ فاؤ جذام کے مریضوں کی مسیحائی کرنے کے لیے سندھ، خیبر پختونخواہ، بلوچستان اور شمال میں دور دراز علاقوں میں بھی گئیں اورایسے مریضوں جذام کے زیادہ سے زیادہ مریضوں کی مسیحائی کے لیے انہوں نے کراچی کے دوسرے علاقوں میں بھی  چھوٹے کلینک قائم کیے اور یہ نیٹ ورک بڑھتے بڑھتے 157 لیپرسی سینٹرز تک پہنچ گیا۔

ان گراں قدر خدمات کے اعتراف میں پاکستانی حکومت کی جانب سے انہیں 1979 میں ہلال امتیاز اور 1989 میں ہلال پاکستان کے اعزازت سے نوازا گیا جبکہ 1988 میں انہیں پاکستانی شہریت دی گئی ۔

لاکھوں مریضوں کے چہروں پر مسکراہٹ بکھیرنے والی ڈاکٹر رتھ فاؤ 10 اگست 2017 کو طویل علالت کے بعد انتقال کر گئیں۔ 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll