جی این این سوشل

تفریح

مشہور بھارتی کامیڈین اداکار دیپیش بھان چل بسے

دیپیش  بھان نے تارک مہتا کا اُلٹا چشمہ، مے آئی کم اِن میڈم، ایف آئی آر اور بھابھی جی گھر پر ہیں جیسے مشہور    ٹی وی ڈراموں میں مزاحیہ کردار ادا کر کے شہرت کمائی تھی۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

مشہور بھارتی کامیڈین اداکار دیپیش بھان چل بسے
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

ممبئی: بھارتی ٹیلی ویژن کے معروف کامیڈین اداکار دیپیش بھان انتقال کر گئے۔

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق  مشہور ٹیلی ویژن ڈرامے ’بھابی جی گھر پر ہیں‘ میں کانسٹیبل کا مزاحیہ کردار ادا کرنے والے 41 سالہ اداکار دیپیش بھان  چل بسے۔ اداکار کے گھر والوں نے موت کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ دیپیش کی موت برین ہیمریج کے باعث واقع ہوئی۔

 بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ اداکار گھر کے قریب اپنے دوستوں  کے ساتھ کرکٹ کھیل رہے تھے کہ اچانک وہ زمین پر گر گئے انہیں فوری  قریبی اسپتال لے جایا گیا جہاں اداکار کو مردہ قرار دے دیا گیا۔

یاد رہے کہ دیپیش  بھان نے تارک مہتا کا اُلٹا چشمہ، مے آئی کم اِن میڈم، ایف آئی آر اور بھابھی جی گھر پر ہیں جیسے مشہور    ٹی وی ڈراموں میں مزاحیہ کردار ادا کر کے شہرت کمائی تھی۔

 

پاکستان

ہم بحرانوں سے کیوں دوچار ہوئے جس میں سب سے بڑا معاشی بحران ہے، وزیر اعظم

وزیر اعظم شہباز شریف کا کہنا ہے کہ ہم نے پاکستان کو ایسا نہیں بنایا جس سے قائد اور دیگر رہنماؤں کی روحیں مسرور ہوں، ہم نے ان دونوں کے اصل مقاصد کو اپنایا نہیں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ہم بحرانوں سے کیوں دوچار ہوئے جس میں سب سے بڑا معاشی بحران ہے، وزیر اعظم

قوم سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ ہم اپنے بچوں کو وہ سب کچھ نہیں دے سکے جس کے وہ حقدار ہیں، ہم بحرانوں سے کیوں دوچار ہوئے جس میں سب سے بڑا معاشی بحران ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ یہی وہ قوم ہے جس نے ذوالفقار علی بھٹو کی قیادت  میں وسائل نہ ہونے کے باوجود ایٹمی پروگرام شروع کیا، یہی وہ قوم ہے جس نے نواز شریف کی قیادت میں ایٹمی پروگرام کو مکمل کیا۔

وزیر اعظم نے کہا کہ اسی مہینے ارشد ندیم اور نوح بٹ نے کامیابیاں حاصل کر کے قوم کا سر فخر سے بلند کیا، اسی قوم نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں کامیابی حاصل کی، اب قوم کو تقسیم در تقسیم کیا جا رہا ہے، قوم کی وحدت کو پارہ پارہ کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

شہباز شریف نے کہا کہ پچھلی حکومت نے فیصلوں کے قوم کو مزید مشکلات میں مبتلا کردیا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

جمہوریت ہمیشہ شب خون کے بعد نئے جذبے سے واپس آئی، مریم اورنگزیب

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ جب بھی جمہوریت پر شب خون مارا گیا تو یہ پھر نئے جذبے سے لوٹی۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

جمہوریت ہمیشہ شب خون کے بعد نئے جذبے سے واپس آئی، مریم اورنگزیب

 

پاکستان کے 75ویں یوم آزادی پر اسلام آباد میں قومی پرچم کی پینٹنگ کی تقریب منعقد کی گئی جس میں وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب بطور مہمان خصوصی شریک ہوئیں۔ اسلام آباد سمیت چاروں صوبوں، آزاد کشمیر پولیس اور ایف سی کے دستوں نے سلامی پیش کیا۔

ایس ایس یو سندھ پولیس اور سی ٹی ڈی اسلام آباد پولیس کے دستوں نے بھی پریڈ میں حصہ لیا۔ اسلام آباد پولیس کے مختلف ڈویژنز نے ٹریفک ٹرانسپورٹ فلیٹ فلیگ مارچ بھی کیا۔ اس موقع پر وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا کہ مسلح افواج اور پولیس کے جوانوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔ ڈی چوک ہمیشہ احتجاج کے لیے استعمال ہوا ہے لیکن آج ڈی چوک پر ہنرمند بچے قومی پرچم کی پینٹنگ کریں گے۔

انہوں  نے کہا کہ پاکستان کے 75 سال مکمل ہونے پر قوم اکھٹی ہوئی ہے۔ قائداعظم کی جدوجہد نے یہ ملک بنایا اور ان کا کہنا تھا کہ جمہوریت میں اس مٹی کا مستقبل ہے۔ مریم اورنگزیب نے کہا کہ پولیس کے جوانوں کو مارچ پاسٹ کے لیے بھیجنے پر وزیرداخلہ کے مشکور ہیں۔ جب بھی جمہوریت پر شب خون مارا گیا تو یہ پھر نئے جذبے سے لوٹی۔ ذوالفقار علی بھٹو کے ایٹمی پروگرام کو نواز شریف نے دباؤ کے باوجود ناقابل تسخیر بنایا۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم شہباز شریف نے پنجاب کو ملک کی تمام صوبائی اکائیوں کے ساتھ جوڑا ہے اور ن لیگ کے دور میں دہشت گردی ختم کی گئی جبکہ ترقی کو 6 فیصد پر پہنچایا گیا۔ جمہوری قیادتیں شہدا کو خراج عقیدت پیش کرتی رہی ہیں اور نوجوان پاکستان کے لیے کسی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

امریکی سفیر کا دورہ کراچی: ملاقاتوں میں باہمی تعلقات کیلئے تعاون کا اظہار

امریکی سفیر ڈونلڈ بلوم نے کراچی کے دو روزہ دورے کے دوران امریکا اور پاکستان کے درمیان معاشی اشتراک اور باہمی تعلقات کو مزید مستحکم بنانے کیلئے بھرپور تعاون کا اظہار کیا۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

امریکی سفیر کا دورہ کراچی: ملاقاتوں میں باہمی تعلقات کیلئے تعاون کا اظہار

امریکی سفیر نے اپنے  دورے کے دوران سندھ اور بلوچستان کے وزراء اعلیٰ، وفاقی وزیر برائے بحری امور، ایڈمنسٹریٹرکراچی اور کمانڈر پاک بحریہ پاکستان فلیٹ (کامپاک)، پاکستانی حکام، تجارتی نمائندگان، توانائی صنعتوں کے سربراہان اور دیگر کاروباری و تجارتی نمائندگان سے ملاقاتیں کیں۔

اپنے دورے کے دوران امریکی سفیر نے سندھ اور بلوچستان میں بارشوں اور سیلاب کی وجہ سے ہونے والے نقصانات کے ازالے، متاثرین کی بحالی اور امداد کیلئے امریکا کی جانب سے نئی مالی امداد کی مد میں 10 لاکھ ڈالرز جاری کرنے کا اعلان کیا۔

انہوں نے کہا کہ اس امداد سے نہ صرف سندھ میں زراعت سے وابستہ طبقے کو مستحکم بنانے میں مدد ملے گی، بلکہ قدرتی آفات سے نمٹنے سے متعلق پاکستانی اداروں کی صلاحیت میں بھی اضافہ ہوگا، تاکہ سندھ، خیبرپختونخواہ اور گلگت بلتستان میں آنے والی تباہ کاریوں سے بروقت نمٹا جا سکے۔ 
امریکی سفیر ڈونلڈ بلوم کا کہنا تھا کہ کراچی پاکستان کا معاشی مرکز ہونے کے ساتھ توانائی کی بے پناہ صلاحیتوں سے بھرپور شہر ہے، اس شہر کا دوبارہ دورہ کرنے کا موقع ملنے پر بے انتہا خوشی ہوئی۔

اپنے دورے کے موقع پر امریکی سفیر ڈونلڈ بلوم کا کہنا تھا کہ اس سال ہم امریکا اور پاکستان کے درمیان باہمی تعلقات کے  75 سال مکمل ہونے کا جشن منا رہے ہیں، اس موقع پر دونوں ممالک میں تجارتی شراکتداری، سرمایہ کاری، توانائی، صحت، سکیورٹی، تعلیم اور دیگر شعبہ جات میں تعاون بڑھانے کی خواہش کا اظہار کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ امریکی حکومت پاکستان اورامریکا کے درمیاں تعلقات مزید مضبوط کرنے کیلئے پرعزم ہے، تا کہ دونوں ممالک کی اقوام کے مستحکم، محفوظ اور خوشحال مستقبل کی حوصلہ افزائی ہو سکے۔

ان کا کہنا تھا کہ 2021 میں باہمی تجارت کا حجم بڑھ کر تقریباً 9 ارب ڈالر ہوگیا ہے، امریکا کو پاکستان کیلئے سب سے بڑی برآمدی مارکیٹ اور بیرونی سرمایہ کاری کے حوالے سے بہت بڑے ذریعے کی حیثیت حاصل ہے، گذشتہ سالوں میں امریکا کی براہ راست سرمایہ کاری میں 50 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

امریکی سفیر کا کہنا تھا کہ امریکی کمپنیز اور ان کے مقامی شراکت دار پاکستان میں سب سے زیادہ ملازمتوں کے مواقع مہیا کرنے والوں میں شامل ہیں، جبکہ تقریباً 80 امریکی کمپنیوں کی جانب سے ایک لاکھ 25 ہزار پاکستانیوں کو بلواسطہ اور 10 لاکھ سے زائد پاکستانیوں کو بلاواسطہ ملازمتیں دی گئی ہیں۔ 
انہوں نے کہا کہ 2021 میں امریکی فرمز کی جانب سے پاکستان میں کارپوریٹ سماجی ذمیداری کے تحت 5.7 ملین ڈالرز سے زائد کی سرمایہ کاری کی گئی۔

اپنے دو روزہ دورے کے دوران امریکی سفیر نے مزار قائد پر حاضری دی اور آزادی کے 75 سال مکمل ہونے پر بانی پاکستان محمد علی جناح کے مزار پر پھول رکھے۔

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ قائد اعظم محمد علی جناح نے پاکستان بشمول پڑوسی ممالک میں امن سمیت پاکستان میں مذہبی رواداری، معاشی و معاشرتی استحکام کا تصور پیش کیا، امریکا کو بانی پاکستان کی ان تصورات کا بے حد احترام ہے،  ہم امریکی عوام کے طرف سے پاکستان کو آزادی کے 75 سال مکمل ہونے پر دل کی گہرائیوں سے مبارکباد پیش کرتے ہیں۔

امریکی سفیر نے  اپنے دورے کے موقع پر لیاقت میموریل لائبریری کراچی کے لنکن کارنر میں اسٹارٹ اپ لیب کا افتتاح کیا،  پورٹ قاسم  اور  سندھ ایکسپلوریشن و ایڈوینچر سوسائٹی کے نمائندگان کے ہمراہ فریئر حال کراچی کا دورہ بھی کیا جبکہ اقلیتوں کے عالمی دن کے موقع پر انہوں نے کراچی میں اقلیتی برادریوں کے مندوبین سے بھی ملاقاتیں کی۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll