جی این این سوشل

کھیل

فیفا نےبھارت کی رکنیت معطل کردی 

ممبئی : فٹبال کی عالمی تنطیم فیفا نے بھارتی فٹبال فیڈریشن کی رکنیت معطل کردی۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

فیفا نےبھارت کی رکنیت معطل کردی 
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

تفصیلات کے مطابق فیفا کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ فٹبال معاملات میں بیرونی مداخلت کی وجہ سے بھارت کو معطل کیا گیا ہے۔

فیفا کا کہنا ہے کہ جب تک فٹبال کے معاملات منتخب باڈی کے سپرد نہیں ہوتے رکنیت معطل رہے گی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق معطلی کی وجہ سے بھارت اکتوبر میں انڈر 17 ورلڈ کپ کی میزبانی سے محروم رہے گا۔

بھارتی عدالت نے مئی میں فٹبال فیڈریشن کو برطرف کر کے 3 رکنی کمیٹی قائم کرتے ہوئے کہا گیا تھا کہ فیفا قوانین کے تحت فٹبال معاملات میں بیرونی مداخلت قبول نہیں۔

واضح رہے کہ پاکستان بھی بیرونی مداخلت کی وجہ سے پابندی کا شکار رہا تھا، تاہم 29 جون کو ہونیوالے اجلاس میں نارملائزیشن کمیٹی کو پی ایف ایف ہاوس اور اختیارات واپس ملنے پرفیفا نے پاکستان کی انٹرنیشنل رکنیت بحال کردی۔ 

پاکستان

ایڈمنسٹریٹر کراچی مرتضٰی وہاب کا استعفیٰ دینے کا اعلان

قانون اس بات کی اجازت دیتا ہے کہ بلدیہ عظمٰی کراچی ٹیکس لگا سکتی ہے،جب حکومت کام کرتی ہے تو روک دیا جاتا ہے،مرتضٰی وہاب

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ایڈمنسٹریٹر کراچی مرتضٰی وہاب کا استعفیٰ دینے کا اعلان

ایڈمنسٹریٹر بلدیہ عظمٰی کراچی مرتضٰی وہاب نے استعفٰی دینے کا اعلان کر دیا،مرتضٰی وہاب کا کہنا ہے کہ دن دیکھا اور نہ رات بس کام کیا،جس بلدیہ عظمٰی کے بارے میں کہا گیا کہ اختیارات نہیں اسی نہیں کام کیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق مرتضٰی وہاب نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ جب حکومت کام کرتی ہے تو روک دیا جاتا ہے،قانون اس بات کی اجازت دیتا ہے کہ بلدیہ عظمیٰ کراچی ٹیکس لگا سکتی ہے۔ 

میرے لئے آسان نہیں تھا کہ وزیر اعلٰی اور وزیراعظم کو پیسوں کیلئے کہتا۔سڑکوں پر پانی ہوتا ہے تو آپ نعیم الرحمان اور وسیم اختر سے نہیں پوچھتے۔آپ مجھ سے،حکومت سے اور بلدیہ عظمٰی کراچی سے پوچھتے ہیں۔

انکا کہنا تھا کہ بڑی مشکل سے کے الیکٹرک کو قائل کیا مگر کچھ لوگوں کو پسند نہیں آیا۔ کوشش ہے کراچی کی خدمت کروں،بارش میں بلدیہ عظمیٰ کراچی کے لوگوں نے پانی نکالا۔

میوہ شاہ قبرستان کی سڑک،شاہراہ لیاقت کو بنایا جا رہا ہے۔اگر بلدیہ عظمٰی کراچی شہریوں کو ریلیف دے رہی ہے مگر لوگوں کو پسند نہیں آ رہا۔ مرتضٰی وہاب نے کہا کہ 16ستمبرسے پھر ہم سڑکوں کی بحالی کے لیے روڈ پر تھے۔

5 جون 2008 سے آج تک یہ ٹیکس اکٹھا کیا جارہا ہے۔وسیم اختر کی چار سالہ حکومت میں جب وہ میئر تھے،یہ کیسے ہوسکتا ہے کہ کراچی کا ادارہ اپنی تنخواہیں نہیں دے سکتا،سڑکیں ٹھیک نہیں کرسکتا۔ 

انہوں نے مزید کہا کہ میرا ایمان ہے قانون کے مطابق چلنا ہی ہمیں آگے لیکر جائے گا،قانون میں درج ہے کہ بلدیہ عظمٰی کراچی ٹیکس لے سکتی ہے میں نے یہ ٹیکس جمع کرنے کے لیے کراچی الیکٹرک کا انتخاب کیا۔

ادھر سندھ ہائیکورٹ نے بجلی کے بلوں میں کے ایم سی ٹیکس کی وصولی 10 روز کیلئے روکنے کا حکم دے دیا۔سندھ ہائیکورٹ میں بجلی کے بلوں میں کے ایم سی ٹیکس کی وصولی کے خلاف کیس کی سماعت ہوئی۔جسٹس حسن اظہر رضوی نے استفسار کیا کہ کے الیکٹرک ٹیکس بلوں میں کیوں وصول کررہی ہے؟

یہ وہی ٹیکس ہے جو کےالیکٹرک لے رہی ہے؟کراچی میں صفائی تو ہو نہیں رہی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

اسلام آباد ہائیکورٹ: 72 رکنی وفاقی کابینہ کیخلاف درخواست سماعت کیلئے مقرر

72 رکنی وفاقی کابینہ کے خلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں دائر درخواست سماعت کیلئے مقرر کردی گئی۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

اسلام آباد ہائیکورٹ: 72 رکنی وفاقی کابینہ کیخلاف درخواست سماعت کیلئے مقرر

اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللّٰہ درخواست پر کل سماعت کریں گے۔

درخواست سابق وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کی جانب سے دائر کی گئی ہے۔

درخواست گزار نے کہا کہ 72 رکنی کابینہ آئین کے آرٹیکل 92 کی شق ایک کی خلاف ورزی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

مجھے کہا جاتا ہے جن لوگوں نےکرپشن کی انہیں معاف کردیں : عمران خان

لاہور: چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کا کہنا ہے کہ اگر ظلم،ناانصافی کا مقابلہ نہیں کرتے تو ہم اور  بھیڑ بکریوں میں کوئی فرق نہیں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

مجھے  کہا جاتا ہے جن لوگوں نےکرپشن کی انہیں معاف کردیں : عمران خان

تفصیلات کے مطابق ان خیالات کا اظہار پی ٹی آئی چیئرمین نے لاہور میں منعقدہ مشائخ وعلما کنونشن سے خطاب کے دوران کیا، عمران خان نے کہا کہ یہ ملک اس وقت آگے بڑھے گا جب ہم نبیﷺ کے اصولوں پر چلیں، علما میرے ساتھ ملکر ملک کی حقیقی آزادی کیلئے جہاد لڑیں۔

انہوں نے علما کو بڑی قوت قرار دیتے ہوئے کہا کہ علمائے کرام نے قائداعظم کی مدد کی جس کے نتیجے میں پاکستان وجود میں آیا۔

مشائخ وعلما کنونشن سے خطاب میں عمران خان نے کہا کہ آنیوالے دنوں میں آپ سب کو اپنے ملک کیلئے فرض اداکرنا ہوگا،میں علمائے کرام کو کہتا ہوں کہ وہ لوگوں میں کم از کم نبیﷺ کی سیرت اور سنت جگائیں، علما لوگوں کو بتائیں کہ عدل ،انصاف اور انسانیت کیا ہوتی ہے، یہ وقت ایسا ہے کہ ہم تیزی سے نیچے جارہےہیں۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ آپ جس دن چوری کو معاف کرنا شروع کردیں تو معاشرہ تباہ ہوجاتاہے،اگر آپ ظلم،ناانصافی کا مقابلہ نہیں کرتے تو ہم اور بھیڑ بکریوں میں کوئی فرق نہیں۔

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ مجھے باربارکہا جاتا ہے کہ آپ ضدی ہیں،  جن لوگوں نےکرپشن کی انہیں چھوڑدیں معاف کردیں، جب میں حکومت میں تھا تو کہا جاتا تھا کہ انہیں این آراو دےدو، یاد رکھیں کہ ہم چوروں کو تسلیم کرینگے تو ہم ملک کے مستقبل کی قبر کھود رہےہیں۔

اس سے قبل عمران خان نے گورنمنٹ کالج یونیورسٹی لاہور میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کا سب سے بڑا فراڈیا اسحاق ڈار واپس آرہا ہے، وہ وزیراعظم کے جہاز میں بیٹھ کر علاج کے بہانے ملک سے بھاگ گیا اور اب ڈیل کے تحت واپس آ رہا ہے۔

چیئرمین پی ٹی آئی کا مزید کہنا تھا کہ اب نئی آڈیو لیکس آگئیں، جس میں ثابت ہوگیا کہ چیف الیکشن کمشنر نواز شریف کے گھر کا نوکر ہے، اس سے پوچھ رہا ہے کہ کسے نااہل کرانا ہے اور عمران کو توشہ خانہ کیس میں نااہل کردوں گا، اس میں شرم و حیا ہے تو مستعفی ہوجائے، لیکن اس میں شرم نہیں اس لیے ہمیں اسے مستعفی کروانا پڑے گا۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll