جی این این سوشل

ٹیکنالوجی

مارک زکربرگ کے اثاثوں میں 2022 کے دوران 71 ارب ڈالرز کی کمی

مارک زکربرگ کی میٹاورس کے قیام کی کوششیں حقیقی دنیا میں ان کے لیے کافی بھاری ثابت ہورہی ہیں۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

مارک زکربرگ کے اثاثوں میں 2022 کے دوران 71 ارب ڈالرز کی کمی
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

میٹا پلیٹ فارم کے سی ای او 2022 کے دوران 71 ارب ڈالرز سے محروم ہوچکے ہیں۔

درحقیقت رواں سال مختلف وجوہات کے باعث دولت سے محروم ہونے والے افراد میں مارک زکربرگ سرفہرست ہیں۔

بلومبرگ کے مطابق مارک زکربرگ اس وقت 55.9 ارب ڈالرز کے ساتھ دنیا کے 20 ویں امیر ترین شخص ہیں۔

2020 میں مارک زکربرگ کے اثاثوں کی مالیت 106 ارب ڈالرز ہوگئی تھی اور ان سے آگے صرف جیف بیزوس اور بل گیٹس ہی تھے۔

ستمبر 2021 میں مارک زکربرگ کے اثاثوں کی مالیت 142 ارب ڈالرز تک پہنچ گئی تھی۔

اکتوبر 2021 میں انہوں نے فیس بک کمپنی کا نام بدل کر میٹا رکھا تھا اور اس کے بعد سے تنزلی کا سفر شروع ہوگیا۔

میٹا کی حالیہ سہ ماہی رپورٹس میں کمپنی کی مشکلات سامنے آئی تھیں۔

فروری 2022 میں اکتوبر سے دسمبر 2021 کی سہ ماہی رپورٹ جاری ہوئی تھی جس میں کمپنی نے انکشاف کیا تھا کہ پہلی بار فیس بک کے ماہانہ صارفین میں کمی آئی ہے۔

اس رپورٹ کے بعد میٹا کے حصص کی قیمتوں میں ریکارڈ کمی آئی اور مارک زکربرگ کو 31 ارب ڈالرز سے محروم ہونا پڑا۔

ماہرین کے مطابق میٹا ورس پر سرمایہ کاری کی وجہ سے بھی کمپنی کے حصص متاثر ہوئے اور قوی امکان ہے کہ آئندہ 3 سے 5 سال تک مارک زکربرگ کو کافی دولت سے محروم ہونا پڑے گا۔

میٹا کے لیے 2022 بدترین سال ثابت ہوا ہے جس کے حصص کی قیمتوں میں اب تک 57 فیصد کمی آئی ہے۔

پاکستان

عمران خان سے ملاقات کیلئے مونس الٰہی پھر زمان پارک پہنچ گئے

مسلم لیگ ق کے رہنما مونس الہی عمران خان سے ملاقات کیلئے ایک بار پھر زمان پارک پہنچ گئے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

عمران خان سے ملاقات کیلئے مونس الٰہی پھر زمان پارک پہنچ گئے

 

تفصیلات کےمطابق عمران خان اور مونس الٰہی کے درمیان ہونیوالی ملاقات میں ملکی سیاسی صورتحال سے متعلق اہم مشاورت ہو گی ،سابق وزیراعظم عمران خان وکلا سے قانونی مشاورت بھی کریں ،

سینئر وکلا بھی زمان پارک میں موجود ہیں ۔سینئر ایڈووکیٹ خواجہ حارث اور علی ظفر بھی زمان پارک میں موجودہیں ۔اس کے علاوہ سلمان اکرم راجہ سنیئر ایڈووکیٹ بھی زمان پارک پہنچ چکے ہیں ۔

خواجہ حارث سابق وزیراعظم نواز شریف کے وکیل بھی رہے ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

کابل میں پاکستانی سفارت خانے پر حملے کی ذمہ داری داعش نے قبول کر لی

کابل میں پاکستانی سفارت خانے پر دہشت گرد حملے کی ذمہ داری داعش نے قبول کر لی ہے  ۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

کابل میں پاکستانی سفارت خانے پر حملے کی ذمہ داری داعش نے قبول کر لی

 

خبر ایجنسی رائٹرز کے مطابق  کابل میں پاکستان کے  سفارت خانے  پر دہشت گرد حملے کی ذمہ داری  دہشت گرد  تنظیم داعش نے قبول کی ہے ۔

افغان دارالحکومت کابل میں پاکستان کے ہیڈ آف مشن پر قاتلانہ حملہ کیا گیا۔ پاکستانی ناظم الامور قاتلانہ حملے میں محفوظ رہے تھے۔ گارڈ محمد اسرار شدید زخمی ہو گیا تھا۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق، زخمی سکیورٹی گارڈ کو پاکستان منتقل کر دیا گیا ہے، محمد اسرار کو بذریعہ ہیلی کاپٹر پشاور منتقل کیا گیا۔

وزیراعظم شہباز شریف نے فائرنگ کی مذمت کی ہےاورکہا ہے کہ واقعے کی فوری تحقیقات اور ذمہ داروں کیخلاف کارروائی کی جائے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

خصوصی افراد ملک کی ترقی ، خوشحالی کے عمل میں تعمیری کردار ادا کرنے کے مکمل اہل ہیں: صدر مملکت

صدرمملکت ڈاکٹرعارف علوی نے کہا ہے کہ خصوصی افراد ملک کی ترقی اور خوشحالی کے عمل میں اپنا تعمیری کردار ادا کرنے کے مکمل طور پر اہل ہیں ، انہیں مرکزی دھارے میں شامل کرنے کے لئے تمام شراکت داروں کو پختہ عزم کے ساتھ مل کر اپنی توانائیوں اور کوششوں کو بروئے کار لانے کی ضرورت ہے۔ 

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

خصوصی افراد ملک کی ترقی ، خوشحالی کے عمل میں تعمیری کردار ادا کرنے کے مکمل اہل ہیں: صدر مملکت

خصوصی افراد کے عالمی دن کے موقع پر اپنے پیغام میں صدر مملکت نے کہا کہ پاکستان سمیت پوری دنیا خصوصی افراد کا عالمی دن منا رہی ہے ، خصوصی افراد کو زندگی کے تمام پہلوؤں میں برابر اور مکمل طور پر قابل افراد کے طور پر شامل کرنا اہم ہے  کیونکہ ایک ارب سے زیادہ افراد یا دنیا کی تقریباً 15 فیصد آبادی کسی نہ کسی قسم کی معذوری کا شکار ہے۔

بدقسمتی سے اس 15 فیصد میں سے 80 فیصد ترقی پذیر ممالک میں رہتے ہیں جس میں پاکستان بھی شامل ہے جہاں ان کی آبادی کا تخمینہ 10 فیصد سے زیادہ ہے، یہ حقیقت میں تشویشناک اعداد و شمار ہیں۔ 

انہوں نے کہا کہ اس دن ، ہم اپنے آپ سے عہد کرتے ہیں کہ اس بڑی آبادی سے جڑے دقیانوسی تصورات کو دور کریں گے ، انہیں زندگی کے تمام پہلوؤں میں یکساں مواقع فراہم کرنے کے لیے فعال اقدامات کریں گے ، خصوصی افراد کی سیاسی، سماجی، اقتصادی اور ثقافتی دھارے میں برابری کی حیثیت سے شرکت کے لیے سازگار حالات پیدا کرنے کے علاوہ انہیں معیاری اور ان کی مرضی کے مطابق تعلیم اور ہنر فراہم کریں گے جس سے ان کی صلاحیتوں کو نکھارنے اور انہیں معاشی اور مالی طور پر بااختیار بنانے کی راہ ہموار ہو گی۔

صدر نے کہا کہ ہم یہ عہد کرتے ہیں کہ ہم پائیدار ترقی کے ہدف 10 کو حاصل کرنے کے لیے معذور افراد سمیت سب کو ساتھ لے کر چلیں گے ، یہ ترقیاتی ہدف خصوصی افراد سمیت سبھی کی سماجی، اقتصادی اور سیاسی شمولیت کے فروغ اور انہیں بااختیار بنا کر ممالک کے اندر اور ان کے درمیان عدم مساوات کو کم کرنے سے متعلق ہے ۔ 

انہوں نے کہا کہ مجھے ہماری قیادت، متعلقہ اداروں اور معاشرے پر پورا بھروسہ ہے کہ وہ اس موقع پر معذوری کے مسائل کی تفہیم کو عام کرنے، خصوصی افراد کے وقار، حقوق اور فلاح و بہبود کے لیے تعاون کو فروغ دیتے ہوئے ٹیکنالوجی تک ان تک رسائی بڑھانے، آمد و رفت سمیت زندگی کے ہر پہلو میں ان کے لئے سہولت پیدا کرنے کے لیے تمام ضروری اقدامات کریں گے تاکہ تمام شعبوں بشمول ملازمت، کھیل، تعلیم اور دیگر سماجی سرگرمیوں میں ان کی مکمل شرکت کو یقینی بنایا جا سکے۔

صدر مملکت نے کہا کہ میں پبلک اور پرائیویٹ سیکٹر سے گزارش کروں گا کہ وہ خصوصی افراد کو زندگی کے تمام شعبوں کے مرکزی دھارے میں شامل کرنے کے لیے خصوصی کوششیں کریں۔

انہوں نے کہا کہ میں ایک اہم اسٹیک ہولڈر کے طور پر میڈیا سے بھی درخواست کرتا ہوں کہ وہ خصوصی افراد سے منسلک منفی رویوں اور دقیانوسی تصورات کو دور کرنے اور ان کی حوصلہ شکنی کے ساتھ ساتھ ان کے حقوق اور ان کے تئیں ہماری ذمہ داریوں کے بارے میں بیداری پیدا کرے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll