جی این این سوشل

صحت

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے سالانہ بجٹ میں 20 فیصد اضافے کی منظوری

اس پروگرام کا بجٹ 6.83 بلین ڈالر رکھا گیا ہے

پر شائع ہوا

کی طرف سے

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے سالانہ بجٹ میں 20 فیصد اضافے کی منظوری
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

جنیوا: رکن ممالک نے ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے 25۔ 2024 کے بجٹ میں 20 فیصد اضافہ کرنے کا عہد کیا ہے۔

ترک خبررساں ادارے کے مطابق ڈبلیو ایچ او کے تحریری بیان کے مطابق سوئٹزرلینڈ کے شہر جنیوا میں 76 ویں ورلڈ ہیلتھ اسمبلی میں ڈبلیو ایچ او کے بجٹ پر بحث ہوئی ۔رکن ممالک نے رکنیت فیس میں 20 فیصد اضافے کا عہد کرتے ہوئے عالمی ادارہ صحت کے 25 ۔ 2024 پروگرام بجٹ کی منظوری دے دی۔

اس پروگرام کا بجٹ 6.83 بلین ڈالر رکھا گیا ہے۔ ڈبلیو ایچ او کے ڈائریکٹر جنرل ٹیڈروس ایدہانوم گیبریسز نے رکن ممالک کی اس فیصلے پر بھرپور حمایت اور ادارے پر اعتماد کا اظہار کرنے پر رکن ممالک کا شکریہ ادا کیا۔

ممبرشپ فیس میں 20 فیصد اضافہ گزشتہ سال کے متعلقہ فیصلے کے ساتھ قبول کردہ ایک ضمانت ہے، یہ نوٹ کیا گیا کہ عالمی ادارہ صحت کی پائیدار مالیات سے متعلق دیگر سفارشات، جن میں احتساب، گورننس اور فنانسنگ کے حوالے سے اصلاحات شامل ہیں، پر 76ویں ورلڈ ہیلتھ اسمبلی کے اجلاس میں جامع بحث کی جائے گی۔

”زندگیوں کے تحفظ ” اور “سب کے لیے صحت” جیسے معاملات پر پر توجہ مرکوز کرنے کے لیے 21 مئی کو شروع ہونے والا اجلاس 30 مئی کو اختتام پذیر ہوگا۔

 

پاکستان

ای آفس کے استعمال سے اربوں روپے بچائے جا سکیں گے، وزیراعظم

ای-آفس کے استعمال کا اصل مقصد عوام کو بہترین سروسز کی فراہمی اور حکومتی نظام میں شفافیت لانا ہے، شہباز شریف

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ای آفس کے استعمال سے اربوں روپے بچائے جا سکیں گے، وزیراعظم

وزیراعظم شہباز شریف نے کہا کہ ای-آفس کے استعمال کا اصل مقصد عوام کو بہترین سروسز کی فراہمی اور حکومتی نظام میں شفافیت لانا ہے۔ای آفس پر منتقلی سے ملکی خزانے کے اربوں روپے بچائے جاسکیں گے۔

وزیراعظم کی زیر صدارت وفاقی حکومت کی وزارتوں اور اداروں کو الیکٹرانک-آفس (ای۔آفس) پر منتقل کرنے کے حوالہ سے اہم جائزہ اجلاس ہوا۔

وزیر اعظم کی چینی کمپنی ہواوے کے ساتھ تعاون کے معاہدے کے حوالے سے امور پر پیشرفت تیز کرنے کی ہدایت کر دی، اجلاس کو ای آفس کے نظام اور اسکے نفاذ اور اصلاحات پر پیش رفت کے حوالے سے آگاہ کیا گیا۔

وزیر اعظم آفس میڈیا ونگ سے جاری اعلامیہ کے مطابق وزیرِاعظم شہباز شریف کی زیرِ صدارت وفاقی حکومت کے دفاتر و اداروں میں ای آفس کے نفاذ کے حوالے سے اہم جائزہ اجلاس ہفتہ کو اسلام آباد میں منعقد ہوا۔  اجلاس کے شرکاء سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ ای-آفس کے استعمال کا اصل مقصد عوام کو بہترین سروسز کی فراہمی اور حکومتی نظام میں شفافیت لانا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کاغذ کا استعمال کم سے کم ہونے سے ماحول پر بھی مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ ای آفس پر منتقلی سے ملکی خزانے کے اربوں روپے بچائے جاسکیں گے۔ وزیراعظم نے ہدایت کی کہ ای آفس کو استعمال میں آسان اور محفوظ بنایا جائے۔ وزیر اعظم نے چینی کمپنی ہواوے کے ساتھ تعاون کے معاہدے کے حوالے سے امور پر پیشرفت تیز کرنے کی بھی ہدایت کی۔

اجلاس کو ای آفس کے نظام اور اسکے نفاذ اور اصلاحات پر پیش رفت کے حوالے سے آگاہ کیا گیا۔ بریفنگ کے دوران اجلاس کو بتایا گیا کہ ای-آفس کے نفاذ کی کامیابی جانچنے کے حوالے سے کی-پرفارمینس انڈیکیٹرز ترتیب دئے جا رہے ہیں، نیشنل انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کی اوورہالنگ پر کام کا آغاز ہو چکا ہے۔

اجلاس میں وفاقی وزیرِ اقتصادی امور احد خان چیمہ، وزیرِ مملکت برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی شزہ فاطمہ خواجہ،وزیراعظم کے کوارڈینیٹر رانا احسان افضل اور متعلقہ اعلی حکام بھی شریک تھے۔

پڑھنا جاری رکھیں

کھیل

فاسٹ باؤلرمحمدعامراورآل راؤنڈرعمادوسیم کا انٹر نیشنل کرکٹ سے ریٹا ئر منٹ کا فیصلہ

ذرائع کےمطابق محمد عامر اور عماد وسیم کی ورلڈ کپ میں پرفارمنس توقعات کے مطابق نہیں رہی تھی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

فاسٹ باؤلرمحمدعامراورآل راؤنڈرعمادوسیم کا انٹر نیشنل کرکٹ سے ریٹا ئر منٹ کا فیصلہ

پاکستان کرکٹ ٹیم کےفاسٹ باؤلرمحمدعامراورآل راؤنڈرعمادوسیم نےایک مرتبہ پھرانٹرنیشنل کرکٹ سےریٹائرمنٹ لینےکافیصلہ کرلیا۔
ذرائع کےمطابق دونوں کرکٹرز کی جانب سے جلد باقاعدہ اعلان متوقع ہے۔  عامر اور عماد وسیم نے ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کھیلنے کے لیے ریٹائرمنٹ واپس لی تھی۔ محمد عامر اور عماد وسیم پہلے کی طرح لیگ کرکٹ کھیلیں گے۔

ذرائع کےمطابق محمد عامر اور عماد وسیم کی ورلڈ کپ میں پرفارمنس توقعات کے مطابق نہیں رہی تھی۔دونوں کرکٹرز آئرلینڈ کے خلاف میچ میں آخری مرتبہ ایکشن میں ہونگے۔
واضح رہےکہ قومی کرکٹ ٹیم انٹرنیشنل ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں ناقص کارکردگی کی وجہ سے میگاایونٹ سے آغازسےہی ٹورنامنٹ سےباہرہوگئی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

آئی ایم ایف پروگرام پاکستان کی تاریخ کا آخری پروگرام ہو گا ، وزیر اعظم

وزیراعظم شہباز شریف نے کہا کہ اگر پوری قوم ذاتی دشمنیوں اور ذاتی مفادات کو ختم کرنے کا فیصلہ کر لے تو بہت جلد وہ مرحلہ آئے گا جس کا خواب بابائے قوم قائد اعظم محمد علی جناح نے دیکھا تھا

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

آئی ایم ایف پروگرام پاکستان کی تاریخ کا آخری پروگرام ہو گا ، وزیر اعظم

اسلام آباد: وزیر اعظم شہباز شریف نے کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں اور فلسطین میں جنگ کی مذمت کرتے ہوئے کشمیر اور فلسطین دونوں کے عوام کی آزادی کے لیے دعا کی ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ ہم  نے اپریل 2022 میں دوبارہ اقتدار سنبھالا تو معاشی صورتحال سب کے سامنے بالکل واضح تھی۔


انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن کی قیادت میں پی ڈی جی حکومت نے ملک کو ڈیفالٹ سے بچایا۔ انہوں نے صدر آصف علی زرداری، پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو، مولانا فضل الرحمان اور دیگر کا ذکر کیا جنہوں نے ملک کو ڈیفالٹ سے بچانے میں کردار ادا کیا ، انہوں نے مزید کہا کہ آئی ایم ایف کا پروگرام پاکستان کی تاریخ کا سب سے آخری پروگرام ہو گا ۔ 


وزیراعظم شہباز شریف نے کہا کہ ملک اب معاشی استحکام کی طرف بڑھ رہا ہے اور یہ صورتحال طاقتور لوگوں سے قربانی مانگتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ جب انہوں نے 8 فروری 2024 کو دوبارہ اقتدار سنبھالا تو انہوں نے مہنگائی کو کنٹرول کرنے کے لیے اقدامات کیے جو کہ اب 38 فیصد سے بڑھ کر 12 فیصد پر ہے۔

انہوں نے کہا کہ قرضوں پر 22 فیصد سود کی شرح اب 20 فیصد ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کی ترقی تحقیقات لائے گی اور ملک ترقی کی راہ پر گامزن ہو جائے گا۔ ۔ وزیر اعظم  نے کہا کہ  کہ عام آدمی کو کچھ ریلیف بھی فراہم کریں گے ۔

انہوں نے کہا کہ چار سالوں کے دوران عوام بالخصوص محنت کش طبقے کو مہنگائی کی وجہ سے بہت نقصان پہنچا۔ وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا کہ وہ مہنگائی کو کم کرنے، کاروبار کو مضبوط کرنے اور نوجوانوں کو تعلیم دینے اور انہیں مالی خود مختاری کی طرف لانے کے لیے سخت محنت کریں گے۔

وزیراعظم شہباز شریف نے کہا کہ اگر پوری قوم ذاتی دشمنیوں اور ذاتی مفادات کو ختم کرنے کا فیصلہ کر لے تو بہت جلد وہ مرحلہ آئے گا جس کا خواب بابائے قوم قائد اعظم محمد علی جناح نے دیکھا تھا۔ 



 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll