جی این این سوشل

تجارت

سونے کی درآمدات میں جاری مالی سال کے پہلے دوماہ میں 44 فیصدکی نموریکارڈ

سونے کی درآمدات میں سالانہ بنیادوں پر56.33 فیصدکی کمی ہوئی

پر شائع ہوا

کی طرف سے

سونے کی درآمدات میں جاری مالی سال کے پہلے دوماہ میں 44 فیصدکی نموریکارڈ
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

اسلام آباد: ملک میں سونے کی درآمدات میں جاری مالی سال کے پہلے دوماہ میں سالانہ بنیادوں پر44.13 فیصدکی نموریکارڈکی گئی ہے۔

پاکستان بیوروبرائے شماریات کی جانب سے اس حوالہ سے جاری کردہ اعدادوشمارکے مطابق جولائی اوراگست میں 4.971 ملین ڈالرمالیت کاسونا درآمدکیاگیا جوگزشتہ مالی سال کی اسی مدت کے مقابلہ میں 44.13 فیصدکم ہے، گزشتہ مالی سال کی اسی مدت میں 3.449 ملین ڈالرمالیت کا سونا درآمد کیا گیا تھا۔

مقداری لحاظ سے اس مدت میں سونے کی درآمدات میں سالانہ بنیادوں پر56.33 فیصدکی کمی ہوئی، جولائی اوراگست میں 102 کلوگرام سونا درآمدکیاگیا جوگزشتہ مالی سال کی اسی مدت میں 65 کلوگرام تھا۔اگست 2023 میں 2.985 ملین ڈالرمالیت کاسونا درآمدکیاگیا جوگزشتہ سال اگست کے 2.426 ملین ڈالرکے مقابلہ میں 23.02 فیصدزیادہ ہے، مقداری لحاظ سے اگست میں 52 کلوگرام سونے کی درآمدریکارڈکی گئی جو گزشتہ سال اگست میں 49 کلوگرام تھی۔

جولائی کے مقابلہ میں اگست میں سونے کی درآمدات میں ماہانہ بنیادوں پر50.30 فیصدکی نموہوئی، جولائی میں 1.986 ملین ڈالرمالیت کے سونے کی درآمدات ریکارڈکی گئی تھی جواگست میں بڑھ کر2.985 ملین ڈالرہوگئی۔

پاکستان

گندم کی اضافی درآمد میں ملوث افسران کے خلاف ایکشن

وزیر اعظم شہباز شریف کے 4 معطل افسران کے خلاف تحقیقات کی منظوری دے دی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

گندم کی اضافی درآمد میں ملوث افسران کے خلاف ایکشن

وزیراعظم شہباز شریف نے اضافی گندم کی درآمد میں ملوث قرار دیے گئے 4 معطل افسران کے خلاف تحقیقات کرنے کی منظوری دیتے ہوئے سیکرٹری تجارت کو ذمہ داری سونپ دی۔

وزیراعظم نے سیکرٹری تجارت محمد صالح احمد فاروقی کو انکوائری آفیسر مقرر کردیا، معطل افسران کے خلاف سول سرونٹس ایفیشینسی اینڈ ڈسپلن رولز 2020 کےتحت انکوائری ہوگی۔

وزارت نیشنل فوڈ سیکیورٹی کے 4 افسران کو ذمہ دار قرار دے کر معطل کیا گیا، ڈائریکٹرجنرل پلانٹ پروٹیکشن اللہ دتہ عابد، فوڈ سیکیورٹی کمشنر ڈاکٹر وسیم، ویٹ کمشنر اور ڈائریکٹر ڈی پی پی سہیل شہزاد معطل کیے جانے والے افسران میں شامل تھے۔ ان افسران کو گندم کے حوالے سے ناقص منصوبہ بندی اور غفلت برتنے کا ذمہ دار قرار دیا گیا۔

واضح رہے کہ ملک میں گندم کے وافر ذخائر موجود ہونے کے باوجود نگران حکومت کے دور میں بڑے پیمانے پر گندم کی درآمد کے انکشافات سامنے آئے تھے۔یہ بات بھی سامنے آئی تھی کہ موجودہ حکومت کی اب تک کی مدت میں بھی گندم کی درآمد کا سلسلہ جاری رہا۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

سپریم کورٹ نے وکلاء کو بانی پی ٹی آئی سے ملاقات کی اجازت دے دی

نیب ترامیم کیخلاف کیس کی سماعت براہ راست نشر کرنے کی درخواست مسترد کردی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

سپریم کورٹ نے وکلاء کو بانی پی ٹی آئی سے ملاقات کی اجازت دے دی

سپریم کورٹ نے نیب ترامیم کیس میں وکلاء کو کیس کی تیاری کیلئے بانی پی ٹی آئی سے ملاقات کی اجازت دے دی۔

چیف جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی سربراہی میں 5 رکنی لارجر بنچ نیب ترامیم کالعدم قرار دینے کے خلاف حکومتی اپیلوں پر سماعت کی، جسٹس امین الدین، جسٹس جمال مندوخیل، جسٹس اطہر من اللہ اور جسٹس حسن اظہر رضوی بنچ میں شامل تھے۔

سپریم کورٹ نے نیب ترامیم کیخلاف کیس کی سماعت براہ راست نشر کرنے کی درخواست مسترد کردی۔ سپریم کورٹ نے چار ایک کے تناسب سے فیصلہ سنایا۔

جسٹس اطہرمن اللہ نے درخواست مسترد کرنے کے فیصلے سے اختلاف کیا۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ انتظار کروانے پر معذرت خواہ ہیں، بینچ نے کوئی جلدی میں فیصلہ نہیں کیا، تمام ججز سے مشاورت کے بعد یہ فیصلہ کیا۔

جسٹس اطہر من اللہ نے کارروائی براہ راست نشر کرنے کی حمایت کرتے ہوئے ریمارکس دیے کہ مقدمہ پہلے براہ راست دکھایاجاتا تھا اب بھی لائیوہونا چاہیے۔

ایڈوکیٹ جنرل کے پی کے نے کہا کہ یہ مقدمہ عوامی مفاد اوردلچسپی کا ہے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیے یہ تکنیکی کیس ہے عوامی مفاد یا دلچسپی کا معاملہ نہیں، گزشتہ سماعت لائیونہیں دکھائی توآج بھی لائیونہیں چلے گی، خیبرپختونخواہ حکومت کوتواس مقدمہ میں دلچسپی ہی نہیں، خیبرپختونخوا حکومت نے اس مقدمہ میں درخواست بھی دائرنہیں کی۔

جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیے کہ یہ عوامی دلچسپی کا معاملہ ہے۔ چیف جسٹس نے مشاورت کیلئے سماعت میں وقفہ کردیا۔ کم و بیش ایک گھنٹہ مشاورت کے بعد بنچ دوبارہ کورٹ روم نمبر ون مین پہنچا کرکارروائی براہ راست نشر کرنے کی درخواست مسترد کرنے کا فیصلہ سنایا۔

بعد ازاں وفاقی حکومت کے وکیل مخدوم علی خان نے دلائل کا آغاز کر دیا۔

وفاقی حکومت کے وکیل مخدوم علی خان نے کہا کہ نیب ترامیم کرنا حکومتی پالیسی کا فیصلہ ہے، عدلیہ مداخلت نہیں کر سکتی، پارلیمنٹ کے اختیارات میں عدلیہ مداخلت نہیں کر سکتی۔

جسٹس جمال مندوخیل نے ریمارکس دیئے کہ میں اپنی بات کرتا ہوں، میں میڈیا و سوشل میڈیا دیکھتا اور اخبارات پڑھتا ہوں، وزیر اعظم نے کالی بھیڑیں کہا تھا جس پر اٹارنی جنرل نے وضاحت کی کہ یہ الفاظ موجود ججز کیلئے استعمال نہیں کئے گئے۔

جسٹس جمال مندوخیل نے مزید کہا کہ نیب قانون ان لوگوں پر لاگو ہوتا رہا جو حکومت سے باہر رہے، پھر وہی لوگ جب حکومت میں آتے ہیں تو دوسرے لوگ نیب کی زد میں آجاتے ہیں۔

جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیئے کہ نیب ترامیم کیسے آئین سے متصادم تھیں وجوہات کیا بتائی گئیں؟ قانون میں طے کردہ کرپشن کی حد سے کم کیسز دیگر عدالتی فورمز پر چلانے کا ذکر ہے۔

جسٹس جمال مندوخیل کا کہنا تھا کہ 5، 5 لاکھ روپے کے مقدمات بلوچستان ہائی کورٹ میں چلتے رہے، پارلیمنٹ سزا کم رکھے یا زیادہ خود فیصلہ کرے یہ اس کا کام ہے، سپریم کورٹ تو صرف قانون کے آئینی ہونے یا نہ ہونے کا جائزہ لے سکتی ہے۔

اس موقع پر چیف جسٹس پاکستان نے استفسار کیا کہ کیا نیب ترامیم سے مجرموں کو فائدہ پہنچایا گیا ہے؟ وکیل مخدوم علی خان نے بتایا کہ ایسا نہیں ہے بلکہ نیب ترامیم سے جرائم کی نوعیت کو واضح کیا گیا ہے۔

بعد ازاں عدالت نے نیب ترامیم کیس میں وکلاء کو کیس کی تیاری کیلئے بانی پی ٹی آئی سے ملاقات کی اجازت دے دی۔عدالت نے سماعت آئندہ ہفتے تک ملتوی کر دی، چیف جسٹس فائز عیسی نے ریمارکس دیے کہ تاریخ کا اعلان شیڈیول دیکھ کر کریں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پاکستان ریلوے کا   مزید ایک اور عید اسپیشل ٹرین چلانے کا اعلان

ریلوے حکام نے دو روز قبل دو اسپیشل ٹرینیں چلانے کا اعلان کیا تھا۔  ایک عید اسپیشل ٹرین کراچی سے لاہور کے لئے روانہ ہوگی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پاکستان ریلوے  کا   مزید ایک اور عید اسپیشل ٹرین چلانے کا اعلان

پاکستان ریلوے نے  مزید ایک اور عید اسپیشل ٹرین چلانے کا اعلان کردیا ۔ 

ذرائع کے مطابق پاکستان ریلوے نے آئندہ دنوں میں عیدالضحیٰ کے پیش نظر چلائی جانے والی اسپیشل ٹرینوں میں ایک اور ٹرین  کا اضافہ کر دیا ۔ 
تیسری شامل کی گئی ٹرین کوئٹہ سے لاہور کے راستے راولپنڈی جائے گی۔ ریلوے حکام کے مطابق حالیہ اضافہ لوگوں کی سہولت کو مدنظر رکھتے ہوئے کیا گیا۔  
یاد رہے کہ ریلوے حکام نے دو روز قبل دو اسپیشل ٹرینیں چلانے کا اعلان کیا تھا۔  ایک عید اسپیشل ٹرین کراچی سے لاہور کے لئے روانہ ہوگی، جبکہ دوسری عیداسپیشل ٹرین کراچی سے فیصل آباد کے رستے پشاور تک کےلئےچلائی جائےگی۔  
ذرائع کے مطابق عید اسپیشل ٹرینوں کا شیڈول عیدالضحیٰ  کے قریب آنے سے قبل  جاری کیاجائے گا۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll