جی این این سوشل

جرم

13سالہ بیٹی نے باپ کو فائرنگ کرکے قتل کردیا

پولیس نے مشکوک بیانات دینے کی مد میں بیوی ، بیٹی ، بیٹے سمیت 4 افراد کو حراست میں لے لیا ۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

13سالہ بیٹی نے باپ کو فائرنگ کرکے قتل کردیا
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

لاہور کے علاقہ گجر پورہ میں 13 سالہ بیٹی نے فائرنگ کر کے اپنے باپ کو قتل کر دیا ۔

پولیس نے ان کے اہل خانہ سے تفتیش شروع کی تو مقتول کے اہل خانہ اپنے کسی بھی بیان میں پولیس کو مطمئن نہیں کر سکے ۔

پولیس نے مشکوک بیانات دینے کی مد میں بیوی ، بیٹی ، بیٹے سمیت 4 افراد کو حراست میں لے لیا ۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ تفتیش کے لیے ان کو حراست میں لیا گیا ہے جبکہ قاتل کو قرار واقعے سزا دلوائیں گے ۔

مقتول 3 بیٹیوں اور 2 بیٹوں کا باپ تھا ، پولیس نے کم سن ملازمہ کے ابتدائی بیان کو بھی مشکوک قرار دے دیا ۔

علاقائی

چترال : گاڑی کھائی میں جا گری، 4 افراد جاں بحق 

زخمیوں اور لاشوں کو حادثے کا شکار گاڑی سے نکال کر آر ایس سی مستوج اور تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال بونی منتقل کر دیا گیا، ریسکیو حکام

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

چترال : گاڑی کھائی میں جا گری، 4 افراد جاں بحق 

چترال میں گاڑی کھائی میں گرنے سے 4 افراد زندگی کی بازی ہا ر گئے۔

ریسکیو حکام کے مطابق چترال میں یار لشٹ خون جانے والی گاڑی بریپ کے قریب گاڑی گہری کھائی میں جا گری۔ حادثے میں 10 افراد شدید زخمی بھی ہوئے۔

ریسکیو حکام نے زخمیوں اور لاشوں کو حادثے کا شکار گاڑی سے نکال کر آر ایس سی مستوج اور تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال بونی منتقل کر دیا گیا۔

حکام کا کہنا ہے کہ جاں بحق ہونے والوں میں ڈرائیور، خاتون اور 2 بچے جبکہ زخمیوں میں 4 خواتین بھی شامل ہیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

برطانوی حکومت کا ہزاروں قیدی قبل ازوقت رہا کرنے کا فیصلہ

جیلوں میں جگہ بنانے کے لیے حکومت نے 40 فیصد سزا کاٹنے والے قیدیوں کی رہائی کا فیصلہ کیا ہے ،رپورٹ

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

برطانوی حکومت کا ہزاروں قیدی قبل ازوقت رہا کرنے کا فیصلہ

برطانوی حکومت نے ہزاروں قیدیوں کو سزا پوری کرنے سے قبل رہا کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق جیلوں میں مزید قیدیوں کی گنجائش ختم ہونے کے باعث برطانوی حکومت نے ستمبر سے قیدیوں کی قبل ازوقت رہائی کا عمل شروع کرے گی تاکہ مزید قیدیوں کیلئے گنجائش پیدا ہو سکے۔

رپورٹ کے مطابق انگلینڈ اور ویلز کی جیلوں میں صرف 700 مرد قیدیوں کی گنجائش باقی ہے ، جیلیں بھر جانے کے بعد پولیس تھانوں میں بنے حوالات کو استعمال کرنا پڑے گا ، اس سے سڑکوں پر پولیس گشت میں کمی ہو گی۔

جیلوں میں جگہ بنانے کے لیے حکومت نے 40 فیصد سزا کاٹنے والے قیدیوں کی رہائی کا فیصلہ کیا ہے ، ابتدائی طورپر تقریباً ساڑھے 5 ہزار  قیدیو کو رہا کیا جائے گا، سنگین اور جنسی جرائم میں سزا پانے والے قیدی اس سے مستفید نہیں ہو سکیں گے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق برطانیہ کی وزیر انصاف شبانہ محمود کا کہنا ہے کہ جیلوں میں گنجائش کی کمی کے مسئلے سے ابھی نہ نمٹا گیا تو کریمنل جسٹس سٹم تباہ ہونے کا خدشہ ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

تجارت

ایکسپوٹرز کا ملکی معیشت میں کلیدی کردار،نظر انداز نہیں کیا جاسکتا، جام کمال

جام کمال خان اور علی پرویز ملک سے پاکستان کارپٹ مینو فیکچررز اینڈ ایکسپورٹر زایسوسی ایشن کے وفد نے الگ الگ ملاقاتیں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ایکسپوٹرز کا ملکی معیشت میں کلیدی کردار،نظر انداز نہیں کیا جاسکتا، جام کمال

وفاقی وزیر تجارت جام کمال خان نے کہا کہ ایکسپورٹرز کا ملکی معیشت میں کلیدی کردار ہے جسے نظر انداز نہیں کیا جا سکتا ،حکومت اس سے آگاہ ہے کہ پاکستان کی ترقی کے لئے ایکسپورٹ میں اضافہ نا گزیر ہے اور اس کے لئے ہر ممکن اقدامات اٹھائے جارہے ہیں۔

وفاقی وزیر تجارت جام کمال خان اوروزیر مملکت خزانہ علی پرویز ملک سے پاکستان کارپٹ مینو فیکچررز اینڈ ایکسپورٹر زایسوسی ایشن کے وفد نے الگ الگ ملاقاتیں کیں۔ جس میں انہوں نے ایکسپورٹرز کیلئے ٹیکس رجیم کی تبدیلی پر تحفظات اورہاتھ سے بنے قالینوں کی صنعت کو درپیش مسائل کے حوالے سے آگاہ کیا ۔

سینئر وائس چیئرمین عثمان اشرف کی قیادت میں عبد اللطیف ملک ، میجر (ر) اختر نذیر اور شاہد حسن شیخ پر مشتمل وفد نے وفاقی وزیر تجارت جام کمال خان اور وزیر مملکت خزانہ علی پرویز ملک کو آگاہ کیا کہ بجٹ میں ایکسپورٹرز کے لئے ٹیکس رجیم میں تبدیلی کا جو فیصلہ کیا گیا ہے یہ ماضی میں بھی واپس لیا گیا تھا ۔

وفد نے وفاقی وزیر تجارت جام کمال خان اور وزیر مملکت خزانہ علی پرویز ملک کو ہاتھ سے بنے قالینوں کی صنعت کو درپیش مسائل ، اس صنعت کی ایکسپور ٹ کے کم ہونے کی وجوہات اور رواں سال اکتوبر میں پاکستان میں منعقد ہونے والی کارپٹ کی عالمی نمائش کے حوالے سے بھی آگاہ کیا ۔

وفاقی وزیر تجارت جام کمال خان نے کہا کہ ایکسپورٹرز کا ملکی معیشت میں کلیدی کردار ہے جسے نظر انداز نہیں کیا جا سکتا ،حکومت اس سے آگاہ ہے کہ پاکستان کی ترقی کے لئے ایکسپورٹ میں اضافہ نا گزیر ہے اور اس کے لئے ہر ممکن اقدامات اٹھائے جارہے ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ حکومت کی بھرپور کوشش ہے کہ معیشت میں حصہ ڈالنے والے اسٹیک ہولڈرز کے مسائل کو سنا جائے اور انہیں حل کیا جائے ۔ انہوں نے وفد کو یقین دہانی کرائی کہ ہاتھ سے بنے قالینوں کی صنعت کو درپیش مسائل کے حل اورمطالبات کے حوالے سے پیشرفت کریں گے۔

وزیر مملکت خزانہ علی پرویز ملک نے کہا کہ حکومت نے دیگر اقدامات کے ساتھ ایکسپورٹ کے ذریعے معیشت کو فروغ دینے پر توجہ مرکوز کر رکھی ہے ۔ انہوں نے اکتوبر میں پاکستان میں ہاتھ سے بنے قالینوں کی عالمی نمائش کے انعقاد پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے اس امید کا اظہار کیا کہ ا س میگا ایونٹ سے پاکستان کی ہاتھ سے بنے قالینوں کی مصنوعات کی موثر تشہیر میں مدد ملے گی ۔

علی پرویز ملک نے کہا کہ کارپٹ ایسوسی ایشن کے وفد نے اپنے جن مطالبات سے آگاہ کیا ہے ان پر سنجیدگی سے غور کیا جائے گا اور اسے متعلقہ فورم پر سامنے بھی لایا جائے گا۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll