جی این این سوشل

صحت

نگراں وفاقی وزیر صحت کی متحدہ عرب امارات کے وزیر صحت عبدالرحمن بن محمد الاویس سے ملاقات

کوپ 28کے کامیاب انعقاد پر مبارکباد دی اور اسلام آباد میں گلوبل ہیلتھ سمٹ میں شرکت کی دعوت دی

پر شائع ہوا

کی طرف سے

نگراں وفاقی وزیر صحت  کی  متحدہ عرب امارات کے وزیر صحت عبدالرحمن بن محمد الاویس سے ملاقات
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

نگراں وفاقی وزیر صحت ڈاکٹر ندیم جان نے اقوام متحدہ کے زیراہتمام سالانہ موسمیاتی کانفرنس ‘کوپ 28’ کے موقع پر دبئی میں متحدہ عرب امارات کے وزیر صحت عبدالرحمن بن محمد الاویس سے ملاقات کی۔

 اس موقع پر ڈاکٹر ندیم نے اپنے ہم منصب کو ‘کوپ 28’ کے کامیاب انعقاد پر مبارکباد دی اور اسلام آباد میں گلوبل ہیلتھ سمٹ میں شرکت کی دعوت دی۔

ڈاکٹر ندیم جان نے اپنے ہم منصب کو پاکستان کے شعبہ صحت میں جاری اصلاحاتی ایجنڈے سےآگاہ کیا اور جنوری 2024 میں ہونے والی گلوبل ہیلتھ سیکیورٹی سمٹ کے بارے میں آگاہ کیا۔ وفاقی وزیر نے بتایا کہ ابتدائی طور پر گلوبل ہیلتھ سیکیورٹی سمٹ دسمبر 2023 میں میں منعقد ہونا تھی تاہم دسمبر میں متحدہ عرب امارات کی میزبانی میں ‘کوپ 28’ کانفرنس کے پیش نظر جنوری میں جی ایچ ایس ایس کی تاریخیں تبدیل کرنے کا فیصلہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ اس سربراہی اجلاس کا مقصد اقوام عالم کو اکٹھا کرنا اور مستقبل کی کسی بھی عالمی وبا سے نمٹنے کے لیے مربوط حکمت عملی تیار کرنے کا موقع فراہم کرنا ہے۔وفاقی وزیر نے کہا کہ ہم ادویات اور ویکسین کی مقامی تیاری میں سرمایہ کاری کو فروغ دینے کے لیے پاکستان میں فارما پارک قائم کر رہے ہیں۔متحدہ عرب امارات کے وزیر صحت نے گلوبل ہیلتھ سیکیورٹی ایجنڈا کی تعریف کی۔

انہوں نے مزید کہا کہ عالمی صحت سلامتی سمٹ وقت کی ضرورت ہے، متحدہ عرب امارات کی قیادت ایسے منصوبوں میں دلچسپی رکھتی ہے جو پاکستانی عوام کی خدمت کرتے ہیں۔ متحدہ عرب امارات کے وزیر صحت نے باہمی تعلقات اور صحت کے شعبے میں بھی شراکت داری کو کو مزید مضبوط اور بہتر بنانے کے عزم کا اعادہ کیا۔

 

پاکستان

بنوں میں انتشار پھیلانے والوں کیخلاف سخت ترین ایکشن ہونا چاہیئے، صدر ایکس سروس مین سوسائٹی

موجودہ صورتحال پر حکومت جلد از جلد آل پارٹیز کانفرنس بلائے، لیفٹننٹ جنرل (ر) عبدالقیوم

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

بنوں میں انتشار پھیلانے والوں کیخلاف سخت ترین ایکشن ہونا چاہیئے، صدر ایکس سروس مین سوسائٹی

صدر ایکس سروس مین سوسائٹی لفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ عبد القیوم نے کہا ہے کہ بنوں میں انتشار پھیلانے والوں کیخلاف سخت ترین ایکشن ہونا چاہیئے۔ موجودہ صورتحال پر حکومت جلد از جلد آل پارٹیز کانفرنس بلائے۔

ریٹائرڈ فوجیوں کی نمائندہ تنظیم ایکس سروس مین سوسائٹی کے صدر لیفٹننٹ جنرل ر عبدالقیوم نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ 2024 میں پاکستان دہشتگردی میں چوتھے نمبر ہے، امریکا سات ارب کا اسلحہ افغانستان میں چھوڑ کرگیا، کالعدم ٹی ٹی پی دہشتگرد امریکی اسلحہ سے ہماری چیک پوسٹوں کو نشانہ بنا رہے ہیں ملک میں کوئی مارشل لاء نہیں رول آف لاء ہے۔

انہوں نے کہا کہ جو لوگ نشانہ لگا کر پاک فوج پر اٹیک کرتے ہے اس کی وجہ پاکستان کو کمزور کرنا اور سی پیک کو روکنا ہے، اِن سب باتوں سے بالا تر ہو کے ہمیں افغان گورنمنٹ سے بات کرنی چاہیئے، ہمارے سارے پڑوسی ممالک کے ساتھ اچھے تعلق ہونا چاہیے۔

لیفٹننٹ جنرل( ر )عبدالقیوم نے مزید کہا کہ پاکستان میں دہشتگردی کے واقعات میں اضافہ ہو رہا ہے۔ صرف رواں سال 2024 میں ہمارے شہداء کی تعداد 575 ہے۔عالمی رپورٹ کے مطابق دنیا کے دس ممالک ہیں جن کو دہشتگردی کا خطرہ ہے اس کے مطابق پاکستان چوتھے اور بھارت 14ویں نمبر پر ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ امریکی انخلاء کے بعد ہمارے آنگن میں 40 لاکھ پناہ گزین بیٹھے ہیں۔عزم استحکام کیخلاف خیبرپختونخوا اسمبلی سے قرار داد کی منظوری افسوسناک ہے۔امریکہ، افغانستان سے جاکر ہمارے لیئے یہاں دہشتگردوں کو چھوڑ گیا ہے۔

لیفٹننٹ جنرل (ر ) عبدالقیوم نے کہا کہ ہم حکومت سے اپیل کرتے ہیں شہداء کی کم از کم پینشن 37 ہزار ہو۔ قوم سے اپیل ہے پارٹیوں جماعتوں سے نکل کر سب کے لیئے سوچیں۔ آئین اور قانون کی حدود میں رہ کر سب کچھ ہونا چاہیے۔ عمران خان نے کور کمانڈر کے گھر جانے کا بھی کہا ذمہ دار لیڈر شپ کو ایسی باتیں زیب نہیں دیتیں۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پی ٹی آئی پر پابندی لگانا حکومت کی خواہشات ہو سکتی ہے مگر یہ ان کے بس کی بات نہیں، اسد قیصر

ہمارے ایم این ایز کو ڈرایا جا رہا ہے، دھمکیاں مل رہی ہیں، آفرز مل رہی ہیں، رہنما پی ٹی آئی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پی ٹی آئی پر پابندی لگانا حکومت کی خواہشات ہو سکتی ہے مگر یہ ان کے بس کی بات نہیں، اسد قیصر

پی ٹی آئی کے سینئر رہنما اور سابق سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا کہ پی ٹی آئی پر پابندی لگانا حکومت کی خواہشات ہو سکتی ہے مگر یہ ان کے بس کی بات نہیں۔

پی ٹی آئی کے سینئر رہنما اور سابق سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا کہ ہمارے ایم این ایز کو ڈرایا جا رہا ہے، دھمکیاں مل رہی ہیں، آفرز مل رہی ہیں، 2024ء کے الیکشن میں مسلم لیگ ن بری طرح ہار گئی، مسلم لیگ ن نے اس الیکشن میں ٹوٹل 17 سیٹیں لی تھی۔

سابق سپیکر نے مزید کہا کہ پارلیمنٹ کی باتوں کو کوئی سنجیدگی سے لیتا ہی نہیں ہے، پارلیمنٹ بے توقیر ہو گئی ہے، آئین بنانا پارلیمنٹ کا کام ہے، اگر آپ پارلیمنٹ کے اختیارات بھی ہم سے چھین رہے ہیں تو ملک کو کس طرف لے جا رہے ہیں۔ہمارے ایم این ایز کے خلاف پورا کریک ڈاؤن شروع کیا گیا ہے، ، ملک میں اس وقت انارکی ہی انارکی ہے، پارلیمنٹ ہمارا ڈیبیٹنگ کلب بن گیا ہے، پارلیمنٹ میں صرف باتیں ہی باتیں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ نوازشریف کہتا تھا ووٹ کو عزت دو، جتنا نوازشریف نے ووٹ کو بے عزت کیا یہ تاریخ کا حصہ ہے، مسلم لیگ ن کی پارٹی کا نام لینے والا کوئی نہیں ہو گا، بہت برا حال کر دیا ہے اس ملک کا، مسلم لیگ ن چاہتی ہے کہ پی ٹی آئی پر پابندی لگے لیکن اصل میں عوام نے ان پر پابندی لگا دی ہے۔ پی ٹی آئی کے بانی کو اللہ نے عزت دی ہے، پوری دنیا ان کے ساتھ کھڑی ہے، عوام ان کے ساتھ ہے، میں گارنٹی سے کہتا ہوں کہ آئندہ مسلم لیگ ن کا ٹکٹ لینے والا کوئی نہیں ہو گا اور نہ کوئی نام لینے والا ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ جلسے ہم پورے ملک میں کریں گے لیکن این او سی کے بغیر نہیں کریں گے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

کرسچن میریج ترمیمی ایکٹ 2024ء کی توثیق

تقریب میں وفاقی وزیر مذہبی امور چوہدری سالک حسین، سیکریٹری مذہبی امور اور مسیحی برادری کے نمائندے بھی  شریک ہوئے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

کرسچن میریج ترمیمی ایکٹ 2024ء کی توثیق

اسلام آباد: کرسچن میریج ترمیمی ایکٹ 2024ء کی توثیق کر دی گئی ۔ صدر مملکت آصف علی زرداری نے کرسچن میریج ترمیمی ایکٹ 2024ء کی توثیق کر دی۔

اس سے قبل مسیحی برادری کے مردوں کے لیے شادی کی عمر 16سال اور خواتین کے لیے 13 سال تھی۔ترمیمی ایکٹ کے تحت مسیحی برادری کے مرد و خواتین کے لیے شادی کی عمر 18 سال کر دی گئی۔

واضح رہے کہ تقریب میں وفاقی وزیر مذہبی امور چوہدری سالک حسین، سیکریٹری مذہبی امور اور مسیحی برادری کے نمائندے بھی  شریک ہوئے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll