جی این این سوشل

دنیا

سعودی عرب کی خصوصی ٹیموں نے یمن میں مزید 733 بارودی سرنگیں صاف کیں

حوثی باغیوں کی جانب سے 12 لاکھ سے زیادہ بارودی سرنگیں بچھائی گئی ہیں

پر شائع ہوا

کی طرف سے

سعودی عرب کی خصوصی ٹیموں نے یمن میں مزید 733 بارودی سرنگیں صاف کیں
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

ریاض: سعودی عرب کے شاہ سلمان مرکز برائے امداد و انسانی خدمات کے تحت مسام پراجیکٹ کی خصوصی ٹیموں نے یمن میں دسمبر 2023 کے پہلے ہفتے میں حوثیوں کی نصب کردہ مزید 733 بارودی سرنگیں ناکارہ بنائی ہیں۔

سعودی عرب کے سرکاری خبر رساں ادارے ایس پی اے کے مطابق مسام پراجیکٹ کی خصوصی ٹیموں نے یمن کے مختلف علاقوں سے چار اینٹی پرسنل بارودی سرنگیں، 110 اینٹی ٹینک بارودی سرنگیں ، ایک دھماکہ خیز ڈیوائس اور 618 بغیر دھماکے کی ڈیوائسز صاف کیں۔ ٹیموں نے یمن کے گورنریٹ عدن، الحدیدہ، مارب، شبوہ اور تعز میں بھی بارودی سرنگیں صاف کرنے کے لیے کارروائیاں کیں۔2018 میں مسام پروجیکٹ کے آغاز سے اب تک یمن میں حوثیوں کی بچھائی گئی چارلاکھ 24 ہزار527 بارودی سرنگوں کو تلف کیاگیا ہے۔

واضح رہے کہ حوثی باغیوں کی جانب سے 12 لاکھ سے زیادہ بارودی سرنگیں بچھائی گئی ہیں جس کے باعث سیکڑوں معصوم شہریوں کے زخمی اور ہلاک ہونے کے واقعات رونما ہوئے ہیں۔جون 2022 میں مسام پروجیکٹ کے معاہدے میں 33.29 ملین ڈالر کی لاگت سے مزید ایک سال کے لیے توسیع کی گئی تھی۔

پاکستان

پیپلز پارٹی کے کارکنوں کو تشدد کا نشانہ بنایا جا رہا ہے ،بلاول بھٹو زرداری

بلاول بھٹو زرداری  نے کہا کہ ہم ان کارکنوں کے اہل خانہ کو انصاف دلانے میں مدد کریں گے جو اس الیکشن کے دوران تشدد کا نشانہ بنے تھے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پیپلز پارٹی کے کارکنوں کو تشدد  کا نشانہ بنایا جا رہا ہے ،بلاول بھٹو زرداری

پی پی پی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری  نے کہا  کہ ان کی پارٹی کے کارکنوں پر تشدد میں ملوث تمام افراد پر ظلم کیا جا رہا ہے ۔ 

انہوں نے عام انتخابات کے دوران ان کی پارٹی کے کارکنوں کی جان لینے والے فائرنگ کے واقعات کی تحقیقات کے لیے جے آئی ٹی بنانے کا اعلان کیا۔ انہوں نے انتخابات کے دوران قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کارکردگی پر بھی افسوس کا اظہار کیا۔


بلاول بھٹو زرداری  نے کہا کہ ہم ان کارکنوں کے اہل خانہ کو انصاف دلانے میں مدد کریں گے جو اس الیکشن کے دوران تشدد کا نشانہ بنے تھے۔

انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی اس صوبے پر حکومت کرے گی اور وہ کراچی میں امن و امان کے خلاف کوئی کارروائی نہیں ہونے دیں گے۔

بلاول بھٹو  نے کہا کہ وہ تمام جماعتیں جو یہ سمجھتی ہیں کہ وہ تشدد کی بنیاد پر سیاست کر سکتی ہیں غلط ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی پارٹی کا جھنڈا ہٹانا پیپلز پارٹی کا طریقہ نہیں ہے۔


مبینہ دھاندلی سے متعلق سوال پر بلاول بھٹو نے کہا کہ 2018 کے عام انتخابات اور اس سال کے انتخابات میں زیادہ فرق نہیں ہے۔

چیئرمین پی پی پی نے کہا کہ اگر کوئی دھاندلی ہوئی ہے تو ثبوت لے کر آئیں۔ انہوں نے کہا کہ جو جماعتیں دھاندلی کے بغیر الیکشن نہیں جیت سکتیں وہ دھاندلی کے خلاف احتجاج کر رہی ہیں۔

انہوں نے کہا میرا خیال ہے کہ عمران خان نے خود فیصلہ کیا ہے کہ وہ شہباز شریف سے مقابلہ نہیں کرنا چاہتے۔ اکثریت کے باوجود عمران خان نے کسی دوسری پارٹی سے بات کرنے کا انتخاب نہیں کیا۔

انہوں نے آئی ایم ایف کے خط کے بیان پر پی ٹی آئی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ وہ سیاست اپنے مفاد کے لیے چاہتے ہیں ملک کی خاطر نہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ [پی ٹی آئی] ملک کو غیر مستحکم کرنا چاہتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس خط کا کوئی اثر نہیں ہوگا اور اس سے پی ٹی آئی نے عوام کے سامنے خود کو مزید بے نقاب کردیا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

ایرانی وزیرِ خارجہ کی پاکستان میں انتخابات کے انعقاد پر مبارکباد

ایرانی وزیر خارجہ نے پارلیمانی انتخابات کے کامیاب انعقاد پر نگراں حکومت کو مبارکباد پیش کی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ایرانی وزیرِ خارجہ کی پاکستان میں انتخابات کے انعقاد پر مبارکباد

پاکستان اور ایران نے باہمی دلچسپی کے تمام شعبوں میں دوطرفہ تعاون کو مزید مضبوط بنانے کے عزم کا اعادہ کیا ہے۔

اس عزم کا اظہار آج وزیر خارجہ جلیل عباس جیلانی اور ان کے ہم منصب ایران کے وزیرِ خارجہ حسین امیر  کے درمیان ٹیلی فونک گفتگو میں کیا گیا۔

ایرانی وزیر خارجہ نے پارلیمانی انتخابات کے کامیاب انعقاد پر نگراں حکومت کو مبارکباد پیش کی اور جلیل عباس جیلانی نے ایران کے برادر عوام کی جانب سے نیک خواہشات کو دل کی گہرائیوں سے سراہا۔

رواں ماہ کے اوائل میں ایرانی وزیر خارجہ کے دورہ پاکستان کے بعد سے دونوں ممالک نے سرکاری مصروفیات کو مکمل طور پر بحال کر دیا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

صحت

دنیا کی نصف سے زیادہ آبادی کو خسرہ کا شدیدیاانتہائی شدید خطرہ ہے،عالمی ادارہ صحت

خسرہ کے بارے میں ہم انتہائی فکر مند ہیں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

دنیا کی نصف سے زیادہ آبادی کو خسرہ کا شدیدیاانتہائی شدید خطرہ ہے،عالمی ادارہ صحت

جنیوا: عالمی ادارہ صحت(ڈبلیو ایچ او)نے دنیا بھر میں خسرہ کے پھیلاؤ بارے میں خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ گزشتہ سال دنیا بھر میں اس بیماری کے 30 لاکھ 6,000 سے زیادہ کیس رپورٹ ہوئے جو 2022 کے مقابلے میں 79 فیصد زیادہ تھے۔

امریکی نشریاتی ادارے کے مطابق عالمی ادارہ صحت میں خسرہ اور روبیلا کے بارے میں ٹیکنیکل ایڈوائزر نتاشا کروکرافٹ نے کہا ہے کہ خسرہ کے بارے میں ہم انتہائی فکر مند ہیں۔ قاہرہ سے ویڈیو لنک کے ذریعے انہوں نے جنیوا میں صحافیوں کو بتایا کہ 2022 میں خسرہ کے کیسز میں اتنے زیادہ اضافے کو سامنے رکھتےہوئے ہم اندازہ لگا سکتے ہیں کہ یہ سال بہت زیادہ مشکل ہونے والا ہے۔

انہوں نے انتباہ کیا کہ اس وقت دنیا بھر کے نصف سے زیادہ ملکوں کے بارے میں خیال ہے کہ اس سال کے آخر تک ان میں خسرہ کی وبا کے پھوٹنے کا بہت زیادہ خطرہ ہوگا اور ایک اندازے کے مطابق لگ بھگ 14 کروڑ بیس لاکھ بچوں کو بیماری کا خطرہ لاحق ہوگا۔

انہوں نے مزید بتایا کہ کسی بھی علاقے میں اس وبا کو روکنے کے لیے کم از کم 95 فیصد بچوں کو اس بیماری سے بچاؤ کے لیے مکمل حفاظتی ٹیکے لگانے کی ضرورت ہوتی ہے ، لیکن عالمی سطح پر ویکسینیشن کی شرح 83 فیصد تک کم ہو گئی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll