جی این این سوشل

کھیل

محسن نقوی نے ویمنز ٹیم کی نئی سلیکشن کمیٹی کا اعلان کر دیا

پی سی بی چیئرمین نے تشکیل نو کرتے ہوئے اراکین کی تعداد بڑھادی

پر شائع ہوا

کی طرف سے

محسن نقوی نے ویمنز ٹیم کی نئی سلیکشن کمیٹی کا اعلان کر دیا
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے چیئرمین محسن نقوی نے ویمنز ٹیم کی نئی سلیکشن کمیٹی کا اعلان کر دیا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی ) کے چیئرمین محسن نقوی نے قومی خواتین کی سلیکشن کمیٹی کی تشکیل نو کرتے ہوئے اسے 7 ارکان تک بڑھا دیا ہے۔ یہ فیصلہ ویسٹ انڈیز ویمنز کے خلاف پاکستان ویمن ٹیم کی مایوس کن کارکردگی کے بعد کیا گیا ہے جس کے نتیجے میں تین ون ڈے میچوں کی سیریز میں 0-3 سے شکست ہوئی ہے۔
پی سی بی کے چیئرمین محسن نقوی نے کہا کہ سلیکشن کمیٹی کو ری اسٹرکچر کیا ہے، قومی کرکٹ ٹیم کی سلیکشن کمیٹی 7 ارکان پر مشتمل ہوگی، نئی چیز یہ ہے کہ اب سلیکشن کمیٹی کا کوئی چیئرمین نہیں ہوگا۔
پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے جاری اعلامیے کے مطابق اسماویہ اقبال اور مرینہ اقبال کے علاوہ مینز سلیکشن کمیٹی کے اراکان سابق کرکٹر عبدالرزاق، اسد شفیق اور بتول فاطمہ سلیکشن کمیٹی کا حصہ ہوں گی، اسی طرح ہیڈکوچ اور کپتان بھی اسی کمیٹی کے رکن ہوں گے۔
محسن نقوی  نے بتایا کہ وہاب ریاض،محمد یوسف،عبدالرزاق اور اسد شفیق کو سلیکشن کمیٹی میں شامل کیا گیا ہے، کپتان اور ہیڈ کوچ بھی سلیکشن کمیٹی کا حصہ ہوں گے، ڈیٹا اینالسٹ کو بھی سلیکشن کمیٹی کا حصہ بنایا گیا ہے، محمد یوسف انڈر 19 کے بھی ہیڈ کوچ رہیں گے۔
نئی سلیکشن کمیٹی کا فوری کام انگلینڈ کے آئندہ دورے کے لیے پاکستان ویمنز ٹیم کا انتخاب کرنا ہوگا، جہاں وہ 11 سے 29 مئی تک تین ٹی 20 اور آئی سی سی ویمنز چیمپئن شپ 2022-25 کے تین میچز کھیلے گی۔
ویسٹ انڈیز سے حالیہ0-3 کی شکست کے باوجود، پاکستان اس وقت 10 ٹیموں پر مشتمل آئی سی سی ویمن چیمپئن شپ 2022-25 میں پانچویں پوزیشن پر ہے۔ اس چیمپئن شپ کی ٹاپ پانچ ٹیمیں، میزبان بھارت کے ساتھ، آئی سی سی ویمنز کرکٹ ورلڈ کپ 2025 کے لیے براہ راست کوالیفائی کریں گی۔ باقی ٹیمیں خواتین کے کرکٹ ورلڈ کپ کوالیفائر ٹورنامنٹ میں شرکت کریں گی۔

پاکستان

غزہ معاملے پر عالمی عدالت کے فیصلےکا خیر مقدم کرتے ہیں، ترجمان دفتر خارجہ

پاکستان جنوبی افریقہ کی طرف سے اسرائیل کے خلاف عالمی عدالت انصاف میں دائر کی گئی درخواست کی حمایت کرتا ہے

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

غزہ معاملے پر عالمی عدالت کے فیصلےکا خیر مقدم کرتے ہیں، ترجمان دفتر خارجہ

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ پاکستان غزہ میں اسرائیل کے فوجی آپریشن روکنے کے عالمی عدالت انصاف کے فیصلے کا خیر مقدم کرتا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ ممتاز زہرا بلوچ نے کہا کہ پاکستان جنوبی افریقہ کی طرف سے اسرائیل کے خلاف عالمی عدالت انصاف میں دائر کی گئی درخواست کی حمایت کرتا ہے۔پاکستان عالمی عدالت انصاف کے اقدامات کا خیرمقدم کرتا ہے، جس میں اسرائیل کو رفح میں فوجی کارروائی کو فوری طور پر روکنے کا حکم دیا گیا ہے۔

ممتاز زہرا بلوچ کا کہناتھا کہ اقوام متحدہ نسل کشی کے الزامات کی تحقیقات کرے، پاکستان عالمی عدالت انصاف کے تازہ ترین احکامات کے ساتھ ساتھ 26 جنوری اور 28 مارچ کے سابقہ احکامات پر فوری اور غیر مشروط عمل درآمد کا مطالبہ کرتا ہے۔

ترجمان نے کہا کہ اسرائیلی قابض حکام رفح کراسنگ کو انسانی امداد کی بلا روک ٹوک فراہمی کے لیے کھلا رکھیں ، کسی بھی تحقیقاتی کمیشن، فیکٹ فائنڈنگ مشن یا دیگر تحقیقاتی ادارے کی غزہ پٹی تک بلا رکاوٹ رسائی کو یقینی بنایا جانا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہہم اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ غزہ میں اسرائیل کی جاری وحشیانہ فوجی مہم کو ختم کرنے میں اپنا کردار ادا کرے، ان کارروائیوں پر اسرائیل کو اس کے جرائم کا جوابدہ ٹھہرایا جائے۔

پڑھنا جاری رکھیں

علاقائی

بجلی کی ناروا لوڈ شیڈنگ کے خلاف اہلیان پشاور سراپا احتجاج

لوڈشیڈنگ بند نہ ہوئی توگرڈ اسٹیشن کا کنٹرول اپنے ہاتھ میں لے لیں گے، مظاہرین

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

بجلی کی ناروا لوڈ شیڈنگ کے خلاف اہلیان پشاور سراپا احتجاج

خیبر پختونخوا کے دارالحکومت پشاور میں بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کے خلاف عوام سڑکوں پر نکل آئے۔ مظاہرین نے مقامی الیکٹرک کمپنی کے خلاف احتجاج کیا ۔

مظاہرے کی قیادت پاکستان تحریک انصاف کے رکن صوبائی اسمبلی فضل الٰہی نے کی۔ مظاہرین نے رحمان بابا گرڈ اسٹیشن پر دھاوا بول دیا۔

پی ٹی آئی کے رکن صوبائی اسمبلی فضل الٰہی نے کہا کہ جب تک بجلی کی لوڈشیڈنگ ختم نہیں کی جائے گی گھیرائو ختم نہیں کیا جائے گا۔

مظاہرین نے مقامی الیکٹرک کمپنی (پیسکو) کے خلاف شدید نعرے بازی بھی کی۔مظاہرین نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ لوڈشیڈنگ بند نہ ہوئی توگرڈ اسٹیشن کا کنٹرول اپنے ہاتھ میں لے لیں گے۔

دوسری جانب محکمہ موسمیات کی جانب سے مزید شدید گرمی کا عندیہ بھی دے دیا گیا ہے۔

محکمہ موسمیات کا کہنا تھا کہ پشاور میں موسم گرم اور خشک رہنے کا امکان ہے، مزید کہا کہ ہوا میں نمی کا تناسب 27 فی صد ریکارڈ کیا گیا ہے۔

پشاور میں درجہ حرارت 23 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا ہے، آئندہ 24 گھنٹوں میں پارہ 42 ڈگری سینٹی گریڈ تک بڑھنے کا امکان ہے۔

محکمہ موسمیات کا کہنا تھا کہ سب سے زیادہ درجہ حرارت ڈیرہ اسمعیٰل خان میں 45 ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا، مزید بتایا کہ کوہستان، دیر، سوات میں گرج چمک کے ساتھ بارش کا امکان ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

کشکو ل توڑ دیا ہے ، وزیر اعظم کاایس آئی ایف سی اجلاس میں اظہار خیال

وزیر اعظم نے کہا کہ اب تجارتی و معاشی تعاون کو اہمیت دے رہے ہیں، دوست ممالک نے بھی ایس آئی ایف سی کے اقدامات کو سراہا ہے، غیر ملکی سرمایہ کاری کی راہ میں حائل کوئی سرخ فیتہ برداشت نہیں

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

کشکو ل توڑ دیا ہے ، وزیر اعظم کاایس آئی ایف سی اجلاس میں اظہار خیال

 

اسلام آباد :  وزیراعظم پاکستان  شہباز  شریف کی زیر صدارت ایس آئی ایف سی کی اپیکس کمیٹی کا دسواں اجلاس  وزیراعظم  ہاؤس میں ہوا جس میں سرمایہ کاری کے اقدامات  پر بات چیت کی گئی اور اطمینان کا اظہار کیا گیا ۔ 

ایپکس کمیٹی کے اجلاس میں آرمی چیف جنرل عاصم منیر، نائب وزیراعظم اور  وزیر خارجہ اسحاق ڈار ، وفاقی وزیر اطلاعات، وزیر خزانہ محمد  اورنگزیب،  وزیر داخلہ محسن نقوی،  وزیر دفاع خواجہ آصف،  وزیر توانائی اویس لغاری  اور  دیگر شریک  ہوئے۔

اجلاس میں وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا علی امین گنڈا پور، وزیر اعلیٰ پنجاب مریم نواز، وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ اور وزیر اعلیٰ بلوچستان سرفراز بگٹی بھی شریک ہوئے ۔ 

وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ صوبائی حکومتوں کو ایس آئی ایف سی میں ساتھ لیکر چل رہے ہیں اور  آئندہ بھی ساتھ لے کر چلیں گے ، انہوں نے کہا کہ غیر ملکی سرمایہ کاری کیلئے  دورہ یو اے ای انتہائی کامیاب رہا،  انہوں نے کہا کہ یو اے ای نے 10 ارب ڈالر یو اے ای قیادت نے پاکستان میں سرمایہ کاری کے لیے مختص کردیئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اب پاکستان کے حالات مزید بہتری کی جانب گامزن ہیں اور  ہم نے کشکول توڑ دیا ہے ، اب تجارتی و معاشی تعاون کو اہمیت دے رہے ہیں، دوست ممالک نے بھی ایس آئی ایف سی کے اقدامات کو سراہا ہے، غیر ملکی سرمایہ کاری کی راہ میں حائل کوئی سرخ فیتہ برداشت نہیں۔

واضح رہے کہ چاروں صوبوں کے چیف سیکرٹریز  بھی اجلاس میں موجود تھے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll