جی این این سوشل

ٹیکنالوجی

واٹس ایپ پر آپ کا پسندیدہ ترین آپشن ختم کرنے کی تیاری

گوگل ڈرائیو میں پیغامات کو محفوظ رکھنا نہ صرف آسان بلکہ موثر ترین طریقہ تصور کیا جاتا ہے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

فائل فوٹو
فائل فوٹو

 

نیویارک : کسی کو پیغام دینا ہو، ویڈٰیو بھجوانی ہویا پھر اپنی پسندیدہ تصاویر تو ایسے میں سب سے معروف ترین پلیٹ فارم واٹس ایپ ہی استعمال کیا جاتا ہے ۔ 

واٹس ایپ آئے روز نئے فیچرز متعارف کرواتا رہتا ہے ۔ لیکن اس بار ایک ایسا فیچر ختم کرنے کی تیاری کی جارہی ہے کہ جو آپ سب کو بہت پسند ہے ۔ 

وٹس ایپ سوچ رہا ہےکہ گوگل ڈرائیومیں لامحدود اسٹوریج کے آپشن کو ختم کر کے صارفین  کو صرف 200 ایم بی کا آپشن دیا جائے اور وہ صرف اتنے ہی مسیج محفوظ رکھ سکیں گے۔

گوگل ڈرائیو میں پیغامات کو محفوظ رکھنا نہ صرف آسان بلکہ موثر ترین طریقہ تصور کیا جاتا ہے۔

خیال کیا رہا ہے کہ وٹس ایپ آنے والی اپ ڈیٹس کے اندر اس آپشن کو متعارف کرائے گا جویقینی طور پر صارفین کے لیے ایک اچھی خبر  نہیں ہو گی۔

محمد اکرم سینیئر ویب ایڈیٹر ہیں ۔ جرنلزم میں ایم فل ڈگری رکھتے ہیں۔ مختلف ٹی وی چینلز کے ویب اور سوشل میڈیا سے واسطہ رہے ہیں اب جی این این ٹی وی سے وابستہ ہیں۔ محمد اکرم بلاگز اور آرٹیکل بھی لکھتے ہیں۔

جرم

پب جی گیم پر دوستی اور شادی کا جھانسہ،لڑکی مبینہ زیادتی کاشکار

لاہور: لڑکوں نےپب جی گیم پرلڑکی سے دوستی کی اور شادی کا جھانسہ دے کر مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔

پر شائع ہوا

Ali Raza

کی طرف سے

پب جی گیم پر دوستی اور شادی کا جھانسہ،لڑکی مبینہ زیادتی کاشکار

تفصیلات کے مطابق لڑکوں نے پب جی گیم پرلڑکی سے دوستی کی اور شادی کا جھانسہ دے کر مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔تھانہ نارتھ کینٹ میں حارث حسن اور وحید کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا۔

آیف آئی آر کے مطابق  حارث نے لڑکی کو شادی  کا جھانسہ دے کر کراچی سے لاہور بلوایا، حارث نے نجی ہوٹل میں تین روز تک لڑکی کو مبینہ  زیاددتی کا نشانہ بنایا اور چھوڑ کر بھاگ گیا۔

 ریلوے اسٹیشن پر حسن اور وحید نامی دو لڑکوں نے متاثرہ لڑکی کو نوکری کا جھانسہ دیا،  حسن اور وحید نے سرور رو ڈکے  ایک گھر میں بھی  لڑکی کو زیاددتی کا نشانہ بنایا، لڑکی نے بھاگ کر جان بچائی۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

پاکستان میں کورونا سے اموات اور کیسز کی شرح میں کمی کارجحان  برقرار 

اسلام آباد:  پاکستان میں کورونا وائرس سے اموات اور کیسز کی شرح میں بتدریج کمی آرہی ہے،   گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا کے مثبت کیسز کی شرح 1.1فیصد رہی۔

پر شائع ہوا

Asma Rafi

کی طرف سے

پاکستان میں کورونا سے اموات اور کیسز کی شرح میں کمی کارجحان  برقرار 

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی جانب سے جاری کیے گئے تازہ اعداد و شمارکے مطابق  ملک میں کورونا وائرس کی  چوتھی  لہر کے دوران ملک میں  مزید10 افراد  انتقال  کرگئے جبکہ 475نئے کیسز رپورٹ ہوئے ۔ 

ملک میں کورونا سے  اموات کی تعداد 28ہزار 728 ہوگئی ہے اور مجموعی کیسز 12 لاکھ 42ہزار 236تک جاپہنچے ہیں۔  

این سی اوسی  کے مطابق پاکستان میں کوروناکے905مریضوں کی حالت تشویشناک ہے ۔جبکہ چوبیس گھنٹے کے دوران  42 ہزار 577افراد کے ٹیسٹ کئےگئے گئے ۔

ملک میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید 327افراد کورونا وائرس سے صحتیاب ہوئے ہیں ۔ اب تک  95.9 فیصد مریض کوویڈ سے صحت یاب ہوئے ، اب تک   مجموعی طور پر 12 لاکھ 42ہزار 236 مریض کورونا سےصحت یاب ہوچکےہیں۔

واضح رہے کہ پاکستان میں کورونا وائرس کا پہلا کیس 26 فروری 2020 کو ملک کے سب سے بڑے شہر کراچی میں سامنے آیا تھا۔

پڑھنا جاری رکھیں

صحت

 اومیکرون کی علامات ڈیلٹا قسم سے بہت زیادہ مختلف ہیں

کورونا وائرس کی نئی قسم اومیکرون سے متاثر ہونے والے افراد میں بیماری کی علامات ڈیلٹا قسم سے بہت زیادہ مختلف ہیں۔

پر شائع ہوا

Umar Nawaz

کی طرف سے

 اومیکرون کی علامات ڈیلٹا قسم سے بہت زیادہ مختلف ہیں

تفصیلات کے مطابق کورونا کی نئی قسم سے متاثر افراد کی نبض کی رفتار بہت تیز ہوجاتی ہے جس کی وجہ خون میں آکسیجن کی سطح میں کمی اور سونگھنے یا چکھنے کی حس سے محرومی ہوتی ہے۔

جنوبی افریقی ڈاکٹر کا کہنا ہے کہ اومیکرون کی علامات مختلف ہیں جو ڈیلٹا کی نہیں ہوسکتیں، بلکہ یہ علامات یا تو بیٹا سے ملتی جلتی ہیں یا یہ کوئی نئی قسم ہے، مجھے توقع ہے کہ اس نئی قسم کی بیماری کی شدت معمولی یا معتدل ہوگی، ابھی تک تو ہم اسے سنبھالنے کے لیے پراعتماد ہیں۔

جنوبی افریقی ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ ہسپتال میں داخل ہونے والے زیادہ تر افراد وہ ہیں جن کی ویکسینیشن نہیں ہوئی اور ابتدائی شواہد سے عندیہ ملتا ہے کہ ان میں بیماری کی شدت ماضی جیسی ہی ہے۔

عالمی ادارہ صحت کی جانب سے اس نئی قسم کا تجزیہ کیا جارہا ہے اور اس کا کہنا ہے کہ ابھی اس کے متعدی ہونے اور بیماری کی شدت کے حوالے سے کچھ کہنا قبل از وقت ہوگا۔

عالمی ادارے نے دنیا بھر کی حکومتوں سے اومیکرون کے لیے بڑے پیمانے پر ٹیسٹنگ شروع کرنے کا کہا ہے۔

 

 

 

 

 

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll