جی این این سوشل

صحت

غذائی قلت کے باعث80 لاکھ کم سن بچےموت کے خطرے سے دوچار

یونیسیف کا کہنا ہے کہ اس مسئلے سے نمٹنے کے لیے فوری طور پر تقریبا ًسوا ارب ڈالر کے امدادی پیکج کی ضرورت ہے تاکہ  اس بحران پر قابو پا یا جا سکے۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

غذائی قلت کے باعث80 لاکھ کم سن بچےموت کے خطرے سے دوچار
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

بچوں کی فلاح و بہبود سے متعلق اقوام متحدہ کے ادارے یونیسیف نےتازہ رپورٹ میں کہا ہے کہ شدید  غذائی قلت کی وجہ سے پانچ برس سے کم عمر کے تقریباً 80 لاکھ بچے موت کے خطرے سے دوچار ہیں۔

رپورٹ کے مطابق پانچ برس تک کی عمر کے قریب 80 لاکھ بچے غذا کی قلت کے سبب موت کے خطرے سے دو چار ہیں۔ سب سے زیادہ خطرے کا شکار ان 15 ممالک کے بچے ہیں جہاں اس وقت خوراک کی قلت ہے۔ ان میں افغانستان، یمن، ایتھوپیا اور ہیٹی بھی شامل ہیں۔
یونیسف کے مطابق موت کے خطرے سے دوچار ایسے بچوں کی تعداد ہر منٹ بڑھ رہی ہے۔ اس بگڑتی صورتحال کی ایک وجہ روس کے یوکرین پر حملے کے سبب عالمی سطح پر اشیائے خوراک کی بڑھتی ہوئی قیمتیں بھی ہیں۔

غذائی قلت کے باعث بچوں میں جسمانی قوت مدافعت میں کمی ہو جاتی ہے جس کی وجہ سے پانچ برس سے کم عمر کے بچوں میں اچھی خوراک والے بچوں کے مقابلے میں موت کا خطرہ 11گنا زیادہ تک بڑھ جاتا ہے۔

یونیسیف کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ غذائی قلت کی  وجہ سے رواں برس کے آغاز سے اب تک مزید دو لاکھ 60 ہزار بچے متاثر ہوئے ہیں۔

یوکرین میں جاری جنگ  کے ساتھ ساتھ موسمیاتی تبدیلیوں کی وجہ سے مسلسل خشک سالی اور کورونا وائرس کی وبا کے باعث اشیا خور ونوش کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔   ان محرکات نے  غذائی قلت کے خطرے کو بڑھا دیا ہے۔

یونیسیف کا کہنا ہے کہ اس مسئلے سے نمٹنے کے لیے فوری طور پر تقریبا ًسوا ارب ڈالر کے امدادی پیکج کی ضرورت ہے تاکہ  اس بحران پر قابو پا یا جا سکے۔

تجارت

پیٹرولیم ڈیلرز کی 18 جولائی سے ہڑتال کی دھمکی

چیئرمین پیٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن عبدالسمیع خان نے مطالبہ کیا کہ ہم سے کیا گیا وعدہ پورا کیا جائے۔ وزارت پیٹرولیم کو کہا ہے کہ اگر ایک ہفتے میں منافع نہ بڑھایا گیا تو سخت فیصلہ کریں گے۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پیٹرولیم ڈیلرز کی 18 جولائی سے ہڑتال کی دھمکی

اسلام آباد: پیٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن نے 18 جولائی سے ملک بھر میں ہڑتال کی دھمکی دے دی۔

چیئرمین پیٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن عبدالسمیع خان نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ جب تک مطالبات نہیں مانتے پمپس نہیں کھلیں گے اور حکومتی نمائندوں کو کچھ پتہ ہے نہ ہی کچھ سننا چاہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پیٹرول کی قیمت بڑھنے سے ہمیں فائدہ نہیں نقصان ہو رہا ہے اور سب سے زیادہ موٹر سائیکل والے پریشان ہیں۔ سابق حکومت نے جون تک 4 فیصد منافع بڑھانے کا وعدہ کیا تھا لیکن منافع نہیں بڑھایا گیا۔

عبدالسمیع خان نے مطالبہ کیا کہ ہم سے کیا گیا وعدہ پورا کیا جائے۔ وزارت پیٹرولیم کو کہا ہے کہ اگر ایک ہفتے میں منافع نہ بڑھایا گیا تو سخت فیصلہ کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ ہماری انویسٹمنٹ بڑھ گئی ہے اور بینک سود 13 فیصد ہوچکا ہے۔ ہم پر ڈیلرز کا بہت پریشر ہے اور اب کوئی فیصلہ بہت ضروری ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

ریلوے کا عید الاضحیٰ پر 3 اسپیشل ٹرینیں چلانے کا فیصلہ

لاہور :پاکستان ریلوے نے ہر سال کی طرح  اس سال بھی عیدالاضحیٰ پر تین اسپیشل ٹرینیں چلانے کا  فیصلہ کرلیا ۔ 

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ریلوے کا عید الاضحیٰ پر 3 اسپیشل ٹرینیں چلانے کا فیصلہ

ترجمان ریلوے کے مطابق   پہلی عید اسپیشل ٹرین 8 جولائی کو صبح 10 بجے کوئٹہ سے روانہ ہوگی، جو کوئٹہ سے براستہ ملتان، ساہیوال، لاہور سے ہوتی ہوئی پشاور پہنچے گی۔

دوسری عید اسپیشل ٹرین 8 جولائی کو کراچی سے شام 6 بج کر 45 منٹ پر روانہ ہوگی، وہ ٹرین کراچی سے براستہ ملتان، فیصل آباد، لاہور پہنچے گی۔

ترجمان نے کہا کہ تیسری عید اسپیشل ٹرین 13 جولائی کو لاہور سے صبح 11 بج کر 30 منٹ پر روانہ ہوگی ، جو لاہور سے براستہ فیصل آباد، ملتان سے ہوتی ہوئی کراچی پہنچے گی۔

 

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

جمائما گولڈ اسمتھ کی رہائش گاہ کے باہر ن لیگ کا احتجاج

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان کی سابقہ اہلیہ جمائما گولڈ اسمتھ کی رہائش گاہ کے باہر مسلم لیگ(ن) کے کارکنوں نے احتجاج کیا۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

جمائما گولڈ اسمتھ کی رہائش گاہ کے باہر ن لیگ کا احتجاج

لندن میں ہونے والے احتجاج کے شرکاء کا کہنا تھا کہ پاکستان کے عوام نے عمران خان کو رد کر دیا ہے، عمران خان جمہوری حکومت کو گرانے کے لیے سازشوں میں مصروف ہیں۔

مظاہرین کا کہنا تھا کہ جب تک ہمارے قائد کے گھر کے سامنے احتجاج ہوگا، ہم بھی یہاں احتجاج کرتے رہیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ عمران خان کو الیکشن کے لیے انتظار کرنا ہوگا، حکومت ختم ہونا خود ان کی نالائقی ہے۔

امن و امان قائم رکھنے کے لیے پولیس کی نفری بھی وہاں موجود تھی۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll