جی این این سوشل

علاقائی

سندھ : پہلےمرحلےکےبلدیاتی انتخابات میں ووٹنگ کا عمل جاری

کراچی:بلدیاتی انتخابات کےپہلےمرحلےمیں سندھ کے14اضلاع میں9ہزارپولنگ اسٹیشنزقائم کیے گئے ہیں۔

پر شائع ہوا

کی طرف سے

سندھ : پہلےمرحلےکےبلدیاتی انتخابات میں ووٹنگ کا عمل جاری
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

تفصیلات کے مطابق سندھ کے14اضلاع میں پہلے مرحلےکے بلدیاتی انتخابات آج ہو رہے ہیں جس میں پولنگ کا عمل صبح 8 بجے سے شام 5 بجے تک جاری رہے گا۔

تمام اضلاع میں پولنگ کےسامان کی ترسیل مکمل کرلی گئی، بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں سندھ کے 14 اضلاع میں 9 ہزار پولنگ اسٹیشنز قائم کیے گئے ہیں۔

بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں 21 ہزار سے زائد امیدوار حصہ لے رہے ہیں جبکہ سندھ کے مختلف اضلاع سے 1 ہزار سے زائد امیدوار بلامقابلہ منتخب ہو چکے ہیں۔

لاڑکانہ ڈویژن کے 5 اضلاع جیکب آباد، کشمور، شکارپور، لاڑکانہ اور شہدادکوٹ جبکہ سکھر ڈویژن کے 3 اضلاع، خیرپور، سکھر اور گھوٹکی میں ووٹنگ کا عمل جاری ہے۔

شہید بےنظیر آباد ڈویژن کے 3 اضلاع، شہید بے نظیرآباد، سانگھڑ، نوشہر و فیروز جبکہ میرپور خاص ڈویژن کے 3 اضلاع، میرپور خاص، عمرکوٹ اور تھرپارکر میں بھی ووٹنگ کا عمل جاری ہے جو کہ شام 5 بجے اختتام پذیر ہوگا۔

پاکستان

پی ٹی آئی کی امریکی کمپنیز کیساتھ معاہدوں کی تفصیلات سامنے آرہی ہیں، شیری رحمان

اسلام آباد: وفاقی وزیر ماحولیاتی تبدیلی شیری رحمان نے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی امریکی لابنگ کمپنیز کے ساتھ معاہدوں کی چونکانے والی تفصیلات سامنے آ رہی ہیں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

پی ٹی آئی کی امریکی کمپنیز کیساتھ معاہدوں کی تفصیلات سامنے آرہی ہیں، شیری رحمان

 

وفاقی وزیر شیری رحمان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ رواں ماہ پی ٹی آئی نے امریکی کمپنی فینٹن آرلُک سے معاہدے کیا اور  پی ٹی آئی کی سابق سی آئی اے اہلکار کی کمپنی کے ساتھ معاہدوں کی تفصیلات بھی سامنے آئی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ مئی 2021 میں امریکی کمپنی کے ساتھ عمران خان کے سابق معاون خصوصی نے معاہدہ کیا اور پی ٹی آئی کے لیے مارچ 2022 کا معاہدہ سابق سفیر اسد مجید نے کیا۔

شیری رحمان نے کہا کہ 7 مارچ کو خط موصول ہونے کے باوجود پی ٹی آئی 22 مارچ کو سابق سی آئی اے کی کمپنی کے ساتھ معاہدہ کر رہی تھی۔ عمران خان نے امریکہ میں اپنا اچھا امیج بنانے کے لیے لابنگ فرم کے ساتھ معاہدے کیا۔

انہوں نے کہا کہ اگر امریکی حکومت نے دھمکی آمیز پیغام بھیجا تھا تو پی ٹی آئی کو وہاں اپنی تشہیر کی ضرورت کیوں پڑی؟ اور بیرونی سازش کا بیانیہ بنانے کے لیے عمران خان نے پاکستان کے مفادات اور خارجہ تعلقات داؤ پر لگا دیئے۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

30اگست کو غریب پر10روپے فی لیٹر کی مزید چھری پھرے گی، شیخ رشید

 سابق وزیرداخلہ شیخ رشید کا کہنا ہے کہ30اگست کو غریب پر10روپے فی لیٹر کی مزید چھری پھرے گی۔ معاملات بگاڑ کی جانب جار ہے ہیں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

30اگست کو غریب پر10روپے فی لیٹر کی مزید چھری پھرے گی، شیخ رشید

 

ان کا کہنا ہے کہ حکومت نے آئی ایم ایف کو لکھ کر دیا کہ پیٹرول پر لیوی بڑھائیں گے۔30اگست کو غریب پر10روپے فی لیٹر کی مزید چھری پھرے گی۔ پیٹرول کی قیمتوں میں اضافے سے متعلق آصف زرداری نے بھی حکومت پر تنقید کی۔

انہوں نے کہاہے کہ غریب مہنگائی میں جل رہا ہے اور حکمران بانسری بجا رہے ہیں۔ حکمرانوں نے نوٹ بینک بچانے کے لیے ووٹ بینک کو قربان کر دیا ۔ یہ لوگ اپنے  ووٹوں کو داو پر لگارہے ہیں ۔موجودہ حالات میں حکمرانی کرنا کوئی آسان کام نہیں۔

سربراہ عوامی مسلم لیگ شیخ رشید نے کہاہے کہ  عمران خان8حلقوں میں اہل اورفیصل آباد میں نااہل،یہ کیسا قانون ہے؟ یہ عمران خان کے سامنے کھڑے نہیں ہوسکتے۔

ان کا کہنا ہے کہ بڑے سے بڑاسیاسی پنڈت آئندہ صورتحال کی کوئی پیش گوئی نہیں کرپارہا۔ لیکن معاملات بگاڑ کی جانب جار ہے ہیں۔ الیکشن چاہے اکتوبر میں ہوں یا نومبر ،عمران خان انتخابی مہم پر ہیں۔نواز شریف کی واپسی طے نہیں پا سکی۔

انہوں نے کہاہے کہ چین کی رضامندی کے بغیرسی پیک اتھارٹی ختم کرنا سامراجی ایجنڈا ہے۔ان کو چین کے خلاف اسی کام کے لیے لایا گیا ہے۔افغانستان میں بھی رجیم چینج شروع ہو گیا جس سے پاکستان بھی متاثر ہو گا۔ برطانیہ سے بےدخلی کا معاہدہ ہمارے لیے منفی جائے گا۔

پڑھنا جاری رکھیں

پاکستان

صدرکی نوجوانوں کو مون سون شجرکاری مہم میں بڑھ چڑھ کرحصہ لینے کی ہدایت

اسلام آباد: صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے نوجوانوں پر زور دیا ہے کہ وہ موسمیاتی تبدیلی کی وجہ سے درپیش چیلنجوں سے نمٹنے کے لئے مون سون شجر کاری مہم میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں۔

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

صدرکی نوجوانوں کو مون سون شجرکاری مہم میں بڑھ چڑھ کرحصہ لینے کی ہدایت

تفصیلات کے مطابق صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے ملک گیر شجر کاری کے لئے مشترکہ کوششوں کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ جنگلات میں اضافے سے پائیدار ترقی کے فروغ ، ملک کو ماحول دوست بنانے اور آئندہ نسلوں کا مستقبل محفوظ بنانے میں مدد ملے گی ، ملک کا ہر شہری شجرکاری مہم میں بھرپور حصہ ڈالے ، درخت لگائے اور ان کی دیکھ بھال بھی کرے، ہم مشترکہ کاوشوں سے موسمیاتی تبدیلی کے اثرات کو کم کرنے اور پاکستان کو ایک سرسبز و شاداب ملک بنانے میں کامیاب ہو جائیں گے۔ 

انہوں نے کہا کہ موسمیاتی تبدیلی اور درجہ حرارت میں اضافے کے نتیجے میں گلیشیر پگھل رہے اور سیلاب آرہے ہیں ، پاکستان موسمیاتی تبدیلی سے سب سے غیر محفوظ ملکوں میں شامل ہے اور اسے ہر سال سیلاب جیسی صورتحال کا سامنا ہوتا ہے، ہمیں جنگلات اگانے کی کوششیں تیز کرنا ہوں گی۔ 

صدرمملکت نے واضح کیا کہ پاکستان میں جنگلات کا رقبہ صرف چار اعشاریہ آٹھ فیصد ہے جبکہ عالمی معیار کے مطابق کسی بھی ملک میں جنگلات تقریبا پچیس فیصد ہونے چاہئیں ۔ ان کاکہنا تھا کہ  جنگلات کے رقبے میں اضافے سے ہمیں سیلاب کے خلاف موثر تحفظ ملے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ عالمی معیار کے مطابق کسی بھی ملک کے جنگلات کا رقبہ تقریباً 25 فیصد ہونا چاہیے جبکہ عالمی بینک کی سال 2020 ء کی رپورٹ کے مطابق پاکستان میں جنگلات کا رقبہ تقریباً 4.8 فیصدہے ۔ ہمیں پاکستان میں زیادہ سے زیادہ جنگلات اگانے کیلئے اپنی کاوشوں میں مزید تیزی لانا ہوگی۔

 انہوں نے کہا کہ مجھے یہ کہتے ہوئے خوشی محسوس ہو رہی ہے کہ پاکستان میں دس ارب ٹری سونامی منصوبے پر کام جاری ہے اور یہ پاکستان کی تاریخ میں شجرکاری کا سب سے بڑا منصوبہ ہے ، اس منصوبے کے تحت جون 2022 ء تک 1.81 ارب پودے لگائے جا چکے ہیں اور سال 2023 ء تک 3.29 ارب درخت لگانے کا قومی ہدف پورا کیا جائے گا۔

صدرمملکت  نے کہا کہ میرے لیے یہ امر بھی باعثِ افتخار ہے کہ ایوانِ صدر کے احاطے میں گزشتہ سال شجرکاری مہم کے تحت 10 ہزار پودے لگائے گئے اور اس سال بھی مزید پودے لگائے جارہے ہیں۔

علاوہ ازیں ، ایوانِ صدر میں گرین پریذیڈنسی منصوبے کے تحت 1.5 ایکٹر رقبے پر میاواکی جنگل بھی لگایاگیا ۔

انہوں نے کہا کہ ایسے اقدامات نہ صرف ماحول کو صاف رکھنے بلکہ پاکستان کو سرسبز و شاداب اور صاف بنانے میں بھی مدد فراہم کریں گے ۔ علاوہ ازیں ، جنگلات میں اضافے سے سیلاب کے خلاف مؤثر بچاؤ بھی میسر آئے گا۔

صدر مملکت نے کہا کہ درخت لگانے سے قدرتی حیات کے تحفظ، ملکی نباتات و حیوانات کو محفوظ بنانے میں بھی مدد ملے گی ۔ جنگلات میں اضافے سے پائیدار ترقی کے فروغ ، ملک کو ماحول دوست بنانے اور آئندہ نسلوں کا مستقبل محفوظ بنانے میں بھی مدد ملے گی ۔

انہوں نے کہا کہ اس سال کی قومی شجرکاری مہم میں ہم سب کو مل کر کام کرنے کی ضرورت ہے۔ میں امید کرتا ہوں کہ پاکستان کی نوجوان نسل بڑھ چڑھ کر مون سون شجرکاری مہم میں حصہ لے گی ۔ میں پوری قوم سے درخواست کرتا ہوں کہ وہ رہائشی علاقوں ، بازاروں ، سڑکوں اور صنعتی علاقوں کے نزدیک زیادہ سے زیادہ درخت لگائیں ۔

ان کا کہنا تھا کہ ہر شہری شجرکاری مہم میں بھرپور حصہ ڈالے ، درخت لگائے اور ان کی دیکھ بھال بھی کرے۔ مجھے پورا یقین ہے کہ ہماری مشترکہ کاوشوں سے ہم موسمیاتی تبدیلی کے اثرات کو کم کرنے اور پاکستان کو ایک سرسبز و شاداب ملک بنانے میں کامیاب ہو جائیں گے ۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll