جی این این سوشل

دنیا

امریکا کا پاکستان میں سیلاب متاثرین کیلئے مزید 10 لاکھ ڈالر امداد دینے کا اعلان

واشنگٹن : امریکا کی جانب سے پاکستان کے لیے  سیلاب اور دیگر قدرتی آفات کی تباہ کاریوں سے نمٹنے کے لیے مزید 10لاکھ ڈالر امداد کا اعلان کیا ہے۔ 

پر شائع ہوا

کی طرف سے

امریکا کا پاکستان میں سیلاب متاثرین   کیلئے مزید 10 لاکھ ڈالر امداد دینے کا اعلان
جی این این میڈیا: نمائندہ تصویر

تفصیلات کے مطابق امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن نے آج ( بدھ)   ایک ٹویٹ میں کہا کہ ہم مشکل کی اس گھڑی میں پاکستان کے ساتھ ہیں اور سیلاب متاثرین کے لیے مدد کی پیشکش کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کو فوری امداد کے طور پر ایک لاکھ ڈالر فراہم کئے گئے تھے ۔امریکا نے قدرتی آفات سے نمٹنے کے لیے پاکستان کو مزید 10لاکھ ڈالر دینے کا اعلان کیا ہے۔ 

انہوں نے کہا کہ ہم موسمیاتی بحران کے اثرات کو کم کرنے کے لیے پاکستان کے ساتھ مل کر کام کرتے رہیں گے۔

پاکستان

ایڈمنسٹریٹر کراچی مرتضٰی وہاب کا استعفیٰ دینے کا اعلان

قانون اس بات کی اجازت دیتا ہے کہ بلدیہ عظمٰی کراچی ٹیکس لگا سکتی ہے،جب حکومت کام کرتی ہے تو روک دیا جاتا ہے،مرتضٰی وہاب

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

ایڈمنسٹریٹر کراچی مرتضٰی وہاب کا استعفیٰ دینے کا اعلان

ایڈمنسٹریٹر بلدیہ عظمٰی کراچی مرتضٰی وہاب نے استعفٰی دینے کا اعلان کر دیا،مرتضٰی وہاب کا کہنا ہے کہ دن دیکھا اور نہ رات بس کام کیا،جس بلدیہ عظمٰی کے بارے میں کہا گیا کہ اختیارات نہیں اسی نہیں کام کیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق مرتضٰی وہاب نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ جب حکومت کام کرتی ہے تو روک دیا جاتا ہے،قانون اس بات کی اجازت دیتا ہے کہ بلدیہ عظمیٰ کراچی ٹیکس لگا سکتی ہے۔ 

میرے لئے آسان نہیں تھا کہ وزیر اعلٰی اور وزیراعظم کو پیسوں کیلئے کہتا۔سڑکوں پر پانی ہوتا ہے تو آپ نعیم الرحمان اور وسیم اختر سے نہیں پوچھتے۔آپ مجھ سے،حکومت سے اور بلدیہ عظمٰی کراچی سے پوچھتے ہیں۔

انکا کہنا تھا کہ بڑی مشکل سے کے الیکٹرک کو قائل کیا مگر کچھ لوگوں کو پسند نہیں آیا۔ کوشش ہے کراچی کی خدمت کروں،بارش میں بلدیہ عظمیٰ کراچی کے لوگوں نے پانی نکالا۔

میوہ شاہ قبرستان کی سڑک،شاہراہ لیاقت کو بنایا جا رہا ہے۔اگر بلدیہ عظمٰی کراچی شہریوں کو ریلیف دے رہی ہے مگر لوگوں کو پسند نہیں آ رہا۔ مرتضٰی وہاب نے کہا کہ 16ستمبرسے پھر ہم سڑکوں کی بحالی کے لیے روڈ پر تھے۔

5 جون 2008 سے آج تک یہ ٹیکس اکٹھا کیا جارہا ہے۔وسیم اختر کی چار سالہ حکومت میں جب وہ میئر تھے،یہ کیسے ہوسکتا ہے کہ کراچی کا ادارہ اپنی تنخواہیں نہیں دے سکتا،سڑکیں ٹھیک نہیں کرسکتا۔ 

انہوں نے مزید کہا کہ میرا ایمان ہے قانون کے مطابق چلنا ہی ہمیں آگے لیکر جائے گا،قانون میں درج ہے کہ بلدیہ عظمٰی کراچی ٹیکس لے سکتی ہے میں نے یہ ٹیکس جمع کرنے کے لیے کراچی الیکٹرک کا انتخاب کیا۔

ادھر سندھ ہائیکورٹ نے بجلی کے بلوں میں کے ایم سی ٹیکس کی وصولی 10 روز کیلئے روکنے کا حکم دے دیا۔سندھ ہائیکورٹ میں بجلی کے بلوں میں کے ایم سی ٹیکس کی وصولی کے خلاف کیس کی سماعت ہوئی۔جسٹس حسن اظہر رضوی نے استفسار کیا کہ کے الیکٹرک ٹیکس بلوں میں کیوں وصول کررہی ہے؟

یہ وہی ٹیکس ہے جو کےالیکٹرک لے رہی ہے؟کراچی میں صفائی تو ہو نہیں رہی ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

صحت

سیلاب متاثرین کو صحت کی سہولیات کی فراہمی کیلئے عملی اقدامات یقینی بنا رہے ہیں : وزیر صحت 

اسلام آباد: وزیر صحت عبدالقادر پٹیل نے کہا ہے کہ سیلاب متاثرین کو صحت کی سہولیات کی فراہمی کیلئے عملی اقدامات یقینی بنا رہے ہیں۔ 

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

سیلاب متاثرین کو صحت کی سہولیات کی فراہمی کیلئے عملی اقدامات یقینی بنا رہے ہیں : وزیر صحت 

تفصیلات کے مطابق وزیر صحت عبدالقادر پٹیل  نے ایک بیان میں  کہا ہے  کہ ملک بھر میں سیلاب سے متاثرہ اضلاع میں روزانہ کی بنیاد پر ہیلتھ کیمپس لگائے جارہے ہیں ‘ہیلتھ کیمپس وفاقی ایمرجنسی آپریشن سینٹر پولیو ‘ صوبائی ایمرجنسی پولیوسنٹرز اور آغا خان کے اشتراک سے لگائے جاتے ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ گذشتہ روز خیبرپختونخوا ، سندھ ، بلوچستان اور پنجاب میں 44 جبکہ خیبرپختونخوا کے 8 اضلاع میں 16 ہیلتھ کیمپس لگائے گئے‘اسی طرح پنجاب کے دو اضلاع میں چار ‘ بلوچستان کےسات اضلاع میں 13 اورسندھ کے 10 اضلاع میں 11 ہیلتھ کیمپس کا انعقاد کیا گیا۔ مجموعی طور پر 5644 مریضوں کو طبی امداد فراہم کی گئی ۔

وزیر صحت نے کہا کہ پانچ سال سے کم عمر 1262 بچوں کو طبی امداد دی گئی جبکہ ہیلتھ کیمپس میں 705 بچوں کو پولیو کے حفاظتی قطرے پلائے گئے ان کیمپس میں 222 بچوں کو حفاظتی ٹیکے بھی لگائے گئے۔

پڑھنا جاری رکھیں

دنیا

دبئی میں رہائش سے متعلق نئی شرائط کی مزید تفصیلات سامنے آگئیں

کسی جگہ ایک ماہ سے زیادہ رہنے والے تمام مکینوں کی رجسٹریشن لازمی قرار دے دی گئی

پر شائع ہوا

ویب ڈیسک

کی طرف سے

دبئی میں رہائش سے متعلق نئی شرائط کی مزید تفصیلات سامنے آگئیں

دبئی میں رہائش سے متعلق نئی شرائط کی مزید تفصیلات سامنے آگئیں۔ اماراتی میڈیا کے مطابق دبئی لینڈ ڈپارٹمنٹ (DLD) کی جانب سے رہائش کے حوالے سے نئے اصول کے بارے میں مزید تفصیلات بتائی گئی ہیں، جس کے تحت رہائشیوں کو رہائشی یونٹوں میں تمام ساتھیوں کو رجسٹر کرنے کی ضرورت ہوگی اور ایک یونٹ میں ایک ماہ یا اس سے زیادہ رہنے والے تمام شریک مکینوں رجسٹریشن بھی لازمی قرار دی گئی ہے، رجسٹریشن میں درج ذیل چیزیں شامل ہونی چاہئیں؛
>> شریک مقیم کا نام
>> ایمریٹس آئی ڈی 
>> پاسپورٹ نمبر (اگر شریک مقیم کے پاس ایمریٹس آئی ڈی نہ ہو)
دبئی لینڈ ڈپارٹمنٹ کا کہنا ہے کہ شریک مکین رجسٹریشن کو رہائشی دستاویز کے طور پر استعمال کر سکتے ہیں لیکن اسے سرکاری لین دین کے لیے کرایہ داری کے معاہدے کی جگہ استعمال نہیں کیا جا سکتا جب کہ شریک مکینوں کی رجسٹریشن لازمی ہے تاہم کرایہ داری کے معاہدے میں ان کے تمام ناموں کا ذکر کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔

بتایا گیا ہے کہ اتھارٹی امارات میں رہنے والے تمام رہائشیوں کا ایک جامع شماریاتی ریکارڈ تیار کرنے کے لیے کام کر رہی ہے، اس کا مقصد شہریوں، رہائشیوں اور سیاحوں کی ابھرتی ہوئی ضروریات کو پورا کرنے میں حکومتی اداروں کی مدد کرنا ہے۔ قبل ازیں ایک نوٹیفکیشن میں اتھارٹی نے مالکان، ڈویلپرز، پراپرٹی مینجمنٹ کمپنیوں اور کرایہ داروں سے درخواست کی کہ وہ ملکیتی یا لیز پر دی گئی جائیدادوں میں شریک مکینوں کی تفصیلات فوری طور پر زیادہ سے زیادہ دو ہفتوں کے اندر رجسٹر کریں۔ 

اس حوالے سے رجسٹریشن Dubai REST ایپ پر ہوگی، جس کے لیے رہائشی لاگ ان کرنے کے لیے متحدہ عرب امارات کے پاس کا استعمال کر سکتے ہیں، جہام ایک بار سائن ان ہونے کے بعد انہیں وہ پراپرٹی منتخب کرنی ہوگی جہاں وہ رہتے ہیں، اس کے بعد ‘co-occupants’ کو منتخب کریں،  ‘add more’ پر کلک کریں اور ان کی تفصیلات درج کریں، جب کہ کسی بھی شریک مقیم کو 'delete' آئیکن کو منتخب کر کے ہٹایا جا سکتا ہے۔

پڑھنا جاری رکھیں

ٹرینڈنگ

Take a poll